11:33 am
عالم اسلام کاایک اورسانحہ

عالم اسلام کاایک اورسانحہ

11:33 am

یوں تودنیاٹرمپ کے متحدہ عرب امارات، بحرین اوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ طے پانے اورمذاکرات میں ثالث کاکردارادا کرکے اپنے آئندہ صدارتی انتخاب کیلئے
یوں تودنیاٹرمپ کے متحدہ عرب امارات، بحرین اوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ طے پانے اورمذاکرات میں ثالث کاکردارادا کرکے اپنے آئندہ صدارتی انتخاب کیلئے بھی راہ ہموارکی ہے اوراب اس معاہدے کے نتیجے میں دونوں ملکوں میں امن معاہدے کی راہ ہموار ہوئی ہے۔اب اس کو آئندہ ہفتوں اورمہینوں کے دوران میں مکمل کیاجائے گا۔اس معاہدہ کی خبرسے عرب دنیااورخود امریکامیں بھی ایک لہردوڑگئی ہے اوربہت سے لوگ ہنوزحیرت زدہ ہیں کہ یہ سب کیوںکرممکن ہوا۔یہ اس وقت ہی کیوں ہواہے؟ یہ ڈیل کتنے عرصے سے پک رہی تھی اوراس کے کیامضمرات ہوں گے؟ماضی میں امن کیلئے کاوشوں،بشمول 1992ء میں میڈرڈ کانفرنس، 1990ء کے عشرے میں کیمپ ڈیوڈ معاہدوں کے عمل اوراسرائیل کے مصر،اردن اورتنظیم آزادیِ فلسطین(پی ایل او)کے ساتھ طے شدہ معاہدوں اورسمجھوتوں کی طرح معاہدہ ابراہیم کیلئے مذاکرات عوام کی نظروں میں نہیں ہوئے ہیں اوریہ میڈیاکی بھی اسکروٹنی کے بغیرہوئے ہیں۔بظاہریہ لگتاہے کہ یہ مذاکرات ابھی ہوئے ہیں اورٹرمپ اور وائٹ ہائوس میں ان کی ٹیم نے فوری طورپراس معاہدے کی نقاب کشائی کردی ہے۔
تاہم مجھے اس معاہدے کی خبرسے کوئی تعجب نہیں ہواکیونکہ بالخصوص سعودی عرب،یواے ای اوردیگر خلیجی عرب ریاستوں اوراسرائیل کے درمیان ڈیل کی ایک طویل تاریخ ہے اوراس کے زیادہ وسیع ترپہلو اورمعاہدے پردستخطوں کے بعد باری باری انکشاف ہوگاکہ اسرائیل اوریواے ای کے درمیان ٹرمپ کے حلقے میں یہ آئیڈیاکیسے پروان چڑھااوراس پرکتنے عرصے سے کام ہورہاتھا؟اس سلسلے میں اپنے کئی مضامین میں لکھ چکاہوں اورمیرے قارئین یقیناًاس سے بخوبی واقف ہیں۔ ٹرمپ کے ناقدین نے یہ عاجلانہ دعویٰ کیاہے کہ انہوں نے اس معاہدے اوراس کے اعلان میں عجلت کامظاہرہ کیاہے۔انہوں نے دراصل اس معاہدے کے ذریعے ایک طرح سے امریکہ  میں نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخابات سے قبل حمایت حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔وہ یہ خیال کرتے ہیں کہ ٹرمپ نے راتوں رات ہی اس کاحکم دے دیاتھا لیکن یہ درست نہیں۔
ٹرمپ کے خارجہ پالیسی برائے مشرقِ وسطیٰ کے ایک مشیرکے مطابق پانچ سال قبل ٹرمپ ٹاورمیں ایک خصوصی ملاقات میں یواے ای کی طرف اشارہ کرکے ایک نئے عرب،اسرائیل امن معاہدے کے قابل عمل ہونے کے بارے میں پوچھاتھا’’کیاوہ اسرائیل کے ساتھ کسی ممکنہ امن ڈیل کاامیدوارہو سکتاہے‘‘ گویاٹرمپ اس کے بارے میں برسوں سے سوچ رہا تھااوروہ اس ڈیل کاخالق بننا چاہتاتھا۔ 2016ء میں صدارتی انتخاب کیلئے مہم کے دوران ٹرمپ نے ایسی کسی ڈیل کی پیشگوئی کی تھی۔اس نے ستمبر2016ء میں نیتن یاہوسے ملاقات کی تھی۔صدرمنتخب ہونے کے بعدٹرمپ نے یواے ای کے ولی عہد شیخ محمدبن زیدالنہیان سے بھی ملاقات کی تھی۔یہ کوئی پانچ سال پرانی بات ہے۔
