01:53 pm
اپوزیشن کے بیانات پر فوج کی سخت ردعمل

اپوزیشن کے بیانات پر فوج کی سخت ردعمل

01:53 pm

٭ملک بھر میں عید میلادالنبیؐ پر بھرپور عقیدت کا اظہار، جلسے جلوس چراغاںO نوازشریف اور ایاز صادق کے بیانات پر فوج کا سخت ردعمل، گمراہ کن منفی بیانات کی مذمت O بھارتی ہوا باز ابھی نندن، کو سول و فوج کی مشاورت سے واپس بھیجا گیا، میجر جنرل افتخار بابرO عمران خاں، پارلیمنٹ پر حملہ کی سے بری O 5 وزرا و جہانگیر ترین پر 12 نومبر کو فرد جرم O بھارت: ایاز صادق کے بیان کی نمایاں تشہیر!O کرونا، مزید تیز ہو گیا، 20 ہلاک 1044 نئے مریض O گستاخ خاکوں پر اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی مذمت، فرانس میں پاکستان کا کوئی سفیر نہیںO سعودی کرنسی نوٹ پر نقشہ، بھارت کا سخت احتجاجO آرمی چیف جنرل باجوہ کی وزیراعظم سے اہم ملاقات۔
٭ملک بھر میں جشن میلادالنبیؐ بھرپور عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا۔ سینکڑوں شہروں اور قصبوں میں بڑی بڑی ریلیاں، درود و سلام و نعت خوانی کی وجد انگیز محفلیں منعقد ہوئیں اور رات کو چراغاں کیا گیا۔ اس موقع پر فرانس میں آنحضورؐ نبی رحمت کے بارے میں گستاخ خاکوں کے خلاف بھی جلسوں و جلوسوں کا سلسلہ جاری رہا۔ ایک اہم بات! میلادالنبیؐ کے موقع پر ترکی کے صدر اردوان نے کہا ہے کہ ہم اس عظیم محسن انسانیت ہستی کے حضور ہدیہ عقیدت پیش کر رہے ہیں جن کی آمد پر مدینہ کی بچیوں نے ’’طلع البدرعلینا‘‘ گایا تھا!۔
٭ملک اور فوج کے خلاف نوازشریف، ایاز صادق، مریم نواز، بلاول اور انس نورانی کے بیانات پر فوج نے بالآخر خاموشی توڑ دی۔ گزشتہ روز آئی ایس پی آر کے ترجمان میجر جنرل افتخار بابر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اپوزیشن کے بعض حالیہ بیانات کی سخت مذمت کی اور کہا کہ فوج ان بیانات پر شدید غصے میں ہے۔ حال ہی میں نوازشریف نے بیان میں فوج کے جوانوں کو اپنے جرنیلوں سے بغاوت کرنے، سول انتظامیہ کو وزیراعظم کے احکام پر عمل نہ کرنے اور عوام کو حکومت کے خلاف سول نافرمانی اور سڑکوں پر آنے کی تلقین کی ادھر سابق سپیکر ایاز صادق نے بیان دیا کہ گرفتار ہونے والے بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو بھارت کے حملہ کے امکان سے خوفزدہ ہو کر واپس بھیجا گیا تھا۔ میجر جنرل افتخار بابر کا لہجہ اور چہرے کا تاثر بہت سنجیدہ اور سخت دکھائی دے رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس منفی بیان سے بھارت کو بہت فائدہ پہنچا ہے۔ پاکستان نے بھارت کے دو طیارے گرا کر اور اس کے ہوا باز کو گرفتار کر کے واضح فتح حاصل کی اس کا دنیا بھر میں اعتراف کیا گیا، مگر ایاز صادق کے بیان سے بھارت اسے اپنی شکست کی بجائے فتح قرار دے رہا ہے۔ میجر جنرل افتخار بابر نے کہا کہ ابھی نندن کو اقوام متحدہ کے کنونشن کے مطابق فوج اور سول کی باہم مشاورت کے واپس بھیجا گیا اس پر دنیا میں پاکستان کے اعلیٰ ظرف کی تعریف کی گئی۔ انہوں نے نوازشریف کے فوج مخالف بیانات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ فوج میں رینک اور افسروں میں کوئی فرق نہیں، سب ایک متحد اکائی کی حیثیت رکھتے ہیں، فوج ملک و قوم کے تحفظ کی ضامن ہے، وہ یہ فرض ادا کرتی رہے گی۔
