01:52 pm
عبداللہ عبداللہ، امن کا نقیب؟

عبداللہ عبداللہ، امن کا نقیب؟

01:52 pm

افغانستان میںگزشتہ دو دہائیوں میں امریکی عسکری اخراجات کا تخمینہ 822 بلین ہے۔اس میں امریکی ڈیفنس ڈیپارٹمنٹ، اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ اور دیگر ایجنسیاں بھی شامل جانیں۔ گویاحقیقی رقم اس سے زیادہ ہے۔ انسانی جانوں کا بھی ضائع ہوا۔2300امریکی فوجہ ہلاک، جب کہ 20660 زخمی ہوئے۔ ان میں وہ شامل نہیں، جواس طویل جنگ کے بعد دوبارہ سماج کا حصہ بننے سے قاصر رہے۔اشرف غنی کے بیان کے مطابق جب سے انہوں نے صدارت سنبھالی ہے، افغان سیکیورٹی فورسز کے 45 ہزار ارکان ، جب کہ ایک لاکھ سویلین قتل ہوچکے ہیں۔ اس تعداد میں طالبان کے دستوںمیں ہونے والی ہلاکتیں شامل نہیں۔
افغان بادشاہ ظاہر شاہ کے بعد جب دائود شاہ نے مسند اقتدار سنبھالی اور 1973میں افغانستان کے اولین صدر ہونے کا اعلان کیا، تب سے پاکستان اور افغانستان کے تعلقات میں ایک تنائو ہے۔ اسی تنائو کو کم کرنے کے لیے ذوالفقار علی بھٹو نے اپنے دور صدارت میں کمانڈر IGFC بریگیڈیئر(بعد ازاں میجر جنرل) این کے بابر کو ذمہ داری سونپی۔1974 ء میں میرے بچپن کے قریبی دوستوں میں سے ایک میجر(بعد ازاں لیفٹیننٹ کرنل) سلمان احمدنے دو پاکستانی کیمپس میں افغان طلبا کو تربیت دی۔ ان میں احمد شاہ مسعود بھی شامل تھے۔ 
سلمان کے ساتھ قندھار ریجن میں شیر محمد عباس ستانکزئی بھی موجود تھے، جو اِس وقت دوحہ میں جاری امن مذاکرات میں طالبان کی سیاسی قیادت کر رہے ہیں۔80 کی دہائی میں مجاہدین میں شامل ہونے کے بعد وہ ملٹری کمیٹی کا حصہ بنے، جسے سلمان نے(جن کاcodename کرنل فیضان تھا) تشکیل دیا تھا۔
چاہے 1971ء کامشرقی پاکستان ہو یا سوویت حملے کے دورکا افغانستان ،یہ طے شدہ ہے کہ کسی اور افسر کے مقابلے میں میجر سلمان نے مختلف محاذوں پرزیادہ اور بڑی جنگیں لڑیں۔ اُن کا کہنا ہے کہ افغان وار کے دوران شیر محمد عباس ستانکزئی کا ان کے ساتھ زیادہ وقت گزرا۔Sandy Gall کی بی بی سی کی مشہور زمانہ ڈاکومنٹری "Allah Against the Gunships"میں بھی سلمان کی شمولیت رہی۔
کبھی جو خواب لگاکرتا تھا، اب وہ امن قریب ہے۔ فروری2020 ء میں امریکہ  اور طالبان کے درمیان امن معاہدہ طے پاگیا، ،موجودہ حکومت کے ساتھ افغان امن کے قیام کے لیے ڈیکلیریشن بھی سائن کر لیا گیا۔ معاہدے کا ڈھانچہ اپنی جگہ، مگر یہ تسلیم شدہ ہے کہ پاکستان کے بغیر اس امن معاہدے تک پہنچ پانا ناممکن تھا۔ پاکستان بھی افغان وار سے اپنا سبق سیکھ چکا ہے۔ 
بھارت ایک ایسا ملک ہے، جس پر افغان اعتبار کرنے کوتیار نہیں۔ بھارت کی بی جے پی سرکار کی مسلم کش پالیسیاں عیاں ہیں اور وہاں بسنے والے مسلمانوں کی اکثریت کے اجداد کاتعلق افغانستان ہی سے ہے۔ افغانستان نے بھارت کو محض کسی اور کے خرچ پر لڑی جانے والی پراکسی وار کے پلیٹ فورم کے طور پر استعمال کیا۔ پہلے سوویت یونین اور بعد ازاں امریکی خرچ پر لڑی جانے والے جنگوں میں افغانستان کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا۔
پشتون تاجک اختلافات کا آغاز 1929ء میں ہوا۔تاجکوں کے قائد حبیب اللہ کلکانی کوبادشاہ گر اور افغان تخت کی اصل طاقت تصور کیا جاتا تھا۔حبیب اللہ کلکانی نے مغربی تصورات کے بے دریغ فروغ کا الزام عائد کرتے ہوئے افغان بادشاہ ،امان اللہ خان کا تختہ الٹ دیا ۔بادشاہ سے اختلافات کی وجہ سے کمانڈر ان چیف، نادر شاہ نے جلا وطنی اختیار کر رکھی تھی البتہ اس واقعے کے بعد نادر شاہ نے پاکستان سے ملحقہ سرحدی علاقے میں محسود اور وزیری لشکر منظم کرکے حبیب اللہ کی فوج کو شکست دی۔ کلکانی اور اس کے خاندان کے کئی افراد کوہلاک کر دیا گیا۔ بد قسمتی سے بعد میں اس لشکر نے تاجک علاقے میں خاصی لوٹ مار کی اور کئی مظالم ڈھائے ۔ یوں افغان اور تاجک تنازعے کا جنم ہوا، جو اگلے سو سال جاری رہنے والا تھا البتہ وقت بہترین مرہم ہے اور اس کے لیے موزوں ترین شخص عبداللہ عبداللہ ہیں، جن کی رگوں میں پشتون باپ اور تاجک ماں کا خون دوڑتا ہے۔ (جاری ہے)


