12:32 pm
 عمران خان اور محمد بن سلمان کی بڑی غلطیاں

 عمران خان اور محمد بن سلمان کی بڑی غلطیاں

12:32 pm

یمن میں نئی حکومت کی تشکیل ہوچکی ہے اور نئی یمنی حکمت کی تشکیل سعودی عرب کی مساعی جمیلہ  سے ہی ریاض میں مکمل ہوچکی ہے، میں پہلے بھی لکھ چکا ہوں کہ ایران کی مذہبی بنیادوں پر قائم حکومت سے صرف شہزادہ محمد بن سلمان اکیلا نفرت نہیں کرتا بلکہ اب اس عمل میں آل سعود کے تمام شہزادے شریک ہیں، خواہ وہ شاہ فیصل کے بیٹے ہی کیوں نہ ہوں۔ یہ بات ایرانی مدبرین کے سوچنے کی ہے کہ وہ آل سعود میں ہر کسی کو اپنا دشمن بناکر کیا کچھ حاصل کرسکتے ہیں؟ایران مخالف اقدامات کی تکمیل میں پاکستان نے ہرگز عربوں کا ساتھ نہیں دیا تبھی تو سعودیہ  امارات، خلیجی عرب، عمران خان کے پاکستان سے شدید ترین ناراض ہیں۔ میں یہ بھی تسلیم کرتا ہوں کہ حکمرانی اور سیاسی دور اندیشی کے ’’عملی‘‘ تجربے کے نہ ہونے کے سبب سعودیہ کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے بہت بڑی غلطی کی تھی بلکہ شاہ سلمان کے اس سعودیہ کی توہین بھی کر دی تھی
جس کے ولی عہد محمد بن سلمان نے وزیراعظم عمران خان سے ذاتی طور پر شدید محبت کرتے ہوئے اس کی حکومت کو درپیش مالی بحران کے خاتمے ، صدر ٹرمپ کیمپ سے کچھ اہم مراعات دلوانے کے لئے ذاتی کردار بھی ادا کیا تھا مگر مجھے یہ نشاندہی بھی کرنی ہے کہ ولی عہد محمد بن سلمان کی اس سفارت کارانہ کمزوری، سستی و کاہلی کی کہ ریاض میں دور اندیش مدبرین اور ریاستی ادارے یہ اندازہ ہی نہ لگاسکے کہ پاکستان میں  نیا اقتدار نواز و شہباز نہیں بلکہ  سخت گیر عمران خان کی جھولی میں جارہا ہے۔ اگر سعودی اور عرب دارالخلافے اس صورتحال کی روشنی میں اپنے سفارت کاروں کے ذریعے عمران خان سے رابطے رکھتے، ان کے اردگرد کے قریبی لوگوں سے ذاتی ربط و تعلق مضبوط بناتے تو یہ دن دیکھنا نہ پڑتے۔ وہ عرب جن کے عشق میں ، میں ڈوبارہا، جن کی دانائی اور حکمت کی میں داستانیں لکھتا رہا، اتنے ناکارہ ذہن ثابت ہو جائیں گے؟ امید نہ تھی۔ لہٰذا محمد بن سلمان بھی جذباتیت، جلد بازی  ، محبت اور نفرت دونوں میں انتہا پسندانہ روش کا مظاہرہ کرتے رہے ہیں، آج پاکستان اور سعودیہ میں جو شدید تلخی ہے اس کا پہلا الزام تو میں پاکستان کو دیتا ہوں کہ انہیں معاشی، سیاسی، اسٹرٹیجک اس کردار کا ہرگز حقیقی ادراک  ہی نہ تھا جو سعودیہ کو پاکستان میں عشروں سے حاصل ہے۔ اس تلخ حقیقت کو نظر انداز کرتے ہوئے ، محض ایک جذباتی جلد باز نوجوان کی طرح اس راستے پر چل پڑے جس سے سعودیہ کی اسلامی ممالک کی قیادت متاثر ہوتی تھی، بلکہ سعودیہ کی ذاتی توہین بھی ہوتی تھی۔ ہمارے دوست ترک، ایرانی، ملائیشیائی بہت اچھے سیاسی وجدان کے حامل ہیں مگر یہ پاکستانی معیشت میں کیا مثبت و مضبوط کردار ادا کرتے رہے ہیں؟  اسے  پیش نظر رکھنا بھی ضروری ہے۔ میرے محبوب اور پسندیدہ عمران خان حال ہی میں اپنی حکومتی ناتجربہ کاری کے سبب نقصانات کا اعترافات کرچکے ہیں، جو کہ قابل تعریف بات ہے۔
