12:17 pm
  پاکستان پر میڈیائی یلغار

پاکستان پر میڈیائی یلغار

12:17 pm

میڈیا میں  ایک ایسا طبقہ پایا جاتا ہے جس کا  واحد مشغلہ  پاکستان پر چاند ماری ہے۔
     میڈیا میں  ایک ایسا طبقہ پایا جاتا ہے جس کا  واحد مشغلہ  پاکستان پر چاند ماری ہے۔ مشغلہ کہنا بجا نہیں درحقیقت اس طبقے سے تعلق رکھنے والے مرد و زن چاند ماری کے فریضے پر مامور  کیے گئے ہیں ۔ چھوٹی موٹی چوری ہو جائے تو تفتیشی سب سے پہلے شکایت درج کروانے والے سے پوچھتا ہے کہ شک کس کس پر ہے۔یہاں صبح و شام پاکستان کے ساتھ میڈیائی واردات ہو رہی ہے ۔ یہ واردات آزادی صحافت اور آزادی اظہار رائے کا نقاب پہن کر کی جارہی ہے۔ پاکستانیوں کوبھی حق حاصل ہے کہ شک کا اظہار کریں اور یہ پتا لگائیں کہ ان وارداتیوں کی پشت پر  کون کون سے رسہ گیر کار فرما ہیں ؟   ظاہر ہے میڈیا اب صرف اخبارات یا ایک آدھ ریڈیو اور ٹی وی چینل تک محدود نہیں رہا ۔ پہلے ٹی وی چینلز وبائی بخار کی طرح پھیلے اور اب نیوز ویب سائٹس خود رو گھاس کی طرح اُگ رہی ہیں ۔ اردو اور انگریزی زبان کی نت نئی  نیوز ویب سائٹس ہی نہیں بلکہ سوشل میڈیا کے محاذ پر بھی فیس بک، ٹویٹر ، انسٹاگرام اور واٹس ایپ کے مو ر چوں میں گھات لگائے بیٹھے واردتیے  پاکستان پر نشانے لگا  رہے ہیں ۔
یہ سمجھنا کچھ دشوار نہیں کہ بظاہر کسی ذریعہ آمدنی کے بغیر نیوز ویب سائٹس کیسے چل رہی ہیں ؟ ان کے اخراجات کیسے پورے ہو رہے ہیں ؟ یہ ویب سائٹس چلانے والے لکھاریوں کو کوئی معاوضہ بھی دیتے ہیں یا سب کچھ بلا معاوضہ یعنی کراچی کی اردوئے معلیٰ کے مطابق پھوکٹ میں ہی چل رہا ہے؟ پھوکٹ میں تو کوئی کسی کو بخار نہیں دیتا تو یہ ماننا آسان نہیں کہ کوئی لبرل ٹوڈی میڈیائی بقراط یا بقراطن پاکستان پر نشانہ بازی کی خدمات پھوکٹ میں ہی فراہم کر دے ۔  بات واضح ہے کہ پاکستان پر میڈیائی یلغار کے لیے خفیہ ذرائع سے سرمایہ بھی فراہم کر دیا جاتا ہے اور زہریلے پروپیگنڈے کے لیے ضروری ہدایات بھی مسلسل جاری کی جاتی ہیں ۔ یہ کون کرتا ہے ؟ یہ جاننے سے پہلے آپ ان ویب سائٹس اور سوشل میڈیا اکائونٹس سے پھیلائے جانے والے خیالات و نظریات پر  ایک طائرانہ نگاہ ڈال لیں تو سب کچھ واضح ہو جاتا ہے۔ آئیے پاکستان کے خلاف میڈیا کے ذریعے کیے  جانے والے زہریلے پروپیگنڈے کے خلاصے پر ایک نگاہ ڈالتے ہیں ۔ یقین جانیے ! آپ خود بخود سمجھ جائیں گے کہ نومولود میڈیائی بقراطوں کا سرپرست اور مالی معاون کون ہے؟ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی حیران کُن کامیابی پر منہ پھلا کے یہ کہا جاتا ہے کہ دراصل یہ تو ہمارا اپنا پیدا کیا ہوا فتنہ ہے۔ تاہم میڈیائی بقراط بھارت کی سر پرستی میں چلنے والے دہشت گرد نیٹ ورکس اور داعش سے امریکہ کے خفیہ تعلق کار پر کوئی آواز نہیں ا ٹھاتے۔ پاکستان کو افغانستان میں مداخلت کا مجرم ٹھہرانے والے لبرل ٹوڈی یہ اعتراض کبھی نہیں اٹھاتے کہ ستر کے عشرے سے آج تک افغانستان میں  امریکہ کا کردار کیا رہا ہے ؟
