ماضی کے حکومتوں کی عدم دلچسپی کے باعث وفاقی حکومتوں نے بھی چار بار گلگت کینسر ہسپتال کو پی ایس ڈی پی سکیم خارج کر دیا تھا، حافظ حفیظ الرحمن
  12  جنوری‬‮  2018     |     گلگت بلتستان

گلگت ( محمد ذاکر سے ) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ ماضی کے حکومتوں کی عدم دلچسپی کے باعث وفاقی حکومتوں نے بھی چار بار گلگت کینسر ہسپتال کو پی ایس ڈی پی سکیم خارج کر دیا تھا لیکن صوبائی حکومت کی دلچسپی کے باعث وفاقی حکومت نے گلگت کینسر ہسپتال کو پی ایس ڈی پی سکیم میں شامل کرکے دو ارب پچاس کروڑ کی خطیر رقم منظور کر دی ہے ۔ صوبائی حکومت نے خطے میں کھربوں کے میگا منصوبے تین سال کے بجائے ڈیڑھ سال میں مکمل کئے ہیں ۔ گلگت کینسر ہسپتال کو بھی مقررہ سے قبل تعمیر کرکے جی بی میں کینسر کے مریضوں کے علاج یقینی بنا کر صحت جیسی بنیادی سہولیات عوام کے گھر کے دہلیز پر مہیا کیا جائیگا اور کینسر ہسپتال کو بر وقت مکمل کرنے کیلئے صوبائی حکومت بھر پور مالی معاونت ہر صورت یقینی بنائیگی ۔ وزیر اعلیٰ نے ان خیالات کا اظہار گلگت انسٹیٹیوٹ آف نیوکلئیر میڈیشن آنکالوجی اینڈ ریڈیو تھراپی مناور کینسر ہسپتال کے سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں غریب لوگوں کو علاج و معالجے کی سہولیات نہ ہونے کے باعث کینسر کے مریض ایڑھیاں رگڑ رگڑ کر جان کی بازی ہار جاتے تھے مگر الیکشن سے قبل وزیر اعطم پاکستان میاں نواز شریف نے جو وعدے کئے ہیں صوبائی حکومت نے ان وعدوں پر عمل درآمد کو یقینی بنانا ہے آج عوام مسلم لیگ ن کی پالیسیوں سے خوش اور مطمئن ہیں ۔ انہوں نے کہا ہ صوبائی حکومت نے گلگت بلتستان کے غریب کینسر کے مریضوں سمیت دیگر مریضوں کے علاج معالجے کیلئے بلا تفریق پنجاب حکومت کے بائیس کروڑ

جبکہ وفاقی حکومت کے نو کروڑ خرچ کئے جا چکے ہیں جو مستحق تھے اور دیگر صوبوں میں مہنگا علاج نہیں کرا سکتے تھے بلا تفریق صوبائی حکومت نے ان حقداروں کے علاج کیلئے تقریباً اکتیس کروڑ خرچ کئے ہیں گلگت بلتستان میں اب بھی پچاس سے زائد کینسر کے مریض موجود ہیں جنہیں مفت ادویات فراہم کئے جا رہے ہیں ، اللہ کسی انسان کو کینسر کے مرض میں مبتلا نہ کرے حکومت غریب عوام کے علاج معالجے کی سہولیات یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائینگے ۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے گلگت مناور کینسر ہسپتال کے سنگ بنیاد ک تقریب میں مزید کہا کہ صحکومت نے قلیل مدت میں گلگت بلتستان کے ترقیاتی منصوبوں کے بیمار منصوبوں سمیت دیگر کھربوں کے ترقیاتی میگا پراجیکٹس مکمل کرکے گلگت مناور کینسر ہسپتال کو بھی پایہ تکمیل تک پہنچایا جائیگا مارچ میں گلگت میں کارڈیالوجی ہسپتال کا بھی افتتاح کیا جائیگا اور دو ارب کی خطیر رقم سے کارڈیالوجی ہسپتال کو مکمل کرکے 2019میں افتتاح کیا جائیگا جس سے جی بی کے عوام صحت جیسی بنیادی سہولیات سے مستفید ہونگے ۔ حکومت نے لان تیار کر لیا ہے غریب عوام کو صحت جیسی بنیادی سہولیات انکے گھر کے دہلیز پر مہیا کئے جائینگے جسکے لئے صوبائی حکومت اداروں کے ساتھ ہر ممکن معالی تعاون کریگی ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

سپورٹس

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved