12:44 pm
 انسانیت کی توہین  

 انسانیت کی توہین  

12:44 pm

  مقبوضہ جموں وکشمیر میں ایک سال سے زائدطویل بھارتی فوجی محاصرہ اور غیر اعلانیہ کرفیو جاری ہے ۔  قابض بھارتی فوج کشمیر میں ، بنیادی انسانی حقوق اورانسانیت کے خلاف بوسنیا اور کوسوو سے ہزاروں گنا زیادہ جنگی جرائم کا ارتکاب کر رہی ہے ۔جبکہ انسانی حقوق کے خود ساختہ علم بردار، ذاتی مفادات کی خاطر،  دوہرے معیارکے ساتھ مجرمانہ خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں ۔ غیر قانونی قابض بھارت نے تحریک آزادی کشمیر کو کچلنے ،  مقبوضہ جموں وکشمیر پر اپنا ناجائز قبضہ برقرار رکھنے اور  اپنی توسیع پسندانہ پالیسیوںکی خاطر مسلم اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنے کیلئے کشمیریوں کا بدترین ہالوکاسٹ جاری رکھا ہوا ہے ۔جواہر لال نہرو یونیورسٹی طلبا ء یونین کی سابقہ صدر اور کشمیر کی بیٹی نے محاصرے کے دوران بھارتی فوج کے کشمیری نوجوانوں پر تشدد اور قوم کو خوفزدہ کرنے کے بارے میں ایک ٹیوٹ کیا ، اس ٹیوٹ میں بتایا گیا کہ  ’’ بھارتی فوج شوپیاں کے علاقے سے چار نوجوانوں کواغواء  کرکے مقامی فوجی کیمپ میں لے گئی ۔ فوجی کیمپ میں ان پر تشدد کے دوران لاوڈ سپیکر لگا کر مائیک ان کے منہ کے سامنے رکھ دئیے گئے ۔جب انسانیت سوز تشدد سے نوجوانوں کے  منہ سے نکلنے والی چیخیں پورے علاقے کو سنائی دیتیں تو بھارتی فوجی قہقہے لگاتے  اور لاوڈ سپیکر پرکہتے ’’یہ لو آزادی ،،بھارتی فوج کا مقصد علاقے میں دہشت اور خوف کا ماحول پید اکرنا تھا ۔‘‘  شوپیاں کے فوجی عقوبت خانے سے یہ انسانیت سوز عمل تین دن تک جاری رہا ۔
 
