01:21 pm
امریکی صدر کا انتخاب، نیا مسئلہ

امریکی صدر کا انتخاب، نیا مسئلہ

01:21 pm

٭امریکی صدر کا انتخاب مسئلہ بن گیا، مظاہرےO پاکستان: کرونا بہت تیز، ایک روزمیں 26 ہلاک 1302 نئے مریضO مریم نواز گلگت میںO عرب امارات اسرائیل تک براہ راست پروازیں O ایف اے ٹی ایف: سعودی عرب اور عرب امارات نے پاکستان کے خلاف ووٹ دیئے!! O میں اپوزیشن کے زخموں کے لئے مرہم لائی ہوں: فردوس عاشق اعوانO ’’میرے والد 1960ء میں ارب پتی تھے‘‘ نوازشریفO ماسکو: شمالی تعاون تنظیم کا اجلاس، 10 نومبر، عمران خاں، نریندر مودی، چین کا صدر آمنے سامنے O زاہدہ پروین دوبارہ وفاقی سیکرٹری اطلاعات مقررO موٹر سائیکل کا مالک دبئی میں ٹاورز کا مالک کیسے بن گیا؟ چیئرمین نیب۔
٭امریکہ کے صدارتی انتخابات کے بیشتر نتائج آ چکے، جوبائیڈن کو واضح اکثریت حاصل ہو گئی۔ کالم پریس میں جانے تک وہ کامیابی کے لئے 270 ووٹ حاصل کرنے تک پہنچ چکے ہیں جبکہ ٹرمپ بہت پیچھے تھے۔ کالم کے شائع ہونے تک صورت حال واضح ہو چکی ہو گی۔ اس بار پہلی بار غیر معمولی واقعہ یہ ہوا کہ کچھ بڑی ریاستوں کی ووٹوں کی گنتی برقی مواصلاتی نظام معطل ہو جانے کی وجہ سے رک گئی اور انتخابی نتائج مکمل نہ ہو سکے۔ نیویارک میں الیکشن کے عملہ نے عذر پیش کیا کہ دن بھر لاکھوں ووٹوں کی گنتی کرتے کرتے تھک گئے ہیں۔ کچھ گنتی رہ گئی وہ اگلے روز کریں گے۔ اس پر ٹرمپ نے شور مچا دیا کہ دھاندلی ہو رہی ہے وہ سپریم کورٹ جائے گا اور دوبارہ گنتی کی درخواست کرے گا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ پاکستان میں اپوزیشن بھی شور مچا رہی ہے کہ انتخابی نتائج کے دوران برقی مواصلاتی نظام دانستہ طور پر معطل کر کے نتائج میں ہیرا پھیری کی گئی۔ ایک فرق یہ ہے کہ پاکستان میں اپوزیشن مگر امریکہ میں خود برسر اقتدار (20 جنوری تک) صدر خود شور مچا رہا ہے! ایک بات البتہ مشترکہ ہے کہ پاکستان کی طرح نیویارک اور دوسرے شہروںمیں ’دھاندلی‘ کے خلاف مظاہرے شروع ہو گئے! ٹرمپ واضح طور پر شکست کھا رہا ہے بلکہ کھا چکا ہے۔ اس نے انتخابات سے پہلے ہی اعلان کر دیا تھا کہ وہ اپنی شکست کو تسلیم نہیں کرے گا۔ اب کچھ دلچسپ باتیں۔
