07:45 am
دنیا میں 99.6فی صد دہشت گردی کے ذمہ دار غیر مسلم

دنیا میں 99.6فی صد دہشت گردی کے ذمہ دار غیر مسلم

07:45 am

(گزشتہ سے پیوستہ)
٭ ملک کی سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کوسکھوں کی مذہبی عبادت گاہ ’’دربارصاحب‘‘کوشہیدکرنے کی پاداش میں انہی کے ایک سکھ محافظ نے دن دہاڑے قتل کردیاتھا۔
٭سابق وزیر اعظم راجیوگاندھی کا قاتل، جنوبی ہند کا ایک ہندو شخص تھا۔
٭ آسٹریلیا کے عیسائی پادری گراہم اسٹینس اوراس کے بچوں کو زندہ جلادیاگیا۔ جلانے والے بجرنگ دل اور بے جے پی کے لوگ تھے ۔
٭ نکسلائیٹ، الفا وغیرہ تنظیموں کے تشدد کے شکار آئے دن لوگ ہوتے رہتے ہیں۔ شمالی ہند میں نچلی ذاتوں کے لوگوں کی جان ومال، عزت وآبرو کو پامال کرنااعلی ذات کے
انتہاپسندوں کا مشغلہ ہے۔
٭ سنگھ پریوار نے مسٹرایڈوانی کی قیادت میں تاریخی بابری مسجد کو شہید کردیا باوجود اس کے کہ اس کا کیس سپریم کورٹ میں چل رہاتھا اور اسی کورٹ میں یہ حلف نامہ داخل کرنے کے بعد کہ بابری مسجد کو نقصان نہیں پہنچائیں گے، قانون کو ہاتھ میں لیاگیا۔
٭ گودھرا میں مودی پیٹنٹ فارمولے کو اپنا کر اس کے تجربے سے گجرات میں مسلم اقلیت کی نسل کشی کی گئی۔
٭ مہاراشٹر میں ناندیڑ، پربھنی، پرنا، جالنہ، عمر کھیڑ وغیرہ بم دھماکوں کے مجرم آج بھی آزاد گھوم رہے ہیں۔ ان کی آج تک خاطر خواہ تحقیقات نہیں کی گئی۔
٭بھارتی فوج کے حاضرسروس کرنل پروہت اوراس کے ساتھیوں نے پاک بھارت کے درمیان چلنے والی سمجھوتہ ٹرین کوآگ لگاکر70پاکستانی مسافروں کوزندہ جلادیاگیا۔
٭ امریکی صدرکلنٹن کےدورہ بھارت کے دوران 20مارچ 2000ء کوچھتی سنگھ پورہ جموں میں رات کے اندھیرے میں 35سکھوں کوگولیوں سے بھون دیا گیا جس کاالزام پاکستان پرلگایاگیالیکن بعدازاں خود تین افرادپرمشتمل بھارتی تحقیقاتی کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں اسے باقاعدہ ’’را‘‘کی سازش قراردے دیا۔
آپ سب جانتے ہیں دنیا میں سب سے زیادہ افراد کن لوگوں نے قتل کئے؟ ہٹلر، ساٹھ لاکھ یہودیوں کا قاتل، وہ ایک عیسائی تھا، جوزف سٹالن نے دوکروڑ افراد کو قتل کیا جن میں سے ڈیڑھ کروڑ کو بھوکا رکھ کر مارا گیا، یہ مسلمان نہیں تھا، چینی ما زؤئے تنگ نے ڈیڑھ سے دو کروڑ افراد کا قتل کیا وہ بھی مسلمان نہیں تھا، اٹلی کے مسولینی نے چار لاکھ افراد کو قتل کیا، فرانسیسی انقلاب کے دوران دو لاکھ افراد کو ایک ایسے انسان نے قتل کیا جو مسلمان نہیں تھا، اشوکا، جسے ہندو بہت مانتے ہیں، نے ایک لاکھ افراد کو قتل کیا، وہ مسلمان نہیں تھا جبکہ امریکہ کے جارج بش نے صرف عراق میں پانچ لاکھ بچوں کو قتل کر ڈالا، کیا جارج بش مسلمان تھا؟ دہشت گردی کے خلاف جنگ(جو کہ اگر سی آئی اے کے ڈرگ بزنس کو مدِ نظر رکھ کر دیکھی جائے تو بنی ہی لاشوں کے اوپر ہے)میں صرف ایک اسامہ بن لادن کو بنیاد بنا کر  لاکھوں افراد کو افغانستان میں قتل کیا گیا اور اب تک یہ سلسلہ جاری ہے، کیا امریکی، برطانوی اور نیٹو افواج مسلمانوں کی ہیں؟ لیبیا، مصر، عراق اورشام میں کتنے بے گناہ افراد کا قتل کیا گیا؟ پاکستان میں 317ڈرون حملوں میں2160 افراد کوشہیدکردیاگیاجبکہ غیرسرکاری طورپران کی تعداد پانچ ہزارسے زائد ہے۔ایک ڈرون حملہ ڈومہ ڈولہ میں بھی کیا گیا جہاں 83سے زائدمعصوم مدرسے کے بچے اور بچیاں شہیدکردی گئیں۔ کیا امریکی حکومت نے آج تک ان تمام افرادکے قتل کی ذمہ داری قبول کی ہے کہ یہ شہیدہونے والے چھوٹے بچے دہشت گرد تھے؟ دراصل  امریکی وار آن ٹیرر کے قانون کے مطابق فریڈم آف ایکسپریشن کا مطلب ہی مسلمان کو دہشت گرد ثابت کرنا ہے اورنائن الیون حملے کے بعدبش جونیئرنے فرعونی اندازمیں ساری دنیاکوللکارکرکہاتھاکہ امریکی سرزمین پر حملہ انسانیت پر حملہ ہے پھر بے شک اس کے لئے ساری انسانیت کو ہی کیوں نہ ختم کرنا پڑے۔
زمانے کی یہ تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ دہشت گرد کی کوئی ذات، مذہب یا ملک نہیں ہوتا۔ مگر جب ملت اسلامیہ کا تعلق آتا ہے، فورا پیمانے بدل جاتے ہیں اور اس کی ہر حرکت وعمل کو مخصوص خوردبین سے دیکھاجاتا ہے کہ کس طرح اور کیسے اس کو بدنام کیا جائے اور اپنے مقاصد کی تکمیل کے لئے راستے ہموار کئے جائیں۔مسئلہ وہی ہے جس کی طرف پروین شاکر نے اشارہ کیا ہے!
میں سچ بولو ں گی مگر ہار جائوں گی    
وہ جھوٹ بولے گا اور لاجواب کردے گا

تازہ ترین خبریں