01:13 pm
آئو غداری، غداری کھیلیں!

آئو غداری، غداری کھیلیں!

01:13 pm

٭غداریوں، بغاوتوں کا موسم شروع، مقدمے!  O دنیا بھر میں کرونا کی نئی لہر، فرانس، برطانیہ، بھارت، امریکہ میں کرونا بے قابوO ٹرمپ کی خطرناک حالت سے واپسیO مریم نواز مسلسل بارہ جلسوں کا اعلانO اپوزیشن: کوئٹہ کا جلسہ سات روز کے لئے ملتویO پی ٹی آئی کے ایم این اے کا بیٹا گرفتار، بھاری اسلحہ برآمدO لاشیں گراکرنیاصوبہ بنائیں گے، عامر خان حیدرآبادیOکراچی: دو ماہ تک لوکل ٹرین جزوی بحال!!O مریم نواز کی گرفتاری، شہباز شریف کی رہائی کا امکان!O عمران خان! 68 سال کے ہو گئے، نوازشریف سے دو سال چھوٹے، آصف زرداری سے تین سال، بلاول سے 36 سال بڑے!
٭ایک مدت کے بعد مخالفین پر بغاوت اور غداری کے ٹھپے لگنا شروع ہو گئے۔ ٹھپے لگانے والے خود کو ملک و قوم کے وفادار اور مخالفین کو ملک کے دشمن قرار دے رہے ہیں جب کہ دونوں فریقوںکی غریب عوام کی عملی ہمدردی اور وفاداری کہیں دکھائی نہیں دے رہی۔ اپوزیشن تو ہمیشہ آتش بدست ہوتی ہے مگر حکومت سے رواداری اور تحمل کی توقع کی جاتی ہے۔ اس وقت حکومت خود آتش فشاں بنی ہوئی ہے۔ ماضی میں ہمارے ہاں نوابزادہ نصراللہ خاں اور سردار عبدالقیوم خاں جیسے مدبر اور متحمل مزاج رہنما موجود ہوتے تھے جو اپنی واضح سیاست کے ساتھ حکومت اور اپوزیشن کی اشتعال انگیزی روک کر انہیں ایک دوسرے کے قریب لانے اور مفاہمت کی فضا پیدا کرنے میں قابل قدر مدد دیتے تھے۔ افسوس کہ اس وقت دور دور تک ایسا کوئی حقیقی مدبر بزرگ شخص دکھائی نہیں دے رہا۔ اپوزیشن تو ’ہم نہیں تو کچھ بھی نہیں‘ کا کھلا نعرہ لگا رہی ہے۔ جماعت اسلامی اپوزیشن کے اتحاد میں شامل نہیں مگر حکومت کے خلاف گولہ باری میں مکمل ہم نوا ہے۔ اور حکومت! کیا ہے؟ کہاں ہے؟ کچھ پتہ نہیں۔ حکومت کے بادشاہ نے ٹھنڈے مزاج کے ساتھ ماحول کو ٹھنڈا کرنے کی بجائے اپوزیشن کو صفحہ ہستی سے مٹانے کے لئے اپنی کابینہ کی تمام (50)توپوں کو ’دشمن‘ پر بھرپور گولہ باری کا حکم دے دیا ہے۔ اسی سلسلے میں ’دشمنوں‘ کے خلاف غداری اور بغاوت کے الزامات اور مقدمے شروع ہو گئے ہیں۔
٭غداری اور بغاوت کے بارے میں کوئی بات کہنے سے پہلے میں واضح طور پر قرار دیتا ہو ںکہ ملک کا کسی بھی پارٹی سے تعلق رکھنے والا ہر سیاسی رہنمامکمل طور پر محب وطن اور سچا پاکستانی ہے۔ المیہ یہ ہے کہ محض بے احتیاطی والے بیانات پر مخالف سیاست دان پرغداری کا ٹھپہ لگا دیا جاتا ہے جب کہ ایسے کسی بھی بیان کی سرزنش کے لئے مختلف قوانین موجود ہیں۔ اس کے برعکس عملی طور پر ’غداری‘ کے واضح مجرم لوگ قوم کے ہیرو بن گئے۔ اس ملک میں ہوس اقتدار میں مبتلا چار جرنیلوں ایوب خاں، یحییٰ خاں، ضیاء الحق اور پرویز مشرف نے طاقت کے بل بوتے پرکھلے عام ملک کے آئین توڑے! یہ آئین کے خلاف کھلی غداری بنتی تھی۔ ملک کے ہر آئین میںاس کی سخت سزا (موت)موجود تھی مگر ملک و قوم پر غاصبانہ تسلط والی یہ عفریتیں اُلٹا امیرالمومنین قرار پائیں، ملک کے ’خیرخواہ‘ سیاست دان بھاگتے ہوئے ان غاصبوںکے قدموں میںجا بیٹھے! جنرل ایوب خان نے 1956ء کا، جنرل یحییٰ خاں نے 1962ء کا آئین منسوخ کیا۔ جنرل ضیاء الحق نے 1973ء کے آئین میں اپنی مرضی کی ترامیم کر کے اس کا حلیہ بگاڑ دیا۔ جنرل پرویز مشرف نے تو دوبار آئین کو مَسَخ کیا۔ آئین کی دفعہ 6 میں واضح طور پرکہا گیا ہے کہ آئین کو منسوخ کرنے، مَسَخ کرنے، اس کو توڑ پھوڑ کرنے، اس میں تحریف کرنے والا سنگین غداری کا مرتکب قرار پائے گا! (سزا موت یا کم از کم عمر قید) مزیدیہ کہ آئین کے ساتھ اس قسم کی توڑ پھوڑ کرنے والے کی مدد کرنے والے عناصر بھی اسی طرح غداری کے مرتکب قرار پائیںگے! پھر؟ اس دو ٹوک واضح آئینی شق پر کبھی عمل ہوا؟ کسی ’مجرم‘ کے خلاف کبھی کوئی کارروائی، کبھی کوئی سزا؟ یہ لوگ الٹا ہیروقرار پائے۔ ان کی اولادیںآج بھی قوم کے سروں پر سوار ہیں۔
٭اس موضوع پر صرف چند باتیں: ہمارے ہاں کچھ ’’سازش کیس‘‘ بہت مشہور ہوئے۔ ان میں راولپنڈی سازش، اگر تلہ سازش کیس، اٹک سازش کیس اور حیدرآباد سازش کیس زیادہ نمایاں ہیں۔ راولپنڈی سازش کیس میںمیجر جنرل اکبر خاں، فیض احمد فیض، احمد ندیم قاسمی اور دوسرے ساتھی ’غدار‘ رار پائے، جیلوں میںبند کر دیئے گئے، طویل قیدکاٹی…اور…اور پھر آنے والی حکومتوں میں وزارتوں اور اعلیٰ عہدوں تک پہنچے۔ ’اگر تلہ‘ کیس میںشیخ مجیب الرحمن کو غدار قرار دیا گیا، گرفتار کر کے راولپنڈی کی جیل میںرکھا گیا۔ پھر یہی ’غدار‘ مجیب الرحمن 1974ء میں بنگلہ دیش کے صدر کے طور پر اسلامی کانفرنس میں شرکت کے لئے لاہور آیا تو پاکستان کے وزیراعظم بھٹو اور پوری کابینہ نے اس کا شاہانہ استقبال کیا۔ ستم ظریفی! اردن میں فلسطینیوں کے قتل عام کرنے والے بریگیڈیئر ضیاء الحق نے میجر جنرل کے طور پر حکومت کا تختہ الٹنے کی سازش کے طور پر بعض اعلیٰ فوجی افسروںکو برطرفی اور قیدکی سزائیں سنائیں اور پھر خود جرنیل بن کر اپنی حکومت کا تختہ اُلٹایا، منتخب وزیراعظم کو پھانسی دی اور ’امیرالمومنین‘ قرار پایا۔ جس جرنیل پرویز مشرف نے دوبار آئین توڑا (ججوں کو برطرف کیا) اسے مکمل گارڈ آف آنر کے ساتھ رخصت کیا گیا اور ملک سے باہر بھیج دیا گیا!!
