09:16 am
 آخری گولی آخری سانس تک لڑیں گے؟

آخری گولی آخری سانس تک لڑیں گے؟

09:16 am

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے بھارت کو مشورہ دیا ہے کہ وہ پاکستان سے دشمنی کرلے‘ مگر انسانیت سے تو دشمنی نہ کرے‘‘ بنیادی بات اور زمینی حقیقت یہی ہے کہ نریندرمودی‘ بھارتی اسٹیبلشمنٹ اور میڈیا کے انگ انگ میں اسلام دشمنی اور انسانیت سے نفرت پارے کی طرح دوڑ رہی ہے
پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے بھارت کو مشورہ دیا ہے کہ وہ پاکستان سے دشمنی کرلے‘ مگر انسانیت سے تو دشمنی نہ کرے‘‘ بنیادی بات اور زمینی حقیقت یہی ہے کہ نریندرمودی‘ بھارتی اسٹیبلشمنٹ اور میڈیا کے انگ انگ میں اسلام دشمنی اور انسانیت سے نفرت پارے کی طرح دوڑ رہی ہے۔ نریندر مودی سرکار ‘کے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف کئے جانے والے اقدامات دیکھ کر یوں اندازہ ہوتا ہے کہ جیسے ان کی زندگیوں کا مقصد ہی اسلام اور مسلمانوں کو مٹانا بن چکا ہے۔
نریندر مودی اور ہندو دہشت گردوں کی انسانیت دشمنی کی انتہا تو یہ ہے کہ گائے کو ذبح کرنے کا جھوٹا الزام لگا کر بے گناہ مسلمانوں کو قتل کرنا ان کا مشغلہ بن چکا ہے... اگر کوئی شخص‘ گروہ یا ملک ’’انسانیت‘‘ کا ہی دشمن بن جائے تو وہ درندہ صفت جانوروں سے بھی بدتر ہو جایا کرتا ہے۔
یہ بات ایک اٹل حقیقت بن کر ابھری ہے کہ نریندر مودی کے بھارت کی دشمنی’’انسانیت‘‘ سے ہے‘ نریندر مودی کا بھارت ‘نہ اسلام کو برداشت کرنے کے لئے تیار ہے‘ نہ مسلمانوں کو اور نہ ہی پاکستان کو‘ اسلام کو مٹانے‘ مسلمانوں کو ختم کرنے اور پاکستان کو خاکم بدہن توڑنے کے لئے مودی کا بھارت ہر حربہ اور ہر سازش آزما رہا ہے‘ سوال یہ بھی ہے کہ نریندر مودی کے جس بھارت کی ’’انسانیت‘‘ سے ہی دشمنی ہے وہ بھارت کیا کبھی باتوں یا مذاکرات سے پیچھے ہٹنے پر تیار ہوگا؟ میجر جنرل آصف غفور کہتے ہیں کہ بھارت امن اور ترقی چاہتا ہے تو کلبھوشنوں کو ہمارے ملک نہ بھیجے‘ بھارت نے سوچے سمجھے بغیر پاکستان پر پلوامہ حملے کا الزام لگایا‘ انہوں نے کہا کہ آخری سانس اور آخری گولی تک ملک کا دفاع کریں گے‘ پاکستانی صلاحیت و قوت بھارت سے زیادہ ہے‘ حیران تم نہیں ہم کریں گے‘ بھارت پیغام کو سمجھ لے‘ لڑنے کی کوشش نہ کرے‘ ہمارے پاس آپ کے لئے فیصلہ کن مقامات پر قوت کا تناسب زیادہ ہے‘ بھارتی مہم جوئی کا بھرپور جواب دیں گے‘ پاک فوج کے ترجمان نے کہا کہ  کشمیری نوجوان نے بھارتی فورسز  کو نشانہ بنایا‘ انہوں نے کہا کہ بھارت نے پاکستان کی آزادی کو آج تک تسلیم نہیں کیا‘ اصل دہشت گردی بھارت نے کی‘ جب مکتی باہنی کے ذریعے حالات بگاڑے‘ مکتی باہنی کے کردار کو خود بھارتی وزیراعظم نے تسلیم کیا۔
بھارت نے ہمیشہ پاکستان کے خلاف سازشیں کیں اور دہشت گردی کی‘ انہوں نے کہا کہ بھارت دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت ہے۔1947ء میں بھارت نے کشمیر پر حملہ کیا اور 72سالوں سے کشمیریوں پر بھارتی مظالم جاری و ساری ہیں۔
