02:26 pm
کامران اکمل نے سرفراز احمد کو آرام کروانے کے فیصلے پر سوال اٹھا دیئے

کامران اکمل نے سرفراز احمد کو آرام کروانے کے فیصلے پر سوال اٹھا دیئے

02:26 pm

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پشاور زلمی کے وکٹ کیپر بیٹسمین کامران اکمل کا کہنا ہے کہ انہوں نے کرکٹ کیریئر کے دوران تینوں فارمیٹس کی کرکٹ کھیلی مگر کبھی آرام کا نہیں سوچا البتہ سرفراز احمد کو آسٹریلیا کیخلاف ریسٹ کرانے پر چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ ہی بہتر جواب دے سکتے ہیں۔کامران اکمل کا کہنا تھا کہ صرف پی ایس ایل کی کارکردگی پر کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل سیریز کے لیے منتخب کرنا ٹھیک نہیں ہے کیوں کہ ڈومیسٹک کرکٹ کی کارکردگی بھی پیش نظر رکھی جائے اور نئے پلیئرز کو چاہئے کہ وہ بھی ڈومیسٹک کرکٹ میں شریک ہوں۔ ان کا کہنا تھا
کہ سوائے موسیٰ خان کے کسی بھی کھلاڑی نے زیادہ ڈومیسٹک کرکٹ نہیں کھیلی حالانکہ کارکردگی میں پختگی کیلئے تین اور چار روزہ کرکٹ کھیلنا بھی ضروری ہے۔ کامران اکمل کا کہنا تھا کہ پاکستان میں معیاری بیٹسمینوں کی کمی کا سبب ٹی ٹونٹی ایونٹس ہیں کیونکہ ملک میں چار روزہ میچز زیادہ ہوں اور ڈیوک کے بجائے کوکابرا کی گیندیں استعمال کی جائیں تو اچھے بیٹسمین بھی سامنے آسکتے ہیں۔ عمر اکمل کی قومی ٹیم میں واپسی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کامران اکمل کا کہنا تھا کہ وہ چھوٹے بھائی کو یہی مشورہ دیں گے کہ تیس یا چالیس رنز کی اننگز سے نہ ٹیم کو فائدہ ہوتا ہے نہ خود کو لہٰذا وہ اپنی وکٹ کی اہمیت کو جانتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف سیریز سے پورا فائدہ اٹھانے کی کوشش کریں۔ان کا کہنا تھا کہ قومی ٹیم میں ان کی واپسی کا انحصار سلیکٹرز پر ہے تاہم ان کی توجہ کا مرکز فی الحال پاکستان سپرلیگ ہے جس میں وہ بھرپور کارکردگی پیش کرنے کی پوری کوشش کر رہے ہیں۔

تازہ ترین خبریں