12:45 pm
خلیجی عرب قرامطہ سے ملتان تک

خلیجی عرب قرامطہ سے ملتان تک

12:45 pm

اگر ماضی بعید کا مطالعہ تہذیبی، ثقافتی، سیاسی مگر ’’مذہبی‘‘ بنیاد کے تصورات کے حوالے سے کریں تو ہمیں اسمعیلی شیعہ کا ماضی بہت ہی اہم موضوعات کا باعث لگتا ہے۔ کبھی تو حسن بن صباح جسے شیخ الجبل کہا جاتا تھا، جس نے پہاڑی عراق و شام میں مضبو ط ترین  7 قلعے تعمیر کرکے  ’’فدائین‘‘ جن کو بھنگ پینے والے بھی کہا جاتا تھا، حشیشین، ’’ قاتل‘‘  کا عنوان پاتا رہا ہے جسے کوہ قاف سے اٹھنے والے تا تاری طوفان نے بالآخر، عباسی خلیفہ بغداد کے ساتھ ہی بلکہ کچھ ذرا پہلے نیست و نابود کیا تھا۔ دلچسپ معاملہ یہ بھی تھا کہ عباسی خلیفہ بغداد کا ایک وزیر شیخ الجبل سے اکثر رابطے میں رہتا، شیخ الجبل بغداد پر قبضہ کرکے خود کو خلافت کی مسند پر فائر کرنے کا خواہش مند تھا، مگر عباسی خلیفہ کا وزیرشیخ  الجبل کو استعمال کرکے عباسی خلافت پر خود کو فائز کرنے کی سعی میں تھا، اس وزیر کا رابطہ تاتاریوں سے تھا، اسی وزیر نے تارتاری حملے کی ’’دعوت‘‘ دی تھی ،
یوں عباسی خلافت کے خاتمے سے پہلے تار تاری حملے نے اصل ’’مخفی‘‘ قاتل قوت، فدائین کے مرکز کو تہہ تیغ اور شیخ الجبل کو نیست و نابود کر دیا اور اس وزیر کو بھی جس نے عباسی خلیفہ کے ساتھ غداری کی تھی، یوں تارتاریوں کا یہ سیلاب طوفان بن کر مصر و شام تک فاتح بن کر پہنچ گیا۔ البتہ اسے دمشق میں امام ابن تیمیہؒ جیسے سنی حنبلی مجتہد کے سبب عزیمت و استقامت پر مبنی جہادی مسلمان قوت دفاع کا سامنا کرنا پڑا۔ امام ابن تیمیہؒ بوڑھے ہوچکے  حنبلی مفکر ، مصنف ، مئولف نے مصری خلیفہ کو قائل کیا کہ وہ تارتاریوں کا مقابلہ خود کرے  اور وہ خود یعنی ابن تیمیہؒ جہاد کی فرضیت کے حوالے سے عوام میں شعور پیدا کریں گے یوں بالآخر تارتاری فتنہ ہمیشہ کے لئے ختم ہوگیا مگر دمشق کے غیور سنی مسلمانوں کے سبب جن کی جہادی فکری قیادت امام ابن تیمیہؒ کے ہاتھ میں تھی۔ جونہی تارتاری فتنہ ختم ہوا تو امام ابن تیمیہؒ کو اس حاکم مصر نے جیل میں ڈال دیا کیوں کہ اس کے بہت قریبی اور حاشیہ نشین مولویوں نے حسد، عوامی مقبولیت کے سبب ابن تیمیہؒ کے دینی افکار کو مذہبی بغاوت کہہ دیا تھا۔ کیسا ہے یہ مذہبی فتنہ پرور منظر؟ میں جب بھی تاریخ کا مطالعہ کرتا ہوں تو اقتدار  کے ارد گرد موجود ’’علماء سوء‘ کو بہت حاسد، حریص، کمینہ بھی پاتا ہوں، جو کبھی ابن رشدؒ جیسے عظیم عالم ، فلسفی، مجتہد کے فلسفیانہ افکار کو مذہبی بغاوت کہہ کر اسے اندلس بدر کرواتے اور کبھی ابن تیمیہؒ کو دمشق سے بلوا کر مصری جیل میں ڈلواتے رہتے ہیں۔