بات لمبی ہو رہی ہے۔ یہ سارے میرے چشم دید واقعات ہیں! اب ذرا ایک مضحکہ خیز بات کہ اپنے نام ’کیپٹن‘ کا فوجی لاحقہ لگانے والا ایک سابق افسر ایک خاتون سیاسی رہنما کا شوہر بن جاتا ہے اور اسی کی خوشنودی کے لئے اپنے سے کہیں بہت اُوپر، جرنیلوں کے عہدوں والے کور کمانڈروں کو دھمکیاں دے رہا ہے کہ کسی (ن) لیگی رہنما کو گرفتار کیا گیا تو اس شہر یا علاقے کے کور کمانڈر کے گھر کا گھیرائو اور محاصرہ کیا جائے گا، یعنی اسے گھر سے باہر نہیں نکلنے دیا جائے گا! اس پر کیا تبصرہ کیا جائے؟ مقدمہ پولیس درج کرے گی اورکور کمانڈروں کے محاصرے!؟ ایک چیز ذہنی توازن نام کی ہوتی ہے۔ بغاوت و غداری مقدمہ درج کرنے کی بجائے اس شخص کو کسی کورکمانڈر کے گھر کے باہر چھوڑ دیا جائے!!…فوج خود نمٹ لے گی!
٭سیاسی ماحول کچھ زیادہ ہی گرم ہو گیا ہے۔ اُردو میں ایک محاورہ ہے کہ ’بلی کے بھاگو چھینکا ٹوٹا‘ (چھینکا، اوپر کسی تار کے ساتھ لٹکایا ہوا برتن، اس میں دودھ کا برتن رکھا جاتا ہے) نوازشریف باہر، شہباز شریف ’اندر‘ اور مریم نواز ن لیگ کی مالک و مختار!! اک دم ملک بھر میں بارہ جلسے جلوسوں کااعلان کر دیا! ذرا تاریخیں دیکھیں: 15 اکتوبر راولپنڈی، 16 گوجرانوالہ، 19مالا کنڈ، 22 اسلام آباد، 23 ملتان، 30 بہاولپور، 26 مظفر گڑھ، 29 نواب شاہ، 30 عمر کوٹ، 2 نومبر سرگودھا!! گویا 17 دنوں میں بارہ جلسے، بارہ تقریریں! ن لیگ کے تمام ڈویژنل اور ضلعی عہدیداروں کو اعلیٰ استقبال اور بھرپور جلسوں کا حکم جاری کر دیا گیا ہے۔ ظاہر ہے ان جلسے جلوسوں میں ’خاص‘ نعرے لگیں گے! اس دوران 10 اکتوبر کو کوئٹہ بھی جانا تھا اور 11 اکتوبر کو اپوزیشن کے حلسے سے خطاب کرنا تھا، یہ جلسہ 18 تاریخ پر چلا گیا ہے۔ پتہ نہیں خواجہ آصف، شاہد خاقان عباسی، امیر مقام کہاں ہیں؟
٭ضلع گجرات کے قصبہ ڈنگہ کے پاس فتح پور کے قریب پولیس نے پی ٹی آئی کے ایم این اے مجید خاں نیازی کے بیٹے رحیم خاں نیازی کی گاڑی کو روکا۔ گاڑی میں سے بھاری مقدار میں اسلحہ برآمد ہوا۔ رحیم خاں اور اس کے ساتھی طاہر سلیم کو گرفتار کر لیا گیا اور تھانے میں مقدمہ درج ہو گیا۔ خبر سے معلوم نہیں ہوا کہ اسلحہ کہاں اور کیوں لے جایا جا رہا تھا؟ اور یہ کہ پی ٹی آئی کے ایم این اے نے بیٹے کو چھڑانے اور تھانیدار کو معطل کرانے کیلئے کیا کارروائی کی؟ ایک تھانیدار کی یہ ہمت کہ ایک ایم این اے کے بیٹے پر ہاتھ ڈال دیا!
 

