10:45 am
ایک ہفتے کے دوران مقابلے میں زخمی ہونےوالا دوسرا باکسر چل بسا

ایک ہفتے کے دوران مقابلے میں زخمی ہونےوالا دوسرا باکسر چل بسا

10:45 am

بیونس آئرس: باکسنگ کا کھیل ہر گزرتے دن کے ساتھ خطرناک ہوتا جا رہا ہے اور ایک ہفتے کے دوران اس کھیل نے دوسرے باکسر کی جان لے لی ہے ۔بیونس آئرس سے 150میل دور سین نکولس میں ہفتے کو ارجنٹائن کے 23 سالہ باکسر ہوگو سینٹلن کا سپر لائٹ ویٹ فائٹ یوراگوئے کے باکسر ایڈوارڈو ابریو سے مقابلہ ہوا، میچ کے چوتھے ہی راونڈ میں ان کی ناک سے خون بہنا شروع ہو گیا تھا لیکن انہوں نے آخر تک فائٹ لڑنے کو ترجیح دی اور میچ ڈرا پر اختتام پذیر ہوا، میچ کے اختتام کےساتھ ہی وہ بے ہوش ہو گئے جس کے سبب انہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا۔ڈاکٹرز کے مطابق ہسپتال میں داخل ہونے کے بعد ان کے گردے یکے بعد دیگرے ناکارہ ہو گئے اور وہ کوما سے واپس نہ آ سکے، ان کی حالت دن بدن بگڑتی گئی جس کو دیکھتے ہوئے ان کے دماغ کی ایک سرجری بھی کی گئی لیکن ا سی دوران انہیں دل کا دورہ پڑا جس کے سبب وہ جانبر نہ ہو سکے۔
 
ورلڈ باکسنگ کونسل نے ہوگو سینٹلن کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے اسے باکسنگ کےلئے بڑا نقصان قرار دیا ہے۔ سینٹلن نے 2015 ءمیں باکسنگ کا آغاز کیا تھا اور اب تک 19مقابلوں میں فتح حاصل کی جبکہ چھ مقابلوں میں انہیں ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا اور دو میچ ڈرا ہوئے،سینٹلن کے والد ہوگو الفریڈو سینٹلن بھی ایک باکسر تھے۔یاد رہے کہ ایک ہفتے کے دوران دوسرے باکسر کی موت ہوئی ہے ، اس سے قبل روسی باکسر مکسم داداشیوف دماغ پر چوٹ لگنے سے ہلاک ہوگئے تھے،مقابلے کے بعد مکسم داداشیوف ڈریسنگ روم تک بھی چل کر نہ جاسکے، انہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں انکے دماغ کے ورم سے دباﺅ دور کرنے کے لیے فوری طور پر سرجری کی گئی لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔

تازہ ترین خبریں