12:59 pm
پنجاب کابینہ میں ڈرامائی تبدیلیاں

پنجاب کابینہ میں ڈرامائی تبدیلیاں

12:59 pm

٭سیاسی انتشار، سٹاک ایکس چینج میں شدید مندیO اپوزیشن کے مقابلے میں وزیراعظم کے جلسوں کا اعلانO کرونا تیز ہو گیا، مزید14 افراد ہلاک، 1167 نئے مریض830 مقامات پرلاک ڈائون، مزید تعلیمی ادارے بندO پنجاب، کابینہ کے دو وزیرفارغ، وزیراطلاعات کی تبدیلی، فردوس عاشق اعوان صوبائی معاون خصوصی مقررO مریم نواز کی شہباز شریف، حمزہ شہباز سے ملاقات، اہم پیغام پہنچایا گیاO ’’وزیراعظم منافق ہے‘‘ بلاول زرداریO ’’میرا بیان سیاق و سباق سے ہٹ کر دیا گیا ہے: وزیرداخلہO کابل یونیورسٹی میں دہشت گردی، 26 افراد ہلاک O آسٹریا، وی آنا میں چھ مقامات پر فائرنگ 17 افراد ہلاکO نصرت شہباز شریف کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی O امریکہ: صدارتی انتخابات شروع ہو گئے، اب تک عبوری نتیجہ آ چکا ہوگا!
٭پنجاب کابینہ میںڈرامائی تبدیلی! جیل خانہ جات کے وزیر زوار حسین وڑائچ اور کوآپریٹو کے وزیر مہر محمد اسلم ناقص کارکردگی پر فارغ مگر اصل ’واردات‘ وزیراطلاعات فیاض الحسن کے ساتھ ہوئی۔ انہیں دوسری بار وزارت اطلاعات سے فارغ کر کے پھر سے کالونیز کا وزیر بنا دیا گیا ہے۔ ان کی جگہ سابق وفاقی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کو صوبائی معاون خصوصی اطلاعات بنا دیا گیا۔ فیاض الحسن کو دوسری بار وزارت اطلاعات سے محروم کئے جانے کی اطلاع ایک تقریب میں تقریر کے دوران ملی تو وہ بدحواس ہو گئے۔ دوبار ایک ہی سانحہ! پہلی بار وزیراطلاعات کے عہدہ سے ہٹا کر وزیرکالونیز (آبادیات) بنایا گیا تو بہت احتجاج کیا۔ وزیراطلاعات حکومت کا ترجمان ہوتا ہے۔ روزانہ پریس کانفرنسیں، ٹیلی ویژنوں اور اخبارات میں تصویریں، ہر روز اپوزیشن کے خلاف پرجوش تقریریں! اور کالونیز کا وزیر بن کر کھڈے لائن لگنے والی بات!! یہ سانحہ مسلسل دو بار ہوا ہے اور جلتی پر تیل یہ کہ فردوس عاشق اعوان کی دعائیں رنگ لائیں، وفاقی وزیرکے برابر عہدے سے صوبائی سطح پرمعاون خصوصی کے عہدہ پر ’’ترقی‘‘ مگر دفتر، گاڑی، تنخواہ تو ملے گی یہی سہی! فیاض الحسن ضرورت سے زیادہ نمایاں ہو رہے تھے، یہ بات’مالکان‘ کو کبھی گوارا نہیں ہوتی۔
٭کرونا تیز ہو گیا، اموات کی تعداد بڑھنے لگی، سٹاک ایکسچینج خطرناک حد تک نیچے چلا گیا، بھارت کے وزیردفاع اور آرمی چیف کی پاکستان کو نئی دھمکیاں، بھارتی میڈیا کے مطابق بڑی کارروائی کی تاریخ بھی طے ہو گئی، سرحد پر بھارتی فائرنگ میں اضافہ ہو گیا اور…اور حکومت اور اپوزیشن جانوروں کی طرح لڑ رہے ہیں۔ ایک دوسرے کے خلاف ہرزہ سرائی کرتے کرتے واضح ملک دشمن بیانات پر اتر آئے ہیں۔ فخر کے ساتھ انتہائی رازداری والی محفلوں کی اندرونی حساس کارروائیوں اور فیصلوں کو افشا کیا جا رہا ہے۔ ایک دوسرے کو غداری کے طعنے ، ’’پکڑ لو، مار دو جانے نہ پائے‘‘ کے نعرے! بدقسمت قوم پرنااہل نالائق، جاہل قیادتیں مسلط ہوتی رہیں اب بھی یہ مشق جاری ہے۔ اور معیشت کا حال گزشتہ روز چھپنے والے سبزیوں کے نرخوں سے ظاہر ہو رہا ہے۔ ظلم یہ کہ اپوزیشن تو محض تماشا کی خاطر شغل کے طور پر سیاست کر رہی ہے۔کرونا تیزی سے بڑھ رہا ہے برطانیہ اور بہت سے دوسرے ملکوں میں پھر سخت لاک ڈائون شروع ہو گیا ہے۔ خود پاکستان میں متعدد تعلیمی ادارے دوبارہ بند ہو رہے ہیں۔ گزشتہ روز اسلام آباد میں مزید چار سکول بند کر دیئے گئے۔ عذاب کا سیلاب آتا دکھائی دے رہا ہے مگر سیاست کے مشغلے کم ہونے کی بجائے تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ ستم یہ کہ حکومت تحمل رواداری، ٹھنڈے دفاع اور برداشت کرنے کی بجائے مار دھاڑ کے نعرے لگا رہی ہے۔ وزیروں کے ہاتھوں میں لاٹھیااں پکڑا دی ہیں، وہ آزادانہ اپوزیشن پر الفاظ کی لاٹھیاں برسا رہے ہیں اور اپوزیشن زہریلے تیر برساتے برساتے اس حد تک چلی گئی ہے کہ ملک و قوم کی سلامتی کو بھی دائو پر لگا دیا ہے۔ مگر صرف اپوزیشن ہی نہیں خود حکومت کے ایک لاڈلے وزیر کے پلوامہ کیس والے بیان پر ملک گرے لسٹ سے نکلنے کی بجائے بلیک لسٹ کی طرف جا رہا ہے۔ اِنا للہ و اِنا الیہ راجعون۔
٭راولپنڈی کے ایک تھانے کی خبر ہے کہ پولیس نے تقریباً 40 کلو چرس پکڑی (ایک من سے زیادہ) مگر ریکارڈ میں صرف چھ کلو دکھائی اور 34 کلو پانچ ملازمین نے آپس میں بانٹ لی۔ یہ چرس ایک رکشا میں لائی گئی تھی۔ رکشا ڈرائیور نے بڑے افسر کوبتایا کہ وہ تو 40 کلو چرس لایا تھا مگر صرف چھ کلو کی تفتیش ہو رہی ہے۔ اس پر ان پانچوں پولیس اہلکاروں کو گرفتار کر لیا گیا۔ یہ کوئی نئی بات نہیں، ہر جگہ ایسا ہو رہا ہے۔ ایک بہت پرانا واقعہ یاد آ گیا۔ واہگہ کی سرحد پر رینجرز نے ایک بار تقریباً تین چار کلو سونا بھارت کو سمگل ہوتے ہوئے پکڑ لیا۔ یہ سونا پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔ پولیس نے بڑی ہوشیاری کے ساتھ اسے غائب کر کے اس کی جگہ اتنا ہی پیتل سکے بنانے والی ٹکسال کے حوالے کر دیا۔ ٹکسال والوں نے پیتل لینے سے انکار کر دیا۔ بات باہر نکل آئی اور پولیس کے تین اہلکار گرفتار ہو گئے!
٭اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے وزیراعظم عمران خاںکے خلاف دھرنے کے دوران پارلیمنٹ پر حملے کے مقدمہ میں بری کرنے کے بارے میںتحریری فیصلہ جاری کر دیا ہے۔ اس میںکہا گیا ہے کہ اس واقعہ کی رپورٹ 16 گھنٹے کی تاخیر  سے درج کی گئی اس میں دہشت گردی وغیرہ کی کوئی دفعہ ہی نہیں لگائی گئی۔ عمران خاں کے خلاف کوئی قابل مواخذہ الزام ہی عائد نہیں کیا گیا، اس لئے انہیں بری کیا جاتا ہے البتہ ان کے تین ساتھیوں کو فرد جرم کے لئے طلب کر لیا گیا ہے۔ قارئین خود تجزیہ کر لیں کہ عمران خاں کے خلاف کوئی کارروائی کیوں نہ ہو سکی؟
