02:06 pm
آج مقدس ترین دن! ملک بھر میں عقیدت کا چراغاں

آج مقدس ترین دن! ملک بھر میں عقیدت کا چراغاں

02:06 pm

٭خداتعالیٰ بزرگ و برتر اور سرورکائنات نبی کریمؐ کے مقدس ناموں سے کالم کا آغازO ملک بھر میں آج آنحضورؐ آقائے دو جہاںؐ کا یوم ولادت نہائت عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے جلسے، جلوس، چراغاں، نعت خوانی کی محفلیںO کرونا! مریضوں کی تعداد میں اضافہ، متعدد پابندیاں، ہر شخص کو ماسک پہننے کا حکمO ملک بھر میں اطلاعات، اعلانات، افواہیں، قیاس آرائیاں، ’’بہت جلد بہت کچھ ہونے والا ہے‘‘O سعودی عرب! کرنسی پر گلگت، بلتستان کو پاکستان سے الگ دکھانے کا نقشہ! بھارت میں جشن! ’’یہ بھارت کو دیوالی کا تحفہ ہے‘‘ بھارتی میڈیاO شہباز شریف پر نیب کی مہربانیاں، صاف پانی سکینڈل اور 12 پلاٹوںکی تحقیقات بند! Oکروڑوں کے غبن پر سابق سیکرٹری فنانس نذیر احمد کو پانچ سال قید، آٹھ کروڑ جرمانہ، جائیداد ضبط!O انسداد دہشت گردی عدالت نے عمران خاں کو پارلیمنٹ پر حملے کے کیس سے بری کر دیا!
٭کالم کے آغاز پر سرور کائناتؐ نبی رحمت کے حضور مختصر نذرانہ عقیدت! 21 مارچ 2018، مسجد نبوی، روضہ اقدس پر پہلی نظر! قدم جم جاتے ہیں، ذہن سب کچھ بھول جاتا ہے، کچھ یاد نہیں رہتا، کون ہوں؟ کہاں سے آیا ہوں؟ مسلسل چھ گھنٹے اسی عالم میں، انہی قدموں پر عصر، مغرب، عشا کی نمازیں اور پھر مسلسل نظریں روضہ اقدس پر!! لمبی داستان چھپ چکی ہے۔ نظر روضہ اقدس پر ہے اور گولڑہ شریف کے پیر جناب مہر علیؒ کی ایک مشہور نعت کا مصرع یاد آ رہا ہے کہ ’’کِتھے مہر علی، کِتھے تیری گلی، کِتھے تیری ثناء! گستاخ اکھیاں کِتھے جا اڑیاں‘‘ اس منظر نامے میں ذہن میں اپنے کچھ نعتیہ اشعار اُمڈ آتے ہیں۔ ہدیہ عقیدت کے طور پر مختصر نعت درج کر رہا ہوں۔
شہؐ انبیاء کے حضور
روضہِ خیرالبشرؐ پر پہلی نظر
میں نبیؐ جی آپؐ کے در پہ ہوں
ایک نظرِ کرم، خیر البشرؐ
میں نبیؐ جی آپؐ کے در پہ ہوں
کچھ اشک ہیں میرے ہم سفر
میں کون ہوں، میں کہاں پہ ہوں
لرزیدہ پا، نہیں کچھ خبر!
میرے پاس کچھ بھی نہیں حضورؐ
چند اشک ہیں سرِ چشمِ تر
میں آنکھ اٹھائوں تو کس طرح
نہیں حوصلہ میں ہوں کم نظر
میرے حرف گُم، میرے لفظ گُم
مجھے بھول گیا میرا سب ہُنر
مجھے در سے اب نہ جدا کریں
یہی زندگی رہے عمر بھر
مجھے رحمتوں سے نواز دیں
شہِ دو جہاں خیر البشرؐ
(سرفراز سید)
