12:59 pm
مضحکہ خیز مقدمے، 33 نئی شاندار گاڑیاں!

مضحکہ خیز مقدمے، 33 نئی شاندار گاڑیاں!

12:59 pm

٭آصف زرداری، 3 فرد جرم!اپوزیشن کے جلسے، تین بار تبدیل…O غداری و بغاوت کے مضحکہ خیز مقدمے، دس خواتین کا جرم ’’نوازشریف کی تقریر کیوں سُنی؟‘‘ O تمام اپوزیشن پارٹیاں مولانا فضل الرحمان کے کنٹرول میں …!O ’’اپوزیشن کے خلاف مقدمات کیوں؟‘‘ وزیراعظم برہمO چکی آٹا مزید20 روپے کلوO ’’کفائت شعاری‘‘!35 پرتعیش گاڑیاں، وزیراعظم اور وزرا کے حوالے O ایک اور معاون خصوصی، کل تعداد 51!! O شہباز شریف کو زمین پر کھانا، عدالت برہم۔
٭پہلے بغاوت اور غداری کے مقدمے، بلکہ تماشے! کیپٹن (ر) صفدر نے انتہائی طیش کے عالم میں فوج کے کور کمانڈروںکے گھروں کے محاصرے کی جو بات کی اس پرآئین کی دفعہ 63۔بی اور آرمی ایکٹ کے تحت فوج کی توہین کی کارروائی بنتی ہے۔ اس پر بھی ملک سے غداری اور بغاوت کا کیس نہیں بنتا۔ کیپٹن صفدر نے بلاشبہ چھوٹے پن کا مظاہرہ کیا۔ آئین کی دفعہ 63 بی میں واضح بیان کیا گیا ہے کہ ایسا شخص اسمبلی یا سینٹ کی رکنیت کا اہل نہیں رہتا! آرمی ایکٹ کے اپنے تقاضے ہیں۔ اس کے تحت فوج سے ریٹائر ہونے والے افراد تا عمر فوجی قوانین اور ضابطوں کے تحت رہتے ہیں۔ ان کے خلاف کورٹ مارشل کی کارروائی بھی ہو سکتی ہے۔ بہر حال سول تھانہ میں مقدمہ درج ہو چکا ہے، اس میں گرفتاری بھی ہو سکتی ہے، ایک عدالتی حکم کے تحت فی الحال چند روز کے لئے گرفتاری روک دی گئی ہے۔ یہ کیس اب طویل چلے گا!
٭دوسرا مقدمہ!! نوازشریف نے لندن سے اپوزیشن کے اجلاس کو خطاب کیا۔ شاہدرہ کے ن لیگ کے ہی ایک رکن بدر رشید نے تھانہ شاہدرہ میں نوازشریف کے خلاف بغاوت اور غداری کا مقدمہ درج کرا دیا۔ بدر رشید ایک ایف اے پاس پراپرٹی ڈیلر ہے۔ اس کی مسلم لیگی رہنمائوںکے ساتھ تصویریں بھی ہیں۔ اس نے کہا ہے کہ نوازشریف ن لیگ کے لیڈر ہیں مگر وہ فوج کے خلاف کوئی بات برداشت نہیں کر سکتا۔ بدر رشید کے اس مقدمہ کی روداد پاکستان کے تمام اخبارات نے اس غیر معمولی طور پر شہ سرخیوں کے ساتھ لیڈ سٹوری کے طور پر شائع کی ہے جب کہ یہ مضحکہ خیز قسم کا عام سا مقدمہ ہے۔ مختلف لوگوں نے ایسے مقدمات کے اندراج کو پیشہ بنا رکھا ہے۔ اس مقدمے کی نوعیت دیکھیں۔ اس میں نوازشریف اور مریم نواز سمیت 40 افراد کو ملک دشمنی کے ملزم قرار دیا گیا ہے۔ ان 40 افراد میں راجہ ظفر الحق جیسے بزرگ اور نہائت سنجیدہ اور بردبار رہنما کے علاوہ ن لیگ کے تقریباً تمام مرکزی رہنما شامل ہیں۔ مضحکہ خیز الزام یہ ہے کہ ان افراد نے تقریر کیوں سُنی؟ سُن لی تھی تو اس کی حمائت کیوں کی؟ اس فضول قسم کے الزام میں ن لیگ کی دس خواتین کو بھی شامل کر دیا گیا ہے۔ ان پر صرف تقریر سننے کا الزام ہے۔ ان10 خواتین کے نام پڑھئے: مریم نواز نے تو واقعی نوازشریف کی تقریر کی پرزور حمائت کی تھی باقی 9 نام: بیگم نجمہ حمید، ذکیہ شاہ نواز، شیزا فاطمہ، مریم اورنگ زیب، عظمیٰ بخاری، شائستہ پرویز ملک، سائرہ افضل تارڑ، بیگم عشرت اشرف اور راحیلہ درانی! مقدمہ کے مدعی نے جن 30 مردوں کو بغاوت کے ملزم قرار دیا ہے ان میںبعض نام ایسے ہیں جو شائد ہی کبھی کسی نے سُنے ہوں۔ دوسری طرف دیکھیں! ایک شخص 40 افراد کے نام لکھ کر تھانے میں پہنچتا ہے۔ تھانیدار فوراً مقدمہ درج کر لیتا ہے! جیسے وہ پہلے سے ہی اس شخص کے انتظار میں بیٹھا تھا! اور پھر تمام میڈیا میں اس مقدمہ کو ملک کی سب سے بڑی خبر کے طور پر نمایاں کیا گیا! کیا پس منظر تھا؟ تقریر سُننا جرم تھا تو وہ تو سرفراز سیّد بلکہ خود وزیراعظم اور تقریباً پور1ی قوم نے بھی سنی تھی۔ یوں پوری قوم بغاوت اور غداری کی ملزم ٹھہری!! ویسے یہ پست قسم کے حربے ہر زمانہ میں، ہر دور میں اختیار کئے جاتے رہے ہیں۔ کیپٹن (ر) صفدر اور نوازشریف کی تقریروں اور بیانات کا اصل نشانہ تو پاک فوج تھے، وہ تو حسب معمول برداشت کرتی جا رہی ہے، اب بھی خاموش ہے۔ مقدمہ کے لئے لاہور شہرکی راوی پار مضافاتی آبادی شاہدرہ کے ایک پراپرٹی ڈیلر کا انتخاب! اس ملک میں ایسی بے شمار مثالیں موجود ہیں۔ ذوالفقار علی بھٹو کا دور! چودھری ظہور الٰہی پر بھینس چوری کا مقدمہ، لاہور سے اٹھوا کر کوہلو پہنچا دیا۔ پنجابی کے شاعر استاد دامن نے نظم کہہ دی کہ ’’لاڑکانے چلو، ورنہ تھانے چلو‘‘ اس پر بم سازی کا مقدمہ درج کر کے حوالات میں بند کر دیا (چودھری اعتزاز احسن نے رہائی دلائی)۔ کیا کیا ڈرامے نہیں ہوتے رہے؟ آخری بات کہ خبروں کے مطابق دو ہاتھ آگے بڑھ کر عمران خاں کے خلاف پریس کانفرنسوں والی خاتون عظمیٰ بخاری کو معلوم ہوا کہ بغاوت کے مقدمہ میں دس خواتین کے نام بھی شامل تو وہ گھبرا گئی اور پوچھا کہ ان دس میں اس کا نام تو شامل نہیں؟ بتایا گیا کہ نام شامل ہے تو بہت پریشان ہوئی! چلئے کچھ دوسری باتیں:۔
٭آصف زرداری کے خلاف تین عدد فرد جرم! توشہ خانہ کیس کی فرد جرم تو پہلے ہی لگ چکی تھی، اب منی لانڈرنگ اور ٹھٹھہ واٹر کیس میں مزید دو فردیں!! ملک کی بیک وقت مختلف جرائم کی تین فردوں کا ملزم ہونے والی منفرد شخصیت! ہر فرد جرم میں عدالت میں باربار پیشی! بار بار کراچی سے اسلام آباد آمد و رفت۔ کہا ملک کا بے پناہ اختیارات والا صدر (ایوان صدر اور امریکہ میں گھوڑوں کے فارم!) اور کہاں بار بار عدالتوں میں حاضری! الامان! جرم کی فَردوں والا ایک اور شاہکار ’شدید بیمار‘ ملزم لندن میں کتنی مشکل کے ساتھ آرام و سکون کی زندگی گزار رہا ہیے!! قوم رشک کر رہی ہے!
