12:29 pm
شاباش پشاور!

شاباش پشاور!

12:29 pm

اسلامی جمہوریہ پاکستان میں لبرل اور سیکولر شدت پسند خواتین کی آزادی کے تصور کا مطلب ’’مادر پدر آزادی‘‘ لیتے ہیں‘ حالانکہ یہ تصور صرف مسلمانوں کے لئے ہی نہیں بلکہ ساری انسانیت کے لئے نقصان دہ اور تباہ کن ہے‘ مادر پدر آزادی مردوں کی ہو یا عورتوں کی اس سے معاشرہ اخلاقی گراوٹ کی اتھاہ گہرائیوں میں دفن ہو جایا کرتا ہے‘ انسانوں اور جانوروں میں یہی تو فرق ہے کہ ’’ انسان‘‘ سماجی اور اخلاقی حدود 

و قیود کے پابند جبکہ ’’جانور‘‘ ان پابندیوں سے آزاد ہوا کرتے ہیں۔خیبرپختونخواہ کے شہر پشاور میں ایک این جی او نے خواتین کی سائیکل ریس کے اہتمام کا اعلان کیا تو صوبے کے غیور اور غیرت مند عوام نے اس این جی او کی اس ناپاک جسارت کو قبول کرنے سے انکار کر دیا۔ صوبے کے غیرت مند عوام کی ترجمانی کا فریضہ جمعیت علماء اسلام (ف) کے رہنمائوں سمیت دیگر مذہبی تنظیموں کے علماء نے بھرپور انداز میں انجام دیا‘ جب پشاور کے علماء کرام نے عوام کی ترجمانی کرتے ہوئے انتظامیہ سے اس حوالے سے بات کی تو حکومت کو بھی بادل نخواستہ علماء کی بات سننا پڑی اور پھر علماء کرام اور مذہب پسند عوام کے جذبات کا احساس کرتے ہوئے حکومت نے ’’خواتین کی سائیکل ریس‘‘ پہ پابندی عائد کرکے موم بتی مافیاء کو یہ پیغام دے دیا کہ انہیں خواتین کی توہین کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی‘ اس میں جہاں پشاور کے علماء کرام اور مذہب پسند عوام مبارکباد کے مستحق ہیں‘ وہاں خیبرپختونخواہ حکومت بھی تعریف کی مستحق ہے کہ چلیں علماء کے احتجاج اور سمجھانے پر تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے زمینی حقیقت کا بروقت ادراک کرکے موم بتی مافیا کی عوام اور حکومت میں لڑائی کرانے کی سازش کو ناکام بنا دیا۔حکمرانوں اور پاکستان حامی میڈیا کو ایک بات اپنے پلے سے باندھ لینی چاہیے کہ موم بتی مارکہ این جی اوز نے تو خواتین کی سائیکل ریس‘ میراتھن ریس وغیرہ‘ وغیرہ کی آڑ میں اپنے غیر ملکی آقائوں سے ڈالرز اینٹھنا ہوتے ہیں۔ان کی خواتین کو گمراہ کرنے والی غیر اسلامی اور غیر فطری سرگرمیوں پر تو انہیں ڈالروں کے ساتھ ساتھ گوروں سے شاباش بھی ملتی ہے۔ حکومت اور میڈیا کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ غیر فطری‘ غیر اسلامی اور عورتوں کو بدنام کرنے والی ڈالر خور این جی اوز کی اس قسم کی سرگرمیوں کی مکمل حوصلہ شکنی کریں اور موم بتی مافیا کو یہ زمینی حقیقت سمجھانے کی کوشش کریں کہ پاکستان کوئی خالہ جی کا ویہڑہ نہیں ہے کہ جو یہاں مادر پدر آزادی کا ناپاک یورپی ایجنڈا کامیاب ہو جائے گا؟ یہ این جی او مارکہ بیگمات خود تو عورتوں کے حقوق کے نام پر ملنے والے فنڈز سے چالیس پچاس لاکھ کی لگرثری گاڑیاں استعمال کرتی ہیں جبکہ غریب خواتین کو ’’سائیکلوں‘‘ پر ٹرخاتی ہیں‘ کیا یہ کھلا تضاد اور منافقت نہیں ہے؟گزشتہ روز ایک سیکولر شدت پسند کالم نگار نے اپنے کالم میں یہ لکھا کہ ’’جن لوگوں نے 40ء اور 50ء کی دہائی کا ہندوستان دیکھا ہے وہ بتاتے ہیں کہ شہروں میں خواتین سائیکلوں پر سوار ہوتی تھیں‘ اپنے تعلیمی اداروں میں جاتی تھیں‘ جو خواتین کام کرتی ہیں وہ سائیکلوں کو بطور سواری استعمال کرتی ہیں‘ ان خواتین میں ہندو اور مسلمان بھی شامل ہوتی تھیں‘ وہ سیکولر شدت پسند مزید لکھتے ہیں کہ بھارت میں خواتین کی برابری کی حیثیت پر خصوصی توجہ دی گئی۔ وہاں خواتین کے سائیکلوں کے استعمال کو ان کی اقتصادی اور سماجی آزادی کے تصور سے منسلک کیا گیا‘‘ اس کالم نگار نے اپنے کالم میں بھارت میں خواتین کو ملنے والے خود ساختہ حقوق کے حوالے سے اور بھی بہت کچھ لکھا ہے‘ کالم کا عنوان تو ہے’’ طالبان کا ایجنڈا‘‘ لیکن اسے پڑھنے کے بعد اندازہ ہوا کہ ممکن ہے کہ موصوف کالم نگار بھول گئے ہوں‘ ورنہ اس کا عنوان تو ’’بھارت نامہ‘‘ ہونا چاہیے تھا‘ ہمارے ہاں پائے جانے والے لنڈے کے لبرلز اور سیکولر شدت پسندوں کا یہی تو رونا ہے کہ یہ ابھی تک چالیس اور پچاس کی دہائی کے ہندوستان سے ہی نہیں نکل پائے‘ یہی تو وہ فتنہ پرور گروہ ہے کہ جو دہلی اور بمبئی کی ایک شام کے لئے اپنا نظریہ اور ضمیر تک بیچ ڈالنے سے گریز نہیں کرتا‘ سوال یہ ہے کہ اگر 40ء کی دہائی کا ہندوستان مسلمان خواتین کے لئے اتنا ہی اچھا تھا تو پھر مسلمانان ہندوستان نے قائداعظم محمد علی جناح کی قیادت میں پاکستان کی تحریک چلا کر کلمہ طیبہ کے نعرے کی بنیاد پر علیحدہ وطن حاصل کیوں کیا تھا؟ اگر 1940ء کے ہندوستان کی مسلمان خواتین کے حقوق ادا کر رہا تھا تو پھر 14 اگست1947ء کو پاکستان حاصل کرنے کی خاطر بیس لاکھ سے زائد مسلمانوں نے اپنی جانوں کے نذرانے پیش کیوں کئے تھے؟ان سیکولر شدت پسندوں کو کوئی بتائے کہ وہ 1940ء کے ہندوستان میں نہیں بلکہ 2019ء کے پاکستان میں رہتے ہیں‘ اس لئے اب انہیں دلوں سے ہندوستان کے بت نکال کر ’’پاکستان‘‘ کو قبول کرلینا چاہیے‘ دنیا چاند پر چلی گئی خود لمبی لمبی گاڑیاں اور دوسری خواتین کے لئے سائیکلیں‘ موم بتی مافیا کے اس منافقانہ ایجنڈے کو دفن کر دیا جائے گا۔یہ سیکولر شدت پسند ! جس بھارت میں خواتین کو برابری کی حیثیت اور حقوق ملنے کا پاکستان میں گمراہ کن پروپیگنڈہ کرتے ہیں‘ وہ بھارت شاید چاند پر واقع ہو؟ ورنہ ہندو‘ اندرا گاندھی اور نریندر مودی کے جس بھارت کو دنیا جانتی ہے وہاں تو بندروں‘ سانپوں اور دودھ دینے والی گائے کی پرستش کی جاتی ہے جبکہ انسانوں کو درندوں کی طرح ادھیڑ کر رکھ دیا جاتا ہے اور بالخصوص مسلمان عورتوںکی عزت کو تو ہندو شدت پسند بھارت کے چوک اور چوراہوں پرپامال کرنے کے بعد نہایت سفاکی کے ساتھ شہید کر دیتے ہیں اور یہ کوئی ایک دن کی بات نہیں بلکہ ستر سالوں سے وہاں یہی کچھ ہو رہا ہے‘ عورتوں پر جتنے مظالم بھارت میں ڈھائے جارہے ہیں وہ اپنی مثال آپ ہیں‘ یہ عورتوں کی سائیکل ریس اور کبھی میراتھن ریس عورتوں کی توہین اور تذلیل کرنے کا یورپی اور ہندوستانی ایجنڈا ہے جس کے خلاف رسواکن ڈکٹیٹر پرویز مشرف کے دور میں گوجرانوالہ اور لاہور کے بہادر علماء اور مذہب پسند عوام نے مزاحمت کرکے پابندی لگوائی تھی اور اب 2019ء کے جنوری میں پشاور کی جمعیت علماء اسلام اور مذہب پسند عوام نے مزاحمت کا اعلان کرکے تحریک انصاف کی حکومت کو پابندی لگانے پر مجبور کیا۔ جس پر علماء کرام‘ عوام اور حکومت تینوں خراج تحسین کے مستحق ہیں۔


