06:23 am
ورلڈ کپ 2019، ٹیم گرین کیمپ میں مایوسی کی لہردوڑ گئی

ورلڈ کپ 2019، ٹیم گرین کیمپ میں مایوسی کی لہردوڑ گئی

06:23 am

اسلام آباد(نیو زڈیسک)پاکستان کرکٹ ٹیم سیمی فائنل کی دوڑ سے تقریباً باہرہوچکی ہے ٹیم گرین کے کیمپ میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑیوں نے وطن واپسی کے لیے اپنا اپنا سامان پیک کرنا شروع کردیا ہے۔ذرائع کے مطابق کپتان سرفرازاحمد سمیت دیگر کھلاڑی بنگلہ دیش سے میچ کے اگلے روز لندن سےواپس وطن روانہ ہونگے۔مصدقہ ذرائع نے یہ بات بھی بتائی ہے کہ ٹیم مینیجمنٹ نے وطن واپسی کے لیے غیر ملکی پرواز سے ٹکٹیں بھی بک کرالی ہیں۔ قومی ٹیم کی ممکنہ طور پر6 جولائی کو وطن واپسی ہوگی۔واضح رہے کہ انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو ورلڈ کپ 2019 کے اکتالیسویں میچ میں شکست دے کر نہ صرف سیمی فائنل تک رسائی حاصل کرکے پاکستان کے سیمی فائنل تک رسائی کے خواب کوتقریباً چکنا چور کردیا ہے۔پاکستان کے لیے سیمی فائنل کی رسائی تقریباً
ناممکن نظر آرہی ہے۔ جمعے کو بنگلہ دیش کے خلاف میچ میں گرین شرٹس کو 316 رنز کے مارجن سے فتح حاصل کرنا ہوگی۔پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے اگر پاکستانی ٹیم 400 رنز بنالے تو اسے بنگلہ دیش کو 84 یا اس سے کم رنز تک محدود کرنا ہوگا۔یہ کہا جائے کہ پاکستان کا ورلڈ کپ اختتام کو پہنچ گیا تو یہ غلط نہ ہوگا کیوں کہ کوئی معجزہ ہی گرین شرٹس کو سیمی فائنل میں لے جاسکتا ہے۔پوائنٹس ٹیبل پر نظر دوڑائیں تو ابھی بھی آسٹریلیا کی 14 پوائنٹس کے ساتھ حکمرانی برقرار ہے۔ کنگروز کو ابھی جنوبی افریقہ کے خلاف ایک میچ کھیلنا ہے۔دوسرے نمبر پر 13 پوائنٹس کے ساتھ بھارتی ٹیم موجود ہے جسے اب سری لنکا کے مدمقابل آنا ہے۔انگلینڈ نیوزی لینڈ کو ہراکر چوتھے نمبر پر آگئی ہے اور آسٹریلیا اور بھارت کے بعد سیمی فائنل تک رسائی حاصل کرنے والی تیسری ٹیم بن گئی ہے۔نیوزی لینڈ بھی تقریباً سیمی فائنل میں پہنچ چکی ہے اور پاکستان کی بنگلہ دیش کے خلاف معجزاتی فتح ہی اسے سیمی فائنل کی نشست سے دور رکھ سکتی ہے۔پاکستانی ٹیم پوائنٹس ٹیبل پر پانچویں نمبر پر براجمان ہے جبکہ سری لنکا کی چھٹی پوزیشن ہے۔اسی طرح بنگلہ دیش کی ساتویں، جنوبی افریقہ کی آٹھویں اور ویسٹ انڈیز کی نویں پوزیشن ہے۔ورلڈ کپ کے تمام میچز ہارنے والی افغانستان کی ٹیم دسویں نمبر پر ہے۔