01:49 pm
’’فوج کا محاسبہ ہو گا‘‘نوازشریف…’’مجرم کا رویہ شرم ناک ہے‘‘ ہائی کورٹ

’’فوج کا محاسبہ ہو گا‘‘نوازشریف…’’مجرم کا رویہ شرم ناک ہے‘‘ ہائی کورٹ

01:49 pm

٭’’فوج‘ سے حساب لیا جائے گا، ’فوج‘ پارلیمنٹ کو ایجنڈا دیتی ہے، عدلیہ پر دبائو ڈال کر فیصلے کراتی ہے، اب یہ نہیں ہو گا‘‘ نوازشریف کی لندن سے نئی تقریر، قوم کو بغاوت کی تلقینO بھارتی میڈیا میں نوازشریف کی تقریر کی نمایاں تشہیرO ’’نوازشریف کا رویہ شرم ناک ہے، مجرم دھوکہ دے کر باہر چلا گیا‘‘ اسلام آباد ہائی کورٹ کے سخت ریمارکس O ’’نوازشریف کو واپس آنا ہو گا‘‘ وزیرصحت پنجاب یاسمین راشدO ’’آصف زرداری پر آج بھی تحفظات ہیں‘‘ خواجہ آصف، ن لیگ کی جواب طلبی O انصاف: راولپنڈی کے سابق وزیر ریاض چودھری کے خلاف 19 سال تک مقدمے کے بعد 10 سال کی قید 5 کروڑ جرمانہ O ’’بابری مسجد کسی نے نہیں گرائی، تمام 32 ملزم بری‘‘ لکھنو کی عدالت کا فیصلہ کراچی میں کرونا پھر ابھر آیا۔ سمارٹ لاک ڈائون O مریم نواز نے لیگ کی قیادت سنبھال لی۔
٭نوازشریف نے مزید جارحانہ رویہ اختیار کر لیا ہے۔ قوم کو فوج اور حکومت کے خلاف کھلی بغاوت کی ہدائت کی ہے۔ فوج کا نام لئے بغیر کھلے الفاظ میں اسے ’’نااہل و نالائق‘‘ وزیراعظم لانے کی ذمہ دار قرار دیا ہے۔ اور کہا ہے کہ ’’جعلی پارلیمنٹ کو مرضی کا ایجنڈا دے کر اس سے مرضی کے مطابق بل منظور کرائے جاتے ہیں… پارلیمنٹ عوام کی نمائندہ نہیں اسے کوئی اور (فوج) چلا رہا ہے…ہم انگریزوں کی غلامی سے نکل کر اپنوں (فوج) کی غلامی میں آ گئے ہیں۔ اب یہ نہیں ہو گا۔ میں اب غلام نہیں رہوں گا…عوام متحد ہو جائیں تو چند ہفتوں میں نقلاب آ جائے گا۔‘‘
O نوازشریف کی اس تقریر پر کسی بات سے پہلے اسلام آباد ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ کے دونوں ججوں کے ریمارکس: ’’نوازشریف کا رویہ شرم ناک ہے۔ سزا یافتہ مجرم دھوکہ دے کر باہر چلا گیا، مجرم وہاں سے تقریریں کر رہا ہے۔ اس کا باہر جانا غلط تھا…اسے باہر جانے کی اجازت کیوں دی گئی…حکومت کو آئندہ محتاط رہنا ہو گا…‘‘
٭ان باتوں پر کچھ کہنے سے پہلے ان چند حقائق کا ذکر ضروری ہے جنہیں بار بار بیان کرنا پڑتا ہے یہ کہ نوازشریف اور ذوالفقار علی بھٹو کو فوج ہی اقتدار میں لائی۔ ان دونوں کی مارشل لائوں کے زیر سایہ پرورش کی۔ یہ دونوں فوج کی سرپرستی کے گن گاتے رہے۔ اقتدار میں آئے تو مزاج بدل گیا۔ نوازشریف نے وزیراعظم بن کر آرمی چیف جنرل کرامت جہانگیر کو اس بنا پر استعفا دینے کا حکم دیا کہ اس نے قومی سلامتی کی کونسل بنانے کا مشورہ کیوں دیا ہے؟ (اسی سلامتی کونسل کے اجلاس میں اب ن لیگ بھاگ کر گئی تھی)۔ نوازشریف کی حکومت کے بارے میں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سجاد علی شاہ نے سخت ریمارکس دیئے۔ نواز شریف نے جواب میںاس سے زیادہ سخت کلامی کی (بعد میں معافی مانگ لی) اور لاہور سے بسوں میں ن لیگ کے کارکن منگوا کر سپریم کورٹ پر حملہ کرا دیا۔ ن لیگی کارکن دیواریں اور جنگلے پھلانگ کر چیف جسٹس اور دوسرے ججوں کی عدالتوں پر حملہ آور ہو گئے۔ چیف جسٹس اور دوسرے ججوں نے اپنے چیمبروں میں چھپ کر جان بچائی۔ حملہ آوروں نے وہی نعرے لگائے جو اسلام آباد ہائی کورٹ کے ریمارکس کے مطابق آج ایک ’مجرم‘ موجودہ عدلیہ پر لگا رہا ہے۔ نوازشریف کا صرف ایک آرمی چیف کی برطرفی پر اطمینان نہ ہوا۔ کسی طرح اطلاع نکلی کہ جنرل آصف نواز مارشل لا لگانے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔ جنرل آصف نواز مکمل صحت مند جرنیل تھے۔ قواعد کے مطابق ہر ماہ مکمل میڈیکل معائنہ ہوتا تھا۔ ایک ایسے معائنہ میں مکمل تندرست ہونے کے اعلان کے صرف 4 دن بعد جنرل آصف نواز پر گھر میں مشین پر ورزش کرتے اچانک دل کا دورہ پڑا اور انتقال ہو گیا۔ جنرل کی بیوی نے واضح الفاظ میں قتل کی سازش کا الزام لگایا مگر کوئی شنوائی نہ ہوئی۔ اس سے واقعہ کے بعد جنرل پرویز مشرف کی باری آئی جونیئر جرنیل پرویز مشرف کو خود ہی تیسرے نمبر سے اٹھا کر آرمی چیف بنایا۔ اس نے بھارت کے وزیراعظم واجپائی کی لاہور میں آمد پر اسے سلامی دینے سے نہ صرف خود انکار کیا بلکہ فضائیہ اور بحریہ کے سربراہوں کو بھی لاہور جانے سے روک دیا۔ اس بات کو بھارتی میڈیا نے بہت اچھالا اور پاک افواج کے اس عمل کو بھارتی وزیراعظم کی توہین قرار دیا۔ نوازشریف کو جنرل پرویز مشرف پر سخت غصہ تھا۔ صرف چند ماہ بعد وہ سری لنکا کے دورے سے واپس آ رہا تھا، پاکستان کی حدود میں طیارہ پہنچا تو نوازشریف نے اسے فضا میں ہی برطرف کر کے ایک جونیئر جرنیل کو وزیراعظم ہائوس میںکھڑا کر کے چیف آف سٹاف بنا دیا۔ اس کے بعد جو کچھ ہوا، وہ تاریخ میں موجود ہے۔ اس مختصر جائزہ کو صرف ایک جملہ میں یوں بیان کیا جا سکتا ہے کہ کسی پیاسے شخص کو راستے میں پڑا چاندی کا پیالہ مل جائے تو اس میں پانی پی پی کر اس کا پیٹ پھول جاتا ہے!
