12:32 pm
مدینہ ،مدینہ،مدینہ

مدینہ ،مدینہ،مدینہ

12:32 pm

مدینہ ایمان کا مرکز ہے‘ مدینہ میں قیامت تک نہ طاعون داخل ہوسکتا ہے اور نہ دجال... ہم جس قدر مدینہ منورہ سے جڑتے جائیں گے‘ ایسی قدر ایمان کے قریب ہوتے جائیں گے‘ مدینہ کو پڑھیں‘ مدینہ کو سمجھیں‘ مدینہ سے سیکھیں‘ ایمان مکہ مکرمہ میں اترا‘ پھر اسنے مدینہ منورہ کو اپنا ٹھکانہ بنایا‘ وہاں اہل ایمان نے ایسی قوت پائی کہ مکہ مکرمہ کو پھر حاصل کرلیا‘ اور فتنوں کے زمانے میں جب ایمان اور اہل ایمان ہر طرف اجنبی ہو جائیں گے تو ’’ایمان‘‘ پھر مدینہ کی طرف لوٹے گا اور وہاں قرار پکڑے گا‘ ایمان ہر کسی کی پناہ گاہ‘  جبکہ مدینہ منورہ ایمان کی پناہ گاہ‘ اس لئے آواز لگانے کی ضرورت ہے کہ مدینہ منورہ کو اچھی طرح دیکھو‘ اچھی طرح سمجھو اور مدینہ منورہ کے فیض کو اپنے دل میں اتارو‘ مدینہ کا تاریخی سفر بہت عجیب ہے‘ ہم مدینہ کے سفر سے اپنی اصلاح کر سکتے ہیں‘ اپنی محرومیوں کو دور کر سکتے ہیں‘ مدینہ پہلے ایک عام سا شہر تھا۔  حضرت نوح علیہ السلام کے بیٹے حضرت سام کی نسل نے اسے آباد کیا۔
 