٭وزیرداخلہ بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ اپوزیشن کے بارے میں ان کا بیان سیاق و سباق سے ہٹ کر شائع کیا گیا۔ یہ سیاق و سباق کی اصطلاح فیشن کی شکل اختیار کرتی جا رہی ہے۔ کوئٹہ کے جلسے میں اویس نورانی نے جوش میںآزاد بلوچستان کا نعرہ لگایا، ہوش آیا تو کہہ دیا کہ سیاق و سباق سے ہٹ کر معاملہ اچھالا جا رہا ہے۔ فواد چودھری نے پلوامہ کے بارے میں خطرناک بیان دیا۔ بھارتی اخبارات نے ہنگامہ برپا کر دیا تو یہی بات کہہ دی کہ سیاق و سباق کو سامنے نہیں رکھا گیا۔ یہی حربہ ایاز صادق نے اختیار کیا۔ حیرت ہے کیسے کیسے لوگ اعلیٰ عہدوں پر قابض ہو گئے! ایک عذر یہ کیا جا رہا ہے کہ پارلیمنٹ کے اندر کہی جانے والی باتوں کا عدالتی مواخذہ نہیںکیا جا سکتا۔ انتہا یہ ہے کہ فرانس کے صدر میکرون نے بھی کہہ دیا ہے کہ گستاخ خاکوں کے بارے میں اس کا بیان سیاق و سباق سے ہٹ کر اچھالا جا رہا ہے۔ میکرون کے ساتھ تو جو کچھ ہو رہا ہے وہسب کے سامنے ہے مگر ہمارے ہاں انٹ شنٹ باتیں کہہ کر بعد میں سیاق و سباق کا رونا رویا جاتا ہے۔ اویس نورانی اور ایاز صادق اپوزیشن کے لوگ ہیں ان کے بیانات کو خوب رگیدا گیا مگر فواد چودھری اور بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ کے خلاف کوئی کارروائی؟ مذمت تک نہیں کی گئی!
٭بلاول زرداری نے وزیراعظم کو ’منافق‘ کہہ دیا! عمران خاں کی عمر بلاول کی عمر سے دوگنا سے بھی زیادہ ہے بلکہ اس کے والد آصف زرداری کی عمر سے بھی زیادہ ہے۔ ملک کی بدقسمتی کہ اس وقت ساری سیاست نووارد، غیر تربیت یافتہ، غیر مہذب نوجوان بیٹوں، بیٹیوں کے ہاتھوں میں آ چکی ہے۔ مجھے پرانے باوقار سیاست دان یاد آ رہے ہیں۔ قائداعظم، لیاقت علی خاں، محمد علی بوگرہ، چودھری محمد علی، آئی آئی چندریگر، حسین شہید سہروردی، فیروز خاں نون!! کیسے باوقار لوگ تھے کبھی کسی مخالف کے خلاف بدزبانی نہیں کی یہ تو پرانے لوگ مگر ان کے بعد نوابزادہ نصراللہ خاں، مولانا مودودی، مفتی محمود، شاہ احمد نورانی، خان ولی خان ان کی اہلیہ محترمہ بے نظیر بھٹو، ڈاکٹر مبشر حسن جیسے باکمال، انتہائی مدبر، مہذب لوگ بھی قابل مثال ہیں۔ ایک دوسرے کے خلاف سیاست اپنی جگہ مگرایک دوسرے کا احترام کیا جاتا تھا۔ یہ سب روایات ملیا میٹ ہو گئیں!
٭ایک پہلو اور بھی ہے کہ قومی سیاستپر خواتین چھا گئی ہیں۔ مریم نواز، مریم اورنگ زیب، نفیسہ شاہ، زرتاج گل، شہلا گل، یاسمین راشد، شیریںمزاری اور اب فردوس عاشق اعوان!! مرحوم جہانگیر بدر کا ایک واقعہ یاد آ گیا۔ ہیلی کالج میں طالب علم تھے۔ کالجوں کے درمیان ایک مباحثہ میں اپنی ٹیم کے سربراہ تھے۔ مخالف ٹیم کی سربراہ ایک طالبہ تھی۔ اس نے لڑکوں کے بارے میں اتنی زوردار تقریر کی کہ ہال تالیوں سے مسلسل گونجتا رہا۔ جواب میں جہانگیر بدر نے مائیک پرکہا کہ حاضرین کرام! ہم پنجاب کے غیرت مند لوگ ہیں۔ ہماری عورتیں گھروں میں بیٹھتی ہیں اور باہر مرد حضرات آپس میں بات کرتے ہیں۔ افسوس کہ مخالف فریق کے پاس کوئی مرد نہیں رہا، ایک خاتون کو لے آئے ہیں۔ نہیں بی بی، نہیں یہ غیرت کا معاملہ ہے۔ آپ کو جواب نہیں دوں گا، کسی مرد کو لائیں اس سے بات کروں گا۔ اس پر جو تالیاں بجیں ان کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔
 

