09:40 am
بھارتی فوجیوں کی200 منجمد لاشیں، نیا بحران

بھارتی فوجیوں کی200 منجمد لاشیں، نیا بحران

09:40 am

کوئٹہ میں مسجد بم دھماکہ،15 شہید،19 زخمی۔ اس پر کچھ لکھنے کی ہمت نہیں پڑ رہی… ایران نے یوکرائن کا طیارہ گرانے کی غلطی تسلیم کرلی، صرف معذرت…مقبوضہ کشمیر200 بھارتی فوجیوں کی منجمد فریز لاشیں برآمد… حکومت نے 6 آرڈیننس واپس لے لئے… رانا ثناء اللہ گاڑی میں15 کلو ہیروئن کی موجودگی کا اعتراف…  بھارتی صوبہ ناگالینڈ کی بغاوت، اپنی فوج بنالی، بھارتی فوج سے لڑنے کا اعلان … قومی اسمبلی و سینٹ میں حکومت اور اپوزیشن میں مفاہمت۔
ایران سے یوکرائن جانے والا ایک مسافر طیارہ گر کر تباہ ہوگیا۔ اس میں سوارتمام174 مسافر ہلاک ہوگئے ان میں ایران اور کینیڈا کے بہت سے مسافر تھے۔ ایران نے الزام لگایا کہ یہ  کام امریکہ نے کیا ہے۔ امریکہ نے خود ایران پر الزام لگایا جس کا ایران انکار کرتا رہا۔ امریکہ نے سیٹلائٹ کی تصویریں بھیج دیں تو ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے تسلیم کرلیا کہ ایران کی انسانی غلطی سے یہ سانحہ ہوا ہے۔ وزیر خارجہ نے اس خوفناک غلطی پر صرف زبانی معذرت کی ہے۔ یہ معمولی حادثہ نہیں، کروڑوں بلکہ اربوں کی مالیت کا جہاز اور 174 مسافر! کھربوں روپے کا معاوضہ بن سکتا ہے۔ ایران پہلے ہی معاشی زبوں حالی کا شکار ہے۔ بھارت اور دوسرے ممالک ایران سے تیل کی خریداری بند کرچکے ہیں۔ تجارت اور مغربی ممالک میں ایرانی طیاروں کی پروازیں بند ہیں ملک میں بے روزگاری قابو سے باہر ہوچکی ہے۔ مظاہرے ہو رہے مگر شام ، لبنان، یمن اور عراق میں فوجی ٹانگیں پھنسا رکھی ہیں۔ ادھر امریکہ ہے اس نے 70 ممالک میں ٹانگیں پھنسائی ہوئی ہیں۔ دونوں طرف توسیع پسندی کی ہوس نے دنیا بھر کے امن کو خطرہ میں ڈال دیا۔ شکر ہے جنگ کا خطرہ ٹل گیا ہے۔
خوش آئند بات کہ پارلیمنٹ میں حکومت اور اپوزیشن نے بالآخر ہوش مندی کا مظاہرہ کیا۔ ڈیرھ سال لڑائی جھگڑے میں ضائع کرکے ملک وقوم کا خیال آگیا۔ خداکرے یہ ہوش مندی قائم رہے۔ ویسے ایک بات کا ضرور ذکر کرنا چاہتا ہوں کہ اپوزیشن جو کچھ بھی ہے اس کا کام ہی حکومت کا محاسبہ کرتے رہنا ہے، مگر حکومت کا بھی کیا حال ہے۔ بھانت بھانت کے لوگ جمع کر رکھے ہیں جو آرام سے بات ہی نہیں کرتے ۔ تھپڑوں پر اتر آتے ہیں۔ پنجاب کے ایک وزیر نے کہا ہے کہ میں اس لئے اکھڑ لہجہ اختیار کرتا ہوں کہ یہ لہجہ عمران خان کو بہت پسند ہے یہ بات بھی ہے کہ عمران خان کے بروقت تلخ لہجے میں نمایاں فرق دکھائی دے رہا ہے۔ کچھ عرصے سے عمران خان کے لہجے میں سنجیدگی اور متانت دیکھ رہا ہوں۔ سمجھ میں آگیا کہ بلیاں لڑتی رہیں تو کیک بندر کھا جاتا ہے۔ وہ تو بھارت کو اپنی پڑی ہوئی ہے، نئے سے نئے ہنگاموں میں پھنسا ہوا ہے ورنہ اس سے ہر وقت تخریب کاری سرزد ہوسکتی ہے۔ اہم بات کہ آخر کار اپوزیشن نے عمران خان کی حکومت کو تسلیم کرلیا۔