اور اب ن لیگ کا معاملہ! حکومتی چوبداروں کے مطابق اس وقت ن لیگ لندن میں، ش (شہباز شریف) لیگ جیل میں ہے۔ نوازشریف نے پہلے خواجہ آصف کو ملک کے اندر ن لیگ کا قائم مقام صدر بنایا۔ خواجہ کو آصف زرداری کے ساتھ ن لیگ کی ہم آغوشی پسند نہ آئی تو صدارت کی ٹوپی شاہد خاقان عباسی کے سر پر رکھ دی گئی مگر مریم نواز کی م لیگ نے آگے بڑھ کر تخت پر قبضہ کر لیا۔ گزشتہ روز لاہور میں نوازشریف کے حامیوں نے اجلاس کی قیادت سنبھال لی۔ اس اجلاس میں خواجہ آصف اور شاہد خاقان عباسی نے شرکت نہیں کی۔ ان کے کانوں میں نسیم بیگم کے گائے ہوئے منیر نیازی کے کلام کی صدا آ رہی ہے کہ ’’اس بے وفا کا شہر ہے اور ہم ہیں دوستو!…اشک رواں کی لہر ہے اور ہم ہیں دوستو!…یہ اجنبی سی منزلیں اور رفتگاں کی یاد …تنہائیوں کا زہر ہے اور ہم ہیں دوستو!…آنکھوں میں اُڑ رہی ہے لُٹی محفلوں کی دُھول…عبرت سرائے دہر ہے اور ہم ہیں دوستو!
٭بھارت میں لکھنو کے ایک سپیشل جج نے بابری مسجد کو مسمار کئے جانے والے 28 سال پرانے کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے اس کیس کے تمام 32 ملزموں کو بے قصور قرار دے کر بری کر دیا ہے۔ فیصلہ میںکہا گیا ہے کہ اس کیس میں کسی سازش یا منصوبہ بندی کا کوئی ثبوت نہیں ملا، کسی شخص نے کوئی سازش نہیں کی اس لئے تمام ملزموں (32) کو بری کیا جاتا ہے۔ (ان میں سے 12 انتقال کر چکے ہیں) ان ملزموں میں سابق ڈپٹی وزیراعظم ایل کے ایڈوانی، مرلی منوہر، جوشی اور دوسرے اہم نام شامل تھے۔ ایل کے ایڈوانی نے مسجد شہید کرنے والے انتہا پسند ہندوئوں کے جتھے کی قیادت کی تھی۔ ان لوگوں نے باقاعدہ اس واقعہ میں شریک ہونے کا نہ صرف اعتراف کیا بلکہ بطور ہندو اسے اپنے لئے اعزاز بھی قرار دیا تھا۔ لکھنو کے ہندو جج نے فیصلہ میں کہا ہے کہ یہ لوگ مسجد کو گرانے میں شامل ہوں گے مگر کوئی منصوبہ بنا کر نہیں آئے تھے اور یہ واقعہ اتفاقیہ ہو گیا تھا۔ اس فیصلہ پر عدالت میںموجود خود ہندو ملزموں نے حیرت اور خوشی کا اظہار کیا اور ’جے شری رام‘ کے نعرے لگائے۔ ایک ملزم نے کہا کہ ہم تو سزا سننے کے لئے تیار ہو کر آئے تھے، ہم اس پر خوش ہوتے مگر اب تو جشن والی بات ہو گئی ہے۔ اس فیصلے پر پورے بھارت میں ہندو جشن منا رہے ہیں۔
٭امریکہ میں تین نومبر کو صدارتی انتخابات ہو رہے ہیں۔ ان انتخابات سے پہلے تمام صدارتی امیدواروں کو تین بار آمنے سامنے انتخابی منشور بیان کرنے کا موقع دیا جاتا ہے۔ گزشتہ روز پہلے مباحثہ میںایک امیدوار جوبائیڈن نے الزام لگایا کہ ٹرمپ نے غلط پالیسی کے ذریعے امریکہ میںکرونا سے دو لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک کرا دیئے ہیں۔ ایک امیدوار خاتون کملا ہیرس نے کہا کہ ٹرمپ بدمعاش ہے اس نے امریکہ کو تقسیم کر دیا ہے۔ اس پر ٹرمپ غصہ میں بے قابو ہو گیا اور ان دونوں امیدواروں کو گالیاں دینے لگا۔ اس پر جوبائیڈن نے اسے بلند آواز سے کہا ’’شٹ اپ!‘‘ قارئین کرام! یہ دنیا کے سب سے طاقت ور ملک کے ’اونچے‘ لوگوں کی روداد ہے۔