خلیجی عربوں اور سعودیہ و مصر کو ترک و ایران کی مشرق وسطیٰ میں متوقع ایمپائر سے اس لئے نہیں ڈرنا چاہیے کہ ترکی و ایران کے سیاسی  کردارایک جیسے ہونے کے باوجود دل بہت الگ الگ ہیں۔ آذربائیجان میں جاکر ترک صدر طیب اردوان کی تقریر کا شدید ترین ناراضی پر مبنی ناپسندیدہ ردعمل کیا ایران سے نمودار نہیں ہوا؟ ایسا کرتے ہوئے ایرانی ذہن بھول گیا کہ اگر طیب اردوان سیاسی معاملات میں ان کا ساتھ نہ دیتا تو وہ اتنے بھی زیادہ محفوظ نہ رہتے جتنے وہ رہے ہیں۔ لہٰذا عربوں کو طیب اردوان سے خوفزدہ ہونے کی بجائے خود کو عرب قوم پرستی کی اس تنگ سی اور متعفن پانیوں والی ’’خلیج‘‘ سے نکل کر دوبارہ ’’اسلامیت‘‘ کے ہمہ گیر سمندر میں قیام پذیر ہونا چاہیے جس کے سبب مسلمان دنیا میں عرب غیر مشروط طور پر پسندیدہ رہے ہیں۔ شاہ فیصل شہید والا اسلامیت پر مبنی رویہ، کردار دوبارہ حاصل کیجئے۔
اور یہ جو ولی عہد محمد بن سلمان نے مسلمانوں کے قاتل اور  دشمن مودی سے تعلقات کو فروغ دیاہے کیا خیال ہے اسے عرب عوا م ہضم کرلیں گے؟ برصغیر میں مسلمانوں کی زندگی مودی حکومت نے جہنم بنا دی ہے اور شہزادہ محمد کا سعودیہ بھارتی آرمی چیف کو سعودیہ بلواتا ہے؟ کیا عرب عوام اس مسلمان دشمن روئیے کی سرپرستی کو ہضم کریں گے؟ کیا  یمن میں مودی اپنی فوج بھیج کر سعودیہ کو فتوحات سے نواز دے گا؟ مودی حکومت کی فوج کو تو چین نے نتھ ڈالی ہوئی ہے اور سات جنوبی بھارتی ریاستیں، چین و بھارت سرحدی کشیدگی کے باعث علیحدگی طلب کرتے عناصر کی کشمکش کو ظاہر کررہی ہیں۔ ایسی حالت میں بھارتی فوج اور حکومت سعودیہ کی کیا مدد، حفاظت  کرسکتی ہے؟ جس طرح خلیجی عرب اسرائیل کے عاشق بن گئے ہیں جبکہ گریٹر اسرائیل کا سارا مزعومہ منصوبہ عربوں کی سرزمین پر،شمالی سعودیہ پر بھی وقوع پذیر ہونا ہے۔ گریٹر اسرائیل کا عرب سرزمینوں  کو ہڑپ کرتا قومی صیہونی ایجنڈا اور اکھنڈ بھارت کا ایجنڈا، صرف مسلمان دشمن، عرب دشمن ہے۔ کیا ایسی ہندوتوا والی بھارتی فوج امارات، البحرین، سعودیہ کے اقتدار محلات کو دائمی تحفظ دے گی یا انہیں ہڑپ کرنے کی مساعی کرے گی؟ ان بر ے د نوں میں سعودیہ اور خلیجی ریاستوں کی بادشاہتوں کو پاک فوج بہت یاد آئے گی جو عشروں سے سعودیہ و عربوں کو تحفظ فراہم کرتی رہے اور ان عربوں اور آل سعود کو معمولی سابھی نقصان نہیں  ہونے دیا۔ اسرائیل اور بھارت بہت جلد عربوں کی توانائی، عزت نفس، انا، تکبر و غرور کو زمین بوس کر دیں گے یہ نوشتہ دیوار ہے۔ لہٰذا شاہ سلمان سے استدعاہے کہ محمد بن سلمان اکیلے کے سپرد مملکت کر دینے کے تجربے کے بعد نیا تجربہ کیجئے۔ آل سعود کے ان بزرگ شہزادوں کو اپنی مشاورت میں شامل کیجئے جو ان طویل عمری کے سبب حصول اقتدار میں اب دلچسپی نہیں رکھتے۔ وہ سعودیہ کو پاکستان کی بھرپور مدد کے ساتھ مسلمان دنیا کا راہنما بنا دینے کا مشکل ترین کام آسانی سے کر گزریں گے انشاء اللہ۔ 


