01:42 pm
اسرائیل کے قیام کا مقصد اور عرب منصوبہ

اسرائیل کے قیام کا مقصد اور عرب منصوبہ

01:42 pm

(گزشتہ سے پیوستہ)
 اب صورتحال پر ایک بار پھر نظر ڈال لیجیے کہ اسرائیل تو  کی پوزیشن پر واپس جانے کے لیے تیار نہیں ہے مگر سعودی عرب کی قیادت میں عرب ممالک  سے قبل کے متحدہ فلسطین کے موقف سے دستبردار ہو کر اس کے بعد کے منقسم فلسطین تک آگئے ہیں۔ گویا عربوں اور اسرائیل کے درمیان سیاسی جنگ کا مورچہ  سے آگے بڑھ کر  کی کراس لائن پر پہنچ گیا ہے  اور تنازعہ اب اس بات کا رہ گیا ہے کہ عربوں اور اسرائیل کے درمیان مفاہمت اور مصالحت  کی جنگ سے پہلے کی پوزیشن پر ہوگی یا اس کے بعد کی پوزیشن پر۔ اس طرح امریکہ اب اس پوزیشن میں آگیا ہے کہ بیت المقدس کو مسلمانوں یا یہودیوں میں سے کسی ایک کے کنٹرول میں دینے کی فیصلہ کن سیاسی قوت اس کے ہاتھ میں ہے اور وہ حسب موقع دونوں میں سے کسی ایک پر دبائو بڑھا کر اس قضیے کو نمٹا سکتا ہے۔
اس مرحلہ پر اگر مسئلہ کے ایک اور پہلو کو بھی سامنے رکھ لیا جائے تو ہمارے خیال میں امریکی عزائم کو سمجھنے میں زیادہ دقت نہیں رہے گی۔ وہ یہ کہ بیت المقدس پر صرف مسلمانوں اور یہودیوں کا ہی دعویٰ نہیں بلکہ مسیحی امت بھی بیت المقدس پر اسی طرح کے استحقاق کا دعویٰ رکھتی ہے جیسا کہ مسلمانوں اور یہودیوں کا ہے اور بیت المقدس کے ساتھ مسیحیوں کی نہ صرف بڑی عقیدت وابستہ ہے بلکہ ایک طویل عرصہ تک بیت المقدس ان کی تحویل میں بھی رہا ہے۔ حتیٰ کہ مسلمانوں نے حضرت عمرؓ کے دور خلافت میں بیت المقدس کا قبضہ مسیحی امت سے حاصل کیا تھا اور اس کے بعد مسیحیوں نے دوبارہ بیت المقدس پر قبضہ کیا تو سلطان صلاح الدین ایوبی نے ان سے جنگ کر کے بیت المقدس کو پھر واگزار کرایا تھا۔ اس لیے بیت المقدس کے بارے میں حتمی فیصلے کے موقع پر مسیحی امت کے اس دعوے اور دلچسپی کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا بالخصوص ایسی صورت میں کہ مسئلہ کے سیاسی حل کی کنجی بھی کیتھولک عقیدہ رکھنے والی مسیحی حکومت اور قوم کے ہاتھ میں ہے۔ اور کیتھولک فرقہ کے سربراہ پوپ پال ابھی کچھ عرصہ قبل فلسطین اور بیت المقدس کا دورہ کر کے اس دلچسپی کا اظہار بھی کر چکے ہیں۔
چنانچہ ہمارے خیال میں امریکی عزائم اور پروگرام کی عملی شکل اس طرح سامنے آسکتی ہے کہ مسلمانوں، مسیحیوں اور یہودیوں کی مشترکہ کونسل بنا کر بیت المقدس کو ان کی مشترکہ تحویل میں دے دیا جائے اور اسے بین الاقوامی شہر قرار دے کر اس کے انتظامی کنٹرول کے لیے اقوام متحدہ کو آگے کر کے ریموٹ کنٹرول اختیارات خود امریکہ سنبھال لے۔ اس طرح بیت المقدس کا کنٹرول عملی طور پر پھر صلیبی قوتوں (وقت کی سپر پاور) کے ہاتھ میں چلا جائے گا اورا س پر اقوام متحدہ کے تحت مسلمانوں و یہودیوں و مسیحیوں کی مشترکہ مذہبی کونسل کا ظاہری پردہ عالمی رائے عامہ کو مطمئن یا کم از کم خاموش کرنے کے لیے کافی ہوگا۔ لیکن یہ سب باتیں ڈپلومیسی اور سیاست کی سطح کی ہیں جو دونوں حربی قوتوں یعنی اسرائیل اور عرب مجاہدین حماس وغیرہ کے لیے قابل قبول نہیں ہوں گی کیونکہ اسرائیل جس طرح بیت المقدس کو مسلمانوں کی تحویل میں نہیں دیکھ سکتا اسی طرح مسلمانوں، یہودیوں اور مسیحیوں کا مشترکہ کنٹرول بھی اس کے لیے قابل قبول نہیں ہوگا۔ اس لیے کہ یہ سب کچھ اسرائیل کے مقصدِ وجود کے خلاف ہے اور یہودی امت کی صدیوں کی طویل جدوجہد کو اس کے مطلوبہ نتائج سے محروم کر دینے کے مترادف ہے۔ بالکل اسی طرح یہ بات دیندار مسلمانوں اور غیرت مند عربوں کے لیے بھی قطعی طور پر ناقابل قبول ہوگی اور مسلم ممالک کے حکمران کچھ بھی کرتے رہیں مگر مسلم دنیا کے راسخ العقیدہ مسلمان اور دینی حلقوں کے لیے بیت المقدس سے دستبردار ہونا ممکن نہیں ہوگا۔ اس لیے اگر امریکہ وقتی طور پر دبا اور دھونس کے ذریعہ کوئی حل مسلط کر دیتا ہے تو بھی یہ بیت المقدس اور فلسطین کے مسئلہ کا دیرپا حل نہیں ہوگا، مسلمانوں کی طرف سے مزاحمت کی تحریک جاری رہے گی اور جس طرح سلطان صلاح الدین ایوبی نے پون صدی کے بعد بیت المقدس کو صلیبی قبضے سے بالآخر آزاد کرالیا تھا اسی طرح حماس اور دیگر مزاحمتی تحریکوں کی کوکھ سے کوئی اور صلاح الدین ایوبی جنم لے گا جو بیت المقدس پر ایک بار پھر اسلامی پرچم لہرا دے گا، ان شا اللہ تعالیٰ۔