تازہ ترین خبریں

شہباز شریف کی پارلیمان کو بائی پاس کر کے انتخابی اصلاحات پر گفتگو کیلئے آل پارٹیز کانفرنس کی تجویز مضحکہ خیز ہے۔ فواد چوہدری

شہباز شریف کی پارلیمان کو بائی پاس کر کے انتخابی اصلاحات پر گفتگو کیلئے آل پارٹیز کانفرنس کی تجویز مضحکہ خیز ہے۔ فواد چوہدری

 صوبائی بجٹ میں ڈی ایچ کیوہسپتال کیلئے فنڈ مختص نہ کرنا بٹگرام ، تورغر اور کوہستان کے لاکھوں عوام ساتھ زیادتی ہے۔ علامہ عطا محمد دیشانی

صوبائی بجٹ میں ڈی ایچ کیوہسپتال کیلئے فنڈ مختص نہ کرنا بٹگرام ، تورغر اور کوہستان کے لاکھوں عوام ساتھ زیادتی ہے۔ علامہ عطا محمد دیشانی

مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو زرداری نے شہباز شریف کی انتخابی اصلاحات پر کل جماعتی کانفرنس بلانے کے اقدام کی حمایت کردی

مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو زرداری نے شہباز شریف کی انتخابی اصلاحات پر کل جماعتی کانفرنس بلانے کے اقدام کی حمایت کردی

پی ایس ایل سکس ْ۔۔۔کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دیکر پلے آف کے لیے کوالیفائی کر لیا

پی ایس ایل سکس ْ۔۔۔کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دیکر پلے آف کے لیے کوالیفائی کر لیا

ہنگامی لینڈنگ کے دوران طیارہ درخت سے ٹکرا کر تباہ، 9 پیرا شوٹرز ہلاک

ہنگامی لینڈنگ کے دوران طیارہ درخت سے ٹکرا کر تباہ، 9 پیرا شوٹرز ہلاک

 کشمیر الیکشن سے قبل ہماری پارٹی کے لوگوں سے وفاداریاں تبدیل کرائی جا رہی ہیں۔ مریم اورنگزیب

کشمیر الیکشن سے قبل ہماری پارٹی کے لوگوں سے وفاداریاں تبدیل کرائی جا رہی ہیں۔ مریم اورنگزیب

’اپنے اوپر ہونے والے حملے کی نہیں بلکہ پریشانی اس بات کی ہے کہ ۔۔۔‘وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے اپنی تشویش کا کھل کر اظہار کردیا

’اپنے اوپر ہونے والے حملے کی نہیں بلکہ پریشانی اس بات کی ہے کہ ۔۔۔‘وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے اپنی تشویش کا کھل کر اظہار کردیا

روس کا دارالحکومت ماسکو زور دار دھماکے سے گونج اٹھا، دھویں کا بادل اتنا بڑا کہ خوف آجائے

روس کا دارالحکومت ماسکو زور دار دھماکے سے گونج اٹھا، دھویں کا بادل اتنا بڑا کہ خوف آجائے

سندھ حکومت کاپرائمری اسکولز21 جون سےکھولنےکافیصلہ

سندھ حکومت کاپرائمری اسکولز21 جون سےکھولنےکافیصلہ

  پی ایس ایل سکس ۔۔کراچی کنگز کے دانش عزیز نے ایک اوور میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ بنا ڈالا

پی ایس ایل سکس ۔۔کراچی کنگز کے دانش عزیز نے ایک اوور میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ بنا ڈالا

یااللہ خیر،پاکستان شدیدزلزلے سے لرز اٹھا،عوام کلمہ طیبہ کاوردکرتے ہوئے گھروں سے باہرنکل آئے

یااللہ خیر،پاکستان شدیدزلزلے سے لرز اٹھا،عوام کلمہ طیبہ کاوردکرتے ہوئے گھروں سے باہرنکل آئے

بلوچستان کے مختلف علاقوں میں زلزلے کےجھٹکے

بلوچستان کے مختلف علاقوں میں زلزلے کےجھٹکے

ملک میں سونا سستا ہوگیا

ملک میں سونا سستا ہوگیا

گرمی کے ستائے لو گوں کیلئے اچھی خبر۔۔محکمہ موسمیات نے مون سون بارشوں کی پیش گوئی کردی

گرمی کے ستائے لو گوں کیلئے اچھی خبر۔۔محکمہ موسمیات نے مون سون بارشوں کی پیش گوئی کردی