ہمارے معروف کالم نگار عبدالحفیظ رحیمی نے یہ بتا کرکہ اس کے والدین مدینہ منورہ روانہ ہوچکے ہیں دل کے تاروں کو چھیڑ دیا‘ مدینہ منورہ کا ذکر سن کر جس کے دل میں محبت نہ امڈے وہ دل کسی مومن کا ہو ہی نہیں سکتا‘ خوش قسمت ہیں وہ حجاج کرام جو مکہ اور مدینہ کی پاکیزہ فضائوں میں پہنچ رہے ہیں‘ دل پہ کس کو اختیار ہے؟ اگر میرا دل بھی بے اختیار ہو کر  مدینہ کی مقدس سرزمین پہ پہنچنا چاہتا ہے تو اس معصوم خواہش کو کون روک سکتا ہے؟
میں مدینہ پہنچ سکوں یا نہ پہنچ سکوں‘ لیکن میری آنکھوں سے بہنے والے آنسو اور لبوں پہ جاری صل علیٰ کی صدائیں ضرور بضرور آقاء مولیٰ حضرت محمد کریمﷺ کی بارگاہ اقدس تک پہنچیں گی(ان شاء اللہ)
میرے پیر و مرشد نے ’’مدینہ‘‘ کی محبت میں ڈوب کر لکھا اور کیا کمال لکھا‘ لیجئے آپ بھی پڑھئیے اور اپنے ایمان کو تازگی بخشئے‘پیر و مرشد لکھتے ہیں کہ حضرت آقا مدنیﷺ نے دعا فرمائی تھی۔’’یا اللہ مدینہ کو ہمارے لئے محبوب فرما دے‘ جس طرح مکہ کو آپ نے ہمارے لئے محبوب فرمایا ہے یا اس سے بھی زیادہ‘‘ (بخاری و مسلم) مدینہ‘ مدینہ‘ محبت‘ محبت‘ آج محبت کی بہت کمی ہے۔ دلوں میں  کفرستانوں کا رعب اور عشق سوار ہے‘ مکہ اور مدینہ سے حقیقی تعلق نصیب ہوگیا تو ہمارے بہت سے مسائل حل ہو جائیں گے‘ ہمارے بہت سے امراض دور ہو جائیں گے۔
مدینہ منورہ ملک حجاز کا ایک آباد شہر ہے...اس شہر کی تاریخ تین ہزار سالہ پرانی ہے‘ آقاء مولیٰﷺ کی تشریف آوری سے پہلے اس کا نام ’’یثرب‘‘ مشہور تھا‘ آپؐ  نے نام تبدیل فرما دیا اور ساتھ یہ اعلان بھی فرما دیا کہ آئندہ اگر کسی نے اسے یثرب کہا تو وہ استغفار کرے‘ اور ساتھ یہ بھی فرما دیا کہ منافقین اسے یثرب کہتے ہیں‘ بہت عجیب بات ہے کہ منافقین کا مزاج ہر زمانے میں ایک جیسا رہتا ہے‘ دراصل عقیدہ ہی انسان کے مزاج کو بناتا ہے وہ کہتے تھے کہ اسلام تو اب آیا ہے جبکہ پچھلے پندرہ سو سال سے یہ یثرب تھا۔ آج بھی جگہ جگہ ایسی تحریکیں اٹھتی ہیں‘ کئی لوگ اسلام کی بجائے الٹی تین ہزار سالہ‘ پانچ ہزار سالہ قومیت اور لسانیت پر فخر کرتے ہیں اور اسلام سے  پہلے کے نام ڈھونڈ کر رکھنے کی کوشش کرتے ہیں۔
مدینہ منورہ ہماری اصلاح فرماتا ہے کہ  ’’یثرب‘‘ نام پر پابندی لگ گئی‘ اسلام کے شرف کے بعد پرانی جاہلیت پر فخر کا جواز کہاں بنتا ہے۔
یہاں پہلے عمالقہ بستے تھے‘ پھر فلسطین کی تباہی کے بعد یہودیوں نے یہاں کا رخ کیا‘ ان کے کئی قبائل یہاں آبسے‘ پھر ایک بڑے سیلاب نے اوس و خزرج کے قبائل کو یہاں لا بٹھایا...مدینہ تین اطراف سے پہاڑوں میں گھرا ہوا ہے اور چوتھی طرف کھجور کے باغات سے گھرا ہوا ایک شہر‘ بیماریوں اور وبائوں سے  اٹا پڑا تھا‘ یہاں کے رہنے والے ایک دوسرے سے لڑتے تھے‘ اوس و خزرج کی جنگ پورے سو سال تک چلی‘ یہودیوں نے یہاں سود کی نحوست اور ایک دوسرے کو آپس میں لڑانے کی خباثت کا عمل جاری رکھا ہوا تھا‘ مدینہ کی اپنی کوئی حکومت نہ تھی‘ بیماریوں‘ لڑائیوں‘ پریشانیوں‘ غربتوں‘ بے برکتیوں‘ شخصی غلامیوں میں جکڑا ہوا ایک عام سا شہر‘ مگر جب ایمان آیا اور حضرت آقا مدنیﷺ تشریف لائے یہاں سب کچھ بدل گیا۔ پھر وہ دن بھی آیا کہ جب ہر کوئی اس شہر کی طرف دوڑتا تھا‘ اور یہاں سے جاری ہونے والے احکامات کابل و افریقہ تک نافذ ہوتے تھے‘ بیماریاں یہاں  سے بھاگ گئیں‘ برکتوں نے یہاں ایسے ڈیرے ڈالے کہ یہاں جیسی برکت آج تک دنیا میں کہیں دیکھی نہیں گئی‘ یہاں کی زہریلی فضاء ایسی صحت افزاء اور خوشبودار ہوئی کہ یہاں سے وبائی بیماری کا نام و نشان مٹ گیا‘ یہاں کی جنگیں اور نفرتیں ایک دم محبت اور نصرت میں تبدیل ہوگئیں اور یہاں کی کمزوری مثالی اور شجاعت و جوانمردی میں تبدیل ہوگئی‘ مدینہ منورہ ہمیں سمجھا رہا ہے اور فرما رہا ہے کہ دیکھو میں کیا تھا اور پھر کیا بن گیا؟ تم بھی میری راہ پر چلو میری طرح ایمان‘ نصرت اور جہاد کے لئے اور سب سے بڑھ کر حضرت آقا مدنیﷺ کے لئے اپنے دل کے دروازے کھول دو‘ پھر دیکھو تم بھی کیا سے کیا بن جائوں گے؟
حضور ﷺ نے فرمایا ’’مدینہ کی تکلیف و شدت پر میری امت میں سے جو کوئی صبر کرے گا  قیامت کے دن میں اس کا شفیع بنوں گا‘‘ (مسلم‘ ترمذی) آقاو مولیٰﷺ ارشاد فرماتے ہیں کہ ’’مکہ، مدینہ کے سوا کوئی شہر ایسا نہیں جہاں دجال نہ آئے … مدینہ کا کوئی راستہ ایسا نہیں جس پر فرشتے پر باندھ کر پہرہ نہ دیتے ہوں‘ دجال مدینہ کے قریب ایک جگہ آکر اترے گا اس وقت مدینہ میں تین زلزلے ہوں گے جن سے ہر کافر اور منافق نکل کر دجال کے پاس چلا جائے گا (بخاری و مسلم)
پیرومرشد رقمطراز ہیں ‘ مدینہ کو اللہ تعالیٰ نے اپنے سب سے محبوب نبی ﷺ کے لئے منتخب فرمایا، مدینہ بھی مکہ مکرمہ کی طرح حرم شریف ہے‘ بہت محترم‘ بہت محتشم‘ وہاںبھی حرم پاک کی ساری حرمتیں نافذ رہیں گی‘ جبریل امین علیہ السلام وہاں تشریف لاتے تھے اور وہاں آج بھی قدم قدم پر فرشتوں کی ڈیوٹیاں ہیں‘ مدینہ منورہ حضرت آقا مدنی ﷺ کی رہائش گاہ ہے‘ یہ فضیلت کسی اور زمین کو حاصل نہیں‘ درود و سلام کا ایک عظیم‘ وسیع اور عجیب نظام مدینہ منورہ کو باقی دنیا سے رابطے میں جوڑے رکھتا ہے‘ مدینہ منورہ میں کسی غیر مسلم کو رہنے کی بلکہ داخل ہونے کی اجازت نہیں ہے‘ اس پابندی کو توڑنے کے لئے عالم کفر اور عالم صہیونیت نے خزانوں کے خزانے اور فوجوں کی فوجیں جھونک ڈالیںمگر وہ مدینہ منورہ کے حصار کو توڑنے میں ناکام رہے‘ آخر میں دجال ایک بھرپور کوشش کرے گا مگر اس کا پہلا لشکر ہی مدینہ کے باہر زمین میں دھنس جائے گا اور دجال مدینہ منورہ میں داخل نہیں ہوسکے گا‘ آج بھی یہودی ہوں‘ قادیانی ہوں یا دیگر غیر مسلم وہ مکہ و مدینہ میں داخل نہیں ہوسکتے‘ پروپیگنڈا کرنے والے جو چاہیں پروپیگنڈا کرتے رہیں‘ تدبیریں لڑانے والے جتنی چاہیں تدبیریں لڑالیں‘ سازشیں کرنے والے جتنی چاہے سازشیں کرلیں لیکن وہ ’’مدینہ‘‘ کی محبت کو مسلمانوں کے دلوں سے نہ نکال سکتے ہیں اور نہ کم کرسکتے ہیں۔
