12:41 pm
پی ڈی ایف‘ مسلم لیگی سیاست کے مدوجذر

پی ڈی ایف‘ مسلم لیگی سیاست کے مدوجذر

12:41 pm

پی ڈی ایف‘ بے نظیر بھٹو‘ حامد ناصر چٹھہ کی زیر قیادت اتحاد نے انتخابات سے پہلے معاہدہ کیا کہ وزارت اعلیٰ پنجاب جونیجو گروپ کو ملے گی‘
پی ڈی ایف‘ بے نظیر بھٹو‘ حامد ناصر چٹھہ کی زیر قیادت اتحاد نے انتخابات سے پہلے معاہدہ کیا کہ وزارت اعلیٰ پنجاب جونیجو گروپ کو ملے گی‘ جبکہ جیتنے کی صورت میں وزیراعظم بے نظيربھٹو ہوں گی۔ حامد ناصر چٹھہ ہمیشہ ایم این اے کے ساتھ پنجاب اسمبلی کی رکنیت بھی حاصل کرتے۔ چٹھہ سے بے نظیر نے کہا کہ آپ وزیراعلیٰ پنجاب بن جائیں۔ مگر چٹھہ نے خود وزیراعلیٰ بننے کی بجائے منظور وٹو کے لئے جگہ پیدا کی۔ میں نے چٹھہ سے پوچھا ایسا کیوں کیا؟ وہ بولے‘ میں نے بے نظیر کے ساتھ اپنی پارٹی کے ہمراہ  اتحاد کیا ہے‘ اگر میں خود وزیراعلیٰ پنجاب بن جاتا تو پارٹی کون سنبھالتا؟ پھر جب صدر کا انتخاب ہونا تھا تب بھی وزیراعظم بے نظير نے اصرار کیا کہ وہ صدر بن جائیں مگر انہوں نے اصرار کرکے فاروق لغاری کو صدر بنوایا‘ پھر بے نظير نے انہیں وزیر خارجہ بننے کو کہا‘ تب انہوں نے سردار آصف احمد علی کو وزیر خارجہ بنوا دیا۔ وزیر خارجہ کے منصب کے حوالے سے پراسرار سازشیں جاری رہیں۔ ایک دن نجی اخبار میں خاتون صحافی نے خبر شائع کر دی کہ وزیر خارجہ آصف احمد علی کو تبدیل کرکے انور سیف اللہ کو وزیر خارجہ بنایا جارہا ہے۔صحافی انجم نیاز خود مسلم لیگ ہائوس چلی آئی۔ سردار آصف احمد علی سخت پریشان تھے‘ وہ بھی مسلم لیگ ہائوس چلے آئے۔ مجھے چٹھہ نے بلوایا کہ تردید جاری کردو دوٹوک کہ آصف احمد علی ہی وزیر خارجہ رہیں گے‘ انجم میرے پاس آگئی کہ بتائو اندر کی بات کیا ہے؟ میں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ محترمہ آپ کی خبر کی تردید میں شام کے ٹی وی خبر نامے میں کھل کر نشر کروائوں گا۔ میں نے کھل کر تردید ٹی وی پر نشر کروائی۔ سردار آصف احمد علی نے مجھ سے کہا‘ پروفیسر یہ سب کچھ تم نے چٹھہ سے منظوری لے کر کیا ہے؟ کہیں وہ تردید ہی نہ کر دیں۔ میں مسکرایا کہ حضور چٹھہ میری امانت‘ دیانت پر اعتماد کرتے ہیں۔
جب پی ڈی ایف مرکزی اور صوبائی وزارت اعلیٰ کی تشکیل پر قادر ہوگیا‘ تو پیر پگاڑا لاہور میں آکر حامد ناصر چٹھہ سے ملے‘ انہیں پیشکش کی کہ تم خود وزیراعظم بن جائو‘ نواز شریف یہی چاہتے ہیں اور بے نظیر بھٹو کو وزیراعظم نہ بنوائو‘ تمہیں سارے ووٹ نواز شریف کی پارٹی دینے کو تیار ہے۔ چٹھہ نے پیر پگاڑا سے دوٹوک انکار کر دیا کہ وہ معاہدے کے مطابق بے نظیر بھٹو کو ہی وزیراعظم بنوائیں گے۔ انہیں نہ وزارت اعظمیٰ کی ضرورت ہے نہ ہی نواز شریف کے ووٹوں کی۔
ایک مسلم لیگی سینیٹر پنجاب سے فوت ہوگیا‘ چیئرمین سینٹ وسیم سجاد نے سینیٹر طارق چوہدری کو بلوایا‘ انہیں کہا کہ نواز شریف چاہتے ہیں کہ حامد ناصر چٹھہ خالی سیٹ پر ڈاکٹر بشارت الٰہی کو نامزد کر دیں۔ اگر ایسا ہو جائے گا تو ن لیگ ڈاکٹر بشارت الٰہی کے مدمقابل امیدوار نہیں لائے گی۔ وہ بلامقابلہ سینیٹر بن جائیں گے۔ طارق چوہدری نے یہ پیغام مجھے دیا‘ میں نے پنجاب ہائوس میں چٹھہ کو علی الصبح مل کر پیغام دیا‘ وہ بولے‘ ڈاکٹر بشارت الٰہی بہت نفیس اور عمدہ انسان ہیں۔ قابل احترام ہیں۔ مگر میں نواز شریف کی پیشکش کو مسترد کرتا ہوں‘ پی ڈی ایف کا امیدوار وہی ہوگا جس پر وزیراعظم بے نظير اتفاق کریں گی۔ میں سمجھ گیا کہ نواز شریف نے پی ڈی ایف توڑنے کی بہت عمدہ کوشش کی ہے‘ میں نے طارق چوہدری کو وسیم سجاد کے لئے پیغام دے دیا کہ ’’سوری‘‘
