12:57 pm
اولیائے اللہ کی نسبت والے لوگ

اولیائے اللہ کی نسبت والے لوگ

12:57 pm

چند دن پہلے کے کالم میں غازی مرید حسین اور مولوی غلام محمد کا ذکر کیا تو بہت سارے ٹیلیفون آئے۔آج کے کالم میں تمہید کی گنجائش نہیں کیونکہ پہلی بات تو ہے کہ ولی اللہ پر لکھتے وقت کسی تمہید کی ضرورت نہیں ہوتی۔دوسری بات یہ ہے کہ مولوی غلام محمد  کی شخصیت پر پہلی دفعہ اتنی تفصیل سے لکھا جا رہا ہے۔سب سے پہلے میں اس بات کی وضاحت کر دوں کہ مولوی غلام محمد  ایک مستند ولی اللہ تھے۔وہ صرف نماز پڑھانے والے مولوی یا فتوے دینے والے مفتی نہیں تھے۔ان لوگوں کے متعلق ہی علامہ اقبال ؒ نے فرمایا ہے:
آہ!  اس راز سے واقف ہے نہ مُلّا ،  نہ فقیہہ
وحدت افکار کی بے وحدت ِ کردار ہے  خام
قوم کیا چیز ہے ،  قوموں کی  امامت کیا  ہے
اس کو کیا سمجھیں بے چارے دو رکعت کے اما م
اسی طرح ایک اور جگہ علامہ اقبال فرماتے ہیں :
آئینِ نو سے ڈرنا،  طرزِ کہن پر اَڑنا
منزل یہی کٹھن ہے قوموں کی زندگی میں 
تیرا امام بے حضوری،  تیری نماز بے سرور
ایسی نماز سے گزر،  ایسے  اما م سے گزر!
جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ پیر مہر علی شاہ گولڑہ شریف کے ایک ہی صاحبزادے پیرمحی الدین المعروف بابوجی تھے۔وہ پیر صاحب کو بہت ہی پیارے تھے۔صاحبزادے چھوٹی عمر میں اکثر گولڑہ شریف ریلوے اسٹیشن پرچلے جاتے تھے۔ انہیں ریل گاڑی سے بہت پیار تھا۔پیر مہر علی شاہ  نے ان کی یہ محبت دیکھتے ہوئے انہیں ’’بابو‘‘  کہنا شروع کر دیا۔پیر صاحب کی زبان سے اپنے پیارے بیٹے کے لئے نکلا ہوا نام تاریخ کا حصہ بن گیا۔ آج بھی لوگ انہیں پیر محی الدین سے زیادہ ’’حضرت بابوجی ‘‘  کا نام عقیدت سے لیتے تھے۔ دفتری زبان میں بابو جو نیئر کلرک کو کہا جاتا ہے۔ کسی افسر کو بابو کہیں تواسے غصہ آجائے۔لیکن پیر گولڑہ کے نا م کا حصہ ’’حضرت بابو جی‘‘ بہت ہی پیارا لگتا ہے۔ نہ چاہتے ہوئے بھی مولوی غلام محمد والے کالم میں یہ ایک تمہیدی جملہ لکھنا ہی پڑا۔کیونکہ مولوی غلام محمد صاحب کا نام بھی پیر مہر علی شاہ کے الفاظ تھے۔ اسی لئے میری خواہش ہے کہ پیر مہر علی شاہ کی زبان سے نکلا ہوا یہ پیارا لفظ ’’مولوی‘‘ ختم نہ کیا جائے اور میں اسی نسبت اور اسی محبت سے یہ پورا نام مولوی غلام محمد ہی لکھتا ہوں ۔ورنہ بدقسمتی سے پاکستان میں مولوی کبھی بھی وہ مقام حاصل نہیں کر سکا جو ہونا چاہیئے تھا۔ کچھ اولیائے کرام کا عہد ایک ہی زمانے میں گزرا۔برصغیر میں حضرت داتا گنج بخش ابو الحسن علی ہجویری 14اگست 1009ء کو افغانستان  میں پیدا ہوئے اور 8اگست 1072ء میں صرف61سال کی عمر میں لاہور میں پردہ فرما گئے۔ان کے پردہ فرمانے کے صرف 6سال بعد23مارچ1078ء یکم رمضان470ہجری کو شیخ عبدالقادر گیلانی اس دنیا میں تشریف لائے اور 11رجب 561ہجری 21فروری1166ء کو 87سال کی عمر میں بغداد میں پردہ فرما گئے۔