12:18 pm
پھرچراغوں میں روشنی نہ رہی

پھرچراغوں میں روشنی نہ رہی

12:18 pm

 (گزشتہ سے پیوستہ)
جنرل ضیاالحق کے دورِاقتدارمیں سرخ ریچھ ہمارے پڑوسی ملک افغانستان پردھاوابول دیتا ہے۔  اس کواپنی طاقت کا اس قدرگھمنڈہوتاہے کہ وہ گرم پانیوں تک رسائی کوچنددنوں کاکھیل سمجھتا تھا لیکن دنیاکی اس سپرطاقت کواس کی بڑی بھاری قیمت ادا کرنا پڑی اورافغان مجاہدین اور پاکستان کی بے پناہ قربانیوں سیاسی ملک سے دنیاکی چھ نئی مسلم ریاستیں معرضِ وجود میں آئیں۔جنرل ضیاالحق جواس خطے میں ایک نئے اورانتہائی مضبوط اسلامی بلاک کا خواب دیکھ رہے تھے کہ اچانک ان کاطیارہ فضا میں تباہ کردیاجاتاہے۔
ساتواں منظرملاحظہ کیجئے!
پاکستان میں یکے بعددیگرے دوسیاسی جماعتوں کی حکومتیں قائم ہوتی ہیں لیکن کوئی بھی اپنی آئینی مدت پوری نہیں کر پاتی۔ملک کی سیاسی جماعت مسلم لیگ(ن)جودوتہائی اکثریت کے ساتھ ملک میں حکومت کررہی ہوتی ہے،اس کے اپنے ہی مقررکردہ فوجی چیف سے سخت اختلافات شروع ہوجاتے ہیں جس کاجوہری سبب کارگل کی وہ جنگ بتایا جاتا ہے جس میں بھارتی سیناکولگے زخم آج تک مندمل نہیں ہوسکے جبکہ نوازشریف حکومت پہلی مرتبہ بھارتی بنئے کے ساتھ ایک خوشگوارسیاسی تعلقات بحال کرنے کی شروعات میں مصروف تھی۔سول حکومت کی ملک کے سب سے بڑے دفاعی ادارے کے سربراہ کواچانک تبدیل کرکے اس کے جہازکوسری لنکاسے واپسی پرملک میں اترنے کی اجازت نہ دے کر تین سوزائد مسافروں کی جانوں کودائوپرلگادیاگیالیکن نوازشریفکی غلط پلاننگ ہی ان کے گلے پڑگئی۔
فوج نے اپنے جرنیل کوبچاتے ہوئے اپنی کارکردگی کامظاہرہ کرتے ہوئے ادارے کوبھی کسی بڑی تباہی سے محفوظ کرلیالیکن اس کے جواب میں ایک دفعہ پھرفوجی کمانڈوجنرل پرویزمشرف اوراس کے ساتھی منتخب حکومت کومعزول کر دیتے ہیں اورمنتخب حکمرانوں کوجلاوطن کر دیا جاتا ہے اورگیارہ سال اس ملک کے نہ صرف تمام اداروںکوتباہ بربادکردیتاہے بلکہ اپنے ناجائز اقتدار کودوام بخشنے کیلئے ملک کی خودمختاری کوبھی امریکا کے ہاتھوں فروخت کردیتاہے۔
اس ملک کے ہزاروں بیٹوں اوربیٹیوں کو عافیہ بیٹی کے ہمراہ ڈالروں کے عوض امریکاکے ہاتھ فروخت کردیاجاتاہے اوراسی ترقی یافتہ دورمیں افغان سفیر ملاضعیف کوبھی قصرسفیدکے فرعون کی سپاہ کے حوالے کردیاجاتاہے جواسے گھسیٹ کرپہلے سے منتظراپنے جہازمیں لادکراپنی منزل کوروانہ ہوجاتاہے اورتاریخ ہمیں بتاتی ہے کہ زمانہ جاہلیت میں بھی غیرملکی سفیروں کوہرقسم کی امان کاحق حاصل ہوتاتھالیکن اقتدارکے اندھے جوش نے ان تمام روایات کواپنے پائوں تلے روندکرایک بدترین مثال قائم کرنے کا آغاز کر دیتے ہیں۔قسمت کی ستم ظریفی دیکھئے آخری  وقت تک اپنے اقتدارکودوام کی سازشیں کرنے والا بالآخر اقتدارکی انہی غلام گردشوں کا شکار ہو کر اپنے انہی مخالفین جن کے بارے میں کئی باراعلان کرچکاہوتا ہے کہ یہ جلاوطن کبھی بھی ملک میں واپس نہیں آسکتے، خوداپنے ہاتھوں سے ان سب کوسنگین ترین مقدمات میں منحوس ’’این آراو‘‘ دینے باوجود آخری گارڈ آف آنرکے بعدملک سے رخصت ہوجاتاہے اوراس ملک کوان کے حوالے کردیتاہے جن کے خلاف ملک کی اعلی عدالت میں کرپشن کے کئی مقدمات زیرِسماعت تھے۔