٭مولانا فضل الرحمان کو مبارکباد! دو سال کی دن رات کی مسلسل محنت رنگ لے آئی، ملک کی اپوزیشن کی ن لیگ، پیپلزپارٹی، اے این پی اور دوسری تمام پارٹیاںبراہ راست کنٹرول میں آ گئیں! مولانا اپوزیشن کے اتحاد پی ڈی ایم کے بلامقابلہ صدر، نوازشریف، آصف زرداری، مریم نواز، بلاول، شہباز، سب ماتحت! مولانا صدر، ن لیگ کے شاہد خاقان عباسی ان کے سیکرٹری جنرل، پیپلزپارٹی کے رہنما پرویز اشرف، نائب صدر، دوسری پارٹیوں کو بھی چھوٹے موٹے عہدے مل گئے! مولانا اپنے بازو کے زور پر صدر بنے ہیں۔ ن لیگ اور پیپلزپارٹی نے تسلیم کیا کہ مولانا کی سٹریٹ پاور کے مقابلے میں ان دونوں پارٹیوں کی سٹریٹ پاور نہ ہونے کے برابر ہے۔ اب یہ پارٹیاں تقریریںکریں گی اور مولانا کی ’سٹریٹ پاور‘ اپنے جھنڈے لہرائے گی۔ مولانا کی اس قوت بازو پر ایک پرانا لطیفہ یاد آ گیا۔ جنگل کا بادشاہ سارے شکار کھا جاتا تھا۔ دوسرے شکاری جانور پریشان تھے۔ ایک روز اکٹھے ہوکر شیر سے اپیل کی کہ آئندہ مل کر شکار کیا جائے اور سب میں حصہ تقسیم کیا جائے۔ شیر مان گیا۔ اس نے اگلے روز ایک ہرن شکار کیا۔ تمام شکاری جانور جمع ہوئے۔ شیر نے شکار کے تین حصے کئے اور کہنے لگا کہ ایک حصہ تو میرا ہے کہ میں نے شکار کیا ہے، دوسرا حصہ اس لئے میرا ہے کہ میں جنگل کا بادشاہ ہوں، اور تیسرا حصہ! کوئی اسے میرے سامنے سے اٹھا سکتا ہے تو اٹھا کر دکھا دے!! ایک بار پھر مولانا صاحب کو سرداری مبارک!
٭میں محترم وزیراعظم کی سادگی اور کفائت شعاری کا پہلے دن سے قائل تھا، وزیراعظم ہائوس میں قدم رکھتے ہی وہاں سابق معصوم سے وزیراعظم نوازشریف کے زیر سایہ دودھ دینے والی آٹھ بھینسیں فروخت کر دیں۔ اب نئی ’’کفائت شعاری‘‘! سابق شہنشاہ وزیراعظم نے 33 بالکل نئی، انتہائی مہنگی (فی گاڑی 4 کروڑ روپے) فائر پروف و بم پروف گاڑیاں منگوائیں کہ ایک گاڑی خراب ہو جائے تو دوسری موجود ہو۔ یہ گاڑیاں موجودہ وزیراعظم کے حکم پر توشہ خانہ میں بند کر دی گئیں۔ اعلان کیا کہ کابینہ میں صرف 10 وزیر ہوں گے اور بس! (اس وقت 26 وزیر، 5 مشیر، 20 خصوصی معاونین) مگر نہائت انسان دوست وزیراعظم سے کوئی بھی غریب غربا قسم کا پرانا ملنے آ جاتا ہے تو ’صاحب‘ کے دل میں رحم کے چشمے پھوٹنے لگتے ہیں اسے خصوصی معاون بنا دیا جاتا ہے۔ مشیر تو صرف 5 رکھے جا سکتے ہیں، وہ پورے ہیں۔ (خزانہ و صحت کا کوئی وزیر نہیں) خصوصی معاونین کی تعداد برساتی کھمبیوں کی طرح بڑھتی جا رہی ہے۔ ان سب کے پاس کام تو کوئی نہیں مگر اعلیٰ بنگلے اور قیمتی گاڑیاں درکار ہیں۔ سو ان سے ہمدردی کے طور پر یہ ساری 33 نئی گاڑیاں توشہ خانے سے باہر نکالی جا رہی ہیں۔ جواز یہ کہ کسی بیرونی اہم شخصیت کی آمد پر استعمال ہوں گی فی الحال وزیر، مشیر، معاونین بہت اہم ہیں! کفائت شعاری!!
 