ان کے صرف ایک ہی بیٹے عبدالرزاق گیلانی پیدا ہوئے۔ ان کی زندگی میں ہی شیخ عبدالقادر گیلانی کے پردہ فرمانے سے23سال پہلے یکم فروری 1143ء میں حضرت خواجہ معین الدین چشتی غریب نواز ایران کے صوبے سیستان میںپیدا ہوئے اور15مارچ 1236ء اجمیر شریف میں 73سال کی عمر میں پردہ فرما گئے۔یہ دونوں تھوڑے بہت عمر کے فرق کے ساتھ ہم عصرہی گزرے ہیں ۔ دونوں کا سلسلہ بھی تھوڑے فرق کے ساتھ شیخ عبدالقادر گیلانی کے طریقوں پر چلنے والے لوگ زیادہ تر لوگ قادری کہلاتے ہیں ۔خواجہ معین الدین اجمیری کے سلسلے پر چلنے والے زیادہ تر لوگ چشتی  کہلاتے ہیں۔ اب مولوی غلام محمد  کے شجرہ ٔ ہسب و نسب اور سلسلہ ٔ  اولیاء کی طرف آتے ہیں ۔اس سے پہلے میں یہ لکھنا چاہتا ہوں کہ مولوی صاحب کے خاندان کی نسبت حضرت بابا گورو نانک کے ساتھ جوڑی گئی۔یہ حقیقت ہے کہ بابا گورو نانک بہت بڑے ولی اللہ گزرے ہیں ۔ تاریخ میں ان کے کئی حوالے ملتے ہیں لیکن مولوی غلام محمد  کے ساتھ تاریخ میں کوئی حوالہ نہیں ملتا۔مولوی صاحب کا سلسلہ سخی سلمان نوری حضوری پرانا بھلوال شریف ضلع سرگودہا سے ملتا ہے۔ سخی سلمان نوری حضوری حضرت شاہ معروف خوشابوی کے مرید تھے جو قادری سلسلے سے تھے اور شاہ معروف صاحب شاہ مبارک حقانی اوچ شریف کے مرید تھے۔ شاہ مبارک کے والد کا نام شیخ آدم تھا۔آپ کا خاندانی حسب نسب امیر المؤمنین حضرت عمر فاروق  ؓ سے جا کر ملتا ہے۔اس لحاظ سے آپ کو فاروقی بھی کہا جاتا ہے اور ان کے والدین کی طرف سے ان کا سلسلہ حضرت معین الدین اجمیری گنج شکر کے ساتھ تھا۔لیکن حضرت شاہ معروف کا سلسلہ قادری تھا۔ ان کے مریدِ خاص سخی سلمان نوری حضوری حسنی حسینی سید تھے۔ان کا سلسلہ بھی قادری تھا۔سخی سلمان نوری حضوری کے مریدِ خاص حضرت شاہ محمد نوشہ رنمل شریف ضلع منڈی بہاؤالدین قادرآبادبیراج روڈ کا سلسلہ بھی قادری تھا۔یہ ایسے اولیائے اللہ گزرے ہیں جن پر درجنوں کتابیں لکھی گئیں پھر بھی کم پڑگئیں۔ آج بھی ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ایک کالم میں شاید میں انصاف نہ کر سکوں ۔ مولوی صاحب کے آباؤاجداد سخی سلمان نوری حضوری کے مرید تھے ۔ اس کا ذکر تاریخ میں بھی ملتا ہے اور مولوی صاحب زندگی میں خود بھی اس کا ذکر فرماتے تھے۔سخی سلمان کی پیدائش 9ربیع الاول 1508ء میں ہوئی اور 27رمضان 1604ء میں 96سال کی عمر میں پردہ فرمایا۔ان کے دو صاحبزادے تھے۔ بڑے رحیم داد اور چھوٹے تاج محمود۔ ان کی والدہ کا نام بھاگ بھری ا ور والد محترم کا نام عبداللہ تھا۔ رحیم دادکی اولاد اب بھلوال میں گدی نشین ہیں اور تاج محمود صاحب کی اولاد میں سے کچھ لوگ چاوہ شریف نزد نور پور نون اور کچھ  حضرت نوشہ صاحب کے گاؤں رنمل میں شفٹ ہو گئے۔سخی سلمان بادشاہ کے ہاتھ پر بیعت کر کے لاکھوں لوگ مسلمان ہوئے۔           ( جاری ہے )