٭راوی نامہ کے ایک قاری نے کہا ہے کہ ’’ٹرمپ عمران خاں کی طرح اسلام آباد کے ڈی چوک میں دھرنا دے گا۔ اپوزیشن کھانا فراہم کرے گی اور اسلام آباد کی حکومت نتائج جاری کرے گی۔‘‘ ایک خاتون نے دلچسپ بات کی ہے کہ ٹرمپ جو بھی کچھ ہے اس کی موٹی موٹی آنکھیں بہت خوبصورت ہیں، جب کہ جوبائڈن کی آنکھیں بہت چھوٹی اور باریک سی ہیں، دکھائی ہی نہیں دیتیں۔ پتہ نہیں وہ دیکھتا کیسے ہے؟ ایک قاری کا تبصرہ ہے کہ اس بار گدھا جیت گیا (جوبائیڈن کا انتخابی نشان) اور ہاتھی ہار گیا (ٹرمپ کا نشان) قارئین کی دلچسپی کے لئے امریکی صدور کی چند باتیں کہ اب تک امریکہ کے تمام صدور میں ’ابراہم لنکن‘ کا قد سب سے لمبا، چھ فٹ چار انچ اور ’روز ویلٹ‘ کاقد سب سے چھوٹا، پانچ فٹ چار انچ تھا۔ (خواتین کا عام قد) یعنی ایک فٹ کا فرق تھا۔ امریکہ کے ایک صدر وِلسن نے ساری صدارتی زندگی سو کر گزار دی، کوئی کام نہ کیا۔ ہوا یہ کہ 20 جنوری کو نئے صدر نے حلف اٹھانا تھا مگر 19 جنوری کی رات کو اس وقت موجود صدر کا اچانک انتقال ہو گیا۔ آئین کے مطابق نائب صدر ولسن صدر بن گیا۔ وہ سو رہا تھا۔ اسے نیند سے جگا کر صدر کا حلف اٹھوایا گیا۔ اس نے حلف اٹھایا اور پھر سو گیا۔ صبح سو کر اٹھا تو نیا منتخب صدر حلف اٹھا چکا تھا۔ نیند کا معاملہ بھی دلچسپ ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق جوان آدمی کے لئے سات سے آٹھ گھنٹے کی نیند ضروری ہے۔ مگر امریکہ جیسی سپرپاور کے صدر کے لئے دیر تک سوئے رہنا ممکن نہیں۔ ٹرمپ کہتا تھا کہ وہ تین چار گھنٹے سے زیادہ نہیں سو سکتا۔ اوباما دو بجے رات سو جاتا، صبح چھ بجے اٹھ جاتا۔ بل کلنٹن کو نیند نہ آنے کا مرض لاحق تھا۔ وہ بہت کم سوتا تھا البتہ ایک صدر ’کولج‘ 11 گھنٹے سویا رہتا تھا۔ دیر سے سو کر اٹھتا اور اکثر عملہ سے پوچھتا کہ ’’امریکہ قائم ہے؟‘‘ امریکی صدروں کے بہت سے لطیفے مشہور ہیں۔ اتنی باتیں ہی کافی ہیں۔ اب کچھ اور دلچسپ باتیں:۔
٭پنجاب میں فیاض الحسن کو دوبار وزیراطلاعات  کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ موصوف اپوزیشن کے بارے میں تو تیز زبان بولتے ہی تھے مگر ان میں اس عہدے کا خمار اتنا زیادہ ہو گیا تھا کہ وہ بعض معاملات میں وزیراعلیٰ کے احکام اور خواہشات کو بھی خاطر میں نہیں لاتے تھے بلکہ اُلٹا وزیراعلیٰ کو سمجھانے لگتے کہ انہیں کیا کرنا چاہئے۔ ان کی جگہ اب فردوس عاشق اعوان آ گئی ہیں۔ وہ دوبار وفاقی وزیر رہیں، ایک بار پیپلزپارٹی کے دور میں، دوسری بار تحریک انصاف کے دور میں معاون خصوصی بنیں، مگر درجہ وزیر کا تھا۔ اب وہ صرف پنجاب کی معاون خصوصی بن کر آئی ہیں۔ انہوں نے دلچسپ باتوں سے اس عہدہ کی ابتدا کی ہے۔ گزشتہ روز اپنے پہلے دن پریس کانفرنس میں ان کا دلچسپ بیان انہی کی زبانی پڑھئے۔ فرمایا کہ ’’ریاستی اداروں کے خلاف زہر اگلنے والے بیرونی آلہ کاروں اور سہولت کاروں کی لوٹ مار بچانے کی سب تدبیریں ناکام ہو چکی ہیں۔‘‘ اور یہ کہ ’’ظل سبحانی (نوازشریف) کیراج کماری (مریم) اقتدار سے باہر، پانی سے باہر مچھلی کی طرح تڑپ رہی ہے…میری تقرری اپوزیشن پر بم بن کر گری ہے اس کا دھواں اب تک اٹھ رہا ہے مگر وہ پھر بھی اپوزیشن کو زخموں پر مرہم رکھنے کے لئے ’برنال‘ پیش کرتی ہیں…‘‘
٭قارئین کرام، مریم نواز تو سات روز کے لئے گلگت چلی گئی ہیں، پتہ نہیں کیا جواب دیں گی؟ البتہ  ’برنال‘ کا معاملہ دلچسپ ہے۔ ایک قاری نے کہا ہے کہ ’برنال‘ تو آگ سے جھلسے ہوئے زخموں پر لگائی جاتی ہے؟ یہ بات درست ہے مگر اسے عام زخموں پر بھی لگایا جا سکتا ہے۔ برنال کی مرہم 1950ء میں ایک بھارتی ڈاکٹر ’بوٹس‘ نے ایجاد کی۔ اسے ایک شخص ’کِنول‘ نے خرید کر ایک فرم ’پیرامال‘ کو فروخت کر دیا۔ اس کے بعد مختلف کمپنیوں سے ہوتی ہوئی یہاں تک پہنچی ہے۔ یہ دوا استعمال ہو یا نہ ہو، عام گھروںمیں محفوظ رکھی جاتی ہے۔ اب دوسری بات کہ ’’برنال‘‘ ارجنٹائن کے ایک بڑے شہر کا بھی نام ہے جو سطح سمندر سے صرف 16 میٹر (53 فٹ) بلند ہے، آبادی تقریباً ایک لاکھ 40 ہزار ہے۔ خوبصورت ثقافتی مرکز ہے۔
٭ایک خبر کہ عرب امارات کے مسافر طیاروں نے اسرائیل تک براہ راست پروازیں شروع کر دی ہیں۔ اس سے ایک بات یاد آ گئی کہ ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کے بارے میں خبریں عام ہوئی تھیں کہ اجلاس میں سعودی عرب غیر جانبدار رہا تھا اور ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا تھا۔ کراچی سے معروف تجزیہ نگار علی اشرف خاں نے معتبر ذرائع کے حوالے سے تصحیح کی ہے کہ سعودی عرب اور عرب امارات غیر جانبدار نہیں رہے، بلکہ یہ کہ…یہ کہ ان دونوں ملکوں نے پاکستان کے خلاف ووٹ دیئے، مزید یہ کہ ذیلی 203 تنظیم کے 20 سال سے سربراہ  رہنے کے باعث سعودی عرب کے پاس دو ووٹ تھے۔ یہ دو اور عرب امارات کا ایک ووٹ پاکستان کو مل جاتے تو وہ گرے لسٹ سے نکل جاتا۔ یہ بھی سن لیں کہ پاکستان کے خلاف ووٹ دینے والوں میں بنگلہ دیش، انڈیا اور تھائی لینڈ بھی شامل تھے۔ یہ سارے ملک بھارت کے براہ راست زیر اثر بلکہ ’اقتصادی کنٹرول‘ میں ہیں۔ دوسری طرف پاکستان کے حق میں ووٹ دینے والوں میں چین، ترکی، ملائیشیا، آسٹریلیا اور حیرت انگیز طور پر امریکہ شامل تھے۔ امریکہ کا معاملہ یہ تھا کہ ٹرمپ کو اپنے حق میں لاکھوں امریکی پاکستانیوں کے ووٹوں کی ضرورت تھی!! قارئین! دل دکھ رہا ہے۔ باقی تجزیہ آپ کر لیں۔ وزارت خارجہ کوئی تصحیح کرنا چاہے تو کالم حاضر ہے۔
٭نیب کے چیئرمین کی پھر بار بار دہرائی جانے والی بات کہ بڑی کرپٹ مچھلیوں کو نہیں چھوڑیں گے۔ گزشتہ روز کہا ہے کہ ایک موٹر سائیکل کا مالک دبئی میں اربوں کے ٹاورز کا مالک کیسے بن گیا؟ جن کے پاس 1980ء میں کچھ نہیں تھا وہ کھربوں کے مالک بنے ہوئے  ہیں۔ ان کا محاسبہ کیا جائے گا۔‘‘ نیب کے چیئرمین یہ باتیں طویل عرصے سے بار بار دہرا رہے ہیں۔ پتہ نہیں محاسبہ کب ہو گا؟ چیئرمین صاحب کے عہدہ کی مدت میں ایک سال سے بھی کم عرصہ رہ گیاہے۔ تین برسوںمیں کچھ نہیں کیا جا سکا تو ایک سال میں کیا کیا جا سکے گا! کان پک گئے یہ باتیں سنتے سنتے! اور سنئے جناب چیئرمین! آپ کہہ رہے ہیں کہ کچھ لوگوںکے پاس 1980ء میں کچھ نہیں تھا! مگر اسی روز لندن میں نوازشریف نے چند ’صحافیوں‘ سے باتیں کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’1960ء میں میرے والد میاں محمد شریف کا اربوں کا کاروبارتھا‘‘ نوازشریف نے ان ’صحافیوں‘ پر زور دیا کہ وہ ان کے ’مخصوص‘ بیانات کی بھرپور تشہیر کریں! (مفت میں؟) میں اس معاملے میں دور نہیں جانا چاہتا مگر کیا ان بیانات کی تشہیر چاہئے جنہیں بھارت پاکستان کے خلاف سلامتی کونسل اور ایف اے ٹی ایف کے پاس لے جا رہا ہے تا کہ پاکستان کو بلیک لسٹ میں شامل کرایا جا سکے!! سعودی عرب اور میاں نوازشریف کے عمل اور بیانات سے پھر علامہ اقبال کی بات یاد آ گئی کہ ’’کعبے کو پاسباں مل گئے کعبے کے صنم خانے سے‘‘
٭ایک خبر: لاہور میں 13 دسمبر کو اپوزیشن اتحاد کے جلسے کی میزبان ن لیگ ہو گی۔ پارٹی کے پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے پنجاب سے تعلق رکھنے والے قومی و صوبائی اسمبلیوں کے ارکان سے پانچ پانچ لاکھ روپے چندہ جمع کرانے کی ہدائت کی ہے۔ خبر کے مطابق 37 ارکان چندہ جمع کرا چکے ہیں (ایک کروڑ85 لاکھ)۔ یہ سلسلہ جاری ہے۔
٭وزیراعظم نے پھر کہا ہے کہ معیشت درست راستے پر چل پڑی ہے…شملہ مرچ، لیموں300 روپے کلو!!