تازہ ترین خبریں

چُلبلے اور نت نئے بیانات دینے والی وفاقی وزیر زرتاج گل کا عید الفطر پر خصوصی انٹرویو

چُلبلے اور نت نئے بیانات دینے والی وفاقی وزیر زرتاج گل کا عید الفطر پر خصوصی انٹرویو

لرزہ خیز حادثہ بڑی تعداد میں جانی نقصان ہوگیا ، ایمبولینسیں روانہ ، ہر طرف چیخ وپکار

لرزہ خیز حادثہ بڑی تعداد میں جانی نقصان ہوگیا ، ایمبولینسیں روانہ ، ہر طرف چیخ وپکار

لاک ڈاؤن کے حوالے سے نیا نوٹیفکیشن جاری،عید کے بعد شہریوں کیلئے بڑی خبر آگئی

لاک ڈاؤن کے حوالے سے نیا نوٹیفکیشن جاری،عید کے بعد شہریوں کیلئے بڑی خبر آگئی

سمندری طوفان کے پاکستانی ساحل سے ٹکرانے کا خطرہ ٹل گیا

سمندری طوفان کے پاکستانی ساحل سے ٹکرانے کا خطرہ ٹل گیا

شہر قائد میں کے پیسوں عوض قبر توڑ کر دوسری میت کی تدفین کا انکشاف

شہر قائد میں کے پیسوں عوض قبر توڑ کر دوسری میت کی تدفین کا انکشاف

تعلیمی اداروں کی بندش سے متعلق طلبا کیلئے ایک اور بڑی خبر،حکومت نے چھٹی کے دن اہم فیصلہ کرلیا

تعلیمی اداروں کی بندش سے متعلق طلبا کیلئے ایک اور بڑی خبر،حکومت نے چھٹی کے دن اہم فیصلہ کرلیا

پاکستان کیلئے شاندار اعلان ،شہریوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی

پاکستان کیلئے شاندار اعلان ،شہریوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی

اسرائیل کے غزہ پر بدترین حملے ،41 بچوں سمیت 154افراد شہید

اسرائیل کے غزہ پر بدترین حملے ،41 بچوں سمیت 154افراد شہید

 ’’فلسطینی بچی ننھی منی مچھلیاں بچا کر خوش،خبر پڑھ کر آپ کی آنکھیں نم ہوجائینگی

’’فلسطینی بچی ننھی منی مچھلیاں بچا کر خوش،خبر پڑھ کر آپ کی آنکھیں نم ہوجائینگی

پی ٹی اے نے گمشدہ اور چھینے گئے فون بلاک کروانے کا آسان طریقہ متعارف کرا دیا

پی ٹی اے نے گمشدہ اور چھینے گئے فون بلاک کروانے کا آسان طریقہ متعارف کرا دیا

نہری پانی میں کمی پر پیپلزپارٹی کا سندھ پنجاب سرحد پر دھرنے کا اعلان

نہری پانی میں کمی پر پیپلزپارٹی کا سندھ پنجاب سرحد پر دھرنے کا اعلان

اسفندیار ولی کے گھر صف ماتم بچھ گئی ، ملکی فضا سوگوار

اسفندیار ولی کے گھر صف ماتم بچھ گئی ، ملکی فضا سوگوار

پی ٹی آئی عہدیدار کورونا سے انتقال کرگئے،وزیراعظم عمران خان غم سے نڈھال

پی ٹی آئی عہدیدار کورونا سے انتقال کرگئے،وزیراعظم عمران خان غم سے نڈھال

پاکستان میں ایک ہی روز 76افراد جان کی بازی ہار گئے ، میتیں گھر پہنچنے پر کہرام مچ گیا ، ہرطرف چیخ وپکار

پاکستان میں ایک ہی روز 76افراد جان کی بازی ہار گئے ، میتیں گھر پہنچنے پر کہرام مچ گیا ، ہرطرف چیخ وپکار