 پاکستان میں اے پی ایس سانحے سمیت متعدد بد ترین دہشت گرد حملوں کے ماسٹر مائنڈ اور سہولت کار افغان حکومت اور بھارتی را کی مشترکہ چھتری تلے افغان سرزمین پر محفوظ پناہ گاہوں میں بیٹھے ہیں لیکن لبرل ٹوڈیوں نے جب بھی منہہ کھولا تو پاکستان پر حقانی نیٹ ورک کی پشت پناہی کا بے بنیاد الزام لگایا ۔ پاکستان کے ہر چھوٹے بڑے شہر   کے رہائشی علاقوں اور اہم تجارتی مراکز  میں افغان مہاجر دھڑلے سے دندناتے پھرتے ہیں لیکن میڈیائی وارداتیے پاکستان کو ہی افغانوں کا مجرم بنا کے کٹہرے میں کھڑا کرتے ہیں۔ جعلی دانشوروں کے ٹولے نے کبھی افغانستان میں بھارت اور امریکہ کی بے جا مداخلت پر اعتراض نہیں اٹھایا۔  امریکہ نے بمباری کر کے نہتے شہریوں ،  ہسپتالوں میں پڑے مریضوں اور مدارس کے معصوم حفاظ کے چیتھڑے اُڑا دیے لیکن نہ تو افغانوں کے بنیادی انسانی حقوق پر کوئی اثر پڑا اور نہ ہی قومی خود مختاری متاثر ہوئی ۔ بھارت نے افغان سرزمین پر پاکستانی سرحد سے ملحقہ علاقوں میں دہشت گردی اور جاسوسی کے اڈوں کو قونصل خانوں کا نام دے کے ہمارے خلاف جنگ چھیڑ رکھی ہے لیکن مجال ہے کہ کسی میڈ یائی بقراط کو اس ننگی دہشت گردی سے کوئی تکلیف ہو ۔
   مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاست نے غیر انسانی مظالم اور بنیادی حقوق کی پامالی کی تمام حدیں عبور کر ڈالیں ۔ اقوام متحدہ کے کمیشن برائے انسانی حقوق جیسے گونگے بہرے فورم نے بھی کشمیر کے انسانی المیے پر اپنی رپورٹ شائع کر دی لیکن ہمارے شقی القلب لبرل ٹوڈیوں کو مظلوم کشمیریوں پر رحم نہیں آیا ۔    ان کے قلم سے بھارت کی مذمت میں ایک لفظ نہ لکھا جا سکا ۔  بھارت کے خلاف کشمیریوں کے لیے گونگے بہرے بن جانے والے یہ لبرل ٹوڈی  پاکستان کے قبائلی علاقوں اور بلوچستان میں بھارتی سرمائے سے چلائی جانے والی جعلی قوم پرست تحریکوں کی  آڑ میں دہشت گردی کرنے والے مفرور مجرموں کے لیے  بال کھول کھول کر میڈیا پر  انسانی حقوق کا بین ڈالتے ہیں ۔ بھارت میں گائے کی حرمت پر مسلم کشی انہیں منظور ہے لیکن ناموس رسالت اور ختم نبوت کے حق میں آواز اٹھانے والوں کو یہ ٹکے بھائو بکنے والے جعلی دانشور شدت پسند قرار دے دیتے ہیں ۔  
پاکستان میں دہشت گردی اور جاسوسی کے جرائم میں سزائے موت پانے والے  را کے ایجنٹ نیول کمانڈر کل بھوشن یادو کا مقدمہ بھارت عالمی عدالت میں لے گیا ۔ عالمی عدالت نے  کونسلر رسائی دیتے ہوئے مقدمے کی نظرثانی سمیت مجرم کے متعلق ہر فیصلے کا اختیار پاکستان کی صوابدید پر چھوڑ دیا ۔ لبرل ٹوڈی فیصلے کا اعلان ہونے کے بعد سے وہی جھوٹ اچھال  رہے ہیں جو بھارتی سرکار اور میڈیا بیان کر رہا ہے ۔ غور طلب بات یہ ہے کہ کل بھوشن کو مرضی کا وکیل مہیا ہونے پر بھارت کی فتح کا جشن منانے والے بے شرم میڈیائی مینڈکوں کو اُس دہشت گردی پر کوئی اعتراض نہیں جو بھارت نے اپنے ایجنٹ کے ذریعے پاکستان میں کروائی ۔ پاکستانی عوام بم دھماکوں کا شکار ہوں ، فوج اور پولیس پر جان لیوا حملے ہوں ، لسانی منافرت پھیلائی جائے ، فرقہ ورانہ دہشت گردی ہو یا پاکستان کی نظریاتی اساس پر حملے ہوں ! لبرل ٹوڈیوں کو اس سے نہ کوئی غرض ہے اور نہ ہی کوئی تکلیف ۔ درج بالا خلاصہ پڑھ کر یہ جاننا کچھ مشکل نہیں کہ  ملک کے اندر اور ملک کے باہر بیٹھے ان میڈیائی وارداتیوں کے فکری ڈانڈے  پاکستان کے کس کس  دشمن ملک  سے جا ملتے ہیں ۔        