مجھے پاک فوج کے ترجمان کی ساری باتوں سے اتفاق ہے مگر ایک بات پر اعتراض بھی ہے اور وہ یہ کہ ’’بھارت دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت ہے‘‘ نریندر مودی جیسا خونخوار دہشت گرد جس بھارت کا وزیراعظم ہو اس بھارت کو جمہوری سمجھنا جمہوریت کی توہین کے مترادف ہے‘ بھارت میں پائے جانے والے جنگی جنون اور بھارتی حکومت کی دھمکیوں کے ردعمل میں پاک فوج کے ترجمان کی پریس کانفرنس بروقت ہے‘ انہوں نے بھارت کو سمجھانے اور بتانے کی کوشش کی یقیناً بھارت تک ان کا پیغام پہنچ چکا ہے۔لیکن اس کے ساتھ ساتھ ملک کے اندر بھی ابھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے‘ ویسے تو بھارت سے جنگ کی صورت میں پوری قوم پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہوگی‘ لیکن قوم کے جوانوں میں جہادی جذبہ اجاگر کرنے کی طرف بھی حکومت کو توجہ دینے کی ضرورت ہے‘ بھارت اگر باتوں سے باز نہ آیا اور خدانخواستہ اس  نے حملہ آور ہونے کی کوشش کی تو اسے پھر لاتوں سے سیدھا کرنا ضروری ہوگا۔
 بھارت کا جنگی جنون اس کی ناک کی سمت سے نکالنے کے لئے فضاء بدر  پیدا کرنے کی  ضرورت پڑے گی‘ پاکستان میں اگر کسی کے ذہن میں یہ خیال سمایا ہوا ہے کہ بھارت پاکستان سے زیادہ طاقتور ملک ہے تو یہ اس کی خام خیالی ہے۔
پاکستان سے کئی گنا فوج اور اسلحہ زیادہ رکھنے کے باوجود بھارت 72سالوں سے مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے  دلوں سے آزادی کے حصول کا جذبہ ختم نہیں کر سکا72...سالوں سے بھارت نے کشمیری قوم پر نت نئے مظالم ڈھا کر دیکھ لئیے‘ مگر آج بھی مقبوضہ کشمیر کی عملی صورتحال یہ ہے کہ چھوٹے چھوٹے بچے بھی ہاتھوں میں پتھر تھامے بھارتی درندگی کا مقابلہ کر رہے ہوتے ہیں‘ اگر بھارت طاقتور ہوتا تو کشمیریوں کے سر کو دہلی کی چوکھٹ پر جھکانے میں کامیاب ہو جاتا...سید علی گیلانی‘ یٰسین ملک‘ آسیہ اندرابی اور دوسرے حریت قائدین کو ساری عمر جیلوں میں رکھنے کے باوجود اگر بھارت ان کے دلوں سے جذبہ آزادی کو ختم نہیں کر سکا‘ تو پھر جان لیجئے کہ طاقتور بھارت نہیں بلکہ جذبہ آزادی اور ایقان و ایمان کی دولت ہے‘ اگر پاکستانی قوم افغان قوم کے ساتھ مل کر سوویت یونین کا وجود صفحہ ہستی سے مٹاسکتی ہے...اگر افغانستان کے طالبان تن تنہا امریکہ اور نیٹو فورسز کو دندان شکن شکست سے دوچار کر سکتے ہیں تو کوئی وجہ نہیں کہ متوقع پاک بھارت جنگ میں ہم غالب نہ رہیں‘ مگر اس کے لئے ہمیں اپنی صفوں کو بھی درست کرنا پڑِے گا‘ پاکستان سے بھارتی فلموں اور بھارتی ڈراموں کو ہر قیمت پر مٹانا پڑے گا۔
پاک سرزمین پر موجود دہلی کے نمک  خواروں پر بھی خاص نظر رکھنا پڑِے گی‘ پاکستانی قوم دنیا کی عظیم قوم ہے‘ یہاں صرف اللہ کے نام پر مال دینے والوں کی ہی کثرت نہیں‘ بلکہ ملک  و دین کی خاطر جانیں نچھاور کرنے کا جذبہ بھی دنیا میں سب سے زیادہ پایا جاتا ہے‘ یادرکھیے! ہم بھارت کے ہندو عفریت کا مقابلہ جذبہ ایمانی سے ہی کر سکتے ہیں‘ پاک فوج نے ملک کے دفاع کے لئے آخری سانس اور آخری گولی تک لڑنے کا جو اعلان کیا ہے‘ وہ نہایت خوش آئند ہے‘ لیکن پاکستانی قوم بھی اپنی فوج کو  مایوس نہیں کرے گی۔