  اس ٹویٹ کے آتے ہی بھارتی حکومت او ر زر خرید بھارتی میڈیامیںکہرام مچ گیا، شہلا رشید پر غداری کا مقدمہ درج کردیا گیا ۔لیکن کشمیر کی بیٹی کے پایہ استقلال میں لغزش نہ آئی ، مودی کے حمایتی میڈیا نے شہلا کے خلاف غنڈہ گردی شروع کردی لیکن اس نے بہت بہادری سے اپنے ٹیوٹ کا دفاع کرتے ہوئے بھارتی فوج کو چیلنج کیا کہ انکوائری ٹیم تشکیل دے ، میں وہاںپرثبوت دوںگی ،  شہلا راشد  جب دہلی گئیں تو بھارتی میڈیا کے انتہا پسند گروپ نے انہیں گھیر لیا، بھارت سے غداری اور بھارتی فوج پر غلط الزام لگانے کے سوالات پوچھے جانے لگے کہ کیا آپ بھارتی فوج کے ساتھ ہیں یا پاکستانی پروپیگنڈے کی حمایت کررہی ہیں ؟ آپ پر غداری کا مقدمہ درج کردیا گیا ہے آپ کیسے جواب دیں گی ؟ اس نے بڑے تحمل سے جواب دیا ؛  بھارتی فوج کو اعلان کردہ تفتیشی ٹیم تشکیل دینے دیں میں وہاں ناقابل تردید ثبوت دوں گی یہ واقعہ ہوا تشدد کے شکار نوجوانوں میں سے کچھ غائب کردئیے گئے اور کچھ شدید زخمی حالت میں بیان دینے کے قابل نہیں‘ شہلا رشید نے ایسے مدلل جوابات دئیے کہ وہ کھسیانی بلی کھمبا نوچے کے مصداق غدار ی  غداری کی رٹ  لگاتے رہے۔ 
مقبوضہ جموںوکشمیر میں انسانیت کی توہین اور کشمیریوںکے خلاف جارحانہ بھارتی فوجی پالیسیوںکے بارے میںبھارت نواز کشمیری سیاستدان اور باضمیر بھارتی بھی اپنی آواز بلند کررہے ہیں ، بھارتی میڈیا نے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوںاور مقبوضہ جموں وکشمیر کی صورت حال پر ایک رپورٹ میں کہاکہ انڈیا ٹوڈے بھی اگست میں ہونے والے چار نوجوانو ں کی شہادت کے بارے میں واضح الفاظ میں اپنی رپورٹ میں کہہ رہا ہے کہ ،  بھارتی فوج کہہ رہی ہے کہ یہ غیر ملکی یعنی پاکستانی تھے لیکن وہ سب تو مزدور تھے اورگذشتہ دنوں گھر سے مزدوری کیلئے نکلے تھے یہ شوپیاں کے نواحی علاقے کے ہیں  اور علاقے سے کبھی باہرنہیں گئے ۔ اس لئے بھارتی فوج کے دعوے میں صداقت نہیں ۔ 
 بھارتی فوج کے کشمیر ی دشمن اقدامات کے بارے میںبھارت نواز سیاستدان بھی آواز بلندکرنے پر مجبور ہوگئے ، غلام نبی آزاد جیسے کشمیری سیاستدان جو ہمیشہ دوقومی نظرئیے اور پاکستان کے خلاف بولتے رہے آج یہ کہنے پر مجبور ہوگئے ہیں کہ کشمیریوں کے خلاف انسانیت سوز بھارتی مظالم ناقابل بیان اور ناقابل برداشت ہیں اور بھارت نے کشمیریوں کی خود مختاری کو ختم کرکے حقیقت میں اپنے توسیع پسندانہ انسانیت سوز اقدامات کی تصدیق کی ۔ نہ صرف یہ بلکہ تمام سیاستدانوں بشمول محبوبہ مفتی سابقہ کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ مقبوضہ جموں وکشمیر کو رہا نہ کرکے یہ ثابت کیا کہ قابض بھارتی حکومت اور فوج کشمیریوں کا قتل عام کرنے کے اسرائیلی مشورے پر تیزی سے عمل درآمد کررہی ہے ، وہ کوئی ایسی آواز نہیں سننا چاہتی جس میں کشمیریوں کی آزادی کا ایک لفظ بھی شامل ہو ،جبکہ محبوبہ مفتی متعدد بار اعلانیہ کہہ چکی ہیںکہ ہمارے بھارت نواز بزرگوں نے قائداعظمؒ کی بات نہ مان کر شائد بہت بڑی غلطی کردی ۔ جس کا خمیازہ ہم  آج بھگت رہے ہیں ۔ یہ الفاظ بھارتی کیسے برداشت کریں بھارتی حکومت محبوبہ مفتی اور دیگر رہنمائوں کر رہا کرنے کیلئے یہ شرط عائد کئے ہوئے ہے کہ ، وہ منسوخ شدہ  35Aاور  370کے بارے میں کوئی بات نہیں کریں گے ۔  
مہا بھارت کا خواب دیکھنے والی فاشسٹ بھارتی حکومت اپنے توسیع پسندانہ اقدامات اور انتہا پسندانہ مذہبی قوانین کی وجہ سے اپنے تمام پڑوسیوںکی دشمن بن کر تنہائی کا شکار ہوچکی ہے ۔ جدوجہد آزادی کو کچلنے کا بھارتی فوج کا خواب چکنا چور ہوگیا ۔ بھارتی فوج کے مقبوضہ جموں وکشمیر میںنہتے اورمعصوم عوام کے خلاف توہین اقدامات نے تحریک آزادی کشمیر کو مزید قوت دی ،غیر قانونی قابض بھارتی حکومت اور فوج ذہنی ،اخلاقی اور سیاسی اور سفارتی طورپر شکست کھا کر عالمی تنہائی کاشکار ہے ۔ حالات اس نہج پر پہنچ گئے ہیںکہ اقوام متحدہ کے اجلاس میں جب وزیر اعظم پاکستان نے بھارتی ظلم و ریاستی دہشت گردی کاذکر کیا تو بھارتی نمائندہ شرمندگی سے اجلاس چھوڑ کر بھاگ گیا ۔ ہندوتوا کی برتری کا خواب دیکھنے والا ، اور پاکستان کو دنیا میں تنہا کرنے کا خواب دیکھنے والا بھارت اپنے تمام پڑوسیوں ، بنگلہ دیش،سری لنکا ، مالدیپ، نیپال ،بھوٹان ،برما ،چین کے علاقوں پر اپنے غیر ملکی آقائوں کے اشارے پر جارحیت کا منصوبہ بنانے کے جرم میں بدترین تنہائی کا شکار ہوچکا ہے ۔ 
  لداخ ، ڈھوکلام ، درہ قراقرم اور DOBپر چینی فوج برتری حاصل کرچکی ہے ۔سیاچن اور کارگل کے بھارتی فوج کی سپلائی کے راستے متاثر ہوچکے ہیں ۔ وہ وقت بہت قریب آگیا ہے کہ کشمیر سمیت تمام  مقبوضہ ریاستیں سکم ،خالصتان ،ناگالینڈ ، منی پور آزاد ہونے کو اوربھارت ٹکڑے ٹکڑے ہونے والا ہے یہ سب تحریک آزادی کشمیر کے وجہ سے ممکن ہورہا ہے ، کشمیریوںکی لازوال قربانیوں ،بے مثال جذبوں نے ان محکوم قوموں کو ایک نیا حوصلہ دیا ۔ ظلم کی سیاہ رات ختم ہونے والی ہے ۔ کشمیری قوم سمیت تمام مظلوم اقوام کی بھارت سے آزادی ، انسانیت ،انسانی اقدار اور آزادی کا سورج طلوع ہونے کو ہے ۔ ان شااللہ ۔


