01:21 pm
نیا سال اور ہماری قومی ترجیحات 

نیا سال اور ہماری قومی ترجیحات 

01:21 pm

2020ء دنیا بھر میں حکومتوں کے لیے آزمائش کا سال ثابت ہوا۔ پاکستان میں حکومت کی کارکردگی بُری نہیں رہی، بلکہ بھارت سمیت خطے
2020ء دنیا بھر میں حکومتوں کے لیے آزمائش کا سال ثابت ہوا۔ پاکستان میں حکومت کی کارکردگی بُری نہیں رہی، بلکہ بھارت سمیت خطے کے دیگر ممالک کے مقابلے میں بہتر رہی ۔ عمران خان کو ادراک تھا کہ ملک کی بہت بڑی آبادی دیہاڑی دار مزدوروں پرمشتمل ہے اس لیے دیگر ملکوں کی اندھی تقلید سے گریز کرتے ہوئے پاکستان میں سخت لاک ڈاؤن کی پالیسی اختیار نہیں کی گئی۔ اگر یہ غیر دانش مندانہ قدم اٹھایا جاتا تو ملک میں کورونا سے زیادہ لوگ بھوک سے مرتے۔ غریب عوام کی مدد کے لیے حکومت کے زیادہ تر اقدامات مؤثر ہوئے اور بعض کے مطلوبہ نتائج برآمد نہیں ہوئے۔ سبھی مستحقین تک مدد نہیں پہنچ سکی۔   
کورونا کے باعث انتظامی ڈھانچے میں کئی مسائل پیدا ہوئے جنھیں یہ بحران ختم ہونے کے بعد حل کرنا ہوگا۔ تاہم 2021ء کے لیے منصوبہ بندی کرتے ہوئے ملک کے لیے بنیادی اہمیت رکھنے والے چند امور سے متعلق منصوبہ بندی پر غور کرنا چاہیے۔ 2020ء کے آخری نصف میں اشیائے صرف کی قیمتیں تیزی سے بڑھیںجس کی وجہ سے 2021ء میں تیار شدہ اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ یقینی ہوگا۔ موقعہ پرست عناصر کے خلاف بروقت کارروائی کے باعث مہنگائی میں ہوش رُبا اضافہ ہوا۔ ایک جانب سیاسی طور پر ملکی حالات نازک دور میں داخل ہوچکے ہیں اور دوسری جانب مسلسل بڑھتی مہنگائی نے عوام کے پیمانۂ صبر کو لبریز کردیا ہے۔ 
عدلیہ کو قوانین کی اصل روح کے نفاذ کی جانب توجہ دینا ہوگی۔ ڈینیئل پرل کیس کے قاتلوں کی رہائی کے حکم نے عدالتی نظام کے اعتبار پر سوالیہ نشان لگادیا۔ سندھ ہائیکورٹ نے 2دسمبر 2020ء کو صوبائی حکومت  کو ان تمام ملازمین کی تفصیلات جمع کروانے کی ہدایت کی ہے جنھوں نے  نیب میں پلی بارگین کیا ہے یا رضاکارانہ طور پر کرپشن کے مال سے دست بردار ہوئے ہیں۔ ان میں سے 500بدعنوان افسران آج بھی سندھ کی سول انتظامیہ میں اہم عہدوں پر بیٹھے لوٹ مار کررہے ہیں۔ کرپٹ افسران کو ملازمت جاری رکھنے کی اجازت دینے سے نظام کھوکھلا ہورہا ہے۔ ان بدعنوان عناصر کے ساتھ انہیں تحفظ فراہم کرنے والوں کو بھی بے نقاب کرنے کی ضرورت ہے۔ کیا دنیا میں کہیں بھی کرپشن کو ایسی کھلی چھٹی دی جاسکتی ہے؟ دیکھنا یہ ہے کہ سندھ ہائیکورٹ اب آگے کیا کرتی ہے۔ 