٭قارئین کرام! کسی ملک کے جاسوس اور جنگی مجرم کی گرفتاری میں فرق ہے۔ جاسوس کو جیل میں رکھ کر عمر بھر یا موت کی سزا دی جا سکتی ہے مگر جنگی مجرموں کے ساتھ سلوک نہیں کیا جا سکتا۔ اقوام متحدہ کے کنونشن کے تحت اس پر تشدد نہیں کیا جا سکتا (ابھی نندن تو عوام کے تھپڑ کھا کر گیا تھا)، اسے قانونی سہولتیں فراہم کی جاتی ہیں۔ یہ بات اہم ہے کہ ابھی نندن تو محض ایک جنگی مجرم ہے، بھارت کو 1971ء کی جنگ میں حراست میں لئے جانے والے 90 ہزار جنگی قیدیوں کو واپس کرنا پڑا تھا۔ ان میں جنرل نیازی، 40 ہزار فوجی اور عام شہری شامل تھے) مجھے یہاں امریکہ کے ایک جاسوس ہوا باز فرانس گیری پاور کی گرفتاری کا پرانا تاریخی واقعہ یاد آ گیا ہے۔ جنرل ایوب خاں کے دور میں پشاور کے نزدیک ’بڈابیر‘ کے مقام پر امریکہ کا بہت بڑا فوجی اڈا قائم تھا۔ اس میں سے روس (سابق سوویت یونین) کی جاسوسی کے لئے یُوٹو (U-2) طیارے اڑائے جاتے تھے۔ یُو ٹو طیارے امریکہ نے 1950ء میں ایجاد کئے پر یہ اب تک سب سے کارگر جاسوس طیارہ شمار ہوتا ہے۔ صرف ایک نشست ہوتی ہے۔ یہ 70 ہزار فٹ (13 میل)کی بلندی پر مسلسل 9 گھنٹے پروازکر سکتا ہے۔ اس میں ایسے کیمرے نصب ہوتے ہیں جو 13 میل کی بلندی سے نیچے ایک ایک انچ زمین کی واضح تصویریںبناتے ہیں ان میں چوہے بھی دوڑتے بھاگتے دکھائی دیتے ہیں۔ یہ تصویریں 10500 فٹ طویل اور چھ انچ چوڑی فلم پر اتاری جاتی ہیں۔ انہیں پرانے طریقے کار کے مطابق اب بھی دھو کر نیگٹو بنائے جاتے ہیں۔ یہ 70 سال پرانے طیارے آج بھی اسی طرح فضا میں اڑ رہے ہیں۔
اب یہاں فرانس گیری پاور کی گرفتاری کا ڈرامائی قصہ: پشاور کے نزدیک امریکہ کے فوجی اڈے سے یہ طیارے اڑتے اور سوویت یونین (روس) کی وسیع و عرض فضائوں میں 9 گھنٹے مسلسل پرواز کے بعد ناروے میں جا اترتے۔ ان دنوں امریکہ اور روس میں سخت سرد جنگ چل رہی تھی۔ یکم فروری 1960ء کو بڈا بیر (پشاور) کے اڈے سے امریکہ کا ایک یو ٹو طیارہ اُڑا اور سوویت یونین کی فضا میں 13 میل (70 ہزار فٹ) بلندی پر پہنچ کر جاسوسی میں مصروف ہو گیا۔ اسے پائلٹ فرانسیس گیری پاور اڑا رہا تھا۔ اس سے پیشتر امریکہ کے چار یو ٹو طیارے سوویت یوین کی فضائی جاسوسی کر سکے تھے۔روس کے پاس ان کے خلاف کارروائی کے وسائل موجود نہیں تھے مگر اب گیری پاور والا طیارہ روسی راکٹوں کی زد میں آ گیا۔ روسی فوج کے راکٹ اتنی اونچائی پر نہیں پہنچ سکتے تھے تاہم ایک راکٹ طیارے سے کافی نیچے زوردار دھماکے سے پھٹا۔ اس دھماکے سے خوف زدہ ہو کر گیری پاور طیارے کو کافی نیچے لے آیا تا کہ زیادہ تیزی سے روس سے نکل سکے مگر وہ روس کے دوسرے راکٹ کی زد میں آ گیا۔ طیارہ تباہ ہو گیا تاہم گری پاور پیرا شوٹ کے ذریعے نیچے اتر آیا اور گرفتار ہو گیا۔ امریکہ اپنے طیارے کے لاپتہ ہونے پربہت پریشان تھا۔ اسے کسی طرح پتہ چل گیا کہ طیارہ روس میں لاپتہ ہوا ہے۔ امریکہ کے صدر جنرل آئزن ہاور نے بیان دیا کہ یہ ایک موسمی جائزہ کا طیارہ تھا جو غلطی سے روس کی  فضا میں چلا گیا تھا۔ روس کے وزیراعظم خرد شیف نے 4 فروری کو اس طیارے کی اتاری ہوئی تصاویر اور گیری پاور کے اعترافات جاری کر دیئے اس پر امریکہ کو خاموش ہونا پڑا۔ خردشیف نے پاکستان کو انتباہ کیا کہ روس نے نقشہ پر پشاور کے گرد سرخ دائرہ لگا دیا ہے۔ اس پر امریکہ گھبرا گیا اور بڈابیر کا اڈا خالی کر دیا۔ گیری پاور کو دس سال قید کی سزا سنائی گئی تاہم دو سال بعد امریکہ میں قید ایک روسی جاسوس ’والڈروف‘ سے تبادلہ کے سمجھوتہ پراسے رہا کر دیا گیا۔ وہ امریکہ میں 45 سال کی عمر میں ایک جنگی ہیلی کاپٹر اڑاتے ہوئے حادثہ کا شکار ہو گیا۔
٭ایک اہم بات! پاکستان نے سعودی عرب سے احتجاج کیا ہے کہ اس نے اپنے 20 ریال کے نئے کرنسی نوٹ پر گلگت و بلتستان کو پاکستان سے الگ علاقہ کیوں دکھایا ہے۔ مگر بھارت نے بھی سعودی عرب سے سخت احتجاج کیا ہے کہ اس نقشہ میں پورے کشمیر اور گلگت بلتستان کو آزاد علاقہ دکھایا گیا ہے جب کہ یہ علاقے بھارت کا حصہ ہیں۔ بھارتی وزارت خارجہ نے دہلی میں سعودی سفیر کو بلایا اور ریاض میں بھارتی سفیر نے سعودی وزارت خارجہ کو سخت الفاظ میں احتجاجی مراسلے دیئے ہیں۔
٭مزار قائداعظم کی سخت بے حرمتی کے ملزم، مریم نواز کے شوہر کیپٹن صفدر نے کہا ہے کہ اس کے خلاف مسلسل مقدمے قائم کئے جا رہے ہیں (لاہور میں نیب کے دفتر پر پتھرائو وغیرہ) مگر موجودہ حکومت دو ماہ تک ختم ہو رہی ہے، اس کے ساتھ ہی سارے مقدمے ختم ہو جائیں گے!
٭اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے اسلام آباد میں تحریک انصاف اور علامہ طاہر القادری کی عوامی تحریک کے دھرنوں کے دوران پارلیمنٹ اور ٹیلی ویژن پر حملوں اور توڑ پھوڑ میں ملوث صدر عارف علوی کے خلاف کارروائی ان کے دور صدارت کے بعد جاری رکھنے کا فیصلہ سنایا ہے اس وقت انہیں آئین کے تحت کسی عدالتی کارروائی سے تحفظ حاصل ہے۔ وزیراعظم عمران خان کو معصوم اور بے قصور قرار دے کر بری کر دیا اور چار وزیروں شاہ محمود قریشی، پرویزعمر، اسد عمر اور علیم خاں کے علاوہ جہانگیر ترین کے خلاف 12 نومبر کو فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ سنایا ہے۔ جہانگیر ترین طویل عرصہ سے برطانیہ میں روپوش ہیں۔ وہ 12 نومبر کو پیش نہ ہوئے تو عدالت نوازشریف اور اسحاق ڈار کی طرح انہیںبھی مفرور اور اشتہاری قرار دے سکتی ہے۔
٭سندھ کے گندم کے دو سرکاری گوداموں پر چھاپے، گندم کی 56 ہزار بوریاں غائب!!

تازہ ترین خبریں

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

 قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

 چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان 

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان