12:39 pm
امریکی نظام سیاست اور نومنتخب قیادت

امریکی نظام سیاست اور نومنتخب قیادت

12:39 pm

جمہوریت کی مضبوطی کا پیمانہ پرامن انتقال اقتدار ہے۔ وقت پر انتخابات کا انعقاد اور کسی تیسری قوت کی مداخلت کے بغیر اقتدار جیتنے والی جماعت یا منتخب شخص کو منتقل کر دینا کسی سیاسی نظام کی مضبوطی کی دلیل ہوتاہے۔ امریکہ میں یہ عمل گزشتہ سوا دو صدیوں سے جاری ہے چنانچہ امریکہ کے انتخابی بندوبست اور انتقال اقتدار کے انتظام کو مدنظر رکھتے ہوئے کہا جاسکتا ہے کہ امریکہ مضبوط جمہوری سیاسی نظام رکھنے والا ملک ہے۔1789 ء میں ریاست ہائے متحدہ امریکہ کا قیام عمل میں آیا تو دنیا کسی ایسے تجربے سے نابلد تھی۔ برطانیہ جسے دنیا کی جمہوریتوں کی ماں کہا جاتا ہے بھی بادشاہت کے زیرانتظام ایک انتخابی بندوبست تھا جو آج بھی ویسے ہی موجود ہے۔ برطانیہ میں آج بھی کرائون کی حکومت ہے اور وسیع تر خودمختاری کے ساتھ عوام کو حق حاکمیت ملا ہوا ہے۔ امریکہ میں کسی برتر شخصیت کے بغیر جسے اقتدار اعلیٰ کا حق بلاشرکت غیرے اور مستقل بنیادوں پر عطا ہوتا، دنیا کو ایک ایسے جمہوری بندوبست سے متعارف کروایا جو اپنی مثال آپ تھا۔ ریاست ہائے متحدہ کا آئین بھی جو محض سات آرٹیکلز پر مشتمل ہے ایک بے مثال دستاویز کہی جاسکتی ہے۔ وفاق کا تصور ، صدارتی نظام، سپریم کورٹ، پارلیمنٹ (کانگرنس) تفریق اختیارات اور چیک اینڈ بیلنس الغرض ایک بہترین سیاسی نظام کی تشکیل اس آئین کی وہ خصوصیت تھی جس کا کوئی مقابلہ نہیں ہے۔ آئین ساز کمال کے لوگ تھے اور اس پر عمل کرنے والے تو ان سے بڑھ کر باکمال اور غیر معمولی ثابت ہوئے۔ بہترین عمل کی ابتداء آئین سازوں نے کی اور اپنے پیچھے زبردست مثالیں چھوڑ گئے۔ 
جارج واشنگٹن دو مرتبہ امریکی صدر منتخب ہوئے ،آئین ان پر تیسری مرتبہ صدر بننے کی قدغن نہیں لگاتا تھا لیکن وہ تیسری مرتبہ انتخابات لڑنے کیلئے آمادہ نہ ہوئے۔ ان کے بعد آنے والوں نے بھی ان کی تقلید کی۔ یوں امریکہ کی تاریخ میں کسی آئینی و قانونی پابندی کے بغیر150 سال تک ہر صدر کبھی تیسری مرتبہ کیلئے امیدوار نہ بنا۔ دوسری جنگ عظیم کے معروضی حالات میں روز ویلٹ نے پہلی مرتبہ اس روایت کو توڑا تو امریکیوں نے بعد ازاں 22ویں آئینی ترمیم کے ذریعے تیسری مرتبہ الیکشن لڑنے پر آئینی پابندی عائد کر دی۔ ہمارے یہاں لوگوں کا جی ہی نہیں بھرتا، چنانچہ پاکستان میں اٹھارویں آئینی ترمیم کے ذریعے تیسری مرتبہ الیکشن لڑنے کی پابندی کو ختم کر دیا گیا تاکہ نواز شریف کی وزارت عظمیٰ کی راہ ہموار ہوسکے۔ 35سال اقتدار کے مزے لوٹنے والے مسندا اقتدار میں رہنا چاہتے ہیں۔ یہ لوگ قوم کو کیا جمہوریت دیں گے کہ جن کی سیاست کے تمام تانے بانے اپنی ذات کے گرد بنے ہوئے ہیں۔ سیاسی جماعتیں ان کی لمیٹڈ کمپنیاں ہیں جو ان کے ناموں کے ساتھ جڑی ہوئی ہیں۔ امریکی کی ریپبلکن پارٹی اور ڈیمو کریٹک پارٹی کے صدر کون ہیں کیا کسی کو ان کے ناموں کا بھی پتہ ہے۔ لوگ سیاسی جماعتوں کی قیادت سنبھالتے ہیں یعنی آتے ہیں اور چلے جاتے ہیں لیکن سیاسی جماعتوں کا انتظام چلتا رہتا ہے۔ پاکستان کے جمہوری چیمپئن اس فکر میں گھلتے رہتے ہیں کہ ان کے بعد ان کی سیاسی وراثت کس بیٹے اور بیٹی کو منتقل ہوگی۔ جمہوریت نہ ہوئی بادشاہت ہوگئی کہ باپ کے بعد بیٹا یا بھائی بادشاہ بنے گا۔ پاکستان کے سیاسی نظا م کو اس اپروچ نے تباہ کر دیا ہے۔ دوسری طرف ہم دیکھتے ہیں کہ امیگرنٹس کے بچے ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے صدر اور نائب صدر بن رہے ہیں۔ باراک اوبامہ کا والد کینیا سے امریکہ آیا تھا جبکہ ابھی منتخب ہونے والی امریکی نائب صدر کملا ہیرس کی والدہ ہندوستانی اور والد افریقی اوریجن کے ہیں۔ یہ ہیں وہ سیاسی نظام جہاں کامیابی مال و دولت یا بڑی برادری و نسل کی بنیاد پر نہیں بلکہ صرف اور صرف آپ کی ذاتی صلاحیت اور محنت کے بل بوتے پر حاصل ہوتی ہے۔ برطانیہ کی کنزویٹو پارٹی کی چیئرمین پاکستانی نژاد سعیدہ وارثی بن جاتی ہیں اور غریب پاکستانی ماں باپ کی اولاد صادق خان لندن کے میئر منتخب ہو جاتے ہیں۔ یہ ہیں وہ مہذب جمہوری معاشرہ جہاں حسب نسب اور ذات پاس نہیں شخصی اوصاف اہمیت رکھتے ہیں۔ 
ریاست ہائے متحدہ امریکہ دنیا کا عظیم ملک بنا ہے تو اس کے پیچھے وہ سیاسی نظام کارفرما ہے جسے اہل سیاست نے کسر نفسی کے جذبے کے تحت مضبوط سے مضبوط تر بنانے کی سعی کی ہے۔ فرد، معاشرے اور ریاست کے مابین تعلق کی مضبوطی کیلئے امریکی اہل سیاست نے جو کارہائے نمایاں سرانجام دیئے ہیں آج کا ترقی یافتہ ، مہذب اور سیاسی طور پر مستحکم امریکہ اس کا عملی ثبوت ہے۔ امریکی ریاست کے بانیوں نے چیک اینڈ بیلنس کے اصول کے تحت ابتدا میں جو سیاسی نظام دیا امریکہ کے اہل سیاست نے نہ صرف اس کی صحیح معنوں میں پیروی کی بلکہ اپنے عمل سے گورنمنٹ کو شہریوں کے بنیادی حقوق کو تحفظ دینے، معاشرے کی تہذیب اور ملکی ترقی کیلئے استعمال کیا۔ انگلش فلاسفر جان لالک کے معاہدہ عمرانی اور فرانسیسی مفکر مانتیسکو کے فلسفہ تفریق اختیارات پر کاربند ہوکر ریاست ہائے متحدہ امریکہ نے د نیا کو ایک مضبوط جمہوری سیاسی نظام دیا اور ثابت کر دیا کہ انسان ’’انسانوں‘‘ پر حکومت کرسکتا ہے بشرطیکہ وہ ’’انسانوں‘‘ کی طرح حکومت کرے اور جانور نہ بنے۔ یہ سیاسی نظام ایک مضبوط معاشی نظام کی بنیاد بھی بنا ء اور اس نے دنیا کو ایک متحرک، آزاد اور خودمختار عدالتی نظام سے بھی متعارف کرایا۔ انسانی معاشرے کی تہذیب اور ترقی کے سوتے ہمیشہ مروجہ سیاسی نظام سے پھوٹتے ہیں، جہاں سیاسی نظام اہل سیاست کے ذاتی مفادات کی بھینٹ چڑھ جاتے ہیں وہ معاشرے پاکستان جیسے ممالک کا نقشہ پیش کرتے ہیں اور جہاں سیاسی نظام طے شدہ ضابطوں اور قاعدوں کامرہون منت ہوتا ہے اور اہل سیاست اپنی ذات سے بالاتر ہوکر اپنے فرائض منصبی ادا کرتے ہیں وہ معاشرے ثریا کی رفعتوں کو چھوتے ہیں اور دنیا کی باوقار اقوام میں ان کا شمار ہوتا ہے۔

