تازہ ترین  
ہفتہ‬‮   19   جنوری‬‮   2019

باوٴلرز ایک بار پھر قومی ٹیم کو تیسرے ٹیسٹ میچ میں واپس لے آئے۔۔ لیکن دوسرے روز کا کھیل ختم ہونے تک جنوبی افریقہ نے کتنے رنز کی برتری حاصل کر لی


جوہانسبرگ(مانیٹرنگ ڈیسک) جوہانسبرگ ٹیسٹ کے دوسرے روز جنوبی افریقا کی پہلی اننگز میں 262 رنز کے جواب میں پاکستان کی بیٹنگ ناکام ہوگئی اور پوری ٹیم 185 رنز بناکر آؤٹ ہوگئی جس کے بعد پروٹیز نے اپنی دوسری اننگز میں دن کے اختتام پر 5وکٹوںکے نقصان پر 135رنز بنا لیے ہیں ۔دوسرے روز کھیل کے آغاز پر بھی بلے باز کچھ نہ کرسکے اور 53 کے مجموعے پر محمد عباس 11 رنز بناکر آؤٹ ہوئے، عباس کے بعد آنے والے اسد شفیق کھاتا کھولے بنا ہی روانہ ہوگئے، دونوں بلے بازوں کو اولیویر نے پویلین کی راہ دکھائی۔
امام الحق نے ٹیم کو سنبھالنے کی کوشش کی اور نصف سنچری کے قریب 43 رنز بناکر فلنڈر کا ہی شکار ہوئے،امام الحق کے بعد بابراعظم اور کپتان سرفراز احمد نے ٹیم کو سنبھالنے کی کوشش کی اور چھٹی وکٹ کی شراکت میں 78 رنز بنائے لیکن کپتان سرفراز احمد 50 رنز بناکر پویلین لوٹ گئے۔ کپتان کے بعد بابر اعظم بھی نصف سنچری سے1رن کی دوری پر اولیویر کے نرغے میں آگئے جب کہ اسی اوور میں فہیم اشرف بھی بغیر کوئی رن بنائے وکٹ گنوابیٹھے۔ محمد عامر کو بھی اولیویر کی گیند پر زبیر حمزہ کو کیچ تھماکر پویلین لوٹے جب کہ شاداب خان 5 رنز بناکر ربادا کا شکار بنے۔پاکستان کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 185 رنز بناکر آؤٹ ہوئی اورجنوبی افریقا کو 77 رنز کی برتری ملی ۔ جنوبی افریقا کی جانب سے اولیویرنے 5، فلینڈر 3 اور ربادا نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ جنوبی افریقہ کی اننگز کا آغاز بھی اچھا نہیں رہا اور ڈین ایلگر5رنز بنا کر عباس کا شکار بن گئے ،مارکرم 21رنز بنا کر محمد عامر کا شکار بنے ،ڈی برائن بھی 7رنز بنا کر فہیم اشرف کا شکار بنے جنہوں نے زبیر حمزہ کو بھی صفر کی خفت سے دوچار کیا،ٹمبا باووما 23رنز بنا کر شاداب خان کی گھومتی گیند پر پوویلین لوٹ گئے ،ہاشم آملا اور ڈی کوک نے ٹیم کا سکور135رنز تک پہنچایا ۔
ا س سے قبل میزبان ٹیم کے کپتان ڈین ایلگر نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور ایڈن مرکرام کے ہمراہ انہوں نے اننگز کا آغاز کیا تاہم کپتان ایلگر 4رنز بنا کر محمد عباس کا شکار بن گئے ،مارکرم او ر ہاشم آملا نے دوسری وکٹ کےلئے 126رنز جوڑے ،اس دوران مارکرم نے اپنی5ویں ٹیسٹ نصف سنچری بھی مکمل کی،وہ 90رنز بنا کر فہیم اشرف کا شکار بن گئے ، ہاشم آملا بھی اپنے آغاز کا فائدہ نہ اٹھا سکے اور41رنز بنا کر شاداب خان کا شکار بنے ،ڈی برائن اور زبیر حمزہ نے چوتھی وکٹ کے لیے75رنز جوڑے جس کے بعد ڈی برائن 49رنز بنا کر عباس کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوئے،میزبان ٹیم کی آخری 7وکٹیں محض33رنز پر گریں اور پوری ٹیم 262رنز بنا کر پوویلین لوٹ گئی ۔
پاکستان کےلئے فہیم اشرف نے3جبکہ محمد عباس،حسن علی اور محمد عامر نے2،2اور شاداب خان نے1وکٹ لی ۔ میزبان ٹیم کو سیریز میں2-0کی فیصلہ کن برتری حاصل ہے اور پاکستان کرکٹ ٹیم کو جنوبی افریقی ٹیم کے ہاتھوں مسلسل دوسرے وائٹ واش کا سامنا ہے۔ابتدائی دو میچز میں شکست کے بعد قومی ٹیم میں تین تبدیلیاں کی گئیں، فخرزمان، یاسر شاہ اور شاہین شاہ آفریدی ٹیم کا حصہ نہیں ہیں ۔
قومی ٹیم امام الحق، شان مسعود، اظہر علی، اسد شفیق، بابراعظم، کپتان سرفراز احمد، شاداب خان، فہیم اشرف، محمد عامر، محمد عباس اور حسن علی پر مشتمل ہے۔فاف ڈوپلیسی پر ایک میچ کی پابندی کے باعث ڈین ایلگر جنوبی افریقی ٹیم کی قیادت کر رہے ہیں اور ٹیم میں انکی جگہ زبیر حمزہ کو شامل کیا گیا ہے۔میزبان ٹیم ایڈن مرکرام، ہاشم آملہ، تھینس ڈی بریون، ٹمبا باووما، زبیر حمزہ، کوئنٹن ڈی کوک، ورنن فلینڈر، کگیسو رابادا، ڈیل سٹین اور ڈین اولیوئیر پر مشتمل ہے۔پاکستانی ٹیم نے آج تک وانڈررز میں کوئی ٹیسٹ میچ نہیں جیتا ہے۔ 1998 ءمیں چوتھا دن بارش کی نذر ہونے سے پاکستان نے یہاں ایک ٹیسٹ ڈرا کیا تھا۔




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں




     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved