02:05 pm
بھارت نےایل او سی کی خلاف ورزی وطیرہ بنا لیا

بھارت نےایل او سی کی خلاف ورزی وطیرہ بنا لیا

02:05 pm

کشمیر کا موضوع ایسا ہے جس کو پڑھتے ہی رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں۔جہاں ظلم و ستم کی داستانیں کشمیریوں نے اپنے خون سے لکھ کر امر کر دیں۔اپنے
کشمیر کا موضوع ایسا ہے جس کو پڑھتے ہی رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں۔جہاں ظلم و ستم کی داستانیں کشمیریوں نے اپنے خون سے لکھ کر امر کر دیں۔اپنے ملک کی آزادی کے لئے شائد ہی کسی قوم نے اتنی قربانیاں دی ہوں۔ان پر جتناظلم کیا جاتا وہ ہر ظلم ان کے اندر ایک نیا جذبہ اجاگر کرتا۔جب نوجوان کشمیری رہنما برہان وانی کو قتل کیا گیا تو محسوس ہوا کہ کشمیریوں کی تحریک ِ آزادی میں برہان وانی کے خون کی ہر بوند نے نئے سرے سے آبیاری کی ہے۔پورے کشمیر بلکہ دنیا کے جس جس کونے میں کشمیری آباد تھے وہیں ہنگامے شروع ہو گئے اوروہ آگ آج تک نہ بجھی ہے نہ ٹھنڈی ہوئی ہے۔جب سے ہندوستان کشمیر پر قابض ہوا ہے اس وقت سے ایک نئی تحریک کا آغاز ہوا ہے۔ یہ نہیں ہو سکتا جب تک ایک بھی کشمیری زندہ ہے تو ہندوستان کے خلاف یہ تحریک ختم ہو جائے گی ۔اگر غور کیا جائے تو کشمیریوں پر ظلم و ستم کی 70 سال کی ایک ایک لاش آزادی آزادی کرتی زمین میں دفن ہو گئی ۔ اس درد بھری کہانی پر مسلمان خون کے آنسو رو رہا ہے۔بلکہ یہ کہنا زیادہ درست ہو گا کہ دنیا کے منصفوں کی مجرمانہ خاموشی کشمیریوں کو لہو کے آنسو رلا رہی ہے۔کشمیر کی وادی جتنی زیادہ حسین اور خوبصورت ہے اس سے کہیں زیادہ بدنصیب بھی ہے۔کشمیر ایسی بدقسمت جاگیر ہے جو ہر دور میں بارشوں سے زیادہ خون سے سیراب ہوتی رہی۔خون کی پیاسی زمین نے بے گناہ اور نہتے کشمیریوں کا اتنا خون پیا ہے کہ اس کو اب لفظوں میں سمونا مشکل ہو گیا ہے۔دکھ اور ظلم کی داستانیں رقم ہوئی ہیں۔جن کو سوچ کر بھی سارا جسم لرز جاتا ہے۔نوجوانوں کو ان کی ماؤں اور بہنوں کے سامنے سنگینوں میں پرو دیا جاتا رہا۔نوجوان بھائیوں اور بوڑھے والدین کے سامنے معصوم بچیوںکی عصمت دری کی جاتی رہی۔ان سارے حالات پر سب سے افسوسناک بات یہ تھی کہ ان تمام حالات پر دنیا کی مصروف انسان حقوق کی تنظیمیں اور سلامتی کے ضامنوں کے ضمیر سوئے رہے۔
مکار ہندوستان نے اس قوم پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑ دئیے۔اب گزشتہ کچھ عرصے سے پاکستان کی شہ رگ کو سرے سے ہی دبانا شروع کر دیا ہے۔پاکستان کی طرف آنے والے دریاؤں کے پانی کو بھارت نے بند باندھ کر اپنی طرف موڑ لیا ہے۔وہ تمام کشمیری جن کا نعرہ ہے’’کشمیر بنے گا پاکستان‘‘ ایسے حالات دیکھ کر خون کے آنسوؤں میں ڈوبے ہوئے الفاظ کے ساتھ عالمی طاقتوں کو متوجہ کرتے ہیں۔کشمیر کے خوبصورت لوگ،  خوشنما پہاڑیاں ،  دلفریب سرسبز زمینی راستے،  وہاں کی مسحور کن ہوائیں سیاحوں کو اپنا دیوانہ بنا لیتی ہیں۔لیکن کشمیریوں کی اپنی ایسی قسمت نہیں ہے کہ وہاں کے رہائش پذیر کشمیری مسلمان ان سے کبھی لطف اندوز ہو سکیں۔ان کے چہروں پر کبھی مسکراہٹ نہیں آئی۔ان کے دلوں میں کبھی خوشی کے جذبات ہی پیدا نہیں ہوئے ۔ ہر وقت ظلم و ستم کا شکار رہنے والی قوم کے دلوں سے کبھی خوف نکلا ہی نہیں اور یہ ظلم ان پر صرف وہاں بسنے والے ہندو ہی نہیں کر رہے بلکہ ہندوستان کی سات لاکھ فوج جو کئی دہائیوں سے وہاں بیٹھی ہوئی ہے وہ بھی کر رہے ہیں۔نہتے لوگوں پر گولیاں چلانا،  مظلوم عورتوں کی عزتیں لوٹنا،  نوجوانوں کو سنگینیوں میں پرو کر ان کے اہلِ خانہ کے سامنے ڈالنا،  چوری ڈاکے کا ڈھونگ رچا کر ان کے گھروں کو لوٹ سمیت ایسے ایسے بھیانک واقعات ہو رہے ہیں جن کو لکھنے،  پڑھنے اور سننے والوں کے دل دہل جاتے ہیں۔
مقبوضہ کشمیر میں ظلم و ستم کے خلاف احتجاج ہوتے ہیں۔تعلیمی ادارے بند ہو جاتے ہیں۔کئی کئی دن بازار نہیں کھلتے۔چھوٹے چھوٹے بچے اپنے گھروں میں بھوک سے بلکتے رہتے ہیں۔ ظالم فوج کرفیو لگا کر لوگوں کو کئی کئی دن گھروں سے نہیں نکلنے دیتی۔کشمیریوں کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کے طور پر پاکستان میں بھی احتجاج ہوتے ہیں۔سینکڑوں مرتبہ ان احتجاجی مظاہروں کی یادداشتیں جلوس کی شکل میں جا کر اقوامِ متحدہ کے دفتر میں جمع کرائی جاتی ہیں۔پاکستان یہ سمجھتا ہے کہ کشمیر کی جنگ پاکستان کی بقاء کی جنگ ہے۔کشمیر کی آزادی کے لئے پاک بھارت میں چار جنگیں ہو چکی ہیں۔کشمیر کے اندر بھی اس وقت تک ایک لاکھ سے زیادہ کشمیری اپنی جانوں کے نظرانے پیش کر چکے ہیں۔14اگست1947ء کو دو قومی نظریہ کی بنیاد پر برصغیر کی تقسیم ہوئی اور اس میں یہ فیصلہ ہوا کہ ہندو اور مسلمان دو الگ الگ قومیں ہیں اور ان کے لئے الگ الگ ریاستیں قائم کی جائیں۔اس وقت کے گورنر جنرل لارڈ ماؤنٹ بیٹن نے غیر منصفانہ قدم اٹھاتے ہوئے جواہر لعل نہرو جو خود کشمیری پنڈت تھا کے ساتھ ساز باز کر کے تقسیم ہند کمیشن کے سربراہ سر سیرل ریڈ کلف پر دباؤ ڈال کر ضلع گودا سپور جو کہ پہلے پاکستان میں شامل تھاپاکستان سے ہٹاکر ہندوستان کے قبضے میں دے دیا۔ضلع گودا سپور واحد علاقہ تھا جو مقبوضہ کشمیر کے ساتھ ملحقہ تھا۔اس اہم اور بڑی تبدیلی کی وجہ سے بھارت کو کشمیر تک پہنچنے کا زمینی راستہ حاصل ہوگیا۔
بھارت کو کشمیر تک رسائی دینے کے لئے مکار جواہر لعل نہرو کی سب سے کامیاب سازش یہی تھی جس کی وجہ سے آج تک کشمیر میں خون کی ندیاں بہہ رہی ہیں۔نہرو قطعاً نہیں چاہتا تھا کہ کشمیر کا الحاق پاکستان کے ساتھ ہو۔اس وقت کے ڈوگرہ مہاراجہ ہری سنگھ کے حکم پر کشمیری مسلمانوں کا قتلِ عام شروع کر دیا گیا۔مسلمانوں کی یہ بدبختی تھی کہ ہندوستان کا پہلا وزیراعظم بھی نہرو ہی بن گیااور اس نے ایک دفعہ پھر جارحانہ مکاری کا ثبوت دیتے ہوئے 27اکتوبر کو ہیلی کاپٹروں کے ذریعے سری نگر میں اپنی فوجیں اتار دیںاور اعلان کر دیا کہ مہاراجہ ہری سنگھ نے کشمیر کا بھارت کے ساتھ الحاق کی درخواست کی تھی جو ہم نے قبول کر لی ہے۔حالانکہ حقیقت اس کے برعکس تھی اور یہ سب جھوٹ کا پلندہ تھا۔مہاراجہ ہری سنگھ کے پاس ایسے کسی قسم کے بالکل اختیارات ہی نہیں تھے۔برصغیر کے تقسیم کے ایکٹ 1947ء کے تحت پاکستان یا ہندوستان کے ساتھ الحاق کا اختیار صرف کشمیری عوام کو تھا اور اسی حق کے لئے کشمیری آج بھی جدوجہد کر رہے ہیں۔شہادتیں حاصل کر رہے ہیں۔لیکن ظالم ہندوستان آج 70سال کے بعد بھی کشمیریوں کے حقوق سلب کئے ہوئے ہیں۔
 

