02:19 pm
پانسہ پلٹنے والاہے

پانسہ پلٹنے والاہے

02:19 pm

ادھرامریکہ اورافغان طالبان کے درمیان مذاکرات کی کامیابی کے بعدافغانستان میں گزشتہ برس 20جولائی کوہونے والے صدارتی انتخابات کیلئے مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے امیدواروں کاسلسلہ شروع ہوگیاہے اورپہلی بارکانٹے دارمقابلے کی توقع ہے۔صدارتی امیدواروں کی نامزدگی کیلئے آخری تاریخ 31جنوری مقررکی گئی
(گزشتہ سے پیوستہ)
ادھرامریکہ اورافغان طالبان کے درمیان مذاکرات کی کامیابی کے بعدافغانستان میں گزشتہ برس 20جولائی کوہونے والے صدارتی انتخابات کیلئے مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے امیدواروں کاسلسلہ شروع ہوگیاہے اورپہلی بارکانٹے دارمقابلے کی توقع ہے۔صدارتی امیدواروں کی نامزدگی کیلئے آخری تاریخ 31جنوری مقررکی گئی تھی تاکہ مزیدامیدواروں کی نامزدگی بھی عمل میں لائے جاسکے ۔تادمِ تحریرافغان صدرڈاکٹراشرف غنی،جمعیت اسلامی افغانستان کے ڈاکٹرعبداللہ،حزب اسلامی کے گلبدین حکمت یار،ملت پارٹی کے نورالحق علیمی،زلمے رسول،نقیب پدرام،حنیف اتمر،سیدنوراللہ جلیلی، فرامرزتمنا،عنائت اللہ حفیظ،حکیم تورسین،رحمت اللہ نبیل،الکوزی کارپوریشن کے ابراہیم الکوزی،احمدشاہ مسعود کے بھائی ولی مسعود،شیرمحمدابدالی،نوررحمان لیوال نے کاغذاتِ نامزدگی جمع کروائے ہیں۔
صدارتی انتخابات رواں سال20 اپریل کوہونے تھے لیکن امریکی درخواست پرانتخابات کی تاریخ کوتین مہینے آگے بڑھادیاگیاہے اوراب یہ انتخابات 20جولائی کومنعقدہوں گے اس بار افغانستان میں نہ صرف انتخابات میں دلچسپی بڑھ گئی ہے بلکہ مختلف جماعتوں کے سربراہوں سمیت اہم لوگوں نے انتخابات میں خصوصی دلچسپی کااظہارکیا ہے۔بھارت سمیت متعددممالک نے اپنے پسندیدہ امیدواروں پرنظریں جمالی ہیں اوران کی باقاعدہ مددکافیصلہ بھی کیاگیاہے۔بھارت کی کوشش ہے کہ عبداللہ عبداللہ یااشرف غنی میں کوئی کامیاب ہو جائے تاہم افغانستا ن کے انتخابات اس مرتبہ انتہائی دلچسپ ہیں۔یہ انتخابات ایک ایسے وقت میں ہورہے ہیں جب افغانستان سے تمام غیرملکی افواج کے انخلا کیلئے طالبان اور امریکہ میں انتہائی سنجیدگی کے ساتھ مذاکرات میں پیش رفت ہونے کاامکان جاری ہے تاہم طالبان نے ہرقسم کے انتخابات میں حصہ لینے کافیصلہ ابھی تک نہیں کیالیکن تمام امیدوار،ان کی جماعتیں اورامریکہ سمیت اس کے تمام اتحادی اس بات سے واقف ہیں کہ افغانستان کے 60 فیصد علاقوں پرطالبان کی حکمرانی ہے جس کی وجہ سے طالبان کی حمائت کسی بھی امیدوارکیلئے انتہائی اہمیت کی حامل ہے اورحزبِ اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یارطالبان کی حمائت حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں کیونکہ کاغذاتِ نامزدی جمع کروانے کے بعدانہوں نے افغانستان کے موجودہ نظام کو باطل اورفاسق قراردیاہے اورنظام کی تبدیلی کیلئے آئین میں فوری تبدیلی کاوعدہ بھی کیاہے۔
حکمت یارنے اپنے نائبین کاانتخاب بھی ایسے لوگوں میں سے کیاہے جو ترکمن اورتاجک ہیں اوران کے خلاف کوئی الزامات نہیں ہیں اوردونوں ٹیکنوکریٹ بھی ہیں۔افغانستان کے انتخابات میں حصہ لینے والے دوسرے اہم امیدواراشرف غنی ہیں جنہوں نے امرصالح سابق این ڈی ایس چیف کواپنانائب صدربنایاہے تاہم امرصالح کی وجہ سے انہیں طالبان کی حمائت حاصل نہیں ہوسکتی کیونکہ امراللہ صالح کی طالبان وپاکستان دشمنی اوربھارتی وامریکی پٹھوہونے کی شہرت سے سب ہی واقف ہیں جس کی وجہ سے انہیں طالبان کی طرف سے کبھی بھی حمائت حاصل نہیں ہوسکتی جبکہ ڈاکٹرعبداللہ عبداللہ جمعیت اسلامی افغانستان کے امیدوارہیں اوران کے سربراہ برہان الدین ربانی کے قتل کاالزام طالبان پرعائدہے، اس لئے وہ بھی طالبان کی حمائت سے محروم رہیں گے۔