 

تازہ ترین خبریں

 سینیٹ الیکشن :پی ڈی ایم نے بولیاں لگا کر جمہوری اقدار کا جنازہ نکالا،عثمان بزدار

سینیٹ الیکشن :پی ڈی ایم نے بولیاں لگا کر جمہوری اقدار کا جنازہ نکالا،عثمان بزدار

آر یا پار۔۔وزیراعظم عمران خان نے تمام مصروفیات ترک کردیں۔۔کچھ دیر میں کیا کرنےوالےہیں؟جانیے تفصیل

آر یا پار۔۔وزیراعظم عمران خان نے تمام مصروفیات ترک کردیں۔۔کچھ دیر میں کیا کرنےوالےہیں؟جانیے تفصیل

ملک کو مافیا سے نجات دلانےکے مشن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،شہبازگل

ملک کو مافیا سے نجات دلانےکے مشن پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،شہبازگل

حکومت مہنگائی کرے گی توان کیخلاف ہی فیصلے آئیں گے ،حمزہ شہباز

حکومت مہنگائی کرے گی توان کیخلاف ہی فیصلے آئیں گے ،حمزہ شہباز

وزیراعظم کیخلاف عدم اعتماد ہوچکا،نیا ڈرامہ کرنے کی بجائے گھر جائیں،رانا ثناء اللہ

وزیراعظم کیخلاف عدم اعتماد ہوچکا،نیا ڈرامہ کرنے کی بجائے گھر جائیں،رانا ثناء اللہ

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا دلیرانہ فیصلہ کیا ،گیڈروں میں ایسی ہمت نہیں،شبلی فراز

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا دلیرانہ فیصلہ کیا ،گیڈروں میں ایسی ہمت نہیں،شبلی فراز

حفیظ شیخ کی شکست:وزیراعظم نے آج اہم اجلاس طلب کرلیا

حفیظ شیخ کی شکست:وزیراعظم نے آج اہم اجلاس طلب کرلیا

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا جرات مندانہ فیصلہ کیا، فردوس عاشق اعوان

وزیراعظم نے اعتماد کا ووٹ لینے کا جرات مندانہ فیصلہ کیا، فردوس عاشق اعوان

 اپوزیشن کی سیاست ’’حکومت میں آئو اور خوب پیسے کمائو‘‘ ہے،فواد چوہدری

اپوزیشن کی سیاست ’’حکومت میں آئو اور خوب پیسے کمائو‘‘ ہے،فواد چوہدری

فیصل واوڈا نااہل ہونے سے بچ گئے،عدالت سے بڑی خبر آ گئی

فیصل واوڈا نااہل ہونے سے بچ گئے،عدالت سے بڑی خبر آ گئی

پی سی بی کی کھلاڑیوں اور آفیشلز کو کورونا ویکسین لگانے کی پیشکش

پی سی بی کی کھلاڑیوں اور آفیشلز کو کورونا ویکسین لگانے کی پیشکش

غریدہ فاروقی پی ڈی ایم کی کامیابی پر خوشی سے نہال

غریدہ فاروقی پی ڈی ایم کی کامیابی پر خوشی سے نہال

سینیٹ انتخابات میں ہار ۔۔ عمران خان ایوان سےاعتمادکاووٹ لیں گے ۔ شاہ محمود قریشی

سینیٹ انتخابات میں ہار ۔۔ عمران خان ایوان سےاعتمادکاووٹ لیں گے ۔ شاہ محمود قریشی

سینٹ انتخابات میں پی ڈی ایم کے امیدواروں اور یوسف رضا گیلانی کی کامیابی پارلیمنٹ کا عمران نیازی پر عدم اعتماد ہے ۔ اسلم غوری

سینٹ انتخابات میں پی ڈی ایم کے امیدواروں اور یوسف رضا گیلانی کی کامیابی پارلیمنٹ کا عمران نیازی پر عدم اعتماد ہے ۔ اسلم غوری