کچھ بھارت: مقبوضہ کشمیر میں اچانک دو جگہ سے ہندو فوجیوں کی200  منجمد لاشیں ملی ہیں اس  سے پورے ملک میں نیا بحران پیدا ہو رہا ہے۔ ظاہر ہے کہ فوجی کنٹرول لائن پر مارے گئے ہیں۔ کچھ حریت پسندوں کے ہاتھوں ہلاک ہوئے۔ اصول اور ضابطہ کے مطابق کسی بھی فوج کا کوئی رکن اتفاق یا حادثہ کے طور پر چل بسے تو اس کی لاش بڑے احترا م کے ساتھ اس کے گھر پہنچائی جاتی ہے مگر ان 200 لاشوں کو کیوں روکا گیا؟ ان کے لواحقین بھی بے خبر رہے۔ بھارتی حکومت ڈرتی تھی کہ اتنی اموات سے عوام میں غم و غصہ کی انتہا ہو جائے گی۔ ایک عرصے سے ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کی لاشیں رات کے اندھیرے میں ان کے گھروں تک پہنچائی جاتی ہیں اور رات کو ہی انہیںدفن کرایا جاتاہے۔ کوئی فوجی رسم بھی پوری نہیں کی جاتی تاکہ عوام بے خبر رہیں۔ 200 فوجیوں کی لاشیں چھپانے کا مقصد عوام کو بے خبر رکھنا تھا مگر کب تک! اب حکومت بدحواس ہورہی ہے کہ عوا م کو پاکستان کے ہاتھوں اس زبردست پٹائی اور نقصان کا جواز کیا پیدا کیاجائے۔ حکومت ہمیشہ کہتی رہی کہ پاکستان سے کنٹرول لائن کی محاذ آرائی سے بھارت کا کوئی نقصان نہیں ہوا اور اب اکٹھی200 لاشیں! 
سٹیٹ بینک کے نام پر ہونے والا بڑا  فراڈ۔ ایک عرصے سے لوگوں کو فون آتے رہے کہ بے نظیر بھٹو سپورٹ فنڈ میں آپ کا بڑا انعام نکل آیا ہے۔ فلاں نمبر پر فون کریں اور کچھ تفصیلات بتائیں۔ ایک پیغام یہ آتا رہا کہ آپ کے نام فلاں ہائوسنگ سوسائٹی میں پلاٹ نکل آیا ہے۔ رابطہ کریں۔ اب ایک عرصے سے سٹیٹ بینک کے حوالے سے فون آرہے ہیں کہ میں سٹیٹ بینک سے بول رہا ہوں ہم بینکوں کے اکائونٹس کی تصدیق کررہے ہیں۔ اپنا بینک اکائونٹ بتائیں۔ مجھے03420749485 سے فون آیا۔ بیٹی کو مسیج آیا کہ آپ کا اے ٹی ایم کارڈ بلاک ہوچکا ہے، اسے بحال کرانے کے لئے309177523 نمبر پر فون کریں ۔  یہ سب فراڈ ہیں۔ سٹیٹ بینک کا ایک بیان بھی آچکا ہے کہ بینک کسی شخص کو ذاتی سطح پر فون نہیں کرتا۔ اس کا رابطہ صرف بینکو ں سے ہوتا ہے۔ اس کے باوجود یہ سلسلہ جاری ہے۔ ملک میں سٹیٹ بینک کی اپنی انٹیلی جنس ٹیم موجود ہے۔ سائبر کرائم کو روکنے اور محاسبہ کے لئے ایف آئی اے کا بھاری بھر کم ادارہ موجود ہے مگر یہ جرم کھلے عام ہو رہے ہیں کوئی نوٹس نہیں لیا جاتا۔ حیرت یہ کہ اچھے خاصے پڑھے لکھے لوگ فریب میں آجاتے ہیں۔ ایک پروفیسر خاتون بتا رہی تھی کہ اسے25  لاکھ انعام کے لئے پانچ ہزار جمع کرانے کو کہا گیا۔ اس نے خوشی سے بے قابو ہوکر پانچ ہزار جمع کرا دیئے اب یہ محترمہ روتی پھر رہی ہیں کہ اس کے ساتھ فراڈ ہوگیا ہے۔
قارئین کرام! ایسے واقعات کا نوٹس لیجئے، ان لوگوں سے سختی سے پیش آئیں اور ایف آئی اے کو نمبر بتائیں۔ کچھ عرصہ پہلے ایسے ہی فون نمبر پر میں نے فون کرنے والے کی درگت بنا دی۔ اس نے کہا کہ اسے کچھ معلوم نہیں۔ میں سو جاتا ہوں تو میرا بھتیجا یہ کام کرنے لگتا ہے۔ آپ حضرات اپنے موبائل فون چیک کریں ، کسی دوسرے کے ہاتھ استعمال تو نہیں ہو رہے؟
رانا ثناء اللہ نے اسمبلی میں قرآن اٹھا کر کہا کہ وہ بے قصور ہیں اور یہ کہا کہ ان کی گاڑی میں انسداد منشیات والوں نے 15 کلو ہیروئن رکھ دی تھی! اس سے ایک بات تو بہرحال ثابت ہوگئی کہ گاڑی میں واقعی15 کلو  ہیروئن موجود تھی۔ اب یہ مسئلہ طے ہوتا رہے گا کہ یہ 15 کلو ہیرئن کہاں سے آئی؟ ویسے15 کلو وزن کم نہیں ہوتا کسی بڑے تھیلے یا بوری میں لایا جاسکتا ہے۔ نئی کہانی سامنے آئی ہے کہ ہیروئن تو ثابت ہوگئی یہ کہ سرکاری لوگوں نے یہ ڈرامہ کیوں کھیلا؟ اور پھر ہر بات پر قرآن مجید کو بیچ میں لانا انتہائی قابل اعتراض معاملہ ہے، کیا قرآن مجید صرف اپنی فضولیات کے لئے رہ گیا ہے۔ اس مقدس کتاب کو ہاتھ لگانے سے پہلے وضو کرنا پڑتا ہے مگر!