 

تازہ ترین خبریں

پنجاب میں ٹرانسپورٹ چلانے کی تاریخ میں توسیع

پنجاب میں ٹرانسپورٹ چلانے کی تاریخ میں توسیع

شوال المکرم کا چاند دیکھنے کےلئے رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس  طلب

شوال المکرم کا چاند دیکھنے کےلئے رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس طلب

سندھ میں چھ بجتے ہی شاپنگ کےلئے دی گئی مہلت ختم

سندھ میں چھ بجتے ہی شاپنگ کےلئے دی گئی مہلت ختم

سابق چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے فنڈز کے ناجائز استعمال کا انکشاف

سابق چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے فنڈز کے ناجائز استعمال کا انکشاف

بھارت سے آنے والے طیارے کی پاکستان میں ایمرجنسی لینڈنگ،

بھارت سے آنے والے طیارے کی پاکستان میں ایمرجنسی لینڈنگ،

اسلام آباد میں حساس ادارے کاسابق آفیسر فائرنگ سے قتل

اسلام آباد میں حساس ادارے کاسابق آفیسر فائرنگ سے قتل

سعودی عرب پاکستان کو 500ملین ڈالرز دے گا، وزیر خارجہ

سعودی عرب پاکستان کو 500ملین ڈالرز دے گا، وزیر خارجہ

حکومت کا شہبازشریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کےفیصلے کے خلاف عدالت جانے کا اعلان

حکومت کا شہبازشریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کےفیصلے کے خلاف عدالت جانے کا اعلان

ملک بھر میں تعلیمی اداروں کی بندش کی تاریخ آگے بڑھا دی گئی

ملک بھر میں تعلیمی اداروں کی بندش کی تاریخ آگے بڑھا دی گئی

والدین کو گھر سے نکالنا پاکستان میں قابل سزا جرم قرار

والدین کو گھر سے نکالنا پاکستان میں قابل سزا جرم قرار

ضلع مہمند میں ٹینک کی دیوار گرنے سے سات بچے جاں بحق

ضلع مہمند میں ٹینک کی دیوار گرنے سے سات بچے جاں بحق

یا اللہ خیر۔۔۔ پورے گاوں میں ماتم۔۔۔ایک ساتھ سات بچے جاں بحق۔۔۔وجہ کیا بنی؟

یا اللہ خیر۔۔۔ پورے گاوں میں ماتم۔۔۔ایک ساتھ سات بچے جاں بحق۔۔۔وجہ کیا بنی؟

راستہ جلدی کیوں نہیں دیا ، جدہ ٹاون میں کار سواروں کی فائ ر نگ۔۔۔۔۔ایک ہلاک ۔۔۔ زخمیوں کی اطلاعات

راستہ جلدی کیوں نہیں دیا ، جدہ ٹاون میں کار سواروں کی فائ ر نگ۔۔۔۔۔ایک ہلاک ۔۔۔ زخمیوں کی اطلاعات

حکومت کا ایک اور بڑا فیصلہ۔۔۔ملک میں تعلیمی ادارے 23 مئی تک بند رکھنے کافیصلہ

حکومت کا ایک اور بڑا فیصلہ۔۔۔ملک میں تعلیمی ادارے 23 مئی تک بند رکھنے کافیصلہ