جب جونیجو کی حکومت ختم ہوئی تو حامد ناصر چٹھہ اسپیکر قومی اسمبلی تھے۔ وہ بدستور اسپیکر  کے طور پر موجود تھے‘ انہوں نے معزول جونیجو کو اسپیکر کی گاڑی میں ساتھ لے کر عوامی رابطہ مہم چلائی۔ ویسے چٹھہ صدر جنرل ضیاء الحق کی شخصی خوبیوں کے بھی مداح تھے۔ کیسی دلچسپ بات ہے کہ شہادت سے کچھ پہلے صدر جنرل ضیاء الحق نواز شریف سے مایوس ہوگئے تھے۔ انہوں نے حنیف رامے سے کئی ملاقاتیں کیں۔ وہ نواز شریف کا متبادل حنیف رامے کی صورت میں سامنے لانے پر غور کر رہے تھے۔
نئے انتخابات ہونے والے تھے‘ تو میں نے ان سے کہا کہ آپ دو سیٹوں سے الیکشن لڑیں۔ اور ساتھ ہی صوبائی سیٹ پر بھی‘ انہوں نے مجھے بتایا کہ وہ شرقپور والی سیٹ پر بھی الیکشن لڑ رہے ہیں۔ میں نے  کہا کہ اگر آپ ٹوبہ ٹیک سنگھ یا رحیم یار خان سے دوسری سیٹ کا انتخاب لڑیں تو زیادہ فائدہ ہوگا۔ مگر اصرار کیا کہ اب آپ نے صوبائی سیٹ سے کاغذات واپس نہیں لینا‘ چوہدری برادران بہت دبائو ڈالیں گے کہ صوبائی سیٹ سے کاغذات آپ واپس لیں‘ میں نے انہیں لاہور فون کیا‘ انہوں نے بتایا کہ چوہدریوں نے بہت زیادہ منت سماجت کی‘ مجبوراً کاغذات واپس لئے۔ میں نے کہا آپ نے سیاست  میں مات قبول کرلی ہے۔ وہ بولے کیوں اور کیسے؟ میںنے  کہا کہ خدانخواستہ اگر آپ قومی اسمبلی کی سیٹ نہ جیت سکے‘ تو وزیراعلیٰ پنجاب تبھی بنو گے جب رکن اسمبلی  بھی ہوں گے۔ اب آپ وزیراعلیٰ کے کھیل سے باہر از خود چلے گئے ہیں‘ یوں چوہدری برادران نے نہایت ذہانت سے چوہدری پرویز الٰہی کے لئے وزارت اعلیٰ حاصل کرلی۔ ماننا پڑے گا کہ چوہدری برادران سیاست میں ’’مہا گرو‘‘ ہیں۔
انتخابات کے بعد چوہدری برادران نے چھوٹے صوبے سے وزیراعظم لانے کا ایجنڈا تیار کیا۔ وزیراعظم بننے سے پہلے چٹھہ‘ اعجاز الحق پیر پگاڑا‘ چوہدری شجاعت میں قدم قدم پر رابطہ رہا کہ وزیراعظم کسی مسلم لیگی کو بنوانا ہے‘ فاروق لغاری کو تو ہرگز وزیراعظم نہیں بننے دینا۔ چٹھہ کے دل میں لغاری کے لئے بہت غصہ اس لئے بھی تھا کہ انہوں نے ضد کرکے بے نظير بھٹو سے لغاری کو صدر بنوایا تھا‘ مگر صدر بن کر انہوں نے پی ڈی ایف حکومت توڑ کر چٹھہ کی بھی توہین کی تھی۔ ویسے اسٹیبلشمنٹ نے انتخابات سے ذرا پہلے بہت کوشش کی تھی کہ انتخابات سے پہلے ایک انتخابی اتحاد بنا دیا جائے جس کی سربراہی فاروق لغاری کریں تاکہ وہ جیت کر اس اتحاد کی طرف سے وزیراعظم بن سکیں۔ ایک خاکی جو اس کام پر پنجاب میں مامور تھا وہ چٹھہ سے جا کر لاہور میں ملا‘ مگر چٹھہ نے ایسے اتحاد کا حصہ بننے سے انکار کر دیا۔ فاروق لغاری کا راستہ رک کر مسلم لیگیوں نے بلوچستان سے میر ظفر اللہ خان جمالی کو وزیراعظم بنوا دیا اور میاں اظہر مسلم لیگ (ق) ہوگئے۔ بعدازاں چوہدری برادران کی ذہانت نے میاں اظہر سے مسلم لیگ (ق) کی صدارت  بھی چھین لی۔ اور ق لیگ صرف چوہدریوں کی ملکیت بن گئی۔
 