 

تازہ ترین خبریں

پاک فضائیہ کے 4 ایئر آفیسرز کو ایئروائس مارشل کےعہدوں پرترقی دے دی گئی۔

پاک فضائیہ کے 4 ایئر آفیسرز کو ایئروائس مارشل کےعہدوں پرترقی دے دی گئی۔

جام کمال کے بیٹے کے پروٹوکول کی تصاویر دیکھ کر سوشل میڈیا صارفین آگ بگولہ ہوگئے

جام کمال کے بیٹے کے پروٹوکول کی تصاویر دیکھ کر سوشل میڈیا صارفین آگ بگولہ ہوگئے

پی ایس ایل سکس ۔۔پشاور زلمی کا کراچی کنگز کے خلاف ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ 

پی ایس ایل سکس ۔۔پشاور زلمی کا کراچی کنگز کے خلاف ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ 

حکومت نے شراب کی فروخت سے ایک ارب کے ٹیکس کا ٹارگٹ دے دیا

حکومت نے شراب کی فروخت سے ایک ارب کے ٹیکس کا ٹارگٹ دے دیا

قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی ۔۔۔ غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے ارکان کوکل ایوان میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ اسد قیصر 

قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی ۔۔۔ غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے ارکان کوکل ایوان میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ اسد قیصر 

آن لائن شاپنگ پر سیلز ٹیکس لگانے کا فیصلہ

آن لائن شاپنگ پر سیلز ٹیکس لگانے کا فیصلہ

بلوچستان کے 5 کھرب سے زائد کا بجٹ 18جون کوپیش کیا جائےگا

بلوچستان کے 5 کھرب سے زائد کا بجٹ 18جون کوپیش کیا جائےگا

 الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعے ووٹنگ ہماری ترجیح ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین

 الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعے ووٹنگ ہماری ترجیح ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین

 شہباز شریف سے  یوسف رضا گیلانی اور مولانا اسد کی ملاقات ۔۔۔بجٹ کاپیاں اپوزیشن پر پھینکنے اور بدکلامی کے حکومتی رویہ کی شدید مذمت

شہباز شریف سے یوسف رضا گیلانی اور مولانا اسد کی ملاقات ۔۔۔بجٹ کاپیاں اپوزیشن پر پھینکنے اور بدکلامی کے حکومتی رویہ کی شدید مذمت

حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کر دیا

حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کر دیا

27میں سے 26نکات پر عملدرآمد مکمل، پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کے امکان روشن

27میں سے 26نکات پر عملدرآمد مکمل، پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کے امکان روشن

جتنا مرضی استعمال کریں ۔۔۔مفت انٹرنیٹ اور فون کالز کے مزے لیں، پاکستانیوں کیلئے شاندار خبر آگئی

جتنا مرضی استعمال کریں ۔۔۔مفت انٹرنیٹ اور فون کالز کے مزے لیں، پاکستانیوں کیلئے شاندار خبر آگئی

پیپلزپارٹی تحریک انصاف کے ساتھ نظر آرہی ہے۔ مولانا فضل الرحمان

پیپلزپارٹی تحریک انصاف کے ساتھ نظر آرہی ہے۔ مولانا فضل الرحمان

چین نے نیٹو اجلاس میں جاری کیے گئے بیان کا جواب دے دیا

چین نے نیٹو اجلاس میں جاری کیے گئے بیان کا جواب دے دیا