01:15 pm
مکالمہ بین المذاہب کے مختلف دائرے اور اہداف

مکالمہ بین المذاہب کے مختلف دائرے اور اہداف

01:15 pm

(گزشتہ سے پیوستہ )
 ایک دوسرے کی نفی کرنے سے روکا جائے اور مشترکہ طور پر کام کرنے کا ماحول پیدا کیا جائے۔ اس کا عملی مظاہرہ میں نے حضرت مولانا منظور احمد چنیوٹی کے ہمراہ شکاگو میں دیکھا تھا کہ بہائی مذہب کے ایک بڑے سنٹر کے وسیع ہال میں ایک چھت کے نیچے مسجد، مندر، چرچ، گوردوارہ، یہودیوں کا معبد سینی گاگ، اور بدھوں کا عبادت خانہ بنائے گئے ہیں اور ہر مذہب کے پیروکاروں کو اجازت ہے کہ وہ اپنی عبادت گاہ میں آ کر اپنے طریقہ سے عبادت کریں۔ اسے تمام مذاہب کو سچا تسلیم کرنے اور مذاہب کے درمیان اشتراک و اتحاد سے تعبیر کیا گیا ہے، مگر میرے ذہن میں اسی وقت یہ سوال کھڑا ہو گیا تھا کہ توحید اور شرک کو ایک چھت کے نیچے جمع کرنے کی کوشش کس حد تک خود فریبی کی بات ہے۔
 
