01:42 pm
معاشرے کی اصلاح کی فکر کیجئے

معاشرے کی اصلاح کی فکر کیجئے

01:42 pm

بدھ کی صبح بڑی دیر سوچتا رہا کہ کیا لکھوں...؟ ٹی وی چینلز تو کئی سال ہوگئے دیکھنا چھوڑ دئیے الحمدللہ اور اخبارات کی شہ سرخیوں سے غدار‘ غدار‘ غدار کی صدائیں بلند ہو رہی ہیں‘ ایسے لگتا ہے کہ دسیوں سالوں سے ملک پر حکمرانی کرنے والے سارے غدار تھے... سوال یہ ہے کہ کیا بنے گا  پاکستان کا؟ جب حکمران اپوزیشن سیاست دانوں کو غدار اور اپوزیشن‘ حکمرانوں کو ’’مودی کا وفادار‘‘ قرار دیں گے... تو پھر پاکستان کا دنیا میں مذاق تو بنے گا ہی‘ اس لئے غداروں‘ مودی کے وفاداروں کی گندی سیاسی دنیا سے نکل کر معاشرے کی اصلاح کو زیر بحث لاتے ہیں۔
معاشرہ کا کردار‘ کسی بھی ملک و قوم کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہوتا ہے... معاشرہ‘ ایک ایسی بنیاد ہے کہ جس پر ملکوں اور قوموں کی خوشحالی اور فلاح و بہبود کا انحصار ہوتا ہے... جس ملک و قوم کو ایک اچھا‘ بہترین اور منظم معاشرہ نصیب ہوتا ہے‘ خوشحالی اور فلاح و بہبود اس کا مقدر ہوتی ہے‘ لیکن اگر معاشرہ بگاڑ اور قسما قسم کی بیماریوں کا شکار ہو تو پھر خوشحالی‘ اور امن اس ملک و قوم سے روٹھ جایا کرتے ہیں... آج جب ہم  اپنے معاشرہ کا جائزہ لیتے ہیں تو ہر طرف جھوٹ‘ بددیانتی‘ فراڈ‘ دھوکا دہی‘ کرپشن‘ ملاوٹ‘ لوٹ مار‘ لسانیت‘ قوم پرستی‘ فرقہ پرستی اور بے پناہ سیاسی انتشار کا شکار نظر آتا ہے... لبرل‘ غیر لبرل‘ سیکولر‘ مذہبی‘ مسلم‘ غیر مسلم‘ اقلیت اور اکثریت کی تخصیص کئے بغیر... ہر شخص آپا‘ دھاپی‘ سیاسی اور مذہبی افراط و تفریط کا شکار نظر آتا ہے تو کیوں؟ کہتے ہیں کہ جس کا جہاں ہاتھ پڑتا ہے... وہ جیب کترنے میں دیر نہیں لگاتا... ’’معاشرہ‘‘ بنیادی طور پر افراد کے مجموعے کو کہا جاتا ہے‘ کسی بھی جگہ ایک ساتھ رہنے والے افراد کو مجموعی طور پر معاشرہ کہاجاتا ہے‘ اس لئے معاشرے کی اصلاح کے لئے افراد کی اصلاح بہت ضروری اور لازمی ہوتی ہے۔
افسوس تو یہ ہے کہ ہمارے ہاں اوپر سے نیچے تک... وزیراعظم سے لے کر عام پاکستانی تک... چیف جسٹس سے لے کر عام وکیل تک‘میڈیا کے پردھانوں سے لے کر انتظامیہ کے کارندوں تک... میرے سمیت ہر شخص دوسرے کی اصلاح تو کرنا چاہتا ہے... مگر اپنی اصلاح کی طرف توجہ دینا تو درکنار‘ سرے سے ضرورت ہی محسوس نہیں کرتا... معاشرہ کی اصلاح پر سب سے زیادہ زور دین اسلام نے دیا ہے... قرآن پاک کی سورۃ الحجرات میں چند اہم معاشرتی احکام بیان کئے گئے ہیں... اور وہ یہ کہ کسی بھی خبر پر  بغیر تحقیق یقین کرکے اندھا دھند ردعمل ظاہر کرنا خطرناک معاشرتی برائی کے زمرے میں آتا ہے... اور ہمارے معاشرے میں یہ معاشرتی برائی  ہر جگہ پھیلی ہوئی نظر آتی ہے... معاشرے کی ذمہ داری ہے کہ وہ حکم قرآنی کے مطابق ردعمل ظاہر کرنے سے قبل کسی بھی خبر کی اچھی طرح تحقیق کرلیا کرے‘ اگر دو بھائیوں‘ دو دوستوں یا دو گروہوں کے درمیان لڑائی ہو جائے... جوکہ ایک فطری امر ہے... تو ایسے موقع پر باقی  لوگوں کو محض تماشا دیکھنے کی بجائے غیر جانبداری اور عدل و انصاف کے مطابق لڑنے والوں کے درمیان صلح کروا دینی چاہیے... پھر اگر بالفرض ان میں سے ایک فریق دوسرے کے خلاف ظلم سے باز نہیں آتا... تو پھر ظالم کا ہاتھ روکنے کے لئے مظلوم کی نصرت و تائید کرنا بھی اسلام کا حکم  ہے‘ کسی بھی دوسرے مسلمان بھائی بہن کا مذاق اڑانا بدترین معاشرتی برائی ہے... جس سے اسلام نے سختی سے منع کیا ہے۔
 دین اسلام میں ہر مسلمان کی عزت نفس کا بہت خیال رکھا گیا ہے... اور اسی وجہ سے ہر ایسا عمل جو اس کی عزت نفس کو  مجروح کرے... اس سے منع کیا گیا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے مردوں اور عورتوں  کو الگ الگ مخاطب کرکے اس برائی سے بچنے کی تاکید فرمائی ہے... ’’طعنہ زنی کرنا‘‘ بھی معاشرے میں فساد بڑھکانے کا سبب بنتا ہے... یہ ایک مذموم عمل ہے جس سے منع کیا گیا ہے‘ ایک دوسرے کو برے القاب دینا بھی ہمارے معاشرے میں عام سی بات سمجھی جاتی ہے...حالانکہ اللہ پاک نے ایک دوسرے کو برے ناموں سے پکارنے سے منع فرمایا ہے‘ دوسروں سے متعلق منفی سوچ رکھ کر بدگمانی کرنا... ایک دوسرے کی ٹوہ اور جاسوسی میں لگے رہنا...کسی بھی دوسرے مسلمان کی پیٹھ کے پیچھے اس کی برائیاں کرتے رہنا یعنی غیبت کرنا‘ یہ وہ معاشرتی برائیاں ہیں کہ جو آج ہمارے معاشرے میں رچ بس چکی ہیں... بدقسمتی سے ہمارے ہاں ان موذی برائیوں کو ’’برائی‘‘ سمجھنے کی حس بھی ختم ہوتی جارہی ہے‘ بغیر تحقیق کے خبر کو پھیلا کر پھر اس پر چسکے دار تبصرے کرنا ہمارے ہاں اظہار رائے کی آزادی سمجھا جاتا ہے‘ دوسروں کی لڑائی کو بڑھانے کے لئے جلتی پر تیل چھڑکنا ہمارے ہاں کا فیشن بن چکا ہے۔
دوسروں کا مذاق اڑانا‘ بلکہ دوسری قومیتوں کا مذاق بنانا... دوسروں کی عزت نفس کو مجروح کرنا‘ دوسروں کو برے القابات دینا‘ غلط ناموں سے پکارنا‘ ہمارے ہاں جدت پسندی سمجھا جاتا ہے... دوسروں کے بارے میں منفی سوچ اور بدگمانی تو ہر گھر کا مزاج بن چکی ہے کیا مرد‘ کیا عورت‘ کیا بڑا‘ کیا چھوٹا‘  کیا امیر‘ کیا غریب‘ کیا استاد‘ کیا شاگرد‘ کیا پیر‘ کیا فقیر‘  کیا حکمران‘ کیا سیاست دان... اور رہ گئی بات میڈیا کی...  وہ تو گردن تک دوسروں کی ٹوہ اور جاسوسی کے سسٹم میں جکڑا ہوا ہے‘ ہم روتے ہیں حکمرانوں کو! جب معاشرہ‘ ان موذی بیماریوں کا  شکار ہو گا... تو پھر اسی معاشرے سے نکل کر حکمران بننے والے بھی‘ کبھی پرویز مشرف‘ کبھی شوکت عزیز‘ کبھی نواز شریف‘ کبھی زرداری اور کبھی عمران خان ہوں گے... خدا کے بندو! معاشرتی برائیوں کے سامنے بند تعمیر کرنا چاہتے ہو تو خوف خدا کو دلوں میں جگہ دو... اور تقویٰ کو اختیار کرو‘ اگر معاشرہ سدھر گیا تو پھر حکمران بھی صالح مل جائیں گے۔
(وماتوفیقی الاباللہ)
 