تازہ ترین خبریں

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان آج کھیلے جانے والے میچ کے دوران بارش کا امکان نہیں ہے۔

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان آج کھیلے جانے والے میچ کے دوران بارش کا امکان نہیں ہے۔

جیت کی خوشی ،عثمان ڈارنے مصطفیٰ نوازکھرکھرکامنہ میٹھاکرادیا

جیت کی خوشی ،عثمان ڈارنے مصطفیٰ نوازکھرکھرکامنہ میٹھاکرادیا

پاکستان کی مشہور سڑک کا بڑا حصہ سیلاب میں بہہ گیا، انتہائی پریشان کن خبر آگئی

پاکستان کی مشہور سڑک کا بڑا حصہ سیلاب میں بہہ گیا، انتہائی پریشان کن خبر آگئی

پیپلزپارٹی نے 5سال ن لیگ اور 3سال تحریک انصاف کا مقابلہ کیا۔ بلاول بھٹو

پیپلزپارٹی نے 5سال ن لیگ اور 3سال تحریک انصاف کا مقابلہ کیا۔ بلاول بھٹو

 بلوچستان کی تاریخ میں پہلی بار خواتین ایونٹ کا انعقاد ہوا،پی سی بی بلوچستان میں کھیلوں کو نظرانداز کررہا ہے۔ جام کمال 

 بلوچستان کی تاریخ میں پہلی بار خواتین ایونٹ کا انعقاد ہوا،پی سی بی بلوچستان میں کھیلوں کو نظرانداز کررہا ہے۔ جام کمال 

کراچی لاک ڈاون میں نرمی ۔۔۔محکمہ داخلہ سندھ نے ترمیمی لیٹرجاری کردیا

کراچی لاک ڈاون میں نرمی ۔۔۔محکمہ داخلہ سندھ نے ترمیمی لیٹرجاری کردیا

 وزیر داخلہ شیخ رشید  اپنے سیاسی مستقبل کی فکر کریں سندھ حکومت کے فیصلے کے خلاف شر اور فساد نہ پھیلائیں۔ پلوشہ خان

 وزیر داخلہ شیخ رشید  اپنے سیاسی مستقبل کی فکر کریں سندھ حکومت کے فیصلے کے خلاف شر اور فساد نہ پھیلائیں۔ پلوشہ خان

 لاہور  کے 13 علاقوں میں مائیکرو سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے کی تجویز

لاہور کے 13 علاقوں میں مائیکرو سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے کی تجویز

ملک میں سونے کی قیمتوں میں مزید 500 روپے کمی

ملک میں سونے کی قیمتوں میں مزید 500 روپے کمی

کرکٹ پربھارتی سیاست کی جتنی مذمت کی جائےکم ہے، دفتر خارجہ

کرکٹ پربھارتی سیاست کی جتنی مذمت کی جائےکم ہے، دفتر خارجہ

پیپلزپارٹی نے  پٹرول کی قیمتوں میں مزید  اضافہ مسترد کر دیا

پیپلزپارٹی نے پٹرول کی قیمتوں میں مزید اضافہ مسترد کر دیا

گورنرسندھ عمران اسماعیل نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے لاک ڈاؤن پر نظرثانی کا مطالبہ کر دیا۔

گورنرسندھ عمران اسماعیل نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے لاک ڈاؤن پر نظرثانی کا مطالبہ کر دیا۔

بھارت کی جانب سے غیر ملکی کھلاڑیوں کو کے پی ایل میں شرکت سے متنفر کرنا قابل مذمت ہے۔ شہریار آفریدی

بھارت کی جانب سے غیر ملکی کھلاڑیوں کو کے پی ایل میں شرکت سے متنفر کرنا قابل مذمت ہے۔ شہریار آفریدی

سندھ حکومت صنعت اور ٹرانسپورٹ کی بندش پر نظرثانی کرے، اسد عمر

سندھ حکومت صنعت اور ٹرانسپورٹ کی بندش پر نظرثانی کرے، اسد عمر