تازہ ترین خبریں

سائنسدان2 ہزار  سال پرانی  نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

سائنسدان2 ہزار سال پرانی نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

شیخ رشیدکی درخواست ضمانت مستردکردی گئی

شیخ رشیدکی درخواست ضمانت مستردکردی گئی

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان   حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا   اجلاس آج  ہوگا

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس آج ہوگا

ترکیہ   میں زلزے  نے تباہی مچا دی ،  سات روزہ سوگ کا اعلان

ترکیہ میں زلزے نے تباہی مچا دی ، سات روزہ سوگ کا اعلان

ترکیہ اور شام میں زلزلے سے تباہی، ہلاکتیں 1300 سے زائد، ترکیہ میں ایمرجنسی نافذ

ترکیہ اور شام میں زلزلے سے تباہی، ہلاکتیں 1300 سے زائد، ترکیہ میں ایمرجنسی نافذ

اے پی سی کیلئے پی ٹی آئی کو دعوت نامہ نہیں ملا، فواد چوہدری

اے پی سی کیلئے پی ٹی آئی کو دعوت نامہ نہیں ملا، فواد چوہدری

مشکل وقت میں  درکار  انسانی امداد پیش کرنے کیلئے تیار ہیں، عمران خان  کا  ترکیہ ،شام زلزلے پر افسوس کا اظہار

مشکل وقت میں  درکار  انسانی امداد پیش کرنے کیلئے تیار ہیں، عمران خان  کا  ترکیہ ،شام زلزلے پر افسوس کا اظہار

کل جماعتی کانفرنس کی تاریخ تبدیل کردی گئی ،7 کی بجائے 9فروری کو ہوگئی

کل جماعتی کانفرنس کی تاریخ تبدیل کردی گئی ،7 کی بجائے 9فروری کو ہوگئی