سابق سلامتی کے مشیرحنیف اتمرایک ایسے امیدوارہیں جوگلبدین حکمت یارکے بعدطالبان کیلئے قابل قبول ہیںاوران کا طالبان کے ساتھ مذاکرات میں بھی اہم کرداررہاہے تاہم حامدکرزئی اورامریکہ کے قریب ہونے کی وجہ سے ان کوبھی مسائل کاسامناہے جبکہ کیمونسٹوں نے نورالحق علیمی کو اپنا صدارتی امیدوار نامزدکیاہے۔اسی لئے اس بارکانٹے دارمقابلے کی توقع ہے جس کیلئے شفاف انتخابات کی تیاری کی جارہی ہے تاہم موجودہ صدرانتخابات پراثرانداز ہوسکتے ہیں جبکہ عبداللہ عبداللہ بھی انتخابات پراثراندازہونے کی نہ صرف پوری کوشش کریں گے بلکہ اپنے علاقے میں دھونس، دھاندلی اورخوف کاماحول پیداکرنے کی بھی پوری تیاری کررکھی ہے تاہم عبداللہ عبداللہ کیلئے سب سے زیادہ خطرہ احمدولی مسعودکی جانب سے امیدوارہوناہے تاہم کاغذاتِ نامزدگی کی واپسی کے بعداصل صورتحال سامنے آئے گی۔
اگراحمدولی مسعودانتخابات میں حصہ لیتے ہیں توشمالی اتحادکوچاردھڑوں کیلئے ووٹ دیناپڑے گا کیونکہ یونس قانونی حنیف اتمرکے نائب صدرہیں جبکہ استادمحقق ہزارہ کی نمائندگی حنیف اتمرچینل سے کررہے ہیں۔اسی طرح اشرف غنی نے امراللہ صالح کونائب صدراول نامزدکیاہے جوشمالی اتحادمیں کافی اثرورسوخ رکھتاہے تاہم اس بارحزبِ اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یارکی وجہ سے عبداللہ عبداللہ نے اشرف غنی کانائب صدربننے سے انکارکردیاہے ۔اس سے قبل عبدالہادیارغندیوال انتخابات میں عبداللہ عبداللہ کے نائب صدراول کے امیدوارتھے۔ایک طرف افغان صدارتی انتخابات میں دلچسپی ظاہرکی جارہی ہے تودوسری جانب افغان طالبان اورامریکاکے درمیان مذاکرات ڈیڈلاک کے بعدایک مرتبہ پھرقطرمیں کامیابی کے ساتھ طے پاگئے ہیںجہاں امریکہ اورطالبان کے مابین افغانستان میں موجودنصف امریکی افواج (سات ہزار)کے فوری انخلا اورباقی فوج کے انخلا کیلئے ٹرمپ کاپینٹاگون کوفوری طورپرٹائم ٹیبل مرتب کرنے کے احکام اورمستقبل میں افغانستان کسی کے خلاف استعمال نہ کرنے کے دونکاتی ایجنڈے کے علاوہ قیدیوں کے تبادلے،صدارتی انتخابات اورآئین میں تبدیلی جیسے نکات پرعملدرآمدکااعلان ہوچکاہے جس کوساری دنیاکے تجزیہ نگارطالبان کی فتح قراردے رہے ہیں۔طالبان کاموقف ہے کہ تمام غیرملکی فورسزکامکمل انخلا افغان عوام کادیرینہ مطالبہ ہے  اورامریکہ محفوظ انخلا چاہتاہے جبکہ دنیاکے تمام ممالک کامطالبہ ہے کہ مستقبل میں افغان سرزمین کسی کے خلاف استعمال نہ ہو جس کیلئے طالبان نے یقین دلادیاہے تاہم صدارتی انتخابات پربات چیت نہ کرنے سے انتخابات پرطالبان اثراندازہوسکتے ہیںاورطالبان نے جس امیدوارکی کھلم کھلایاخفیہ حمائت کااعلان کردیاتووہ یقینی طورپرافغانستان کاآئندہ صدرہوگاکیونکہ اس وقت افغانستان کے شمال سے لیکرمشرق تک 60فیصد سے زائدعلاقے پرباقاعدہ عملداری ہے بلکہ دن بدن طالبان کی دوسرے شہروں اورعلاقوں کی طرف بھی کامیاب پیش قدمی جاری ہے اوراب مذاکرات کی کامیابی کے بعدباقی ماندہ علاقوں کے عوام بھی درپردہ حمائت سے آگے بڑھ کرکھلم کھلاطالبان کاشدت سے انتظارکررہے ہیں جس کی وجہ سے صدارتی انتخابات میں طالبان کی حمائت فیصلہ کن کرداراداکرے گی اور طالبان کاہی آئندہ صدرکے انتخاب میں واحدگروپ ہوگاجوصدارتی انتخاب میں کسی بھی امیداوارکی کامیابی یاناکامی کافیصلہ کن کرداراداکرے گا۔

