12:39 pm
مشتری و زحل  قِران کےعالمی منفی اثرات

مشتری و زحل  قِران کےعالمی منفی اثرات

12:39 pm

بہت مہینوں سے علمائے فلکیات،ماہرین نجوم،روحانی وجدان والے21 دسمبر کی رات سے مشتری اور زحل کے   قِران(قریب ترین ملاقات) کے منتظر تھے۔ یہ جو ’’قِران‘‘یعنی مشتری اور زحل کا ہوچکا ہے یہ تقریباً آٹھ صدیاں گزرنے کے بعد ہواہے۔ بارھویں صدی میں جب یہ ’’قِران‘‘  ہوا تھا تو چنگیز خان اور پھر تسلسل کی صورت میں ہلاکو خان نے دنیا میں قتل عام کیا تھا۔ مجھے بزرگ ماہر نجوم نے بتایا کہ اگر دنیا کی تاریخ زیرمطالعہ لائی جائے تو جب بھی ’’مشتری‘‘ اور ’’زحل‘‘ کا  ’’ قِران‘‘ہو  (یعنی یہ ایک دوسرے کے بہت زیادہ اتنے قریب ہو جاتے ہیں کہ ان کی ملاقات وقوع پذیر دکھائی دیتی ہے) تو کوئی بڑا واقعہ،المیہ،حادثہ ظہور پذیر ہو جانا امر ربی کے ساتھ ممکن ہو جاتا ہے۔ 21 دسمبر کی رات سے25 دسمبر کی رات کا مشتری اور زحل کا  ’’قِران‘‘  یعنی کئی دنوں اور کئی راتوں پر مشتمل طویل ملاقات اور بغل گیری ہوچکی ہے۔ اس کے یوں تو اثرات طویل مدتی ہیں مگر45 دنوں میں تو کچھ نہ کچھ دھڑن تختہ یہ کرا دیتے ہیں۔ اصل میں تو دھڑن تختہ اللہ تعالیٰ کے حکم سے،انسانوں،قوموں،خطوں،ملکوں کے لئے بنی ہوئی تقدیر الٰہی کے سبب ہوتا ہے مگر مظاہر قدرت الٰہی کے طور پر،آیات اللہ کے ظہور طور پر دنیا و کائنات میں یہ ظہور ستاروں اور سیاروں کے مدوجزر،تبدیلیوں سے وقوع پذیر ہوتاہے اور ہوتا وہی ہے جو اللہ تعالیٰ چاہتے ہیں۔
 ان دونوں کی ملاقات،یعنی’’قِران‘‘ کے سبب فوجی نقل و حمل بہت زیادہ ہو جاتی ہے جیسے کہ چنگیز خان اور اس کے بعد ہلاکو خان کی صورت میں تاریخ میں رقم ہے۔ میں نے امریکہ کے بارے میں پوچھا تو ان کا خیال ہے کہ اس     قِران کے اثرات امریکہ پر بھی بہت زیادہ ہوں گے۔ فوج ٹرمپ کا ساتھ دے گی یا مخالفت کرے گی؟ مشرق وسطیٰ اور برصغیر میں  بھی اس قِران کے گہرے اثرات ممکن ہیں۔28 مارچ سے امریکہ اور بھارت دیوالیہ ہوسکتاہے۔میں نے پاک بھارت جنگ کے معاملات کی طرف سوال کیا کہ وہ کافی عرصے سے اس متوقع جنگ کے حوالے سے بہت پریشان ہیں،کہتے ہیں کہ اس متوقع جنگ کو لازماً نہیں ہونا چاہیے ورنہ بہت زیادہ تباہی بھی ممکن ہوسکتی ہے یعنی پاکستان کی بھی اور انڈیا کی بھی کہ اس جغرافیے کو جنگی نجوم نے نشانہ بنایا ہواہے۔
6 جنوری سے پاک فوج اور جنرل باجوہ خود بھی،اس     قِران کے ظہور پذیر ہونے کے سبب،کافی بڑے بڑے چیلنجز کا سامناکرتا ہوا خود کو محسوس کریں گے۔بہت عرصے سے مجھے بزرگ ماہر نجوم کہہ رہے ہیں کہ پاک بھارت جنگ کی شدت جنوری،فروری میں بہت زیادہ محسوس کرتے ہیں ۔ میں نے انہیں23 دسمبر کو سوال کیا کہ کیا عمران خان کا اقتدار ختم ہو رہا ہے؟ یا قومی اسمبلی ٹوٹ رہی ہے؟ کیا مارشل لاء لگ رہا ہے؟ میں نے وزیراعظم عمران خان کے پولیس پریڈ  پاسنگ آئوٹ تقریب میں اپنے اقتدار کی ناکامیوں کے واضح اعتراف کی روشنی میں یہ سوال کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ6 جنوری کے بعد بہت کچھ امر ربی سے سامنے آجائے گا کہ اللہ تعالیٰ کے حکم سے کیا کچھ ہونے والا ہے؟ بہرحال ایک بات تو واضح ہے کہ24 دسمبر سے پاک فوج کی پہلے سے موجود کچھ داخلی پریشانیاں ختم ہورہی ہیں مگر6 جنوری  سے پاک فوج بہت زیادہ فعال ہے۔ اس کا سبب پاک بھارت کشیدگی ہوسکتی ہے، ملک میں سیاسی بندوبست کا موجودہ ناکام معاملہ شدت اختیار کرسکتاہے۔حکومت میں تبدیلی کو خود عمران خان طلوع کرسکتے ہیں مگر ان کے اوپر جو شدید ترین سیاسی دبائو تھا، وہ24 دسمبر سے بہت کم اور6 جنوری کو بالکل ختم ہو رہا ہے،محسوس ہوتا ہے کہ وہ خود کوئی بڑا فیصلہ کرسکتے ہیں جو دوسروں کی سیاست کو شدید نقصان پہنچائے گا۔ مردان کا مولانا کا جلسہ مشتری و زحل قِران کی فضا میں ہوا ہے یہ اثرات کے اعتبار سے ناکام رہے گا۔
امریکہ اور صدر ٹرمپ کے حوالے سے،روحانی وجدان میزان میں محسوس کیا گیا ہے کہ صدر ٹرمپ اس عرصے میں بہت تیز رفتار دکھائی دیں گے۔ امریکی فوج ان کے سبب یا ان کے مخالف،اہم کردار ادا کرسکتی ہے امریکہ میں۔ میں نے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی طرف سے سیاسی معاہدے کی روشنی میں اپوزیشن پارٹی کے بینی گلنیٹر(سابق آرمی چیف ) جو موجودہ وزیر دفاع ہیں کو اقتدار منتقلی کی بجائے اسمبلی توڑنے کے عمل کے باے میں پوچھا تو ان کا کہنا ہے کہ اسرائیلی اسمبلی کو نیتن یاہو نے 23 تاریخ رات 12 بجے کے قریب توڑا ہے۔ یہ اسمبلی توڑنا اخلاص پر مبنی نہیں بلکہ ان کا  دھوکہ اور فراڈ ہوا ہے۔ مشتری، زحل کے قِران کے وقت یہ اسمبلی ٹوٹی ہے تو اس کے ساتھ ہی نیتن یاہو کی سیاست کا بھی،امر ربی سے خاتمہ ہوگیا ہے۔ اب نیتن یاہو اگلے انتخابات 23مارچ میں حکومت سازی نہیں کرسکے گا اور اس کے ساتھ ہی محمد بن زید النہیان،محمد بن سلمان،جیر ڈکشز کے جو معاہدے، منصوبے طے ہوچکے ہیں وہ سب بھی،امر ربی سے کالعدم ہو جائیں گے۔ ان کی نظروں میں محمد بن سلمان کافی مشکلات میں ہیں۔انہیں اپنے بزرگ باپ اور آل سعود کے ناراض بزرگ مگر دور اندیش شہزادوں کی حمایت کی بہت زیادہ ضرورت ہےورنہ وہ ذاتی نقصان بھی اٹھاسکتے ہیں اور وہ عرب جنہوں نے خود کو جیرڈکشز،نیتن یاہو کے ساتھ نتھی کیا ہوا ہے وہ سب خسارے سے دوچار ہو جائیں گے مستقبل میں۔
ایک بات انہوں نے مزید کی کہ زحل بہت طاقتور پوزیشن میں ہے جب قِران ہوا۔ مشتری قِران کے وقت اپنے ذاتی خانے میں نہیں تھا۔ زحل  اپنے ذاتی خانے میں تھا۔ زحل کے سبب قدیمی ادیان اور تہذیبوں کو اب بہت زیادہ فروغ ملے گا مثلاً ہندو مت، مسیحیت، یہودیت جبکہ مشتری جدیدیت کا نمائندہ ہے۔ جدیدیت سے مراد اسلامی تہذیب و تمدن ہے۔ اندیشہ ہے کہ مئی2022 ء تک مسلمان ممالک کافی زیادہ شدید دبائو میں رہیں گے۔ جبکہ مسیحی،یہودی،ہندوادیان (ممالک) میں باہمی اتحاد بھی زیادہ ہوگا اور وہ مسلمانوں (ممالک) کو بہت زیادہ تنگ کریں گے جبکہ مئی2022 ء کے بعد2023 ء میں مسلمان پھر سے بہت زیادہ طاقتور،متحد ہوکر اپنے مخالفوں کو دبوچ لیں گے۔ انشاء اللہ