اسرائیلی ربع صدی قبل اردن کے ساتھ امن معاہدہ پردستخط کرنے کے بعدسے کسی اورملک سے بھی معاہدہ طے کرنے کی تاک میں تھے۔اہم ذرائع کے مطابق جہاں تک یواے ای کی قیادت کاتعلق ہے،شیخ محمداوران کے بھائی امارات کے وزیربرائے خارجہ اموراوربین الاقوامی ترقی شیخ عبداللہ بن زید نے 2016ء میں عندیہ دیاتھاکہ وہ اسرائیل کے ساتھ ایسی کسی ڈیل کے بارے میں سوچ رہے ہیں لیکن وہ فلسطینیوں کوبھی ملحوظ رکھیں گے۔اس معاہدہ کی جڑبنیادتوپرانی ہے لیکن اس کاآئیڈیابتدریج پروان چڑھا ہے۔امریکہ میں اس کی شرائط توقع سے کہیں زیادہ کم وقت میں طے پائی ہیں۔
ریاض سربراہ اجلاس میں شرکت کے بعد 2017ء میں ٹرمپ کا اس طرح کی ڈیل کے بارے میں منصوبہ طے پاچکاتھاجس کیلئے باقی ماندہ کام اس نے اپنے یہودی نژادداماد جیرالڈ کوسونپاجو کہ سعودی ولی عہدمحمدبن سلمان کے ذاتی دوست ہیں اورسعودی عرب میں اقتدارکے راستے میں خطرہ بننے والے تمام افرادکی گرفتاری اوران سے پانچ سوبلین ڈالرکی وصولی کی مدمیں گرفتاری کا مشورہ دینے کی وجہ سے کافی شہرت بھی رکھتے ہیں۔
وائٹ ہائوس میں اپنی آمدکے فوری بعدٹرمپ نے متعددعرب ممالک کے لیڈروں سے بات چیت کاایک تیزرفتارسلسلہ شروع کیاتھا۔ ان میں مصر،سعودی عرب، یواے ای،بحرین اوراردن کے لیڈرشامل تھے۔ان سے ملاقاتوں کامقصد ایک عرب اتحادکی تشکیل تھا۔ خارجہ پالیسی کی ایک مقصدی مہم کے نتیجے میں یہ اتحاد تشکیل پایاتھا۔اس کامقصداپنے اگلے انتخاب میں کامیابی کیلئے عربوں اوراسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات کے عمل کوآگے بڑھاناتھا۔گویایہ ثابت ہواکہ امریکی صدرسے آج جوکچھ سناگیاہے،اس پر برسوں سے کام جاری تھا۔اسرائیلی اوراماراتی دونوں ہی یقینی طورپراس تاریخی راستے پرچلنے کے مشتاق تھے لیکن اس کیلئے انہیں امریکہ کی اسپانسرشپ درکارتھی۔
سوال یہ ہے کہ اس معاہدہ میں تاخیرکیوں ہوئی ہے؟یہ2020ء کے موسم گرمامیں کیوں طے پایاہے اور2017ء کے موسم بہارمیں کیوں نہیں جبکہ فریقین توانہی شرائط پرتیاربیٹھے تھے؟جب صدرٹرمپ نے مئی2017ء میں ریاض میں50سے زیادہ عرب اورمسلم ممالک کے لیڈروں سے خطاب کیاتھاتوانہوں نے ان کی دہشت گردی اورانتہاپسندی کے خلاف لڑنے اور عرب اسرائیل تنازع کے حل کی غرض سے آگے بڑھنے اورامن معاہدوں کیلئے حوصلہ افزائی کی تھی۔اس وقت عرب اتحادیوں کی جانب سے اسی سال موسم گرمامیں ڈیل کیلئے کسی اقدام کی توقع کی گئی تھی لیکن چندلوگوں ہی نے یہ پیشگوئی کی تھی کہ سابق صدراوباما کے دورکی افسر شاہی ٹرمپ انتظامیہ کے تحت بھی کام کررہی تھی۔اس نے نہ صرف وائٹ ہائوس کوتوازن سے دوررکھاتھااورقومی سلامتی پر تندو تیز تحقیقات کی تھیں بلکہ خطے میں ٹرمپ کے عرب اتحادیوں کومیڈیاکے ذریعے بے توقیرکرنے کی کوشش بھی کی تھی۔وائٹ ہائوس اورکانگریس میں اس کے اتحادیوں کوان نام نہاد تحقیقات اورمواخذے کی مہم کی دلدل سے باہرنکلنے میں قریب قریب تین سال لگے ہیں۔اس کے بعدچھ ماہ کورونا وائرس کی وباء کی نذرہوگئے ہیں۔ان تمام تر تاخیری وجوہات کے باوجودامن معاہدے کااعلان ہوچکاہے اوراب یہ خود اپنی زندگی جی رہاہے۔
(جاری ہے)
 