 

تازہ ترین خبریں

حافظ تو تھے ہی لیکن یہ اعزاز بھی مل گیا، معذوری کے باوجود  محمد سنان نے ایسا کیا کیا جو پورے پاکستان میں واہ واہ ہو گئی

حافظ تو تھے ہی لیکن یہ اعزاز بھی مل گیا، معذوری کے باوجود محمد سنان نے ایسا کیا کیا جو پورے پاکستان میں واہ واہ ہو گئی

تعلیم مکمل ۔۔ عمران خان کے بیٹے اب کیا کریں گے۔ ۔۔؟سیاست ، کاروبار یاپھر کھیل ۔۔ ؟پاکستانیوں کیلئے بڑی خبر

تعلیم مکمل ۔۔ عمران خان کے بیٹے اب کیا کریں گے۔ ۔۔؟سیاست ، کاروبار یاپھر کھیل ۔۔ ؟پاکستانیوں کیلئے بڑی خبر

قیامت صغریٰ کا منظر۔ 6.0شدت کے زلزلے نے تباہی پھیر دی۔۔متعددعمارتیں تباہ، امدادی کارروائیوں کیلئے ٹیمیں روانہ

قیامت صغریٰ کا منظر۔ 6.0شدت کے زلزلے نے تباہی پھیر دی۔۔متعددعمارتیں تباہ، امدادی کارروائیوں کیلئے ٹیمیں روانہ

محکمہ موسمیات نے آج گرج چمک کے ساتھ طوفانی بارشوں کی پیش گوئی کردی

محکمہ موسمیات نے آج گرج چمک کے ساتھ طوفانی بارشوں کی پیش گوئی کردی

بارشوں کی دھواں دار اننگز ۔اگلے تین دن کہاں کہاں بادل برسنے والے ہیں ؟شاندار خوشخبری

بارشوں کی دھواں دار اننگز ۔اگلے تین دن کہاں کہاں بادل برسنے والے ہیں ؟شاندار خوشخبری

بہت چھٹیاں کر لیں ، اب موجیں ختم۔۔ ہفتے میں دو کے بجائے اب صرف ایک دن چھٹی ۔۔۔ حکومت نے اعلان کر دیا،پاکستانیوں پر بجلیاں گرا دی گئیں

بہت چھٹیاں کر لیں ، اب موجیں ختم۔۔ ہفتے میں دو کے بجائے اب صرف ایک دن چھٹی ۔۔۔ حکومت نے اعلان کر دیا،پاکستانیوں پر بجلیاں گرا دی گئیں

وزیر اعظم نے اساتذہ کی تنخواہوں میں اضافہ کی منظوری دیدی

وزیر اعظم نے اساتذہ کی تنخواہوں میں اضافہ کی منظوری دیدی

 پورا ملک ووٹ کو عزت دو کے بیانیے پر چل رہا ہے،مریم نواز

پورا ملک ووٹ کو عزت دو کے بیانیے پر چل رہا ہے،مریم نواز

پاکستان میں نابینا افراد کیلئے اسمارٹ جوتا تیار

پاکستان میں نابینا افراد کیلئے اسمارٹ جوتا تیار

 شجرکاری مہم کے تحت 60 لاکھ پودے لگائے جائیں گے۔عثمان بزدار

شجرکاری مہم کے تحت 60 لاکھ پودے لگائے جائیں گے۔عثمان بزدار

مسلم لیگ (ن)نےانتخابی اصلاحات کی حکومتی پیشکش کو مسترد کردیا

مسلم لیگ (ن)نےانتخابی اصلاحات کی حکومتی پیشکش کو مسترد کردیا

یوٹیلیٹی سٹورز پر مختلف برانڈز کی اشیا کو مہنگا کر دیا گیا

یوٹیلیٹی سٹورز پر مختلف برانڈز کی اشیا کو مہنگا کر دیا گیا

فواد چودھری نے وفاقی ملازمین کو خوشخبری سنا دی

فواد چودھری نے وفاقی ملازمین کو خوشخبری سنا دی

خود عرض اور لالچی منیجر کی زندگی کا وہ واقعہ جس نے سب کچھ بدل ڈالا

خود عرض اور لالچی منیجر کی زندگی کا وہ واقعہ جس نے سب کچھ بدل ڈالا