تازہ ترین خبریں

 پاکستان بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک سے بہتر تعلقات کا خواہاں ہے۔زاہد حفیظ

پاکستان بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک سے بہتر تعلقات کا خواہاں ہے۔زاہد حفیظ

 آزاد کشمیر میں پی ٹی آئی اور پاکستان پیپلزپارٹی بعض حلقوں میں اتحاد کرنے والی ہیں، رانا عظیم

آزاد کشمیر میں پی ٹی آئی اور پاکستان پیپلزپارٹی بعض حلقوں میں اتحاد کرنے والی ہیں، رانا عظیم

پی ایس ایل کی تاریخ کا سب سے بڑا سکور ۔۔۔۔ اسلام آباد یونائیٹڈ نے پشاور زلمی کو جیت کیلئے 248 رنز کا ہدف دے دیا

پی ایس ایل کی تاریخ کا سب سے بڑا سکور ۔۔۔۔ اسلام آباد یونائیٹڈ نے پشاور زلمی کو جیت کیلئے 248 رنز کا ہدف دے دیا

کراچی میں پی ٹی آئی کے 50رہنما پارٹی چھوڑ کر پی پی میں شامل

کراچی میں پی ٹی آئی کے 50رہنما پارٹی چھوڑ کر پی پی میں شامل

 ٹرانسپورٹ منصوبوں کیلئے مختص بجٹ کا 92 فیصد صرف ایک ٹرین پر خرچ ہوگا

ٹرانسپورٹ منصوبوں کیلئے مختص بجٹ کا 92 فیصد صرف ایک ٹرین پر خرچ ہوگا

صحافی وسیم بادامی نے حیران کن واقعہ شئیر کردیا

صحافی وسیم بادامی نے حیران کن واقعہ شئیر کردیا

احساس ایجوکیشن سی سی ٹی اسٹیئرنگ کمیٹی کی جانب سے سکینڈری تعلیم کیلئے وظائف کی منظوری

احساس ایجوکیشن سی سی ٹی اسٹیئرنگ کمیٹی کی جانب سے سکینڈری تعلیم کیلئے وظائف کی منظوری

 شہبازشریف کی فلم میں کامیڈی ایکشن ‏اور آب بیتی کی داستان تھی۔ فردوس عاشق اعوان

شہبازشریف کی فلم میں کامیڈی ایکشن ‏اور آب بیتی کی داستان تھی۔ فردوس عاشق اعوان

حکومت کو ایف بی آر کو سپریم کورٹ کے اختیارات دینے کی کوشش کا انکشاف

حکومت کو ایف بی آر کو سپریم کورٹ کے اختیارات دینے کی کوشش کا انکشاف

عوام بھاری منافع کے لالچ میں غیر قانونی ہائوسنگ سوسائٹیوں اور سکیموں میں سرمایہ کاری سے گریز کریں۔ نیب

عوام بھاری منافع کے لالچ میں غیر قانونی ہائوسنگ سوسائٹیوں اور سکیموں میں سرمایہ کاری سے گریز کریں۔ نیب

ملک بھر میںموسم کیسا رہے گا ؟ کہاں کہاں بارش ہوگی ۔۔۔محکمہ موسمیات نے سب بتا دیا

ملک بھر میںموسم کیسا رہے گا ؟ کہاں کہاں بارش ہوگی ۔۔۔محکمہ موسمیات نے سب بتا دیا

ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان اور نوازشریف کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان اور نوازشریف کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان اور نوازشریف کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال ۔۔۔ مولانا فضل الرحمان اور نوازشریف کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

 پنجاب کو اسلام آباد سے ریمورٹ کنٹرول سے ہدایت دی جاتی ہیں یہ عمل جمہوریت کے ساتھ مذاق  ہے ۔ حمزہ شہباز 

 پنجاب کو اسلام آباد سے ریمورٹ کنٹرول سے ہدایت دی جاتی ہیں یہ عمل جمہوریت کے ساتھ مذاق  ہے ۔ حمزہ شہباز