12:59 pm
اسرائیل کے قیام کا مقصد اور عرب منصوبہ

اسرائیل کے قیام کا مقصد اور عرب منصوبہ

12:59 pm

اسرائیل کے مسئلہ پر3اپریل 2002 کو شائع ہونے والا کالم اٹھارہ سال بعد دوبارہ پیش خدمت ہے۔
بیروت میں منعقد ہونے والی عرب سربراہ کانفرنس نے سعودی عرب کے امن منصوبہ کو منظور کر لیا ہے اور کانفرنس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سعودی وزیرخارجہ شہزادہ سعود الفیصل نے کہا ہے کہ اب اس امن منصوبے کو عرب منصوبے کی حیثیت حاصل ہوگئی ہے۔ اخباری رپورٹ کے مطابق اس منصوبے کے ذریعہ امن و سلامتی کیلئے اسرائیل کو  سے قبضہ کیے گئے فلسطینی علاقے خالی کرنے کے عوض معمول کے تعلقات قائم کرنے کی پیشکش کی گئی ہے۔
 
اس سے قبل جب سعودی ولی عہد شہزادہ عبد اللہ کی طرف سے کہ مقبوضہ علاقے خالی کر دینے کی صورت میں اسرائیل کو تسلیم کرنے کی پیشکش کی گئی تھی تو ہم نے اس کالم میں عرض کیا تھا کہ اس کا مطلب یہ ہے کہ سعودی عرب نے فلسطین کی تقسیم اور اسرائیل کے قیام کے لیے اقوام متحدہ کی اس قرارداد کو تسلیم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے جس سے سعودی عرب کے بانی شاہ عبد العزیز نے امریکی صدر ٹرومین کے نام اپنے  تحریر کردہ خط میں صاف طور پر انکار کر دیا تھا اور اب عرب سربراہ کانفرنس میں اس منصوبے کو منظور کر لینے کے بعد پوری عرب دنیا اس اسٹیج پر آگئی ہے جہاں کیمپ ڈیوڈ سمجھوتے کے ذریعہ مصر کے صدر انور سادات نے اسرائیل کو تسلیم کر کے اور فلسطین کی تقسیم کے عمل کو قبول کر کے فلسطینیوں کی خود ان کے وطن کے بڑے حصے سے بے دخلی کو سندِ جواز فراہم کر دی تھی۔
اخباری اطلاعات کے مطابق امریکہ نے عرب لیگ کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے اور اسے مثبت پیش رفت قرار دیا ہے۔ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ سب سے اہم بات یہ ہے کہ عرب لیڈروں نے بیٹھ کر اسرائیل سے امن کے لیے بات چیت کی۔ گویا امریکی اطمینان کا سب سے نمایاں پہلو یہ ہے کہ اسے اسرائیل کا وجود تسلیم کرانے اور عربوں اور یہودیوں کو ایک میز پر بٹھانے کے مشن میں کامیابی کے امکانات دکھائی دینے لگے ہیں جس کے لیے امریکہ گزشتہ نصف صدی سے بے چین تھا۔
مگر دوسری طرف اسرائیل نے امن منصوبے کو مسترد کر دیا ہے اور فلسطینی ہیڈکوارٹرز پر تازہ حملوں کی دھمکی دی ہے۔ اخباری رپورٹ کے مطابق اسرائیل کے وزیراعظم شیرون کے مشیر نے کہا ہے کہ منصوبہ موجودہ شکل میں ناقابل قبول ہے۔ اسرائیل کی طرف سے امن منصوبے کو مسترد کرنے کی سب سے بڑی وجہ ہمارے نزدیک یہ ہے کہ اسے  میں قبضہ کیے جانے والے علاقے خالی کرنے کے لیے کہا گیا ہے جس میں بیت المقدس بھی شامل ہے۔ کیونکہ  کی جنگ سے قبل بیت المقدس اردن کے کنٹرول میں تھا اور اسرائیل نے حملہ کر کے اس پر قبضہ کیا تھا۔ جبکہ اسرائیل کے نزدیک اس کی اب تک کی جدوجہد اور تگ و دو کا سب سے بڑا مقصد بھی بیت المقدس کا قبضہ تھا جس کے لیے صیہونی لیڈرشپ صدیوں سے منصوبہ بندی کر رہی تھی اور جس کے بغیر اسرائیلی ریاست کا مقصدِ وجود ہی ختم ہو کر رہ جاتا ہے۔ اسرائیل نے بیت المقدس کو اپنا دارالحکومت قرار دے رکھا ہے اور امریکہ سمیت بہت سے مغربی ممالک ذہنی طور پر بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیے ہوئے ہیں جس کے رسمی اعلان کے لیے کوئی مناسب موقع تلاش کیا جا رہا ہے۔
ادھر فلسطینی مجاہدین کی تنظیم حماس نے بھی اس منصوبے کو مسترد کر دیا ہے اور اسرائیل کے خلاف فدائی حملے جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ جبکہ لندن سے شائع ہونے والے عربی اخبار القدس کی خبر کے مطابق عرب مجاہد اسامہ بن لادن نے اس منصوبے کو امریکی سازش قرار دیا ہے اور دنیا بھر کے مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ صیہونی ریاست کے خلاف جہاد کریں۔
اس پس منظر میں ہم یہ سمجھتے ہیں کہ سعودی امن منصوبہ یا عرب سربراہ کانفرنس کی منظوری کے بعد عرب منصوبہ علاقہ کی صورتحال میں کسی عملی تبدیلی کا باعث تو شائد نہ ہو کیونکہ خطہ کے اصل ممالک یعنی دونوں فریقوں اسرائیل اور حماس نے اسے مسترد کر دیا ہے اور عسکری کشمکش جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ البتہ اس سے ڈپلومیٹک تبدیلی ضرور عمل میں آئی ہے کہ اس کے ذریعے امریکہ نے اسرائیل کو اس کے موقف اور پوزیشن پر بدستور برقرار رکھتے ہوئے عرب ممالک بالخصوص سعودی عرب کو ان کے سخت موقف سے پیچھے ہٹا کر کیمپ ڈیوڈ کی پوزیشن پر لے جانے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ اسی وجہ سے امریکی حکام نے عرب سربراہ کانفرنس کے فیصلے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔     (جاری ہے 

تازہ ترین خبریں

شاہ محمود قریشی نے حکومت کے ساتھ کسی بھی قسم کا کوئی معاہدہ طے پانے کی خبروں کی تردید کردی

شاہ محمود قریشی نے حکومت کے ساتھ کسی بھی قسم کا کوئی معاہدہ طے پانے کی خبروں کی تردید کردی

عمران خان کو کسی بھی صورت اسلام آباد نہیں آنے دیں گے، رانا ثناءاللہ نے اپنے عزائم بتادیئے، کیا کرنےوالے ہیں؟بڑی خبر

عمران خان کو کسی بھی صورت اسلام آباد نہیں آنے دیں گے، رانا ثناءاللہ نے اپنے عزائم بتادیئے، کیا کرنےوالے ہیں؟بڑی خبر

تحریک انصاف کا آزادی مارچ، کنٹرول رینجرز کو دیدیا گیا، بڑی خبر

تحریک انصاف کا آزادی مارچ، کنٹرول رینجرز کو دیدیا گیا، بڑی خبر

لانگ مارچ: دفعہ 144 نافذ، اسلام آباد جانے والے راستے بند،میٹرو رک گئی،سکولوں میں چھٹی

لانگ مارچ: دفعہ 144 نافذ، اسلام آباد جانے والے راستے بند،میٹرو رک گئی،سکولوں میں چھٹی

بڑے اسلامی ملک کاشام میں نئے فوجی آپریشن کااعلان،عالم اسلام میں ہلچل مچ گئی

بڑے اسلامی ملک کاشام میں نئے فوجی آپریشن کااعلان،عالم اسلام میں ہلچل مچ گئی

جسٹس (ر) ناصرہ اقبال کے گھر پر چھاپہ، معافی مانگتا ہوں، اقتدار کیا چھن گیا،وزیردفاع خواجہ آصف نے معافی مانگتے ہوئے بڑی بات کہہ دی

جسٹس (ر) ناصرہ اقبال کے گھر پر چھاپہ، معافی مانگتا ہوں، اقتدار کیا چھن گیا،وزیردفاع خواجہ آصف نے معافی مانگتے ہوئے بڑی بات کہہ دی

شاہ محمود قریشی کو ایک بار پھر فون آ گیا

شاہ محمود قریشی کو ایک بار پھر فون آ گیا

میری جان کو خطرہ ہے پھر بھی جہاد سمجھ کر نکل رہا ہوں، تحریک جاری رہے گی عوام سے کہتا ہوں کہ۔۔کپتان نے بڑااعلان کردیا

میری جان کو خطرہ ہے پھر بھی جہاد سمجھ کر نکل رہا ہوں، تحریک جاری رہے گی عوام سے کہتا ہوں کہ۔۔کپتان نے بڑااعلان کردیا

اسلام آباد پولیس نے ڈی چوک پہنچنے والے تحریک انصاف کے کتنے کارکنوں کوگرفتارکرلیا،شہراقتدار سے بڑی خبرآگئی

اسلام آباد پولیس نے ڈی چوک پہنچنے والے تحریک انصاف کے کتنے کارکنوں کوگرفتارکرلیا،شہراقتدار سے بڑی خبرآگئی

وزیرِاعظم کوبلوچستان کے جنگلات میں آگ پرقابوپانے کیلئے جاری آپریشن پربلوچستان حکومت کی جانب سےتفصیلی رپورٹ پیش کردی گئی

وزیرِاعظم کوبلوچستان کے جنگلات میں آگ پرقابوپانے کیلئے جاری آپریشن پربلوچستان حکومت کی جانب سےتفصیلی رپورٹ پیش کردی گئی

سونے کے خریداروں کیلئے بڑی خبر ، قیمت کو گیئر لگ گئے

سونے کے خریداروں کیلئے بڑی خبر ، قیمت کو گیئر لگ گئے

شہید کی توہین کسی صورت مناسب نہیں، پنجاب پولیس کا پرویزالٰہی کے بیان پر ردعمل

شہید کی توہین کسی صورت مناسب نہیں، پنجاب پولیس کا پرویزالٰہی کے بیان پر ردعمل

جڑواں شہروں کے باسیوں کےلیے بری خبر،میٹروسروس بندکردی گئی،بندش کتنے دن رہے گی ،بڑی خبرآگئی

جڑواں شہروں کے باسیوں کےلیے بری خبر،میٹروسروس بندکردی گئی،بندش کتنے دن رہے گی ،بڑی خبرآگئی

روپیہ مزیدگراوٹ کا شکار، ڈالرکی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری،امریکی کرنسی کی قدر میں کتنااضافہ ہوگیا،پریشان کردینے والی خبرآگئی

روپیہ مزیدگراوٹ کا شکار، ڈالرکی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری،امریکی کرنسی کی قدر میں کتنااضافہ ہوگیا،پریشان کردینے والی خبرآگئی