عباسی خلافت میں ایک گروہ نیا پیدا ہوگیا جسے ’’قرامطہ‘‘ کہا جاتا تھا، یہ اسمعیلی شیعہ سے نکلا ہوا وہ آزاد خیال فرقہ تھا جو زندیق اور ملحدانہ افکار رکھتا تھا۔ مگر بہت دلیر اور جنگجو، اس کا جغرافیائی مرکز موجودہ البحرین اور کچھ خلیجی ریاستوں میں مضمر تھا۔ اسی قرامطہ گروہ نے حجاج کرام کا قتل عام مکہ مکرمہ میں بھی کرنے کی عادت اپنائی ، بالآخر حجر اسود کو بیت اللہ سے نکال کر اپنے مرکز میں لے آئے۔ 25 سال کے قریب حجر اسود ان کے قبضے میں رہا۔ جو عباسی خلیفہ بغداد نے بہت بھاری تاوان ادا کرکے واپس لیا، اور بیت اللہ میں نصب کیا مگر جب یہ واپس لیا تو قرامطہ نے اسے توڑا ہوا تھا۔ اسی لئے آج بھی حجر اسود کے ٹکڑے جمع شدہ طور پر بیت اللہ میں نصب ہیں۔ قرامطہ نے سیاست اور اقتدار میں بھی کافی کامیابی حاصل کی ، یہ سندھ سے ہوتے ہوئے ملتان پر بھی قابض ہوئے بلکہ طویل مدت تک ملتان پر ان کے قبضے نے ملتان کے ارد گرد بہت سے تہذیبی، مذہبی اثرات بھی چھوڑے ہیں۔
ملتان پر ’’قرامطہ‘‘ کا اقتدار کتنا مضبوط تھا؟ کہ تاتاریوں کے ہاتھوں نیست و نابود شیخ الجبل کی طرح بالآخر ان کے ملتانی اقتدار کا خاتمہ محمود غزنویؒ نے کیا۔17 حملے جو بھارت پر محمود غزنوی نے کیے ان میں ملتان کا قرامطہ اقتدار بھی شامل ہے۔ ملتان کی مذہبی وسعت ظرفی بہت کمال کی ہے۔ شیعہ تعزیہ سنی اور شیعہ کا مشترکہ ’’ثقافتی‘‘ معاملہ رہا ہے۔ تاریخی طور پر تعزیہ و جلوس، اگرچہ شیعہ مسلک کی طرف سے تیار ہوتے رہے ہیں مگر اس میں تہذیبی تعاون ہمیشہ ملتان کے سنی کرتے رہے ہیں ۔ میں اس معاملے کو اکثر محبت سے اور دلچسپی سے بھی دیکھتا رہا ہوں۔ کیا فرق پڑتا ہے کہ اگر شیعہ اپنا آل رسول سے عشق اور درد کا معاملہ تعزیئے کی صورت پیش کرتے ہیں تو سنی مسلمان تعزیہ و جلوس والوں کے لئے کھانے پینے ، ادویات اور حفاظتی بندوست کرکے ۔ یہ تہذیبی طور پر بہت اچھا بھلا معلوم ہوتا ہے۔ میں پیدائشی طور پر سنی مسلمان ہوں مگر جب بھی تنہا ہوتا ہوں ، یا غمزدہ ہوتا ہوں تو مجھے ذہنی پناہ گاہ ، شعب ابی طالب میں محصور و مقید خاندان نبویؐ یا کربلا  میں مظلوم و شہید قافلہ حسینؓ یا سیدہ زینبؓ کے اس بے بس قافلے کے مشکل ترین سفر میں ملتی ہے جو کوفہ سے دمشق تک دربار یزید میں موجود ہونے تک تھا، میں ملتی ہے۔ کیا ان لمحات میں ، میں آل رسول ؐکا شیعہ  ہو جاتا ہوں، نہیں معلوم، بلکہ میں ریاست مدینہ منورہ کا وہ مسلمان ہو جاتا ہوں جس کے سینے میں محمدؐ، آل محمدؐ ازواجات و بنات رسولؐ اور اصحابؓ رسول کی محبت کا سمندر موجزن ہو جاتا ہے۔ 

 