تازہ ترین خبریں

رہائشی عمارت دیکھتے ہی دیکھتے ملبے کا ڈھیر بن گئی، ویڈیو میں تباہی کے دلخراش مناظر

رہائشی عمارت دیکھتے ہی دیکھتے ملبے کا ڈھیر بن گئی، ویڈیو میں تباہی کے دلخراش مناظر

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نااہلی۔۔ سندھ ہائی کورٹ سے بڑی خبر آ گئی،جیالے بھی ہکا بکا

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نااہلی۔۔ سندھ ہائی کورٹ سے بڑی خبر آ گئی،جیالے بھی ہکا بکا

الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخاب کی تاریخوں کا اعلان کردیا

الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخاب کی تاریخوں کا اعلان کردیا

مہنگائی کانیاطوفان آنے کو۔۔۔ڈالر نےاگلے پچھلے تمام ریکارڈ توڑ دیئے،امریکی کرنسی کی قدرمیں کتنااضافہ ہوگیا؟جان کرپریشان ہوجائیں گے

مہنگائی کانیاطوفان آنے کو۔۔۔ڈالر نےاگلے پچھلے تمام ریکارڈ توڑ دیئے،امریکی کرنسی کی قدرمیں کتنااضافہ ہوگیا؟جان کرپریشان ہوجائیں گے

یوٹیوب نے عوام سے کیاگیااپناوعدہ پوراکردیا۔۔۔شاندارسہولت متعارف کر ادی

یوٹیوب نے عوام سے کیاگیااپناوعدہ پوراکردیا۔۔۔شاندارسہولت متعارف کر ادی

 ملک کے بیشتربالائی وسطی علاقوں میں موسم خشک رہے گا

ملک کے بیشتربالائی وسطی علاقوں میں موسم خشک رہے گا

سردیوں کا آغاز ہو گیا۔۔موسم سرما کی پہلی برفباری ۔۔پاکستان کا کون سے اہم ترین علاقے نے برف کی چادر اوڑھ لی ؟جانیے تفصیل

سردیوں کا آغاز ہو گیا۔۔موسم سرما کی پہلی برفباری ۔۔پاکستان کا کون سے اہم ترین علاقے نے برف کی چادر اوڑھ لی ؟جانیے تفصیل

ملک آج بھی کرپشن کے سرطان کی جکڑ میں ہے۔سراج الحق 

ملک آج بھی کرپشن کے سرطان کی جکڑ میں ہے۔سراج الحق 

تحریک انصاف نے قوم پرست جماعتوں سے انتخابی اتحاد کا فیصلہ کرلیا 

تحریک انصاف نے قوم پرست جماعتوں سے انتخابی اتحاد کا فیصلہ کرلیا 

 شہباز شریف اورسلمان شہباز کی بریت کی خبر غلط اور مس رپورٹنگ ہے۔شہزاد اکبر

شہباز شریف اورسلمان شہباز کی بریت کی خبر غلط اور مس رپورٹنگ ہے۔شہزاد اکبر

ایف آئی اے شہباز خاندان کیخلاف ثبوتوں کے 5تھیلے سامنے لے آیا

ایف آئی اے شہباز خاندان کیخلاف ثبوتوں کے 5تھیلے سامنے لے آیا

ربیع الاول کا چاند7اکتوبر بروز جمعرات کو نظرآنے کا امکان ہے ، محکمہ موسمیات 

ربیع الاول کا چاند7اکتوبر بروز جمعرات کو نظرآنے کا امکان ہے ، محکمہ موسمیات 

 میرے دادا کہتے تھے بیٹا عوام کی خدمت ایسے کرو کہ عوام آپ کو یادرکھے۔حمزہ شہباز

میرے دادا کہتے تھے بیٹا عوام کی خدمت ایسے کرو کہ عوام آپ کو یادرکھے۔حمزہ شہباز

 ہم نے خدمت کے ریکارڈ قائم کیے اس لیے قوم نے ہم پر بار بار اعتماد کیا،رانا ثنا اللہ

ہم نے خدمت کے ریکارڈ قائم کیے اس لیے قوم نے ہم پر بار بار اعتماد کیا،رانا ثنا اللہ