٭ملک بھر میں افواہوں، قیاس آرائیوں کا طوفان امڈ آیا ہے۔ ’’حکومت دسمبر کے آخر تک ختم ہو جائے گی‘‘ مولانا فضل الرحمن ’’حکومت جنوری میں جا رہی ہے‘‘ مریم نواز، ’’15 جنوری کو اپوزیشن اتحاد کا لشکر اسلام آباد پر ہلہ بول کر سب کچھ صاف کر دے گا‘‘ بلاول زرداری۔ ’’دسمبر کے آخر تک جھاڑو پھرے گا، فروری سے مارچ تک اپوزیشن کا مکمل صفایا ہو جائے گا‘‘  شیخ رشید! ’’ہم سول حکومت کے ساتھ ہیں‘‘ جنرل قمر جاوید باجوہ! ’’فوج نے بہت برداشت کر لیا اب حرکت میں آئے گی‘‘ ٹیلی ویژنوں، میڈیا کے اینکر پرسن، کالم نگار! ان تمام باتوں کا واضح مطلب یہ ہے کہ مارچ کے مہینے تک کچھ نہ کچھ ہونے والا ہے۔ مارچ کا نام اس لئے کہ موجودہ حکومت اور اسمبلیاں قائم رہیں تو مارچ میں سینٹ کے 52 ارکان سینٹ سے فارغ ہو جائیں گے۔ ان میں پیپلزپارٹی کے بیشتر ارکان شامل ہوں گے۔ موجودہ صورت حال میں پیپلزپارٹی صرف سندھ اسمبلی تک سمٹ چکی ہے، پنجاب، بلوچستان اور خیبر پختونخواکی اسمبلیاں ہاتھ سے نکل چکی ہیں۔ نئے انتخابات میں تحریک انصاف کو سینٹ اور مجموعی طور پر پوری پارلیمنٹ میں معقول اکثریت حاصل ہونے کا امکان ہے۔ اس کے بعد حکومت بہت مضبوط ہو جائے گی۔ اپوزیشن کی کوشش ہے کہ مارچ سے پہلے حکومت کو ختم کر دیا جائے اور نئے انتخابات کرائے جائیں جن کے نتیجے میں اپوزیشن برسراقتدار آسکتی ہے!! مگر اپوزیشن کی بڑی پارٹی پیپلزپارٹی نئے انتخابات کے حق میں نہیں۔ ماضی میں اسے قومی اور چاروں صوبوں کی اسمبلیوں میں اکثریت حاصل رہی۔ اس بنا پر سینٹ میں بھی اکثریت ملتی رہی۔ اب حالات مختلف ہیں۔ پیپلزپارٹی اب صرف اندرون سندھ تک محدود اور کراچی سے محروم ہو چکی ہے (لاڑکانہ اور لیاری کے آبائی حلقے بھی ہاتھ سے نکل چکے ہیں) نئے انتخابات میں اسے مزید جھٹکے لگ سکتے ہیں۔ وہ اس وقت آرام کے ساتھ سندھ پر حکومت کر رہی ہے۔ وہ نہیں چاہتی کہ یہ حکومت بھی ہاتھ سے نکل جائے۔ خود ن لیگ کے بہت سے ارکان اسمبلیاں نہیں چھوڑنا چاہتے۔ کروڑوں روپے خرچ کر کے ان میں پہنچے ہیں، صرف دو سال بعد نئے اخراجات گوارا نہیں۔ اور یہ بھی کہ دوبارہ اسمبلی میں پہنچ سکیں گے یا نہیں؟ نئے انتخابات کے لئے سب سے زیادہ مطالبہ مولانا فضل الرحمان کا ہے۔ انتخابات نہ بھی ہوئے تو وہ قومی اور پختونخوا، بلوچستان اسمبلیوں سے باآسانی دو نشستوں پر سینٹ کے رکن بن سکتے ہیں اس طرح وہ پھر پارلیمنٹ میںپہنچ جائیں گے۔ ایک مسئلہ ن لیگ کا بھی ہے کہ نوازشریف بار بار فوج پر لفظی حملے کر رہے ہیں اور فوج موجودہ حکومت کے حق میں جا رہی ہے۔ ن لیگ کے صدر شہباز شریف فوج سے محاذ آرائی کے خلاف ہیں۔ ان سے ن لیگی ارکان ملاقاتیں بھی کر رہے ہیں۔ بیشتر ن لیگی ارکان بھی بار بار انتخابات کے حق میں نہیں۔ فوج کو اپنے خلاف کر کے کیسے اس کی حمائت حاصل کر سکتے ہیں! اب تک اپوزیشن کے تین جلسوں میں فوج کے خلاف جو کچھ کہا گیا ہے خاص طور پر نوازشریف کی گالیاں نما باتوں سے عوام کی رائے عامہ بھی متاثر ہو رہی ہے۔ ایسے میں کیا کچھ ہو سکتا ہے، اگلے چند ماہ میں واضح ہو جائے گا۔