تازہ ترین خبریں

ہڈیاں ریزہ ریزہ، زخموں سے چور جسم ،سالکوٹ میں سری لنکن شہری پر کیا قیامت ڈھائی گئی،رپورٹ نےنے عوام پر سکتہ طاری کردیا، ہر آنکھ آشکبار

ہڈیاں ریزہ ریزہ، زخموں سے چور جسم ،سالکوٹ میں سری لنکن شہری پر کیا قیامت ڈھائی گئی،رپورٹ نےنے عوام پر سکتہ طاری کردیا، ہر آنکھ آشکبار

مسلمان اپنے گناہوں کی معافی مانگ لیں ، دنیا دن کے وقت کالے سیاہ اندھیرے میں ڈوب گئی ، آسمان پر کیا بڑی تبدیلی نظر آرہی ہے ؟ 

مسلمان اپنے گناہوں کی معافی مانگ لیں ، دنیا دن کے وقت کالے سیاہ اندھیرے میں ڈوب گئی ، آسمان پر کیا بڑی تبدیلی نظر آرہی ہے ؟ 

پاکستان بمقابلہ بنگلہ دیش ، دوران میچ ایسا کیا ہوا کہ کھیل اچانک روک دیا گیا گیا ، ؟ بڑی خبر

پاکستان بمقابلہ بنگلہ دیش ، دوران میچ ایسا کیا ہوا کہ کھیل اچانک روک دیا گیا گیا ، ؟ بڑی خبر

سونے کے خریداروں کیلئے بڑی خبر ، قیمت کو اچانک گیئر لگ گیا ، نئی قیمت جانیں اس خبر میں 

سونے کے خریداروں کیلئے بڑی خبر ، قیمت کو اچانک گیئر لگ گیا ، نئی قیمت جانیں اس خبر میں 

افسوسناک سانحہ سیالکوٹ، سری لنکا نے پاکستان سے بڑا مطالبہ کر دیا

افسوسناک سانحہ سیالکوٹ، سری لنکا نے پاکستان سے بڑا مطالبہ کر دیا

فہد مصطفیٰ کی خاتون کیساتھ ایسی شرمناک حرکت کہ سوشل میڈیا پر طوفان آگیا،’’ منافقت‘‘کا الزام لگا دیا

فہد مصطفیٰ کی خاتون کیساتھ ایسی شرمناک حرکت کہ سوشل میڈیا پر طوفان آگیا،’’ منافقت‘‘کا الزام لگا دیا

تین ماہ تک مسلسل بارشیں۔۔ محکمہ موسمیات نےٹھنڈی ٹھنڈی  پیشنگوئی کردی

تین ماہ تک مسلسل بارشیں۔۔ محکمہ موسمیات نےٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کردی

کورونا وائرس کا ’اومیکرون‘ویئیرنٹ خوفناک صورت اختیار کرگیا،ویکسین بھی بے اثر نکلی، پوری دنیا کیلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی

کورونا وائرس کا ’اومیکرون‘ویئیرنٹ خوفناک صورت اختیار کرگیا،ویکسین بھی بے اثر نکلی، پوری دنیا کیلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی

15سالہ افغان لڑکی دنیا کی 25بااثر خواتین میں شامل، یہ لڑکی کون ہے اور کونسا بڑاکارنامہ سرانجام دے چکی ہے؟

15سالہ افغان لڑکی دنیا کی 25بااثر خواتین میں شامل، یہ لڑکی کون ہے اور کونسا بڑاکارنامہ سرانجام دے چکی ہے؟

قوم کا طویل انتظار ختم ہوا، آئندہ15دنوں میں کیا ہونیوالا ہے؟وفاقی وزیر اسد عمر نے بڑی خوشخبری سنا دی

قوم کا طویل انتظار ختم ہوا، آئندہ15دنوں میں کیا ہونیوالا ہے؟وفاقی وزیر اسد عمر نے بڑی خوشخبری سنا دی

اب 100روپے کی چیز 65روپے میں ملے گی، حکومت نے گھی ، تیل اورآٹے پر تاریخی سبسڈی دینے کا اعلان کر دیا

اب 100روپے کی چیز 65روپے میں ملے گی، حکومت نے گھی ، تیل اورآٹے پر تاریخی سبسڈی دینے کا اعلان کر دیا

سموگ سے چھُٹکارا، محکمہ موسمیات نے کون کونسے شہروں میں بارشوں کی پیشنگوئی کر دی؟پریشان شہریوں کیلئے اچھی خبر آگئی

سموگ سے چھُٹکارا، محکمہ موسمیات نے کون کونسے شہروں میں بارشوں کی پیشنگوئی کر دی؟پریشان شہریوں کیلئے اچھی خبر آگئی

این اے 133ضمنی الیکشن سے پہلے پیپلزپارٹی کو بڑی حمایت مل گئی ، ن لیگ کا جیتنا مشکل

این اے 133ضمنی الیکشن سے پہلے پیپلزپارٹی کو بڑی حمایت مل گئی ، ن لیگ کا جیتنا مشکل

پیٹرول 175روپے فی لیٹر۔۔؟؟ مشیرِ خزانہ نے پاکستانیوں پر بجلیاں گرادیں

پیٹرول 175روپے فی لیٹر۔۔؟؟ مشیرِ خزانہ نے پاکستانیوں پر بجلیاں گرادیں