ایک اللہ والے نے کیا خوب کہا کہ مدینہ منورہ تو قبلہ محبت ہے ’’مدینہ‘‘ نام لیجئے تو دل محبت سے بھر جاتا ہے‘ زبان محبت کی مٹھا س سے تر ہو جاتی ہے۔
’’مدینہ‘‘ امن ہے سراپا امن، سراسر امن ،و  آخرت کا امن بھی ’’مدینہ‘‘ والی سرکارؐ کے پیروکاروں کے لئے ہے‘  وہ جو ’’مدینہ‘‘ کی روشنی میں زندگی گزارتے ہیں اور مدینہ سے کاٹنے والی ظلمتوں سے اپنا دامن چھڑالیتے ہیں … ان کے لئے  امن ہے ‘ موت کی تلخی سے‘ قبر کی تنگی سے‘ حشر کی گرمی سے‘ حساب کی سختی سے اور جہنم کی گرمی سے ‘ ان کے لئے دنیا میں امن ہے‘ فتنوں سے بزدلی‘ بخل سے ‘ دل کی سختی اور تنگی سے غیر اللہ کی غلامی سے‘ دین کے دشمن ہمیشہ مدینہ منورہ کے خلاف سازشوں میں مصروف رہتے ہیں جبکہ امت کے خوش نصیب افراد ہر زمانے میں مدینہ منورہ  کی حرمت اور حفاظت کے لئے کمربستہ رہتے ہیں‘ مدینہ منورہ بے پناہ ادب اور احترام کا مقام ہے‘ ہم دنیا کے کسی خطے کو مدینہ منورہ جیسا نہیں بناسکتے‘ ہمیں مدینہ منورہ کے نقش قدم پر چلنا تھا‘ مگر ہم نے اپنا رخ کسی اور طرف پھیر رکھا ہے۔
ہمارا وزیراعظم اپنی تقریروں میں ریاست مدینہ کی بات تو کرتا ہے لیکن گیارہ ماہ گزرنے کے باوجود ریاست مدینہ والا کوئی ایک اصول یا قانون بھی نافذ کرنے کے لئے تیار نہیں ہوتا‘ یورپ کے بجھے ہوئے چراغوں سے روشنی کی بھیک مانگنے والوں کو کوئی بتائے کہ ’’مدینہ تو خود روشنیوں کا عظیم مینار ہے ‘ ’’مغرب‘‘ کا تھوکا ہوا کلچر اپنانے والوں کو کوئی سمجھائے کہ دنیا کو سب سے پہلے تہذیب کا سبق تو پڑھایا ہی ’’مدینہ‘‘ نے ہے‘ گوروں کی طرز پر عورتوں کے حقوق کے نام پر بےحیائی پھیلانے والوں کو‘ کوئی بتائے کہ دنیا میں عورتوں کے حقوق کی پہچان کرائی ہی ’’مدینہ‘‘ نے ہے۔
فرنگی کے نظام سے عدل و انصاف کی توقع رکھنے والے سادہ دل لوگو! د نیا میں عدل و انصاف اور مساوات کا نظام متعارف کروایا ہی ’’مدینہ‘‘  نے ہے‘ مدینہ! اس لئے قبلہ محبت ہے کیونکہ مدینہ نے دنیا میں محبتوں کو عام کیا‘ نفرتوں کو مٹایا‘ چھوٹوں  پر شفقت اور بڑوں کے احترام  کا درس دیا‘ انسان کو ’’انسانیت‘‘ سے روشناس کروایا۔
کالم نگارو‘ اینکرو ‘ تجزیہ نگارو… دیکھنا عمران خان کی غلطیوں یا ضد کی وجہ سے ’’ریاست مدینہ‘‘ کو مذاق کا  نشانہ مت بنانا کیونکہ حالات و واقعات واضح کررہے ہیں کہ عمران کی زبان پر تو ریاست مدینہ مگر دل میں کچھ اور ہے اور اس دورنگی کا ثبوت ان کے بعض مشکوک اور متنازعہ اقدامات ہیں، کچھ بھی ہو مگر ’’مدینہ‘‘ کے احترام‘ مدینہ کے ادب میں فرق نہیں آنا چاہیے‘ مدینہ ایک یاددہانی ہے، مدینہ ایک لازمی نصاب ہے، مدنیہ امید کی روشنی ہے،مدینہ جذبے کی تعمیر اور تازگی ہے، مدینہ اپنی جڑوں سے جڑنے کا پیغام ہے، مدینہ کامیابی کادرس ہے۔
مدینہ ایمان کی دعوت ہے‘ مدینہ ہمار ے مسائل کا حل ہے‘ مدینہ اس امت کا عروج ہے‘ مدینہ ہماری بیماریوں کا علاج ہے‘ مدینہ اہل استقامت کے لئے بشارت ہے‘ مدینہ اہل آزمائش کے لئے حوصلہ ہے‘ ہاں مدینہ‘ مدینہ ہماری منزل ہے۔ (وما توفیقی الا باللہ)