٭کسی اشارے پر یا حقائق کی بنا پر نیب کی شہبازشریف پر مہربانیاں بڑھتی جا رہی ہیں۔ پہلے لاہور میں صاف پانی کی 56 کمپنیوں میں 26 ارب روپے بانٹنے کا کیس ختم کیا، اب ایل ڈی اے کے بارہ پلاٹوں کی ناجائز الاٹمنٹ کا کیس بھی واپس لے لیا ہے۔ جواز یہ ہے کہ ایل ڈی اے کی عمارت میں آگ لگنے سے سارا ریکارڈ جل چکا ہے، تفتیش آگے نہیں بڑھ سکتی۔ ایل ڈی اے کی عمارت کو آگ لگنے کا واقعہ پانچ سال پہلے پیش آیا تھا۔ نیب کو دو سال کی طویل تفتیش کے بعد اس آگ کا اب پتہ چلا ہے! صاف بات یہ ہے کہ کھیل کچھ اور ہے۔ شہباز شریف نے نوازشریف اور مریم نواز کی حکمرانی اور جلسوں سے بچنے کے لئے خود اپنی ضمانت کی درخواست واپس لے کر جیل میں جاناپسند کیا جہاں انہیں بی کلاس میں اعلیٰ سہولتیں میسر ہیں۔ ٹیلی ویژن، اخبارات، گھر کا کھانا، جلسوں میں شرکت کی مجبوری نہ مولانا فضل الرحمن اور مریم نواز کا سامنا! جیل میں بھی ساتھیوں کی ملاقاتیں جاری ہیں۔ پسند کی کتابیں منگوا رہے ہیں اور باہر کا تماشا دیکھ رہے ہیں!
٭شیخ رشید بہت خاموش جا رہے ہیں۔ صرف ایک آواز لگائی کہ فروری سے مارچ تک جھاڑو پھر جائے گا، پھر خاموش ہو گئے۔ گزشتہ روزایک ٹیلی ویژن پر انہیں عجیب رنگ میں دیکھا۔ خوف زدہ چہرہ، بار بار توبہ تِلا، کہ ’’مجھے جان کا خطرہ ہے، آئندہ دہشت گردی کا ذکر نہیں کروں گا، کسی کو دہشت گرد نہیں کہوں گا!!‘‘ غالباً کوئی دھمکی ملی ہے جس نے خاموش کرا دیا ہے۔ اب مولانا کو رونق لگانے کے لئے تحریک انصاف کو کوئی نیا دانا ڈھونڈنا پڑے گا۔
٭چین نے سری لنکا کی معیشت پر مکمل کنٹرول حاصل کر لیا، ایک بندرگاہ ’منگنٹونو‘ 99 سال کے لئے چین کو لیز پر دے دی۔ چین سری لنکا میں ہوائی اڈے، سڑکیں، بجلی گھر اور پُل بنا رہا ہے۔ ’’منگنٹونو‘‘ کی بندرگاہ جنوبی بھارت سے صرف سو ڈیڑھ سو کلو میٹر دور ہے۔ یہ بندر گاہ بھارت کے اعصاب پر سوار ہے۔ اس کی مدد کے لئے امریکی وزیرخارجہ نے پومپیو نے سری لنکا، مالدیپ اور انڈونیشیا کا ہنگامی دورہ کیا چین ان ملکوں کو بھی سری لنکا والی سہولتیں دے رہا ہے۔ پومپیو نے گزشتہ روز سری لنکا کے صدر اور وزیراعظم سے طویل ملاقات کر کے زور دیا کہ وہ چین کی سرمایہ کاری روک کر امریکہ سے امداد لے لیں۔ مگر دونوں حکمرانوں نے صاف انکار کر دیا۔
٭پاکستان پر سعودی عرب کی ’’مہربانیاں‘‘ بڑھتی جا رہی ہیں۔ قرضہ واپس لے لیا، ایف اے ٹی ایف میں پاکستان کے حق میں ووٹ دینے سے انکار کر دیا، پاکستان کو ادھار تیل دینے کی پیش کش واپس لے لی اور اب 20 ریال کا ایک کرنسی نوٹ جاری کیا ہے اس میں گلگت اور بلتستان کو پاکستان کی عمل داری سے باہر دکھا دیا ہے۔ بھارتی میڈیا نے اسے دیوالی کے موقع پر بھارت کو سعودی عرب کا تحفہ قرار دیا ہے! سعودی عرب نے گستاخ خاکوں کی مذمت کی ہے مگر فرانس اور اس کے صدر کا نام لینا گوارا نہیں کیا۔ اسرائیل کے طیارے سعودی فضا سے آزادانہ گزر کر بھارت اور عرب امارات آ جا رہے ہیں!! کیا کہا جائے؟؟
 