اب آخری آٹھواں منظرملاحظہ کیجئے !
اس آخری دردناک منظرنامے کوملاحظہ کرنے کیلئے اپنے دل پرہاتھ رکھناہوگا۔میں اپنے پوتے کے سامنے دنیاکانقشہ بچھائے بیٹھاہوں۔میں پانیوں میں گھرے ایک جزیرے کے ارد گردپنسل پھیرتا ہوں،پنسل گھماتاہواکراچی کے ساحل پرلاکرکہتا ہوں ’’بنگلہ دیش 49سال پہلے پاکستان کاحصہ تھا، پاکستان شروع ہی یہاں سے ہوتاتھا۔ دراصل قیام پاکستان کے بعدمحمدعلی جناح جلدہی ہم سے رخصت ہوگئے۔ان کی رخصتی کے آخری لمحات میں ان کی شکستہ ایمبولینس کراچی کی سڑک پرخراب کھڑی رہی اورکسی کویہ علم نہ ہوسکاکہ اس میں بانی پاکستان اپنی آخری سانسیں لے رہے ہیں۔ان کے ساتھی لیاقت علی خان کوایک سازش کے تحت راولپنڈی کے اجتماع میں گولی مار کر شہیدکردیاگیااورقاتل اکبرخان کوبھی گولی مارکرقصہ تمام کردیاگیااورگولی مارنے والا پولیس افسرنجیب خان کوعہدہ پرترقی دے دی گئی۔ اس عمل کے بعدیہ عقدہ آج تک نہیں کھلاکہ اس سازش کے پس پردہ کون سے چہرے تھے۔
ایک بیورو کریٹ کوگورنرجنرل بناکرکچھ عرصے کیلئے خواجہ ناظم الدین کو وزیراعظم کاقلمدان سونپ دیااوران کو جلد ہٹا کر محمدعلی بوگرہ کووزیراعظم بناکر اقتداراعلی سے بنگال کی نمائندگی ختم کردی گئی جہاں سے مایوسی میں اضافہ ہوالیکن 1956ء کے آئین سے بنگالیوں کی خوشی اس وقت کافورہوگئی جب 1958ء میں مارشل لانے بنگال کی سیاسی قوتوں کوپھر سے مایوسی کی دلدل میں دھکیل دیا۔ فوج کے سینئررینکنگ میں صرف دو بنگالی افسرتھے جن میں ایک کرنل اور ایک میجر جنرل تھالہٰذا بنگالی یہ سوچنے پرمجبورہوگئے کہ فوجی حکومت کی موجودگی میں اقتدار تک ہماری کبھی رسائی نہیں ہوسکتی۔اس پر مستزادون یونٹ کے قیام کااعلان کرکے آبادی کے تناسب کوختم کرنے کیلئے مشرقی پاکستان کے 56فیصد ووٹوں کو 44فیصد کے برابر قرار دیدیاگیاجس کے بعد مغربی پاکستان کی نوکر شاہی نے سول اور ملٹری بیوروکریسی سے ساز باز کر کے قومی اداروں پراپنی گرفت مضبوط کرتے ہوئے مشرقی پاکستان کے ہرضلع کاڈی سی اورایس پی مغربی پاکستان سے مقررکرنا شروع کردیا۔یہی وجہ ہے جب ایوب خان کے خلاف مادرِملت فاطمہ جناح انتخابی میدان میں اتریں تومشرقی پاکستان کی جمہوری قوتیں اورعوام آپ کے ساتھ کھڑی ہوگئی لیکن ایوب شاہی الیکشن میں جعلی نتائج جاری کرکے محترمہ کوہرادیا جومشرقی پاکستان کی جمہوری قوتوں اور عوام کیلئے بہت بڑادھچکاتھا ۔بنگالی سپیکرقومی اسمبلی مولوی تمیزالدین کے ساتھ ہتک آمیز سلوک  دوسرا دھچکاتھا۔
1965ء کی جنگ میں ساری قوت مغربی محاذپرمامورکرنے کی وجہ مغربی محاذسے مشرقی پاکستان کادفاع قراردیاگیالیکن اس حکمت عملی نے بنگالی عدم تحفظ کاشکارہوگئے۔ان حالات کاہمسایہ دشمن نے بھرپورفائدہ اٹھانے کیلئے ایک منظم سازش کے تحت 95فیصدہندوبنگالی ہندو اساتذہ کے ذریعے دوقومی نظریہ کونابودکرنے کیلئے  غلط پروپیگنڈے سے نئی نسل کومغربی پاکستان کومشرقی پاکستان کی دولت لوٹنے اورشدیدغربت کاذمہ دارقراردیتے ہوئے ان کے جذبات کوخوب بھڑکاتے ہوئے دل میں دراڑیں پیداکردیں جس کی بناء پر اگر تلہ سازش کیس میں ملوث شیخ مجیب الرحمان انہیں اپنامسیحانظرآیا۔
ان حالات میں ملک کی تمام اپوزیشن نے ایوب خان کے خلاف ایک تحریک شروع کردی گئی اوراپوزیشن نے شیخ مجیب الرحمان کورہائی دلوادی جبکہ اس پرمضبوط شواہد کی بنا پرمقدمہ چل رہاتھا۔مذاکرات کے کئی ناکام ادوارکے بعد 1969ء  میں ایوب خان نے بیماری کی وجہ سے صدارت چھوڑتے ہوئے غیرقانونی طور پراقتدار ایک دوسرے جرنیل کومنتقل کردیا جبکہ قانون کے  مطابق قائم مقام صدرکیلئے اسپیکرکویہ منصب سنبھالناتھالیکن بنگالی ہونے کی وجہ سے ایسانہ ہوسکا۔ ان حالات کافائدہ اٹھاتے ہوئے شیخ مجیب الرحمان نے چھ نکات کی بنیادپرمشرقی پاکستان میں مکمل اکثریت حاصل کرلی لیکن مغربی پاکستان میں زیادہ سیٹیں حاصل کرنے والے بھٹونے ’’ادھرتم ادھرہم‘‘کانعرہ لگاکران کی اکثریت تسلیم کرنے سے انکار کردیا۔اس کے بعدچراغوں میں روشنی نہ رہی اور ’’کشورِ حسین، شادباد‘‘ دولخت  ہوگیا۔
 میری آوازکی ارتعاش کے بعدمیرے پوتے کی آنکھوں میں حیرت امڈ آتی ہے۔ وہ تھوڑی دیر سوچتاہے اورپھرمیری حالت کودیکھ کر گھبرا کرنہائت معصومیت سے پوچھتاہے’’کیا ان لوگوں کوکوئی سزادی گئی؟‘‘میں اپنے پوتے  کے منہ پر ہاتھ رکھ دیتاہوں،میں اس کے کانوں پر جھکتا ہوں اوراسے پیارسے کہتاہوں’’نہیں بیٹا، وسیع ترقومی مفادنے ہمارے ہاتھ روک لئے تھے ‘‘۔ میرا پوتامیراہاتھ ہٹانے کی کوشش کرتاہے لیکن میں اپنی گرفت مضبوط کرلیتاہوں۔میں جانتاہوں میں اس کے مزید سوالوں کا جواب نہیں دے سکوں گالیکن یہ آٹھواں منظرمیرے حافظے سے چپک کررہ جاتاہے اورمیں باربارسوچتاہوں یہ ہاتھ اس بچے کے منہ پر کب تک رہے گا،جب اس کے بازوں میں طاقت آجائے گی،جب یہ بڑی آسانی سے میرا ہاتھ جھٹک دے گا،جب اس کے سارے سوال بول پڑیں گے تواس وقت میراردِعمل کیاہوگا،اس وقت میں کہاں جاؤں گا،اس وقت میرے پاس کیاجواب ہوگا۔
میں سوچتا ہوں کاش!اس بچے کے بڑے ہونے سے پہلے میں دنیاکے سارے نقشے جلا سکوں، میں تاریخ کی ساری کتابیں دریابرد کرسکوں،میں وقت کو،تاریخ کو،حالات کواور ساری حقیقتوں کونئے نام،نئے لفظ دے سکوں،میں شکست کوفتح میں تبدیل کرسکوں،میں اپنی بزدلی، اپنی خاموشی کونظریئے کی شکل دے سکوں،میں اپنے آپ کو مطمئن کرسکوں، کاش اے کاش!
بہت  اداس  تھا منظر چراغ  بجھنے کا
لپٹ کے رودیا،میں بھی ہواکے جھونکے سے