تازہ ترین خبریں

پاک فضائیہ کے 4 ایئر آفیسرز کو ایئروائس مارشل کےعہدوں پرترقی دے دی گئی۔

پاک فضائیہ کے 4 ایئر آفیسرز کو ایئروائس مارشل کےعہدوں پرترقی دے دی گئی۔

جام کمال کے بیٹے کے پروٹوکول کی تصاویر دیکھ کر سوشل میڈیا صارفین آگ بگولہ ہوگئے

جام کمال کے بیٹے کے پروٹوکول کی تصاویر دیکھ کر سوشل میڈیا صارفین آگ بگولہ ہوگئے

پی ایس ایل سکس ۔۔پشاور زلمی کا کراچی کنگز کے خلاف ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ 

پی ایس ایل سکس ۔۔پشاور زلمی کا کراچی کنگز کے خلاف ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ 

حکومت نے شراب کی فروخت سے ایک ارب کے ٹیکس کا ٹارگٹ دے دیا

حکومت نے شراب کی فروخت سے ایک ارب کے ٹیکس کا ٹارگٹ دے دیا

قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی ۔۔۔ غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے ارکان کوکل ایوان میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ اسد قیصر 

قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی ۔۔۔ غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے ارکان کوکل ایوان میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ اسد قیصر 

آن لائن شاپنگ پر سیلز ٹیکس لگانے کا فیصلہ

آن لائن شاپنگ پر سیلز ٹیکس لگانے کا فیصلہ

بلوچستان کے 5 کھرب سے زائد کا بجٹ 18جون کوپیش کیا جائےگا

بلوچستان کے 5 کھرب سے زائد کا بجٹ 18جون کوپیش کیا جائےگا

 الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعے ووٹنگ ہماری ترجیح ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین

 الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعے ووٹنگ ہماری ترجیح ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین

 شہباز شریف سے  یوسف رضا گیلانی اور مولانا اسد کی ملاقات ۔۔۔بجٹ کاپیاں اپوزیشن پر پھینکنے اور بدکلامی کے حکومتی رویہ کی شدید مذمت

شہباز شریف سے یوسف رضا گیلانی اور مولانا اسد کی ملاقات ۔۔۔بجٹ کاپیاں اپوزیشن پر پھینکنے اور بدکلامی کے حکومتی رویہ کی شدید مذمت

حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کر دیا

حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کر دیا

27میں سے 26نکات پر عملدرآمد مکمل، پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کے امکان روشن

27میں سے 26نکات پر عملدرآمد مکمل، پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کے امکان روشن

جتنا مرضی استعمال کریں ۔۔۔مفت انٹرنیٹ اور فون کالز کے مزے لیں، پاکستانیوں کیلئے شاندار خبر آگئی

جتنا مرضی استعمال کریں ۔۔۔مفت انٹرنیٹ اور فون کالز کے مزے لیں، پاکستانیوں کیلئے شاندار خبر آگئی

پیپلزپارٹی تحریک انصاف کے ساتھ نظر آرہی ہے۔ مولانا فضل الرحمان

پیپلزپارٹی تحریک انصاف کے ساتھ نظر آرہی ہے۔ مولانا فضل الرحمان

چین نے نیٹو اجلاس میں جاری کیے گئے بیان کا جواب دے دیا

چین نے نیٹو اجلاس میں جاری کیے گئے بیان کا جواب دے دیا