تازہ ترین خبریں

ملک آج بھی کرپشن کے سرطان کی جکڑ میں ہے۔سراج الحق 

ملک آج بھی کرپشن کے سرطان کی جکڑ میں ہے۔سراج الحق 

تحریک انصاف نے قوم پرست جماعتوں سے انتخابی اتحاد کا فیصلہ کرلیا 

تحریک انصاف نے قوم پرست جماعتوں سے انتخابی اتحاد کا فیصلہ کرلیا 

 شہباز شریف اورسلمان شہباز کی بریت کی خبر غلط اور مس رپورٹنگ ہے۔شہزاد اکبر

شہباز شریف اورسلمان شہباز کی بریت کی خبر غلط اور مس رپورٹنگ ہے۔شہزاد اکبر

ایف آئی اے شہباز خاندان کیخلاف ثبوتوں کے 5تھیلے سامنے لے آیا

ایف آئی اے شہباز خاندان کیخلاف ثبوتوں کے 5تھیلے سامنے لے آیا

ربیع الاول کا چاند7اکتوبر بروز جمعرات کو نظرآنے کا امکان ہے ، محکمہ موسمیات 

ربیع الاول کا چاند7اکتوبر بروز جمعرات کو نظرآنے کا امکان ہے ، محکمہ موسمیات 

 میرے دادا کہتے تھے بیٹا عوام کی خدمت ایسے کرو کہ عوام آپ کو یادرکھے۔حمزہ شہباز

میرے دادا کہتے تھے بیٹا عوام کی خدمت ایسے کرو کہ عوام آپ کو یادرکھے۔حمزہ شہباز

 ہم نے خدمت کے ریکارڈ قائم کیے اس لیے قوم نے ہم پر بار بار اعتماد کیا،رانا ثنا اللہ

ہم نے خدمت کے ریکارڈ قائم کیے اس لیے قوم نے ہم پر بار بار اعتماد کیا،رانا ثنا اللہ

چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری ہنگامی دورے پر امریکہ روانہ 

چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری ہنگامی دورے پر امریکہ روانہ 

کورونا کے بعد ڈینگی کے وار جاری ۔۔۔ سندھ اور پنجاب میں سینکڑوں کیسز رپورٹ 

کورونا کے بعد ڈینگی کے وار جاری ۔۔۔ سندھ اور پنجاب میں سینکڑوں کیسز رپورٹ 

مہنگی چینی کی درآمدگی قومی خزانے کو لوٹنے کی بڑی واردات ہے  ،شازیہ مری

مہنگی چینی کی درآمدگی قومی خزانے کو لوٹنے کی بڑی واردات ہے ،شازیہ مری

مسلم لیگ ن میں اختلافات۔۔۔۔ نائب صدر مریم نواز نے اعتراف کر لیا۔

مسلم لیگ ن میں اختلافات۔۔۔۔ نائب صدر مریم نواز نے اعتراف کر لیا۔

حکومت سندھ نے موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی۔

حکومت سندھ نے موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی۔

 ایک بار پھر بھارتی قابض فوج کے مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا پردہ چاک کیا گیا۔شاہ محمود قریشی

ایک بار پھر بھارتی قابض فوج کے مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا پردہ چاک کیا گیا۔شاہ محمود قریشی

 صوبے کی تاریخ میں پہلی دفعہ ہاکی لیگ کا انعقاد کیا جارہا ہے۔محمود خان 

 صوبے کی تاریخ میں پہلی دفعہ ہاکی لیگ کا انعقاد کیا جارہا ہے۔محمود خان