تازہ ترین خبریں

عمران خان کااستعفیٰ اور نئے الیکشن۔۔۔۔بڑوں نے مل بیٹھ کر بڑا مطالبہ کردیا۔۔ تحریک انصاف والوں نے سر پکڑ لیے

عمران خان کااستعفیٰ اور نئے الیکشن۔۔۔۔بڑوں نے مل بیٹھ کر بڑا مطالبہ کردیا۔۔ تحریک انصاف والوں نے سر پکڑ لیے

سابق آئی ایس آئی چیف کی قسمت کا فیصلہ ہوگیا۔۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے بڑاحکم دے دیا

سابق آئی ایس آئی چیف کی قسمت کا فیصلہ ہوگیا۔۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے بڑاحکم دے دیا

سعودی عرب میں موجود غیرملکیوں کیلئے ناقابل یقین خوشخبری

سعودی عرب میں موجود غیرملکیوں کیلئے ناقابل یقین خوشخبری

پارلیمنٹ پر حملے کا خدشہ،ایوان نمائندگان کاہونیوالا اجلاس منسوخ

پارلیمنٹ پر حملے کا خدشہ،ایوان نمائندگان کاہونیوالا اجلاس منسوخ

یہ تو پھر ہونا ہی تھا ،قومی اسمبلی میں 7 ووٹ ضائع ہونے کی اندرونی کہانی بالآخر سامنے آگئی

یہ تو پھر ہونا ہی تھا ،قومی اسمبلی میں 7 ووٹ ضائع ہونے کی اندرونی کہانی بالآخر سامنے آگئی

وفاقی وزیر شبلی فراز پاوری میں مصروف ۔۔ ایسی ویڈیوسامنے آگئی کہ کارکنوں کیلئے یقین کرنامشکل۔دیکھیں ویڈیو

وفاقی وزیر شبلی فراز پاوری میں مصروف ۔۔ ایسی ویڈیوسامنے آگئی کہ کارکنوں کیلئے یقین کرنامشکل۔دیکھیں ویڈیو

یوسف رضاگیلانی کو چیئرمین سینیٹ بننے سے روکنے کیلئے حکومت کیاکرنےوالی ہے؟جانیے تفصیل

یوسف رضاگیلانی کو چیئرمین سینیٹ بننے سے روکنے کیلئے حکومت کیاکرنےوالی ہے؟جانیے تفصیل

 سینیٹ الیکشن :پی ڈی ایم نے بولیاں لگا کر جمہوری اقدار کا جنازہ نکالا،عثمان بزدار

سینیٹ الیکشن :پی ڈی ایم نے بولیاں لگا کر جمہوری اقدار کا جنازہ نکالا،عثمان بزدار

آر یا پار۔۔وزیراعظم عمران خان نے تمام مصروفیات ترک کردیں۔۔کچھ دیر میں کیا کرنےوالےہیں؟جانیے تفصیل

آر یا پار۔۔وزیراعظم عمران خان نے تمام مصروفیات ترک کردیں۔۔کچھ دیر میں کیا کرنےوالےہیں؟جانیے تفصیل

ملک کو مافیا سے نجات دلانےکے مشن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،شہبازگل

ملک کو مافیا سے نجات دلانےکے مشن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،شہبازگل

حکومت مہنگائی کرے گی توان کیخلاف ہی فیصلے آئیں گے ،حمزہ شہباز

حکومت مہنگائی کرے گی توان کیخلاف ہی فیصلے آئیں گے ،حمزہ شہباز

وزیراعظم کیخلاف عدم اعتماد ہوچکا،نیا ڈرامہ کرنے کی بجائے گھر جائیں،رانا ثناء اللہ

وزیراعظم کیخلاف عدم اعتماد ہوچکا،نیا ڈرامہ کرنے کی بجائے گھر جائیں،رانا ثناء اللہ

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا دلیرانہ فیصلہ کیا ،گیڈروں میں ایسی ہمت نہیں،شبلی فراز

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا دلیرانہ فیصلہ کیا ،گیڈروں میں ایسی ہمت نہیں،شبلی فراز

حفیظ شیخ کی شکست:وزیراعظم نے آج اہم اجلاس طلب کرلیا

حفیظ شیخ کی شکست:وزیراعظم نے آج اہم اجلاس طلب کرلیا