01:17 pm
نوازشریف، اشتہارشروع،ڈھول بجے گا

نوازشریف، اشتہارشروع،ڈھول بجے گا

01:17 pm

٭نوازشریف، طلبی کے اشتہار، 30 دن کی مہلتO لاہور میں مولانا فضل الرحمان کی ’جاتی عمرا‘ میں مریم نواز سے ملاقات، ’’مقدمات کو جوتے کی نوک سے اُڑا دیں گے‘‘ فضل الرحمنO امین فہیم کے بیٹے سے ڈیڑھ کروڑ کی وصولی، نیب نے رہا کر دیاO بھارت: چار مسلمانوں پر بغاوت کیس، دفعہ O...124-A گوجرانوالہ: ن لیگ، کارنر میٹنگ، پولیس کا چھاپہ، لائوڈ سپیکر لے گئیO مہنگائی کے سوا باقی سب ٹھیک ہے: وزیراطلاعاتO مولانا فضل الرحمان کے اعزاز میں مریم نواز کا عشائیہ: دیسی مرغ کڑاہی، مٹن کڑاہی، سٹیم روسٹ، چکن کباب، مٹن پلائو، چکن سجی، پالک گوشت، نان، پانچ قسم کے حلوے، کھیر، آئس کریم، فیرنی، سلاد ڈرنکس، چائےO شاہدرہ بغاوت کیس، ن لیگی ’ملزم‘ گرفتاری دینے گئے، مدعی اور پولیس بھاگ گئے۔
٭اشتہاری کارروائی شروع ہو گئی۔ لندن میں نوازشریف نے گرفتاری کے وارنٹ وصول نہ کئے۔ ہائی کمیشن کی تصدیق پر اسلام آباد ہائی کورٹ نے ’ملزم‘ کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی شروع کر دی۔ انگریزی و اُردو کے دو اخبارات میں اشتہار، ملزم کے گھروں پر اشتہار چسپاں ہوں گے، باہر ڈھول بجا کر منادی ہو گی۔ 30 روز کے اندر ’ملزم‘ پیش نہ ہو تو ہمیشہ کے لئے مفرور اور اشتہاری قرار دے دیا جائے گا۔ نوازشریف کی عبوری ضمانت پہلے ہی ختم ہو چکی ہے۔ حکومت دو بار برطانوی حکومت سے ’ملزم‘ کو واپس بھیجنے کا مطالبہ کر چکی ہے مگرکامیابی نہیں ہوئی۔ ایسے مطالبات الطاف حسین، اسحاق ڈار اور بیٹوں، نوازشریف کے بیٹوں وغیرہ کی واپسی کے لئے بھی بار بار کئے جا چکے ہیں مگر برطانیہ کے پیچیدہ قوانین آڑے آ جاتے ہیں۔ برطانیہ کے ساتھ مجرموں کے تبادلے کا کوئی معاہدہ بھی موجود نہیں۔ وہاں پاک اور بھارت سمیت متعدد ممالک کے بے شمار مفرور افراد نے پناہ لے رکھی ہے۔ کئی برس پہلے بھارت کا ایک ارب پتی صنعت کار کھربوں کی جعل سازی کے بعد لندن بھاگ گیا۔ بھارت کی مسلسل کوششوں کے باوجود واپس نہ لایا جا سکا۔ الطاف حسین تقریباً 29 برسوں سے لندن میں بیٹھا ہوا ہے، پاکستان کے خلاف کھلے بیانات دے رہا ہے، بھارت سے مدد مانگ رہا ہے مگر پاکستان میں واپس نہیں لایا جا سکا۔ تاہم نوازشریف کا کیس مختلف ہے۔ الطاف حسین کے خلاف سنگین مقدمات ہیں مگر وہ ابھی تک سزا یافتہ نہیں۔ اسے سیاسی پناہ حاصل ہے۔ نوازشریف باقاعدہ ملک کی عدالت سے سزا یافتہ ہے اور جیل سے عارضی رہائی پر مفرور اور اشتہاری قرار دیا جا چکا ہے۔ ملزم جب بھی پاکستان آئے گا، اسے ہوائی اڈے پر گرفتار کر کے سیدھا جیل میں پہنچا دیا جائے گا! وہ لندن میں کھلے عام گھوم پھر رہا ہے، وہ پاکستان کی جیل میں جانا کیوں پسند کرے گا؟ ایک اہم بات کہ پاکستان میں نوازشریف کی ذاتی ملکیت میں مری میں ایک گھر، اور مختلف مقامات پر چند سو ایکڑ اراضی ہے۔ 300 کنال پر واقع جاتی عمرا کی عمارت اور ہزاروں ایکڑ اراضی والدہ اور بیٹی مریم کے نام پر ہے۔
