01:11 pm
 سیاسی دھند

 سیاسی دھند

01:11 pm

سیاسی افق پر چاروں جانب دھند ہے کچھ سجھائی نہیں دے رہا۔ پی ڈی ایم بن گئی اکتوبر سے جلسوں کا آغاز ہونے جارہا ہے۔ نواز شریف کی تقریر نے ایک ہنگامہ برپا کردیا ہے یہ بھی شاید پہلی بار ہوا ہے کہ پنجاب کے کسی لیڈر کو بھی غدار کہا جارہا ہے وگرنہ تو ہمیشہ دیگر صوبوں کے لیڈروں کو غداری کے تمغے دیئے جاتے رہے ہیں کبھی غدار کبھی سکیورٹی رسک کبھی وطن دشمن مگر یہ ٹائیٹل بالعموم دیگر صوبوں کے لیڈروں کے نام رہے۔ یوں تو وطن عزیز میں جمہوریت کے نام پر مختلف ادوار میں حکومتیں بنتی ٹوٹتی رہیں۔ مسلم لیگ کے بطن سے دیگر سیاسی جماعتیں جنم لیتی رہیں اور مسلم لیگ کئی حصوں میں بٹتی رہی مگر جب بھی کسی صاحب اقتدار نے مسلم لیگ کو عقد میں لیا وہی مسلم لیگ اصلی اور محب وطن مسلم لیگ قرار پاتی رہی مگر کسی مسلم لیگ میں آزادی سے لیکر اب تک جمہوریت نہ آسکی سیاسی جماعتوں کی ماں مسلم لیگ  خود ایک جمہوری سیاسی جماعت نہ بن سکی۔
جس کسی نے اپنایا گویا اسی کی خاندانی ملکیت قرار پاتی رہی کچھ ایسا ہی حال دیگر سیاسی جماعتوں کا بھی ہے تقریباً ہر سیاسی جماعت بانیان جماعت کی جاگیر دیگر اثاثوں کی طرح نئی نسل میں منتقل ہوتی رہیں اور ہمارے عوام تو گویا ہمیشہ سے بادشاہت کے فریفتہ رہے ہیں اس لئے نہ کبھی سیاسی ورکرز نے  اجتماعی طور پر کبھی یہ مطالبہ کیا کہ سیاسی جماعت کی قیادت کا فیصلہ  جماعت میں الیکشن کی بنیاد پر ہونا چاہئے اور نہ ہی عوام نے کبھی مطالبہ کیا کہ اگر حکومتیں جمہوری طرز حکومت پر بنانی ہیں تو پہلے ان حکومتوں کا استحقاق کلیم کرنے والی سیاسی پارٹیاں بھی تو جمہوری ہوں۔  ہمارے Jokesلطائف اور ہماری کہانیاں بھی تو ایسے سبق آموز واقعات پر مبنی ہیں جو بچوں کو بچپن سے سنائی جاتی ہیں کہ نمبر دار کا سارا ٹبر بھی مر جائے تو عام آدمی کا بچہ کبھی نمبر دار نہیں بن سکتا۔جب یہ خانوادے اقتدار میں آتے ہیں تو بیوروکریسی‘ عدلیہ‘ پولیس ہر جگہ نامزدگیاں انہی کی صوابدید پر ہوتی ہیں جو وقت کے ساتھ ساتھ افقی سفر طے کرتی رہتی  ہیں یوں ان خانوادوں پر کبھی برا وقت نہیں آتا اور کبھی آ بھی جائے تو بڑی سہولت کے ساتھ انہیں مزید طاقتور بنا کر گزر جاتا ہے۔
یہ مائینڈ سیٹ وقت کے ساتھ ساتھ راسخ  ہوتا رہا ہے اور ہر آنے والی نسل کو منتقل بھی ہوتا رہا ہے کیونکہ کبھی کسی جماعت اور حکومت نے وقت کے بدلتے تقاضوں کے پیش نظر  تعلیم و تربیت پر قطعی طور پر کوئی انویسٹمنٹ نہیں کی اور نہ کوئی توجہ دی گئی بلکہ وقت کے ساتھ  ساتھ تعلیم کو ایک  منافع بخش بزنس کے طور پر پھلنے پھولنے کے بھرپور مواقع فراہم کئے گئے۔ کبھی حیرت ہوتی ہے  جب 14اگست کو اعزازات کی تقسیم کا اعلان ہوتا ہے یوں لگتا ہے وطن عزیز نے ہر شعبے میں اتنی نمایاں ترقی کرلی ہے کہ اب ہماری جامعات‘ تعلیمی ادارے ترقی یافتہ ممالک کے اداروں سے بھی آگے نکل گئے ہیں۔ کبھی ہمارے نوجوان پانی سے گاڑی چلانے کی ٹیکنیک ایجاد کرلیتے ہیں کبھی آئی ٹی میں ہماری نوخیز نسل درجہ کمال پالیتی ہیں مگر پڑوسی جلک تو آئی ٹی ایکسپورٹ سے اربوں کما رہا ہے اور ہم آئی ٹی پارکوں میں سرکاری دفاتر بنا رہے ہیں۔
بات ہورہی تھی غداری کے تمغوں کی جو نواز شریف کی تقریر کے بعد شروع ہوئے اور کچھ ہوا یا نہیں حکومت کو ایک فائدہ تو ہوا کہ اب نہ کوئی مہنگائی کا رونا روتا ہے نہ کسی کو چینی 110روپے کلو آٹا70 روپے ٹماٹر اور سبزیوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرتی نہیں دکھائی دیتیں اب چرچے ہیں تو بس غداری کے۔ کسی نے شاہدرہ تھانے میں نواز شریف‘ فاروق حیدر وزیراعظم آزاد جموں وکشمیر اور دیگر لوگوں کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرادیا۔ حکومتی وزراء اور عمائدین نے فی الوقت اس سے لاتعلقی کا اظہار کیا مگر کہتے سب ہیں کہ غدار ہے۔ نواز شریف  اسٹیبلشمنٹ پر تنقید کررہا ہے اور بدقسمتی سے یوں لگتا ہے  کہ حکومت اسٹیبلشمنٹ کا  دفاع نہیں کرپارہی اس بات کا احساس اب شاید اسٹیبلشمنٹ کو بھی ہے کہ اپنا دفاع کرنے کیلئے انہیں خود کچھ کرنا ہوگا۔ 
حکومت نے غدار قرار دے کر دیگر ایشوز کو سائیڈ لائن کردیا اور اب نواز شریف کی طلبی کیلئے اخباروں میں بھی اشتہار دیا جارہا ہے۔ ٹی وی ٹاک شوز اب اسی ایشوز پر چلیں گے کہ کیسے واپس لایاجائیگا۔ اسٹیبلشمنٹ کے خلاف جو باتیں نواز شریف کی تقریر میں تھیں ان کے جواب اور ردعمل کہیں سے نہیں آرہا۔ یہ شاید انہیں خود کرنا پڑے گا اگرچہ  یوں لگتا ہے بعض سیاسی رہنما اپنی خدمات بھی پیش کررہے ہونگے جن پر یقیناً غور بھی ہورہا ہوگا۔
 اس سارے سیاسی منظر میں بظاہر یوں لگتا ہے  حکومت کے پاس  کوئی واضح اور جامع سٹریٹیجی نہیں کہ وہ  حالات کا رخ موڑ سکے۔ سرحد پار بھارت اپنے اندرونی مسائل اور چین کے ساتھ سرحدی تنازع کو لیکر پریشان لگ رہا ہے آئے روز ایل او سی کی خلاف ورزیاں کررہا ہے اس محاذ کو سنبھالنا فوج کی اولین ترجیح ہے جس پر وہ بھرپور توجہ دے رہی ہے۔ دہشت گردی  کے خلاف ایک طویل جنگ میں روزانہ شہادتیں ہ ورہی ہیں فوج کو اس وقت پوری قوم اور حکومت اور سیاسی جماعتوں کی بھرپور حمایت اور معاونت درکار ہے۔ نواز شریف کے بیانیے کو عوامی حمایت تو کبھی نہیں مل سکتی مگر اس بیانیے کو مسترد کرنے کا بھی کسی طور اہتمام ہونا ضروری ہے۔ اور اس کے لئے اداروں کو بھی سٹریٹیجی بنانا ہوگی یہ غداری کے لیبل کا کھیل اب ختم ہونا چاہئے۔
 