تازہ ترین خبریں

اب ہر شہری اپنی گاڑی کا مالک بنے گا، پاکستان کی سستی ترین گاڑی متعارف کرا دی گئی

اب ہر شہری اپنی گاڑی کا مالک بنے گا، پاکستان کی سستی ترین گاڑی متعارف کرا دی گئی

کرائے کے گھروں میں رہنے والے سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

کرائے کے گھروں میں رہنے والے سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

آپ نے مجھ سے کیوں نہیں پوچھا؟ڈی جی آئی ایس آئی تقرری پر وزیراعظم نے آرمی چیف سے استفسار کیا تو انہوں نے کیا جواب دیا؟

آپ نے مجھ سے کیوں نہیں پوچھا؟ڈی جی آئی ایس آئی تقرری پر وزیراعظم نے آرمی چیف سے استفسار کیا تو انہوں نے کیا جواب دیا؟

نومبر میں حکومت ختم ہونےکی پیشنگوئی کے بعد پی ٹی آئی حکومت کو پہلا بڑا دھچکا لگ گیا،وزیراعظم کا انتہائی قریبی ساتھی مستعفی ہو گیا

نومبر میں حکومت ختم ہونےکی پیشنگوئی کے بعد پی ٹی آئی حکومت کو پہلا بڑا دھچکا لگ گیا،وزیراعظم کا انتہائی قریبی ساتھی مستعفی ہو گیا

پنجاب نے ٹھُکرا دیا اور سندھ نے اپنا لیا،ممتاز سرائیکی شاعر شاکر شجاع آبادی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سندھ حکومت نے بڑی پیشکش کر دی

پنجاب نے ٹھُکرا دیا اور سندھ نے اپنا لیا،ممتاز سرائیکی شاعر شاکر شجاع آبادی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سندھ حکومت نے بڑی پیشکش کر دی

ملک بھر میں پٹرولیم کی شدید بحران۔۔ آئندہ چند دنوں میں کیا ہونےوالاہے؟ایسی خبر جو پاکستانیوں کے ہوش اڑا دے گی

ملک بھر میں پٹرولیم کی شدید بحران۔۔ آئندہ چند دنوں میں کیا ہونےوالاہے؟ایسی خبر جو پاکستانیوں کے ہوش اڑا دے گی

فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کا معاملہ،وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے بڑا اسٹینڈ لے لیا

فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کا معاملہ،وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے بڑا اسٹینڈ لے لیا

اصل غصہ ہی ہمیں نیوزی لینڈ پر تھا، یہ انڈیا تو راستے میں آگیا" فواد چوہدری کا ایسا بیان کہ پاکستانیوں کے قہقہے رک نہیں رہے

اصل غصہ ہی ہمیں نیوزی لینڈ پر تھا، یہ انڈیا تو راستے میں آگیا" فواد چوہدری کا ایسا بیان کہ پاکستانیوں کے قہقہے رک نہیں رہے

طویل انتظار ختم ہوا، ن لیگی کارکنان تیاری پکڑ لیں ،سابق وزیراعظم کی واپسی کا اعلان کر دیا گیا

طویل انتظار ختم ہوا، ن لیگی کارکنان تیاری پکڑ لیں ،سابق وزیراعظم کی واپسی کا اعلان کر دیا گیا

میں کسی کو چھوڑوں گی نہیں، ثانیہ عاشق نے خود سے منسوب ویڈیوز سے متعلق کیا فیصلہ کر لیا؟ ہلچل مچ گئی

میں کسی کو چھوڑوں گی نہیں، ثانیہ عاشق نے خود سے منسوب ویڈیوز سے متعلق کیا فیصلہ کر لیا؟ ہلچل مچ گئی

نئے ڈ ی جی آئی ایس آئی کا فیصلہ انٹرویوز کے بعد ہوا۔۔۔وزیراعظم ہاؤس کا اعلامیہ

نئے ڈ ی جی آئی ایس آئی کا فیصلہ انٹرویوز کے بعد ہوا۔۔۔وزیراعظم ہاؤس کا اعلامیہ

نادرا نے پاکستانیوں کو بڑی خوشخبری سنا دی، کونسی سروس بالکل مفت ملے گی؟بڑی پریشانی ختم ہو گئی

نادرا نے پاکستانیوں کو بڑی خوشخبری سنا دی، کونسی سروس بالکل مفت ملے گی؟بڑی پریشانی ختم ہو گئی

پنشن و دیگر مراعات کا موجودہ نظام ختم ، حکومت کا سرکاری ملازمین کیلئے پنشن کا نیا سسٹم لانے کا فیصلہ

پنشن و دیگر مراعات کا موجودہ نظام ختم ، حکومت کا سرکاری ملازمین کیلئے پنشن کا نیا سسٹم لانے کا فیصلہ

نواز شریف سے لندن میں ملاقات کرنیوالی بااثر شخصیات کون نکلیں؟ن لیگ نے خود ہی تصدیق کر دی

نواز شریف سے لندن میں ملاقات کرنیوالی بااثر شخصیات کون نکلیں؟ن لیگ نے خود ہی تصدیق کر دی