آج ہم سے بھی اس حوالے سے تقاضا کیا جا رہا ہے کہ ہم اسلام پر ضرور قائم رہیں، اس پر عمل بھی کریں اور اسے سچا مذہب قرار دیں لیکن دوسرے مذاہب کو غلط نہ کہیں، ان کی نفی نہ کریں اور انہیں باطل سے تعبیر نہ کریں۔ یہ بات قرآنی تعلیمات کے حوالے سے کس حد تک قابل قبول ہے، آپ حضرات اہل دانش ہیں اس کا خود فیصلہ کر سکتے ہیں۔ 
(3) مکالمہ بین المذاہب کا ایک پہلو یہ بھی ہے کہ یہ بات تسلسل سے کہی جا رہی ہے کہ اس وقت مبینہ دہشت گردی کے خلاف جو جنگ عالمی سطح پر لڑی جا رہی ہے اس میں مبینہ دہشت گردی کے لیے مذہب کا ٹائٹل استعمال ہو رہا ہے اور مذہب کے نام پر مبینہ طور پر دہشت گردی کی جا رہی ہے۔ اسے مذہب کے غلط استعمال کا عنوان دیا جا رہا ہے اور یہ تقاضا کیا جا رہا ہے کہ اسے روکنے کے لیے مسلمان علماء کرام عالمی برادری کا ساتھ دیں اور اس کے ساتھ تعاون کریں۔
مجھے چند سال قبل اس قسم کے ایک مکالمہ میں شریک ہونے کی دعوت دی گئی جو مختلف مذاہب کے ارباب علم کے درمیان تھا، میں نے اس موقع پر عرض کیا کہ ہمیں مذہب کے غلط استعمال کو روکنے کے عنوان پر گفتگو سے انکار نہیں ہے اور ہم کسی بھی سطح پر اس کے لیے تیار ہیں۔ ہم نہ صرف اس پر گفتگو کریں گے بلکہ اگر باہمی مباحثہ ہیں ہماری کوئی غلطی ثابت ہو گئی تو ہم اس کا کھلے بندوں اعتراف بھی کریں گے، لیکن یہ ایجنڈا ادھورا اور یکطرفہ ہے پہلے اسے متوازن بنایا جائے۔ ہمارے ہاں مناظروں میں عام طور پر یہ ہوتا ہے کہ دو فریق باہمی مناظرہ کرتے ہیں تو دونوں کی طرف سے ایک ایک موضوع کا تعین ہوتا ہے اور دونوں عنوانات پر مناظرہ اور مکالمہ ہوتا ہے۔  ہم مذہب کے مبینہ طور پر غلط استعمال پر گفتگو کے لیے تیار ہیں لیکن اس کے ساتھ ہماری طرف سے یہ موضوع مکالمہ میں شامل کرنا ہو گا کہ سوسائٹی کے اجتماعی معاملات سے مذہب کی بے دخلی کے نتائج کیا نکلے ہیں اور اس عمل نے انسانی سوسائٹی کو فائدہ دیا ہے یا نقصان پہنچایا ہے؟ 
 اس کے ساتھ ہماری طرف سے دوسری شرط یہ ہے کہ مکالمہ اصل فریقوں کے درمیان ہو۔ چند سال قبل مسیحیوں کے پروٹسٹنٹ فرقہ کے عالمی سربراہ آرچ بشپ آف کنٹریری ڈاکٹر روون ولیمز اسلام آباد تشریف لائے تو ان سے مذاکرات کے لیے اس وقت کے وزیراعظم پاکستان  شوکت عزیز ان کے سامنے بیٹھے تھے، میں نے اس وقت یہ سوال اٹھایا تھا کہ آرچ بشپ آف کنٹریری تو مسیحی دنیا کے ایک بڑے مذہبی فرقہ کی نمائندگی کرتے ہیں، شوکت عزیز کس کی نمائندگی کر رہے ہیں؟ مسٹر ٹونی بلیئر تشریف لائیں یا ڈیوڈ کیمرون برطانیہ سے آئیں تو شوکت عزیز یا یوسف رضا گیلانی ہی پاکستان کی نمائندگی کا حق رکھتے ہیں، لیکن اگر پاپائے روم تشریف لائیں یا آرچ بشپ آف کنٹربری مذاکرات کی میز پر بیٹھے ہوں تو مسلمانوں کی نمائندگی کا حق ان کے مذہبی راہنمائوں کو ہے اور وہی مذاکرات حقیقی مذاکرات کہلائیں گے جو اصل فریقوں کے درمیان ہوں گے۔
(4) مکالمہ بین المذاہب کے اہداف و اغراض کا ایک پہلو یہ بھی ہے کہ انسانی سوسائٹی گلوبل ویلیج کی شکل اختیار کرتی جا رہی ہے، باہمی میل جول بڑھ رہا ہے اور مشترکہ سوسائٹیاں تشکیل پا رہی ہیں۔ ان مشترک سوسائٹیوں میں مختلف مذاہب کے لوگوں کو کس طرح مل جل کر رہنا چاہیے اور ایک دوسرے کے احترام اور باہمی حقوق و آداب کی پاسداری کا ماحول کیا ہونا چاہیے، تاکہ وہ باہمی تصادم بد امنی سے بچتے ہوئے اکٹھے رہ سکیں۔ میرے نزدیک مکالمہ بین المذاہب کا اصل ہدف یہی ہونا چاہیے، یہ آج کی دنیا کی ضرورت ہے اور دعوت و تبلیغ کے حوالے سے مسلمانوں کی بھی ایک بڑی ضرورت ہے کہ دعوت امن و سکون کے ماحول میں ہی صحیح نتائج دے سکتی ہے۔

 

تازہ ترین خبریں

عمران خان کودو تہائی سے زائدپاکستانیوں کی حمایت مل گئی ، گیلپ سروے میں تہلکہ خیز انکشاف

عمران خان کودو تہائی سے زائدپاکستانیوں کی حمایت مل گئی ، گیلپ سروے میں تہلکہ خیز انکشاف

کورونا وائرس نے پھر تباہی مچانا شروع کر دی، گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں کتنی ہلاکتیں ہوگئیں؟ افسوسناک خبر

کورونا وائرس نے پھر تباہی مچانا شروع کر دی، گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں کتنی ہلاکتیں ہوگئیں؟ افسوسناک خبر