تازہ ترین خبریں

لیگی رہنماؤں اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں جھگڑا کس بات پر شروع ہوا ؟ اصل وجہ سامنے آگئی

لیگی رہنماؤں اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں جھگڑا کس بات پر شروع ہوا ؟ اصل وجہ سامنے آگئی

’’پی ٹی آئی کے غنڈوں کا مقابلہ کرنے پرمجھے اپنے شیروں پر فخر ہے‘‘مریم نواز

’’پی ٹی آئی کے غنڈوں کا مقابلہ کرنے پرمجھے اپنے شیروں پر فخر ہے‘‘مریم نواز

وزیر اعظم اعتماد کا ووٹ لینے میں کامیاب۔۔۔ مریم نواز نے ایسی بات کہہ دی کہ کھلاڑی بھی حیران رہ گئے

وزیر اعظم اعتماد کا ووٹ لینے میں کامیاب۔۔۔ مریم نواز نے ایسی بات کہہ دی کہ کھلاڑی بھی حیران رہ گئے

’میں ما لشیا قسم کا وزیر نہیں ‘ وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ ملنے کے بعد شیخ رشید کا قومی اسمبلی میں خطاب

’میں ما لشیا قسم کا وزیر نہیں ‘ وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ ملنے کے بعد شیخ رشید کا قومی اسمبلی میں خطاب

جمہوریت حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مقابلے کو کہتے ہیں،عمران خان اکیلے ہی دوڑ کر اول آئے، راجہ پرویز اشرف کا ردعمل

جمہوریت حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مقابلے کو کہتے ہیں،عمران خان اکیلے ہی دوڑ کر اول آئے، راجہ پرویز اشرف کا ردعمل

عمران خان صاحب! تبدیلی کیلئے آگے بڑھیں ہم آپ کے ساتھ ہیں، خالد مقبول

عمران خان صاحب! تبدیلی کیلئے آگے بڑھیں ہم آپ کے ساتھ ہیں، خالد مقبول

احسن اقبال بھی جوتاکلب میں شامل،سابق وزیرداخلہ  کارکنوں سے بات چیت کرہی رہے تھے کہ۔۔۔ویڈیوسوشل میڈیاپروائرل

احسن اقبال بھی جوتاکلب میں شامل،سابق وزیرداخلہ کارکنوں سے بات چیت کرہی رہے تھے کہ۔۔۔ویڈیوسوشل میڈیاپروائرل

اپوزیشن دوبارہ وزیراعظم کیخلاف تحریکِ عدم اعتماد لاسکتی ہےیانہیں؟ حکمران جماعت کیلئے اہم خبرآگئی

اپوزیشن دوبارہ وزیراعظم کیخلاف تحریکِ عدم اعتماد لاسکتی ہےیانہیں؟ حکمران جماعت کیلئے اہم خبرآگئی

 شہریوں کو بجلی کی مد میں بڑا ریلیف ملنے کا امکان،نیپرا نے منظوری دیدی

شہریوں کو بجلی کی مد میں بڑا ریلیف ملنے کا امکان،نیپرا نے منظوری دیدی

پی ٹی آئی کارکنوں کی جانب سے گھیرے میں آنے کے بعد مریم تپ گئیں،وزیراعظم کوبدمعاش کہہ ڈالا

پی ٹی آئی کارکنوں کی جانب سے گھیرے میں آنے کے بعد مریم تپ گئیں،وزیراعظم کوبدمعاش کہہ ڈالا

حکومتی ارکان نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن کے بنچوں کیساتھ کیاحرکت کرڈالی ،جان کرآپ کو یقین نہیں آئیگا

حکومتی ارکان نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن کے بنچوں کیساتھ کیاحرکت کرڈالی ،جان کرآپ کو یقین نہیں آئیگا

عمران خان عوام کوریلیف دینے کیلئے ڈٹ گئے ، ایسا فیصلہ کرلیا کہ اپوزیشن جماعتیں منہ تکتی رہ گئیں

عمران خان عوام کوریلیف دینے کیلئے ڈٹ گئے ، ایسا فیصلہ کرلیا کہ اپوزیشن جماعتیں منہ تکتی رہ گئیں

بیٹیاں ہوں توایسی۔۔۔ اپنا گھر بسانے سے قبل بیٹیوں نے باپ کا گھر بسا دیا

بیٹیاں ہوں توایسی۔۔۔ اپنا گھر بسانے سے قبل بیٹیوں نے باپ کا گھر بسا دیا

پی ٹی آئی ممبران کوپیغام ،کپتان کابھی آخرتک لڑنے کافیصلہ

پی ٹی آئی ممبران کوپیغام ،کپتان کابھی آخرتک لڑنے کافیصلہ