٭اپوزیشن کے اتحاد ’پی ڈی ایم‘ کی حکومت کے خلاف سرگرمیاں عملی طور پر گزشتہ روز جاتی عمرا لاہور میں مولانا فضل الرحمان کے اعزاز میں مریم نواز کے عشائیہ سے شروع ہو گئیں۔ دونوں کے بیانات کی تفصیل اخبارات میں موجود ہے۔ خاص طور پر مولانا فضل الرحمان کا بیان کہ ’’مقدمات کو جوتے کی نوک سے اڑا دیں گے‘‘ اس سے پہلے ان کے ساتھی اکرم درانی کا ایک بیان نمایاں شائع ہوا تھا کہ’’ہمارے اسلام آباد کی طرف آزادی مارچ میں کسی نے رکاوٹ ڈالی تو ہم اسے گاجر مولی کی طرح کاٹ دیں گے‘‘ خیر گزری کہ کسی گاجر مولی نے رکاوٹ نہ ڈالی۔ آزادی مارچ اسلام آباد میں چند روز قیام کے بعد خود ہی واپس چلا گیا۔ آصف زرداری نے کہا کہ ’’میں جرنیلوں کی اینٹ سے اینٹ بجا دوں گا! اب تک تین بڑے کیسوں میں فرد جرم عائد ہوچکی ہے، عدالتوں میں متعدد پیشیاں ہو چکی ہیں۔ ضمانت پر چل رہے ہیں۔ خود مریم نواز ضمانت پر جیل سے باہر آئی ہیں۔ کالم کی تحریر کے وقت خواجہ آصف اور کیپٹن صفدر نیب میں پیش ہونے والے تھے۔ شہباز شریف پہلے ہی زیرحراست ہیں!
٭محترم قارئین! آیئے ذرا ٹھنڈے ذہن کے ساتھ ملک میںآئندہ سامنے آنے والے امکانات کا جائزہ لیں۔ پہلی بات یہ کہ اپوزیشن کی تحریک جمہوریت کے اتحاد میں گیا رہ پارٹیاں شامل ہیں۔ ان میں سے آٹھ پارٹیوں کے سرکردہ رہنمائوں کے خلاف کسی نہ کسی سطح پر عدالتی یا تحقیقاتی کارروائیاں شروع ہیں۔ ان میں سے بیشتر کی جلد یا ذرا دیرسے گرفتاریاں ہو سکتی ہیں۔ اس سے اپوزیشن کی سرگرمیاں متاثر ہوسکتی ہیں۔ دوسری بات کہ دنیا بھر میں پھر سے کرونا بہت ابھر آیا ہے۔ برطانیہ، سپین، امریکہ، فرانس، بھارت اور بہت سے دوسرے ملکوں میں دوبارہ لاک ڈائون نافذ ہو رہا ہے۔ پاکستان میں کچھ عرصہ سے روزانہ اموات کی تعداد سات آٹھ سے نیچے (ایک بار صِفر!) ہو گئی تھی اب 12 سے اوپر نکلنے لگی ہے۔ عالمی ادارہ صحت اور پاکستان کی وزارت صحت (صحت کا کوئی وزیر ہی نہیں) کے مطابق اگلے چند روز میں یہاں کرونا پھر سے شدت اختیار کر سکتا ہے۔ خدانخواستہ ایسا ہوا اور ملک بھر میں پھر سے لاک ڈائون شروع ہو گیا تو اپوزیشن کا ’’آزادی مارچ‘‘ بہت متاثر ہو سکتا ہے۔ تیسرا مسئلہ! ماضی میں اپوزیشن کے جلسے جلوس اس لئے بہت زور دار اور کامیاب ہوا کرتے تھے کہ انہیں کچھ دیر کے وقفوں سے صرف بڑے شہروں تک محدود رکھا جاتا تھا۔ اب مریم نواز نے ن لیگ کے 17 دنوں میں ملک بھر کے 12 چھوٹے بڑے شہروں میں جلسے جلوسوں کا اعلان کیا ہے۔ یہی صورت حال اپوزیشن کے اتحاد کے جلوسوں اور جلسوں کی ہے۔ مریم نواز بہت صحت مند اور حوصلہ مند سہی پھر بھی کیا ایک خاتون کے لئے یکے بعد دیگر 12 جلسوں میںشرکت بلکہ صدارت اوراتنی ہی تقریریں ممکن ہو سکیں گی؟؟ چوتھی بات کہ بارہ شہروں میں سکیورٹی کے انتظامات کیسے ہو سکیں گے؟ پولیس کے پاس اتنی نفری، اتنے وسائل تو نہیں ہوں گے! وہ تو ابھی سے اپوزیشن کے پیچھے پڑ گئی ہے۔ گوجرانوالہ میں 16 اکتوبر کو ن لیگ کے جلسے کے لئے لیگی رہنما خرم دستگیر نے کارنر میٹنگ کی، پولیس نے حملہ کر دیا اور لائوڈ سپیکر اٹھا کرلے گئی!؟؟ بہت سی باتیں اور بھی ہیں۔ ایک آخری بات جسکی طرف ابھی کسی کا دھیان نہیں گیا کہ بالفرض میاں نوازشریف اچانک واپس آ جاتے ہیں تو سیاست کا رخ اک دم پلٹ سکتا ہے۔ کچھ دوسری باتیں:
٭دنیا بھر کا انوکھا مقدمہ! شاہدرہ لاہور کے تھانے میں ایک شخص ’بدر رشید‘ نے میاں نوازشریف اور ن لیگ کے 40 ارکان کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرایا۔ ان افراد میں سے دو عطاء اللہ تارڑ اور محمد زبیر ازخود گرفتاری کے لئے تھانہ میں چلے گئے تو مدعی بدر رشید اور تفتیشی پولیس افسر بھاگ گئے۔ ایس ایچ او نے گرفتاری سے انکار کر دیا!! ایک خبر کہ روپوش مدعی نے کہیں سے پولیس سے اپیل کی ہے کہ اس کی جان کو خطرہ ہے اسے سکیورٹی دی جائے۔ مزید یہ کہ ن لیگ اور تحریک انصاف، دونوں نے اس شخص سے لاتعلقی کا اعلان کر دیا ہے!
٭عین اس روز جب شاہدرہ تھانہ میں نوازشریف کے خلاف تعزیرات پاکستان کی دفعہ 124-A کے تحت بغاوت کا مقدمہ درج ہوا، عین اسی وقت بھارت کے شہر کانپور (یو پی) میں پولیس نے چار مسلمان نوجوانوں کے خلاف ’تعزیرات ہند‘ کی دفعہ 124-A کے تحت بغاوت کا مقدمہ درج کر لیا (دونوں ملکوں میں 184 سالہ پرانے یکساں قوانین رائج چلے آ رہے ہیں) کیسی یک جہتی ہے؟
٭بھارت میں بھی جعلی یونیورسٹیوں اور جعلی ڈگریوں کا کاروبار عروج پر ہے۔ گزشتہ روز  بھارت کے یونیورسٹیوں کے گرانٹ کمیشن نے ملک بھر میں ایسی 24 یونیورسٹیوں اور ان کی ڈگریوں کو جعلی اور غیر قانونی قرار دے دیا۔ ان میںمیڈیکل اورانجینئرنگ کی ’یونیورسٹیاں‘ بھی شامل ہیں۔
٭پیپلزپارٹی کے مرحوم سرکردہ رہنما امین فہیم کے چھوٹے بیٹے اور سندھ کے موجودہ وزیر جمیل الرحمان کے بھائی جلیل الرحمان سے نیب نے پلی بار گیننگ کی، کرپشن کی ڈیڑھ کروڑ رقم واپس لے کر اسے رہا کر دیا۔ وہ 10 سال تک کسی قسم کے انتخابات میں حصہ نہیں لے سکے گا! پلی بار گیننگ عجیب مضحکہ خیز غیر قانونی قانون ہے۔ صرف رقم واپس ہوئی، جرم کی کوئی سزا نہیں دی گئی اور مجرم رہا!!
٭وزیراطلاعات: حکومت کے سارے کام مثبت ہیں، بس مہنگائی زیادہ ہے، یعنی گھوڑا بہت اچھا ہے، بس ذرا سا مر گیا ہے!