تازہ ترین خبریں

تبدیلی آ گئی،سرکاری افسر ہسپتال کی خوبصورت نرس کو اٹھا کرلے گیا اور پھر۔۔ایسا کام کہ پوری قوم غصے میں آگئی

تبدیلی آ گئی،سرکاری افسر ہسپتال کی خوبصورت نرس کو اٹھا کرلے گیا اور پھر۔۔ایسا کام کہ پوری قوم غصے میں آگئی

31دسمبر تک ہر شہری کے پاس یہ چیز ہو گی، حکومت کا ایسا اعلان کہ ہر کوئی خوشی سے جھوم اٹھا

31دسمبر تک ہر شہری کے پاس یہ چیز ہو گی، حکومت کا ایسا اعلان کہ ہر کوئی خوشی سے جھوم اٹھا

کورونا وائرس کا ایک نیا حملہ ! پروازیں کینسل اور سکول بند کرنے کا فیصلہ

کورونا وائرس کا ایک نیا حملہ ! پروازیں کینسل اور سکول بند کرنے کا فیصلہ

ملک میں ہنگامی صورتحال، بین الاقومی اور مقامی پروازیں منسوخ کرنا پڑ گئیں

ملک میں ہنگامی صورتحال، بین الاقومی اور مقامی پروازیں منسوخ کرنا پڑ گئیں

اس وقت آئی ایس آئی کا سربراہ کون ہے؟  وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے قیاس آرائیوں کا خاتمہ کر دیا

اس وقت آئی ایس آئی کا سربراہ کون ہے؟ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے قیاس آرائیوں کا خاتمہ کر دیا

وہ شہر جہاںاب آئندہ دو ماہ کیلئے سورج نہیں نکلے گا،جان کر آپکو بھی شدید حیرت ہو گی

وہ شہر جہاںاب آئندہ دو ماہ کیلئے سورج نہیں نکلے گا،جان کر آپکو بھی شدید حیرت ہو گی

ترک صدر کا دبنگ اعلان ، امریکا سمیت دس یورپی ممالک کے سفیروں کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ

ترک صدر کا دبنگ اعلان ، امریکا سمیت دس یورپی ممالک کے سفیروں کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ

لائف انشورنس لینے والا شہری صرف چار اقساط کی ادائیگی کے بعد فوت ہوجائے تو اس کے لواحقین کو انشورنس کی پوری رقم دی جائیگی یا نہیں؟

لائف انشورنس لینے والا شہری صرف چار اقساط کی ادائیگی کے بعد فوت ہوجائے تو اس کے لواحقین کو انشورنس کی پوری رقم دی جائیگی یا نہیں؟

ملک کے بیشتر علاقو ں میںموسلا دھار بارشیں۔۔ کیا ہونیوالا ہے؟ الرٹ جاری کر دیاگیا

ملک کے بیشتر علاقو ں میںموسلا دھار بارشیں۔۔ کیا ہونیوالا ہے؟ الرٹ جاری کر دیاگیا

پاکستان کے بڑے شہر میں شرمناک واقعہ ، تین خواتین نے نوجوان لڑکے کی عزت لوٹ لی ، سارا دن ہوس کا نشانہ بنانے کے بعد کیا سلوک کیا؟ افسوسناک خبر

پاکستان کے بڑے شہر میں شرمناک واقعہ ، تین خواتین نے نوجوان لڑکے کی عزت لوٹ لی ، سارا دن ہوس کا نشانہ بنانے کے بعد کیا سلوک کیا؟ افسوسناک خبر

عمران خان کی حکومت کو بڑا جھٹکا لگنے والا ہے؟  اہم ترین اتحادی جماعت نے علیحدگی کا عندیہ دیدیا

عمران خان کی حکومت کو بڑا جھٹکا لگنے والا ہے؟ اہم ترین اتحادی جماعت نے علیحدگی کا عندیہ دیدیا

69سالہ بابے کاایسا کمال کہ نوجوان غیر ملکی حسینہ بھی دیوانی ہو گئی،آپ بھی جان لیں

69سالہ بابے کاایسا کمال کہ نوجوان غیر ملکی حسینہ بھی دیوانی ہو گئی،آپ بھی جان لیں

مہنگائی پی ٹی آئی حکومت کو لے ڈوبی، وزیراعظم عمران خان کو عہدے سے ہٹانے کا بندوبست کر لیا گیا

مہنگائی پی ٹی آئی حکومت کو لے ڈوبی، وزیراعظم عمران خان کو عہدے سے ہٹانے کا بندوبست کر لیا گیا

پیٹرول کی قیمتوں میں 20روپے تک کمی کی خوشخبری سنا دی گئی

پیٹرول کی قیمتوں میں 20روپے تک کمی کی خوشخبری سنا دی گئی