تازہ ترین خبریں

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا جیل بھرو تحریک کا اعلان

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا جیل بھرو تحریک کا اعلان

عمران خان کی نااہلی متوقع،پی ڈی ایم ضمنی الیکشن میں حصہ نہ لے، فضل الرحمن کا شہباز شریف کو مشورہ

عمران خان کی نااہلی متوقع،پی ڈی ایم ضمنی الیکشن میں حصہ نہ لے، فضل الرحمن کا شہباز شریف کو مشورہ

قتل  ہوا  تو  ذمہ دار آصف زرداری، بلاول، شہباز اور رانا ثنا اللہ ہوں گے، شیخ رشید   کا دعویٰ

قتل ہوا تو ذمہ دار آصف زرداری، بلاول، شہباز اور رانا ثنا اللہ ہوں گے، شیخ رشید کا دعویٰ

وزیرخزانہ اسحاق ڈار اپنے معاشی اعداد وشمار درست کریں، شوکت ترین کی تنقید

وزیرخزانہ اسحاق ڈار اپنے معاشی اعداد وشمار درست کریں، شوکت ترین کی تنقید

ہرجانہ کیس ، افتخار چوہدری کے اعتراض پر عمران خان کیخلاف بینچ تبدیل

ہرجانہ کیس ، افتخار چوہدری کے اعتراض پر عمران خان کیخلاف بینچ تبدیل

انتقامی کارروائیوں سے معیشت بہتر نہیں ہوگی،حکومت الیکشن کا اعلان کرے مذاکرات  کیلئے تیار ہیں، فیصل جاوید

انتقامی کارروائیوں سے معیشت بہتر نہیں ہوگی،حکومت الیکشن کا اعلان کرے مذاکرات کیلئے تیار ہیں، فیصل جاوید

تحریک انصاف کے سابق ارکان قومی اسمبلی سے پارلیمنٹ لاجز کے کمرے خالی کروالئے گئے

تحریک انصاف کے سابق ارکان قومی اسمبلی سے پارلیمنٹ لاجز کے کمرے خالی کروالئے گئے

شیخ رشید  اسلام آباد کے کسی تھانے میں موجود نہیں، راشد شفیق کا دعویٰ

شیخ رشید اسلام آباد کے کسی تھانے میں موجود نہیں، راشد شفیق کا دعویٰ

حکومتی ترجیحات امن نہیں، مقدمات ہیں، ہمیں کسی اور کی جنگ کاایندھن بنایا جارہا ہے، مراد سعیدکا انکشاف

حکومتی ترجیحات امن نہیں، مقدمات ہیں، ہمیں کسی اور کی جنگ کاایندھن بنایا جارہا ہے، مراد سعیدکا انکشاف

مہنگائی میں اضافے سے عوام کو تکلیف پہنچی ،ہم سب جانتے ہیں، وزیرخزانہ اسحاق ڈار

مہنگائی میں اضافے سے عوام کو تکلیف پہنچی ،ہم سب جانتے ہیں، وزیرخزانہ اسحاق ڈار

سابق وفاقی وزیر شیخ رشید کیخلاف کراچی میں مقدمہ درج ، پولیس گرفتاری کیلئے اسلام آباد پہنچ گئی

سابق وفاقی وزیر شیخ رشید کیخلاف کراچی میں مقدمہ درج ، پولیس گرفتاری کیلئے اسلام آباد پہنچ گئی

کوہاٹ تاندہ  ڈیم خادثہ ، آخری طالب علم  کی لاش 6 روز بعد  نکال لی گئی،جاں بحق ہونیوالوں کی تعداد 53 ہو گئی

کوہاٹ تاندہ ڈیم خادثہ ، آخری طالب علم کی لاش 6 روز بعد نکال لی گئی،جاں بحق ہونیوالوں کی تعداد 53 ہو گئی

معروف اینکر عمران ریاض خان کیخلاف مقدمہ خارج ، عدالت کا فوری رہا کرنے کا حکم

معروف اینکر عمران ریاض خان کیخلاف مقدمہ خارج ، عدالت کا فوری رہا کرنے کا حکم

شیخ رشید کی مشکلات میں مزید اضافہ، مری میں بھی مقدمہ درج

شیخ رشید کی مشکلات میں مزید اضافہ، مری میں بھی مقدمہ درج