06:11 am
حلیمہ سلطان کے اعداد و شمار سامنے آگئے

حلیمہ سلطان کے اعداد و شمار سامنے آگئے

06:11 am

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ ، سیف اعوان)ترک ڈرامے کی ہیروئن حلیمہ سلطان کا کردار نبھانےوالی ایسرا بیلجک  اس ٹی وی سیریل کی بدولت دنیا بھر کے کروڑوں دیکھنے والوںمیں مقبول ہوچکی ہیں۔ 27سالہ ایسرا بیلجیک نے اس ڈرامے میں مرکزی کردار ادا کرکےنہ صرف اپنی لازوال اداکاری سے ناظرین کے دل جیتے بلکہ ان کےچہرے کی معصومیت اور ان کی ظاہری دلکشی نے بھی ان کے مداحوں پراپنا سحر طاری کیے رکھا۔ ایسرا نے ارطغرل کی وفا شعار اور محبت کرنے والی بیوی کا کردار نبھا کر آج کی دنیا کے سامنےحلیمہ سلطان کانقش بھرپور طریقے سے اجاگر کیا۔ ایسرا کی دنیا بھر میں پھیلتی
ہوئی شہرت کو دیکھ کر دنیا بھر میں ان کے چاہنے والے ان کی نجی زندگی کے بارے میں بہت کچھ جاننا چاہتے ہیں۔لوگوں کو یہ جاننے بھی دلچسپی ہے کہ ایسرا کتنی مالیت کے اثاثوں کی مالک ہیں اور ان کےپاس کیا کچھ ہے۔اکتوبر 1992میں ترکی کے شہر انقرہ میں پیدا ہونے والی ایسرا بیلجیک نے 2014میں اپنے کیرئیر کی شروعات اسی ڈرامہ سیریل یعنی ارطغرل غازی سے کی ۔لیکن اس ٹی وی سیریل کی 116اقساط میں کام کرنے کے بعد چند ذاتی وجوہات کی بنا پر وہ اس سے الگ ہوگئیں۔تاہم اس وقت تک ایسرا نے اس ٹی وی سیریل سے کافی پیسہ کما لیا تھا۔ اس وقت ایسرا کے اثاثوں کی کل مالیت پانچ ملین ڈالرز یعنی پچاس لاکھ امریکی ڈالرز ہے۔ یہ رقم پاکستانی روپوں میں 83کروڑ 45لاکھ روپے بنتی ہے۔ یعنی لگ بھگ ایک ارب روپے۔ اسی طرح ایسرا بیلجیک کی ذاتی ملکیت میں دو لگژری گاڑیاں بھی ہیں ۔ ان میں سے ایک گاڑی مرسیڈیز بینز جبکہ دوسری رینج روور ہے۔ اگرچہ ایسرا اس وقت بھی ایک ترک ٹی وی سیریل ریمپ میں ایک نئے کردار میں نظر آرہی ہیں لیکن یہ بات طے ہے کہ انھیں مالامال کردینے اور شہرت کی بلندیوں پر پہنچادینے میں 2014کی ٹی وی سیریل ارطغرل غازی کا انتہائی اہم کردارہے۔ ایسرا بیلجیک نےاپنے کام کے عوض پیسہ تو کمایا ہی ہے۔ لیکن انھوںنے اپنی شاندار پرفارمنس کا لوہا کئی ایوارڈز لے کر بھی منوایا ہے۔2014میں انھوںنے ارطغرل غازی میں اپنی کارکردگی کی بنا پراینٹالیاٹی وی ایوارڈز میں بہترین فی میل ایکٹریس کا ایوارڈ جیتا ۔ 2015میں اسی سیریز میں بہترین فی میل ایکٹریس کا ایوارڈ ان کو سوسیل فارفنڈالک اوڈلری ایوارڈ سرمنی میں بھی ملا۔جبکہ 2016میں ایسرا بیلجیک کو ارطغرل غازی ہی کی بیسٹ فی میل ایکٹریس کی کیٹیگری کا ایوارڈترکی جینلک اوڈلری ایوارڈ سرمنی میں بھی ملا۔