عمران خان کو وزیراعظم کے عہدے سے ہٹانے پر کتنے فیصد پاکستانی ناراض ہیں؟ گیلپ کے تازہ ترین سروے کا حیران کن نتیجہ آگیا

عمران خان کو وزیراعظم کے عہدے سے ہٹانے پر کتنے فیصد پاکستانی ناراض ہیں؟ گیلپ کے تازہ ترین سروے کا حیران کن نتیجہ آگیا

سندھ میں بلدیاتی الیکشن ،پیپلزپارٹی نے پولنگ سے قبل ہی میدان مار لیا، سینکڑوں امیدوار بلا مقابلہ منتخب

سندھ میں بلدیاتی الیکشن ،پیپلزپارٹی نے پولنگ سے قبل ہی میدان مار لیا، سینکڑوں امیدوار بلا مقابلہ منتخب

یہ لوگ حکومت کا فائدہ اٹھانا چاہتےہیں، اعتزازاحسن اپنے ہی اتحادیوں پر برس پڑے، مریم اورنگزیب توہین عدالت کی مرتکب قرار

یہ لوگ حکومت کا فائدہ اٹھانا چاہتےہیں، اعتزازاحسن اپنے ہی اتحادیوں پر برس پڑے، مریم اورنگزیب توہین عدالت کی مرتکب قرار

اقتدار میں واپس آنا نا ممکن،عمران خان کو آئندہ الیکشن سے آئوٹ کردیا گیا

اقتدار میں واپس آنا نا ممکن،عمران خان کو آئندہ الیکشن سے آئوٹ کردیا گیا

فوجی وردی میں ملبوس یہ خاتون کون ہیں؟ جان کر آپکو حیرت کا شدید جھٹکا لگےگا

فوجی وردی میں ملبوس یہ خاتون کون ہیں؟ جان کر آپکو حیرت کا شدید جھٹکا لگےگا

کیا خاتون ولی کی اجازت کے بغیر نکاح کر سکتی ہے؟ وفاقی شرعی عدالت کے فقہی مشیر کا بیان آگیا

کیا خاتون ولی کی اجازت کے بغیر نکاح کر سکتی ہے؟ وفاقی شرعی عدالت کے فقہی مشیر کا بیان آگیا

ہندوستان نئی افغان حکومت کو تسلیم کرنے جارہا ہے؟ بڑا اقدام اٹھا لیا

ہندوستان نئی افغان حکومت کو تسلیم کرنے جارہا ہے؟ بڑا اقدام اٹھا لیا

ہزاروں سرکاری ملازمین کی عید کی خوشیوں پر پانی پھیر دیا گیا، عید الاضحی کی چھٹیاں منسوخ ہو گئیں

ہزاروں سرکاری ملازمین کی عید کی خوشیوں پر پانی پھیر دیا گیا، عید الاضحی کی چھٹیاں منسوخ ہو گئیں

مری میںکون کونسے ہوٹلز کو سیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا؟ حکومت کا کریک ڈائون شروع

مری میںکون کونسے ہوٹلز کو سیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا؟ حکومت کا کریک ڈائون شروع

30جون سے کن کن علاقو ں میں بارشوں کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

30جون سے کن کن علاقو ں میں بارشوں کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

پی ٹی آئی میں واپسی کیلئے پرویز الٰہی نے کتنے کروڑ روپے کی پیشکش کی؟ نعمان لنگڑیال کا تہلکہ خیز دعویٰ

پی ٹی آئی میں واپسی کیلئے پرویز الٰہی نے کتنے کروڑ روپے کی پیشکش کی؟ نعمان لنگڑیال کا تہلکہ خیز دعویٰ

جولائی میں موجودہ حکومت کے خاتمے کی پیشنگوئی کر دی گئی

جولائی میں موجودہ حکومت کے خاتمے کی پیشنگوئی کر دی گئی