 

تازہ ترین خبریں

شہباز شریف بڑے سمجھدار ہیں، وہ قدم پھونک پھونک کر رکھیں گے، وزیر داخلہ

شہباز شریف بڑے سمجھدار ہیں، وہ قدم پھونک پھونک کر رکھیں گے، وزیر داخلہ

پرانا وقت دوبارہ لوٹ آیا ۔۔۔۔۔اب سحر و افطار کا اعلان صدیوں پرانی توپ سے ہو گا۔

پرانا وقت دوبارہ لوٹ آیا ۔۔۔۔۔اب سحر و افطار کا اعلان صدیوں پرانی توپ سے ہو گا۔

ملک بھر کی شاہراہوں پر اس وقت کیا چل رہا ہے ؟؟؟ فواد چوہدری نے خوشخبری سنادی

ملک بھر کی شاہراہوں پر اس وقت کیا چل رہا ہے ؟؟؟ فواد چوہدری نے خوشخبری سنادی

حکومت اور اپوزیشن کا ڈیڈ لاک برقرار ۔۔اپوزیشن نے کیا مانگ لیں جس پر حکومت نے صاف انکار کردیا

حکومت اور اپوزیشن کا ڈیڈ لاک برقرار ۔۔اپوزیشن نے کیا مانگ لیں جس پر حکومت نے صاف انکار کردیا

آئی جی پنجاب ہسپتال پہنچ گئے ۔۔۔ وجہ کیا بنی؟ ۔۔ انتہائی اہم خبر سامنے آگئے

آئی جی پنجاب ہسپتال پہنچ گئے ۔۔۔ وجہ کیا بنی؟ ۔۔ انتہائی اہم خبر سامنے آگئے

ویکسین سے خون جمنے لگا ۔۔۔۔ عارضی طور پر فراہمی روک دی گئی ۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

ویکسین سے خون جمنے لگا ۔۔۔۔ عارضی طور پر فراہمی روک دی گئی ۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

ویکسین سے خون جمنے لگا ۔۔۔۔ عارضی طور پر فراہمی روک دی گئی ۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

ویکسین سے خون جمنے لگا ۔۔۔۔ عارضی طور پر فراہمی روک دی گئی ۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

کورونا کی تیسری لہر ۔۔۔۔ ملک کا ایسا صوبہ بھی ہے جہاں 24 گھنٹوں میں کوئی ہلاکت نہیں ہوئی ۔۔۔ جان کر آپ بھی خوش ہوجائنگے

کورونا کی تیسری لہر ۔۔۔۔ ملک کا ایسا صوبہ بھی ہے جہاں 24 گھنٹوں میں کوئی ہلاکت نہیں ہوئی ۔۔۔ جان کر آپ بھی خوش ہوجائنگے

آئندہ مالی سال کا بجٹ کتنا ہوگا ۔۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

آئندہ مالی سال کا بجٹ کتنا ہوگا ۔۔۔۔انتہائی اہم خبر سامنے آگئی

قیدیوں کو لے کر آنے والی وین کو حادثہ، دو پولیس اہلکار جاں بحق

قیدیوں کو لے کر آنے والی وین کو حادثہ، دو پولیس اہلکار جاں بحق

پاکستان میں سیاست مفادات کا ٹکرائو، سیاسی جماعتیں ایک دوسرے کو استعمال کرتی رہیں، تجزیہ کار

پاکستان میں سیاست مفادات کا ٹکرائو، سیاسی جماعتیں ایک دوسرے کو استعمال کرتی رہیں، تجزیہ کار

جہانگیر ترین جانتے ہیں کہ ان کے خلاف کارروائی کے پیچھے خود عمران خان ہیں،حامدمیر

جہانگیر ترین جانتے ہیں کہ ان کے خلاف کارروائی کے پیچھے خود عمران خان ہیں،حامدمیر

آرمی چیف سے امریکی وزیرخارجہ کا رابطہ،دو طرفہ تعاون پر تبادلہ خیال

آرمی چیف سے امریکی وزیرخارجہ کا رابطہ،دو طرفہ تعاون پر تبادلہ خیال

کابینہ میں تبدیلی ۔ کون کون سی 3وزرا کی چھٹی ہوئی ہے ؟وزیراعظم نے تصدیق کردی۔۔ آج کی بڑی خبر

کابینہ میں تبدیلی ۔ کون کون سی 3وزرا کی چھٹی ہوئی ہے ؟وزیراعظم نے تصدیق کردی۔۔ آج کی بڑی خبر