06:55 am
پاکستانی گلوکار علی ظفر جنسی ہراسانی کے الزامات پر رو پڑے، سا تھ ہی بڑا دعوی بھی کر دیا

پاکستانی گلوکار علی ظفر جنسی ہراسانی کے الزامات پر رو پڑے، سا تھ ہی بڑا دعوی بھی کر دیا

06:55 am

کراچی (نیوز ڈیسک )جنسی ہراسانی کے الزامات پر پاکستانی گلوکار علی ظفر رو پڑے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل پر ایک پروگرام میں بات کرتے ہوئے علی ظفر نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم کہ میشا شفیع نے مجھ پر الزامات کیوں عائد کیے۔ جس میوزک سیشن میں ہراسانی کا الزام لگایا گیا وہاں مزید دو خواتین سمیت 11 افراد موجود تھے۔اگر میشا نے ہراسانی کا سامنا کیا تو اس نے میری بیوی یا گھر والوں سے شکایت کیوں نہیں کی؟ انہوں نے کہا کہ میں بے قصور تھا اور بے قصور ہوں۔ عدالت بھی میشا شفیع کے الزامات کو مسترد کر چکی ہے۔
علی ظفر نے بتایا کہ اب میں نے میشا شفیع پر ہتک عزت کا کیس کیا ہے۔ میشا سے پھر کہتا ہوں کہ اپنے ارد گرد موجود لوگوں کی باتوں میں نہ آئے۔پروگرام میں گفتگو کے دوران علی ظفر خود پر عائد کیے جانے والے الزامات اور اس پر سوشل میڈیا پر ہونے والے تبصروں پر بھی آبدیدہ ہو گئے۔دوسری جانب اپنے شوہرپر عائد کیے جانے والے الزامات کا جواب دینے کے لیے علی ظفر کی اہلیہ بھی میدان میں آ گئی ہیں۔ علی ظفر کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ میشا شفیع کی جھوٹ کی دکان بند کروا کر چھوڑیں گے۔ انہوں نے کہا کہ میشا کے الزامات سے مجھے اور میرے خاندان کو شدید ذہنی اذیت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم میشا کو کبھی معاف نہیں کریں گے۔خود پر عائد جنسی ہراسانی کے الزامات کے جواب میں علی ظفر نے بھی میشا کو عدالت کا سامنا کرنے کی ہدایت کی ہے۔ گلوکار علی ظفر اپنے پیغامات میں ہیش ٹیگ ''میشا شفیع عدالت کا سامنا کرو'' کا استعمال کررہے ہیں۔ گذشتہ روز اپنے ٹویٹر پیغام میں علی ظفر نے کہا تھا کہ ’میشا شفیع عدالت کا سامنا کرو‘ گلوکار علی ظفر اپنے پیغامات میں ہیش ٹیگ’میشا شفیع عدالت کا سامنا کرو‘ کا استعمال کررہے ہیں۔پاکستان کے معروف گلوکار علی ظفر نے کہا ہے کہ میشا شفیع کی جانب سے کیے گئے جنسی ہراسانی کیس کے عدالت میں خارج ہونے سے وہ قانون کی نظروں میں سرخرو ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اب عوام کی نظروں میں ثبوت کے ساتھ میشا کا جھوٹ بے نقاب کریں گے۔ علی ظفر کا کہنا تھا کہ وہ اُن کے خلاف چلائی گئی مکروہ سوشل میڈیا مہم کا پردہ چاک کریں گے، اس کے علاوہ انہوں نے سوشل میڈیا پر کیس خارج ہونے کی کاپی بھی شیئر کی ۔

تازہ ترین خبریں