حکومت نے چھ آرڈیننس واپس لے لئے۔ یہ واضح طور پر نااہلی کا اعتراف ہے۔ آرڈیننس تو ایک بھی واپس لینا پڑے تو حکومت کا وجود خطرے میں پڑ جاتا ہے۔ یہاں ایک دم چھ آرڈیننس!! ظاہر ہے کہ یہ غلط تھے یا انہیں جاری کرنے کا طریقہ غلط تھا۔ یہ صریح حکومت کی شکست ہے! اس کی وزارت قانون میں کوئی ایسا پڑھا لکھا ماہر قانونی موجود نہیں؟
بھارت کے ایک سینئر صحافی اشوک سین نے نریندر مودی سے سوال کیا ہے کہ تم کہہ ہے کہ پاکستان دنیا میں تنہا ہوگیا ہے مگر عالمی سطح پر جاری ہونے والی رپورٹ میں پاکستان کو دنیا بھر میں سب سے بہتر سیاحتی مقام قرار دیا گیا ہے! یہ کیسی تنہائی ہے کہ برطانیہ کا شاہی جوڑا سیرو تفریح کیلئے بھارت کی بجائے پاکستان کا رخ کرتا ہے؟
نریندر مودی کی حکومت ایک اور مصیبت میں پھنس گئی ہے۔ اس وقت بھارت میں علیحدگی اور آزادی کی 32تحریکیں چل رہی ہیں (بحوالہ جنرل حمید گلؒ) نو صوبوں میں کھلی بغاوت کا سامنا ہے۔ ایک واضح مثال ناگالینڈ کی ہے ۔ اس نے تقریباً30 بر س سے آزادی  کا اعلان کررکھا ہے۔ یہ ریاست ایک بڑے جنگل سے گھری ہوئی ہے۔ ناگالینڈ کا اپنا پرچم، اپنی پولیس اور اپنی کرنسی ہے، اب اس نے اعلان کیا ہے کہ اس کی طاقتور فوج بھی تیار ہوگئی ہے۔ اس فوج نے بھارتی فوج کو لڑائی کا چیلنج بھی دے دیاہے۔ آسام کا عالم یہ تھا کہ وہاں حکومت کے خلاف شدید خونریز مظاہروں کے باعث نریندر مودی کو وہاں کا دورہ منسوخ کرنا پڑا ہے۔
برطانیہ کے ولی عہد شہزادہ چارلس کے بیٹے نے شاہی خاندان کے امتیازی سلوک کے باعث شاہی محل اور ساری شاہی سہولتیں چھوڑ کر کینیڈا میں رہنے کا اعلان کیا تو محترمہ ملکہ برطانیہ  پریشان ہوگئیں، شہزادہ ہیری سے خود بات کی اور اسے بہتر سہولتیں دینے کا یقین دلایا۔ سیکورٹی کے لئے  چھ لاکھ پونڈ، ذاتی اخراجات کے تقریباً پانچ لاکھ پونڈ سالانہ! شہزادہ ہیری کی بیوی میگھن کینیڈا جاچکی ہے۔ شاہی خاندان ان دونوں کی شادی پر ناراض تھا۔ ہیری کو اکثر خاندانی اجلاسوں میں بلایا ہی نہیں جاتا تھا۔ سو شہزادے کا فقیری اختیار کرنے کا اعلان خطرے میں پڑگیا ہے۔