08:19 am
مودی کاجنگی جنون ورسوائی

مودی کاجنگی جنون ورسوائی

08:19 am

یہ بات کسی سے پوشیدہ نہیں کہ بھارت نے کبھی بھی پاکستان کے وجودکوشروع دن سے ہی تسلیم نہیں کیااوراس سلسلے میں پچھلی سات دہائیاں اس بات کی گواہ ہیں اورتقسیم ہندکے وقت ریڈکلف ایوارڈمیںماؤنٹ بیٹن اورجواہرلال نہروکے ساتھ ملی بھگت کرکے ایک ناپاک سازش کے تحت مشرقی پنجاب کے گورداسپور کوایک خاص منصوبے کے تحت ہندوستان کے نقشے میں شامل کرکے مسئلہ کشمیرکی بنیادرکھ دی گئی جبکہ تقسیم ہندکاتوفارمولہ یہی تھاکہ جہاں مسلم آبادی کی اکثریت ہوگی ،وہ علاقے پاکستان میں شامل ہوں گے اور کشمیر میں اس وقت 98 فیصد آبادی مسلمانوں کی تھی اورہرکس کویہ علم تھاکہ کشمیربھی اسی اصول کے تحت پاکستان کاحصہ بن جائے گالیکن برطانیہ نے ہمیشہ کی طرح یہاں اپنی خون آشام سازش کاسہارالیکردنیاکاسب سے بڑاتنازعہ ان دونوں ملکوں کے درمیان اس لئے چھوڑدیاکیونکہ وہ بھی پاکستان کے وجودِ مسعودکومشکوک سمجھتے ہوئے یہ ہی سمجھتاتھاکہ پاکستان چندماہ میں ہی خوداپنے وجود کو سنبھال نہیں پائے گااوراسی طرح مسلمانوں کی طرف سے چلائی گئی ’’دوقومی نظریہ‘‘تحریک خاکم بدہن ناکام ہو جائے گی اوراس طرح خطے کے مسلمان مکمل طورپربھارتی ہندوؤں کے رحم وکرم پراپنی باقی ماندہ زندگی گزارنے پرمجبورہوں گے لیکن قائداعظم محمدعلی جناحؒ نے اپنے مضبوط استدلال اورانتھک محنت سے خطے کے مسلمانوں کے وکیل کاحق اداکرتے ہوئے پاکستان جیسی معجزانہ ریاست کوقائم کرنے میں کامیاب ہوگئے۔
 

پاکستان نہ صرف وسائل کی عدم موجودگی اوردیگرمعاشی پریشانیوں کے باوجودخودکوقائم ودائم رکھنے میں کامیاب رہابلکہ دنیامیں ایک جوہری قوت بن کرسراٹھانے میں کامیاب ہو گیالیکن بھارت جومسلسل پاکستان کیخلاف سازشوں اوردہشت گردی میں مصروف ہے بلکہ اس نے پچھلے سات دہائیوں سے کشمیرپرنہ صر ف ناجائزقبضہ برقراردرکھے ہوئے ہے بلکہ کشمیریوں پربے پناہ تشدداورظلم وستم کی ایسی تاریخ رقم کی ہے کہ باوجوداقوام متحدہ میں اقوام عالم کی طرف سے متفقہ طورپر منظورحق خودارادیت کی قراردادوں پرعمل کرنے سے بھی منکرہوچکاہے اور پاکستان پرکشمیرمیں مداخلت کابہانہ بناکرہرروز پاکستان کوموردِ الزام ٹھہراتارہتاہے۔ ابھی حال ہی میں 14فروری کوکشمیرکی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک کشمیری نوجوان ڈارنے پلوامہ کی ایک سڑک پرفوجی کانوائے پرخودکش حملہ کرکے 49فوجیوں کوموت کے گھاٹ اتاردیاجس کے بعدمودی سرکارنے ہمیشہ کی طرح بغیرکسی تحقیق کے اس کاالزام فوری طورپر’جیش محمد‘پرلگادیاکہ جبکہ پاکستان پراس تنظیم پرایک عرصے سے پابندی لگی ہوئی ہے۔یادرہے ایساہی الزام میں بھارت نے 26/11 ممبئی حملوں کا الزام بھی پاکستان پرلگایاتھاجوبعدازاں گزشتہ برس جرمنی کے ایک مشہورمحقق (Elias Davidsson)نے اپنی مشہورزمانہ کتابThe Betrayal Of Indiaلکھ کربھارت کے اس جھوٹے دعوے کی قلعی کھول دی کہ کس طرح بھارت کاخودساختہ رچایاہوا ڈرامہ  تھااور20جون 2018ء کوبرطانوی ہاؤس آف پارلیمنٹ میں ’’لیزا ‘ ‘تھنک ٹینک کے پلیٹ فارم سے باقاعدہ اس کتاب کی رونمائی بھی کی گئی جس کے بعدپہلی مرتبہ عوام الناس کوبھارت کی اس مکارانہ چال کاپتہ چلاکہ کس طرح اپنے مقاصدکیلئے اقوام عالم کودھوکہ دینے کیلئے بھارت اپنے مربی کی تائیدسے اپنے مفادات کیلئے ایسے ڈرامے ترتیب دیتاہے۔
بھارت میں مودی سرکاردوبارہ عام انتخابات میں دوسری سیاسی جماعتوں کامقابلہ کرنے کیلئے میدان میں اتررہی ہے اوراس سے پہلے ابتدائی طورپربھارت کی پانچ ریاستوں میں مودی سرکاربری طرح انتخابات ہارچکی ہے جس کے بعداب اسے خدشہ ہے کہ وہ عام انتخابات میں بری طرح شکست کھاجائے گی جس کیلئے اس نے پلوامہ جیسی ایک نئی سازش تیارکی تا کہ بھارتی عوام سے پاکستان دشمنی کے نام پرووٹ لئے جاسکیں ۔انڈیا کی ہندو قوم پرست جماعت مہاراشٹرنو نرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے دعویٰ کیا ہے کہ اگر پلوامہ کے حملے کے بارے میں قومی سلامتی کے مشیراجیت دوول سے پوچھ گچھ کی جائے تو اس حملے کی پوری حقیقت عیاں ہو جائے گی۔راج ٹھاکرے نے ہلاک ہونے والے انڈین سیکورٹی اہلکاروں کو ’’سیاسی مظلوم‘‘قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہر حکومت اس طرح کی صورتحال تخلیق کرتی ہے لیکن مودی کی حکومت میں یہ کچھ زیادہ ہی ہوتا ہے لیکن مودی کی یہ بدقسمتی کہ خوداس کے اپنے ملک بھارت میں اس سازش کاپردہ چاک ہوگیااورہرطرف سے یہ آوازیں اٹھناشروع ہوگئیں کہ یہ مودی کی انتخاب جیتنے کیلئے ایک ہولناک سازش کی گئی جس میں نچلی ذات کے انچاس فوجیوں کو قربانی کا بکرا بنایاگیالیکن مودی اپنی ہٹ دھرمی کے ساتھ پاکستان کو مووردِ الزام ٹھہراتارہااورخطے میں جنگی ماحول پیداکرکے پاکستان پرحملے کی دھمکیاں دیناشروع کردیں۔ 
(جاری ہے)

تازہ ترین خبریں