پاکستان میں احتساب کا شور تو بہت ہے لیکن نتائج معمولی ہیں۔ اتنی آگ نہیں جتنا دھواں اٹھتا ہے۔ اگر کرپشن کیسز میں سیاسی قائدین کسی طرح گرفت میں آبھی جائیں تو ان کی ضمانتیں ہوجاتی ہیں۔ لاہور ایسے مقدمات میں ضمانت کے لیے مشہور ہے ، وہاں یا تو بااثر ملزمان ہسپتالوں میں ہیں لندن سدھارچکے ہیں۔ پوری دنیا میں دہشت گردی کی مالی معاونت، منی لانڈنگ، غیر قانونی آف شور اکاؤنٹ اور مالی بے ضابطگیوں کو اولین ترجیح حاصل ہے۔ منی لانڈرنگ میں ملوث افراد کے اثاثے ملک ہی میں نہیں بیرون ملک بھی منجمد کیے جاتے ہیں چاہے ایسا علامتی طور ہی پر کیوں نہ کیا گیا ہو لیکن ایسے جرائم کے خلاف عدم برداشت ظاہر کرنے کے لیے ایسے اقدامات ہوتے ہیں۔ نیب کو چھوٹے چوروں کے بجائے اپنی زیادہ توانائی موٹی گردنیں دبوچنے میں صرف کرنی چاہیے۔ ملک میں اپوزیشن اپنی کرپشن اور بیرون ملک منتقل کی گئی دولت بچانے ہی کے لیے تو ایک جگہ جمع ہے۔ منی لانڈرنگ ہی کے ذریعے تو ماضی میں یہ جماعتیں باری باری کا کھیل جاری رکھے ہوئے تھیں۔ المیہ دیکھیے کہ بلاول ان مسائل کی بنیاد پر عمران خان سے استعفیٰ کے مطالبہ کررہے ہیں جو ان کے والد اور اتحادیوں کے ادوار میں پیدا کیے گئے۔ تاہم اس صورت حال کے باوجود سیاسی، معاشی  اور بین الاقوامی سطح پر کہیں کہیں امید کے آثار نمایاں ہورہے ہیں۔ فوج میں عمران خان اپنی دیانت داری کے باعث مقبول ہیں لیکن قصبوں اور دیہات میں ان سپاہیوں کے اہل خانہ مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں اور اپوزیشن اسی موقعے سے فائدہ اٹھانا چاہتی ہے۔ 
ماضی کی حکومتوں نے ملکی زراعت کو نظر انداز کیے رکھا۔ وبا میں گندم، چاول، پھل اور سبزی کی وافر رسد نے ہمارا بھرم رکھ لیا۔ کھیتوں سے منڈیوں تک پیدوار کی رسد کمیشن ایجنٹ ہماری زراعت کا بڑا مسئلہ ہیں۔ ایک دور تھا کہ ہم زرعی پیدوار میں نہ صرف خود کفیل تھے بلکہ بہت سے پھل، سبزیاں اور نقد آور فصلیں برآمد بھی کیا کرتے تھے۔ بڑھتی ہوئی آبادی کے ساتھ فرسودہ زرعی طریقوں کے باعث ہماری پیداوار تیزی سے نیچے آرہی ہے اور ان پہلوؤں کے ساتھ متعلقہ اداروں کی غفلت اور کرپشن کا قلع قمع بھی ضروری ہے۔ چینی پر دی جانے والی سبسڈی اور اس کی پیداوار سے خرید و فروخت تک کا پورا نظام کرپشن کے اس کھیل کی مثال ہے۔ جہانگیر ترین کو میں اپنا اچھا دوست مانتا ہو اور توقع کرتا ہوں کہ وہ چینی بحران میں خود پر اٹھنے والے سوالات کا تسلی بخش جواب دیں گے۔ 
(جاری ہے)
 

تازہ ترین خبریں