 

تازہ ترین خبریں

 بجلی کی قیمت میں اضافے کی تیاریاں شروع

بجلی کی قیمت میں اضافے کی تیاریاں شروع

برطانیہ نے الطاف حسین جیسے آدمی کو پاکستان کے حوالے نہیں کیا

برطانیہ نے الطاف حسین جیسے آدمی کو پاکستان کے حوالے نہیں کیا

وزیرصحت سندھ نے تعلیمی ادارے کھولنےکی مخالفت کردی

وزیرصحت سندھ نے تعلیمی ادارے کھولنےکی مخالفت کردی

پاکستان پہلےسےکہہ رہاتھاپلوامہ حملہ ڈرامہ ہےبھارت نےگزشتہ 20سال سےدہشتگردی کاڈھونگ رچایاتھا،۔ معید یوسف 

پاکستان پہلےسےکہہ رہاتھاپلوامہ حملہ ڈرامہ ہےبھارت نےگزشتہ 20سال سےدہشتگردی کاڈھونگ رچایاتھا،۔ معید یوسف 

 تحریک انصاف نے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے نام کا فیصلہ کر لیا

تحریک انصاف نے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے نام کا فیصلہ کر لیا

افغانستان میں موجود امریکی فوج 20سالوں کی کم ترین سطح پر آگئی

افغانستان میں موجود امریکی فوج 20سالوں کی کم ترین سطح پر آگئی

تحریک انصاف اور ایم کیو ایم میں معاملات طے پا گئے

تحریک انصاف اور ایم کیو ایم میں معاملات طے پا گئے

سندھ میں چار ہزار افسران اور ملازمین کے خلاف کارروئی شروع

سندھ میں چار ہزار افسران اور ملازمین کے خلاف کارروئی شروع

حکومت نے نعیم بخاری کو چئیرمین پی ٹی وی کےعہدے سے ہٹا دیا

حکومت نے نعیم بخاری کو چئیرمین پی ٹی وی کےعہدے سے ہٹا دیا

کوئٹہ میں دھماکہ، دو افراد نشانہ بن گئے

کوئٹہ میں دھماکہ، دو افراد نشانہ بن گئے

فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ اس لیے نہیں ہو پا رہا کیونکہ کٹہرے میں کھڑے شخص کا نام نواز شریف نہیں ہے بلکہ عمران خان ہے۔ نواز شریف 

فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ اس لیے نہیں ہو پا رہا کیونکہ کٹہرے میں کھڑے شخص کا نام نواز شریف نہیں ہے بلکہ عمران خان ہے۔ نواز شریف 

   انقلابی شاعر کا نالائق بیٹا شبلی فراز شاہی گداگر بن چکا ہے،  شازیہ مری  

   انقلابی شاعر کا نالائق بیٹا شبلی فراز شاہی گداگر بن چکا ہے،  شازیہ مری  

دیر سے آنے پر گاہک کا ڈلیوری بوائے سےکھانا لینے پر انکار

دیر سے آنے پر گاہک کا ڈلیوری بوائے سےکھانا لینے پر انکار

ملائیشیا میں پی آئی اے طیارےکی قبضےکامعاملہ ۔۔ لیز پر لیے گئے طیارے کی کمپنی کا مالک اور ڈائریکٹر بھارتی نکلے

ملائیشیا میں پی آئی اے طیارےکی قبضےکامعاملہ ۔۔ لیز پر لیے گئے طیارے کی کمپنی کا مالک اور ڈائریکٹر بھارتی نکلے