تازہ ترین خبریں

حکومت اور اپوزیشن ایک پلیٹ فارم پر ۔۔۔ جمعہ کے دن کیا ہونے جارہا ہے؟ حیرت انگیز خبر 

حکومت اور اپوزیشن ایک پلیٹ فارم پر ۔۔۔ جمعہ کے دن کیا ہونے جارہا ہے؟ حیرت انگیز خبر 

علامہ اقبال خصوصی اقتصادی زون میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری۔۔عاصم سلیم باجوہ نے خوشخبری سنادی 

علامہ اقبال خصوصی اقتصادی زون میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری۔۔عاصم سلیم باجوہ نے خوشخبری سنادی 

راولپنڈی رنگ روڈ سکینڈل کی انکوائری ،وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ڈی جی اینٹی کرپشن کو سونپ دی گئی

راولپنڈی رنگ روڈ سکینڈل کی انکوائری ،وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ڈی جی اینٹی کرپشن کو سونپ دی گئی

فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف قومی اسمبلی میں متفقہ قرارداد منظور

فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف قومی اسمبلی میں متفقہ قرارداد منظور

ایدھی فاونڈیشن نے ایک مرتبہ سب کے دل جیت لئے ۔۔ ایسا کارنامہ سرانجام دیا کہ سب حیران ہوگئے

ایدھی فاونڈیشن نے ایک مرتبہ سب کے دل جیت لئے ۔۔ ایسا کارنامہ سرانجام دیا کہ سب حیران ہوگئے

کراچی، لانڈھی لیبر اسکوائرکے قریب لگنے والی آگ کی شدت میں اضافہ۔۔۔ نْقصانات کا خدشہ

کراچی، لانڈھی لیبر اسکوائرکے قریب لگنے والی آگ کی شدت میں اضافہ۔۔۔ نْقصانات کا خدشہ

اسلام آباد کے باسیوں کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔شہریوں میں کورونا ویکسی نیشن مہم کیلئے ہنگامی پلان تیار کرلیا گیا

اسلام آباد کے باسیوں کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔شہریوں میں کورونا ویکسی نیشن مہم کیلئے ہنگامی پلان تیار کرلیا گیا

یورپی یونین کی سفیر آندرولا کمینہرا کی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات 

یورپی یونین کی سفیر آندرولا کمینہرا کی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات 

اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں پر بربریت ۔۔۔ صدر پاکستان بھی میدان میں آگئے 

اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں پر بربریت ۔۔۔ صدر پاکستان بھی میدان میں آگئے 

ایک مرتبہ پھر لاک ڈاون ۔۔۔۔ شہری تیار کرلیں ۔۔۔ کورونا کے وار ختم نہیں ہونے والے

ایک مرتبہ پھر لاک ڈاون ۔۔۔۔ شہری تیار کرلیں ۔۔۔ کورونا کے وار ختم نہیں ہونے والے

1948سےاسرائیلی فوج فلسطینیوں پرظلم کررہی ہے ۔نازی جرمنی سے بھی زیادہ گھنانے جرائم آج اسرائیل کر رہا ہے۔شہباز شریف 

1948سےاسرائیلی فوج فلسطینیوں پرظلم کررہی ہے ۔نازی جرمنی سے بھی زیادہ گھنانے جرائم آج اسرائیل کر رہا ہے۔شہباز شریف 

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا اپنے ترک ہم منصب مصطفیٰ سینتوپ سے ٹیلی فونک رابطہ 

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا اپنے ترک ہم منصب مصطفیٰ سینتوپ سے ٹیلی فونک رابطہ 

 حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی ۔۔۔۔۔ دو اہم سیاسی رہنما کیا کرنے جارہے ہیں ؟؟

 حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی ۔۔۔۔۔ دو اہم سیاسی رہنما کیا کرنے جارہے ہیں ؟؟

وزیراعظم کو جمعہ کو کیا کرنے جارہے ہیں ؟؟ حکومتی رہنماؤں اور ترجمانوں کا اجلاس ۔۔۔ اندرونی کہانی سامنے آگئی

وزیراعظم کو جمعہ کو کیا کرنے جارہے ہیں ؟؟ حکومتی رہنماؤں اور ترجمانوں کا اجلاس ۔۔۔ اندرونی کہانی سامنے آگئی