تازہ ترین خبریں

وطن عزیز کے دفاع کیلئے ہر لمحہ تیار ہیں،سربراہ پاک فضائیہ

وطن عزیز کے دفاع کیلئے ہر لمحہ تیار ہیں،سربراہ پاک فضائیہ

ہمارے شاہینوں نے 27فروری کو دشمن کو دن میں تارے دکھائے،شبلی فراز

ہمارے شاہینوں نے 27فروری کو دشمن کو دن میں تارے دکھائے،شبلی فراز

سینیٹ الیکشن: شہباز شریف کو لاہور میں ووٹ کاسٹ کرنےکی سہولت نہ دینے کا فیصلہ

سینیٹ الیکشن: شہباز شریف کو لاہور میں ووٹ کاسٹ کرنےکی سہولت نہ دینے کا فیصلہ

2سال مکمل ہونے پر وزیراعظم کا اہم ترین بیان سامنے آگیا

2سال مکمل ہونے پر وزیراعظم کا اہم ترین بیان سامنے آگیا

حکومت کا 103سال پرانے ایئر پورٹ کو ختم کرنے کا فیصلہ۔۔وجہ کیا بنی ہے؟جانیے تفصیل

حکومت کا 103سال پرانے ایئر پورٹ کو ختم کرنے کا فیصلہ۔۔وجہ کیا بنی ہے؟جانیے تفصیل

اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ کو معطل کر دیا گیا

اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ کو معطل کر دیا گیا

جاتی سردی پھر لوٹ آئی ۔۔۔۔ بارشیں ہی بارشیں !محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی خوشخبری سنادی

جاتی سردی پھر لوٹ آئی ۔۔۔۔ بارشیں ہی بارشیں !محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی خوشخبری سنادی

جوبزدل ہے وہ ہٹ جائے ،جو شیر ہے وہ ڈٹ جائے۔۔۔ مریم نواز کہاں جارہی ہیں ،ن لیگیوں کیلئے بڑی خبر آگئی

جوبزدل ہے وہ ہٹ جائے ،جو شیر ہے وہ ڈٹ جائے۔۔۔ مریم نواز کہاں جارہی ہیں ،ن لیگیوں کیلئے بڑی خبر آگئی

انگین آلتان کے ساتھ فراڈ کرنیوالا ملزم کاشف ضمیر نئی مشکل میں پھنس گیا

انگین آلتان کے ساتھ فراڈ کرنیوالا ملزم کاشف ضمیر نئی مشکل میں پھنس گیا

بزدار حکومت کاغربت کے خاتمے کی جانب ایک اور اہم قدم

بزدار حکومت کاغربت کے خاتمے کی جانب ایک اور اہم قدم

پاک فوج کی دلیری سے بہت متاثر ہوا،ابھی نندن

پاک فوج کی دلیری سے بہت متاثر ہوا،ابھی نندن

’’آپریشن سوئفٹ ریٹارٹ‘‘ کو دوسال مکمل:وقت آیا تو ہر چیلنج کا جواب بھرپور طریقے سے دیا جائیگا،پاک فوج

’’آپریشن سوئفٹ ریٹارٹ‘‘ کو دوسال مکمل:وقت آیا تو ہر چیلنج کا جواب بھرپور طریقے سے دیا جائیگا،پاک فوج

پاکستان: کوروناوائرس سے مزید33افراد جاں بحق

پاکستان: کوروناوائرس سے مزید33افراد جاں بحق

 پلوشہ خان کے گھرپرنامعلوم افرادکاحملہ

پلوشہ خان کے گھرپرنامعلوم افرادکاحملہ