تازہ ترین خبریں

لاہور کے سکولوں میں ماحولیاتی مسائل پر اضافی کلاسیں لگائی جائیں ، لاہور ہائیکورٹ کا حکم

لاہور کے سکولوں میں ماحولیاتی مسائل پر اضافی کلاسیں لگائی جائیں ، لاہور ہائیکورٹ کا حکم

پاکستان  ہی میرے لیے سب کچھ ہے، نگراں وزیراعظم انوارالحق کاکڑ کا بیان سامنے آ گیا 

پاکستان  ہی میرے لیے سب کچھ ہے، نگراں وزیراعظم انوارالحق کاکڑ کا بیان سامنے آ گیا 

پی ٹی آئی کا 3 مارچ کو انٹرا پارٹی الیکشن کرانے کا اعلان، شیڈول بھی جاری کر دیا گیا 

پی ٹی آئی کا 3 مارچ کو انٹرا پارٹی الیکشن کرانے کا اعلان، شیڈول بھی جاری کر دیا گیا 

پنجاب یونیورسٹی میں تصادم، 9 طلباء زخمی،تفصیلات جانیں خبر میں 

پنجاب یونیورسٹی میں تصادم، 9 طلباء زخمی،تفصیلات جانیں خبر میں 

رمضان ریلیف پیکج آج وفاقی کابینہ میں پیش،دیکھیں تفصیل 

رمضان ریلیف پیکج آج وفاقی کابینہ میں پیش،دیکھیں تفصیل 

 مجھ پر پولیس نے تشدد کیا،خواجہ آصف نے پولیس کے ساتھ مل کر ٹھپے لگائے، ریحانہ ڈار کے انکشافات

مجھ پر پولیس نے تشدد کیا،خواجہ آصف نے پولیس کے ساتھ مل کر ٹھپے لگائے، ریحانہ ڈار کے انکشافات

آئی ایم ایف کے 26 میں سے 25 اہداف پر عمل درآمد مکمل ہو گیا

آئی ایم ایف کے 26 میں سے 25 اہداف پر عمل درآمد مکمل ہو گیا

سنی اتحاد کونسل کی مخصوص نشستوں کی درخواست، الیکشن کمیشن کا اہم اجلاس طلب  کر لیا  گیا

سنی اتحاد کونسل کی مخصوص نشستوں کی درخواست، الیکشن کمیشن کا اہم اجلاس طلب کر لیا گیا

صدر اور وزیراعظم کے نام فائنل ہونے کے بعد آئینی عہدوں کے لیے لابنگ کا آغاز

صدر اور وزیراعظم کے نام فائنل ہونے کے بعد آئینی عہدوں کے لیے لابنگ کا آغاز

 اللہ تعالیٰ مجھے اپنی مخلوق کی بہترین انداز میں خدمت کرنے کی توفیق عطا فرمائے، وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز

اللہ تعالیٰ مجھے اپنی مخلوق کی بہترین انداز میں خدمت کرنے کی توفیق عطا فرمائے، وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز

 موجودہ دورکے ڈرامے تو۔۔۔ سینئر اداکارہ  بشریٰ انصاری  نےاہم معاملے پر کڑی نقید کر ڈالی 

 موجودہ دورکے ڈرامے تو۔۔۔ سینئر اداکارہ  بشریٰ انصاری  نےاہم معاملے پر کڑی نقید کر ڈالی 

کیا واقعی شیخ وقاص اکرم  پی ٹی آئی چھوڑ کر پھر سے ن لیگ میں شامل ہو گئے ہیں ؟ جانیں اس خبر میں 

کیا واقعی شیخ وقاص اکرم  پی ٹی آئی چھوڑ کر پھر سے ن لیگ میں شامل ہو گئے ہیں ؟ جانیں اس خبر میں 

پی ٹی آئی کا 2 ہفتوں میں انٹرا پارٹی الیکشن کرانے کا فیصلہ

پی ٹی آئی کا 2 ہفتوں میں انٹرا پارٹی الیکشن کرانے کا فیصلہ

پی ٹی آئی کے 287 ارکان اسمبلی سنی اتحاد کونسل میں شامل ، دیکھیں تفصیل 

پی ٹی آئی کے 287 ارکان اسمبلی سنی اتحاد کونسل میں شامل ، دیکھیں تفصیل