تازہ ترین خبریں

ایک خاتون نےمرد بن کر دو ، دوشادیاں رچالیں اور پھر۔۔ ۔وہ کام کر دکھایا کہ سننے والوں پر لرزہ طاری ہو جائے 

ایک خاتون نےمرد بن کر دو ، دوشادیاں رچالیں اور پھر۔۔ ۔وہ کام کر دکھایا کہ سننے والوں پر لرزہ طاری ہو جائے 

بچے بھوکے ہوتے ہی لیکن کھانا نہیں مانگتے کہیں ’ماں‘ خودکشی نہ کرلے، بچوں کی بھوک ماں کیسے برداشت کرے؟

بچے بھوکے ہوتے ہی لیکن کھانا نہیں مانگتے کہیں ’ماں‘ خودکشی نہ کرلے، بچوں کی بھوک ماں کیسے برداشت کرے؟

معمولی تلخ کلامی، پاکستان کے اہم شہر کے اسسٹنٹ کمشنر کو قتل کر دیا گیا 

معمولی تلخ کلامی، پاکستان کے اہم شہر کے اسسٹنٹ کمشنر کو قتل کر دیا گیا 

چھٹی کے روز پاکستان میں دوسرا بڑا سانحہ، کئی اموات 

چھٹی کے روز پاکستان میں دوسرا بڑا سانحہ، کئی اموات 

معروف اداکارہ نےاپنے مداحوں کوبغیر شادی ماں بننے کی خوشخبر ی سنا دی

معروف اداکارہ نےاپنے مداحوں کوبغیر شادی ماں بننے کی خوشخبر ی سنا دی

ویسٹ انڈیز ٹیم کا دورہ پاکستان، ہرلعزیز کھلاڑی انجری کے باعث ٹیم سے باہر 

ویسٹ انڈیز ٹیم کا دورہ پاکستان، ہرلعزیز کھلاڑی انجری کے باعث ٹیم سے باہر 

دشمن چاہ کر بھی کرکٹ کو پاکستان سے ختم نہ کرسکا، پی ایس ایل 7 کیلئے کتنے غیر ملکی کرکٹرز دستیاب ہیں؟ بڑے بڑے نام شامل

دشمن چاہ کر بھی کرکٹ کو پاکستان سے ختم نہ کرسکا، پی ایس ایل 7 کیلئے کتنے غیر ملکی کرکٹرز دستیاب ہیں؟ بڑے بڑے نام شامل

واٹس ایپ کے وہ سب سے خاص فیچرز جو صرف آئی فون پر استعمال کیے جاسکتے ہیں

واٹس ایپ کے وہ سب سے خاص فیچرز جو صرف آئی فون پر استعمال کیے جاسکتے ہیں

روس آئندہ برس کس ملک پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے؟ امریکیوں کی نیندیں حرام ہو گئیں، پوری دنیا میں ہلچل مچا دی

روس آئندہ برس کس ملک پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے؟ امریکیوں کی نیندیں حرام ہو گئیں، پوری دنیا میں ہلچل مچا دی

وہ بیٹا جس نےاپنےباپ کی 122ارب ڈالرز کی جائیداد لینے سے صاف انکار کر دیالیکن وجہ کیا بتائی؟

وہ بیٹا جس نےاپنےباپ کی 122ارب ڈالرز کی جائیداد لینے سے صاف انکار کر دیالیکن وجہ کیا بتائی؟

سانحہ سیالکوٹ: معاملہ چیف جسٹس کے پاس پہنچ گیا لیکن اس میں کیا استدعا کی گئی؟ بڑی خبر 

سانحہ سیالکوٹ: معاملہ چیف جسٹس کے پاس پہنچ گیا لیکن اس میں کیا استدعا کی گئی؟ بڑی خبر 

10 دسمبر کو پاکستانیوں کو کیا بڑی خوشخبری ملنے جا رہی ہے ؟ عوام وزیر اعظم عمران خان کے انتظار میں بیٹھ گئی 

10 دسمبر کو پاکستانیوں کو کیا بڑی خوشخبری ملنے جا رہی ہے ؟ عوام وزیر اعظم عمران خان کے انتظار میں بیٹھ گئی 

سری لنکن منیجر کو قتل کرنے کے بعد ملزم کہاں چھپے ہوئے تھے؟ 6 اہم ترین گرفتاریاں  

سری لنکن منیجر کو قتل کرنے کے بعد ملزم کہاں چھپے ہوئے تھے؟ 6 اہم ترین گرفتاریاں  

انتہائی افسوسناک خبر، طیارہ گر کر تباہ، سوار تمام افراد چل بسے 

انتہائی افسوسناک خبر، طیارہ گر کر تباہ، سوار تمام افراد چل بسے