تازہ ترین خبریں

پاکستانیوں کیلئے خوشخبری ، سرکاری چھٹی کااعلان کر دیا گیا

پاکستانیوں کیلئے خوشخبری ، سرکاری چھٹی کااعلان کر دیا گیا

راولپنڈی میں ایک لڑکی لاپتہ ہوئی ، بعد میں وہ کس حالت میں کہاں سے برآمد ہوئی ؟ پاکستانی سناٹے میں آگئے

راولپنڈی میں ایک لڑکی لاپتہ ہوئی ، بعد میں وہ کس حالت میں کہاں سے برآمد ہوئی ؟ پاکستانی سناٹے میں آگئے

تمام پاکستانیوں کا انتظار ختم ، 12ربیع الاول کو کون سااہم ترین نوٹیفیکیشن جا ری ہونے جا رہا ہے ؟ بڑی بریکنگ نیوز

تمام پاکستانیوں کا انتظار ختم ، 12ربیع الاول کو کون سااہم ترین نوٹیفیکیشن جا ری ہونے جا رہا ہے ؟ بڑی بریکنگ نیوز

بجلی کے بل چاہیں تو قسطوں میں ادا کردیں ، حکومت نے غریب عوام کی سن لی ، بڑا ریلیف دیدیا

بجلی کے بل چاہیں تو قسطوں میں ادا کردیں ، حکومت نے غریب عوام کی سن لی ، بڑا ریلیف دیدیا

راولپنڈی میں سیکیورٹی گارڈ نے ایک خاتون کے کپڑے پھاڑے اور شرمناک کام کرتا رہا ، لڑکی پوری رات سڑک کے بیچ بیٹھی روتی رہی؟ ویڈیو لنک میں 

راولپنڈی میں سیکیورٹی گارڈ نے ایک خاتون کے کپڑے پھاڑے اور شرمناک کام کرتا رہا ، لڑکی پوری رات سڑک کے بیچ بیٹھی روتی رہی؟ ویڈیو لنک میں 

زرتاج گل کے شوہر کو دل کا دورہ ، انتہائی نازک حالت میں ہسپتال لایا گیا مگر ۔۔۔۔ افسوسناک خبر آگئی

زرتاج گل کے شوہر کو دل کا دورہ ، انتہائی نازک حالت میں ہسپتال لایا گیا مگر ۔۔۔۔ افسوسناک خبر آگئی

عمران خان کو نقصان پہنچانے کیلئے مجھے کس نے مہرے کی طرح استعمال کیا۔۔ جمائما خان نے بڑا انکشاف کر دیا، پوری پاکستانی قوم ہکا بکا

عمران خان کو نقصان پہنچانے کیلئے مجھے کس نے مہرے کی طرح استعمال کیا۔۔ جمائما خان نے بڑا انکشاف کر دیا، پوری پاکستانی قوم ہکا بکا

دو شہروں کا فاصلہ گھنٹوں کی جگہ منٹوں میں ،پاکستان میں4لین پر مشتمل نئی عالی شان اموٹر وے بنانے کی تیاریاں ، منظوری دیدی گئی

دو شہروں کا فاصلہ گھنٹوں کی جگہ منٹوں میں ،پاکستان میں4لین پر مشتمل نئی عالی شان اموٹر وے بنانے کی تیاریاں ، منظوری دیدی گئی

دنیا کلے آلودہ ترین شہروں میں پاکستان کا ایک شہر پہلے اور ایک چوتھے نمبر پر ، جانتے ہیں یہ دونوں شہرکون سے ہیں

دنیا کلے آلودہ ترین شہروں میں پاکستان کا ایک شہر پہلے اور ایک چوتھے نمبر پر ، جانتے ہیں یہ دونوں شہرکون سے ہیں

گھروں میں سوئی گیس استعمال کرنے پر پابندی ، پاکستانیوں کو آج کے بعد کیا چیز استعمال کرنی پڑے گی ؟حکومت کا ایک اور بڑا اقدام

گھروں میں سوئی گیس استعمال کرنے پر پابندی ، پاکستانیوں کو آج کے بعد کیا چیز استعمال کرنی پڑے گی ؟حکومت کا ایک اور بڑا اقدام

دنیا کے سب سے گرم ترین علاقوں کے نام سامنے آگئے ،جانتے یہ دونوں شہر کون سے ہیں ؟ پاکستانیوں کیلئے حیران کن خبر

دنیا کے سب سے گرم ترین علاقوں کے نام سامنے آگئے ،جانتے یہ دونوں شہر کون سے ہیں ؟ پاکستانیوں کیلئے حیران کن خبر

اوگرا نے 5 روپے بڑھانے کی سفارش کی تھی مگر غریب پاکستانیوں کے ہمدرد نے پٹرول کی قیمت میں ایک ساتھ کتنے روپے اضافہ کر دیا ؟ عوام کی دھاڑیں  

اوگرا نے 5 روپے بڑھانے کی سفارش کی تھی مگر غریب پاکستانیوں کے ہمدرد نے پٹرول کی قیمت میں ایک ساتھ کتنے روپے اضافہ کر دیا ؟ عوام کی دھاڑیں  

پاکستانیوں کیساتھ اگلے کچھ ہی منٹوں میں کیا کام ہونے والا ہے ؟ جان لیں 

پاکستانیوں کیساتھ اگلے کچھ ہی منٹوں میں کیا کام ہونے والا ہے ؟ جان لیں 

وزیراعظم کا چینی کی ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم

وزیراعظم کا چینی کی ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم