02:09 pm
سرمایہ کاری کے مثبت اقدامات

سرمایہ کاری کے مثبت اقدامات

02:09 pm

یہ بات ڈھکی چھپی نہیں کہ توانائی کے شعبے میں لوڈ شیڈنگ سے بچنے اور بجلی کی ضروریات پوری کرنے اور ڈالر کے انبار لگانے کے لئے جو معاہدے بے نظیر بھٹو  کے زمانے
یہ بات ڈھکی چھپی نہیں کہ توانائی کے شعبے میں لوڈ شیڈنگ سے بچنے اور بجلی کی ضروریات پوری کرنے اور ڈالر کے انبار لگانے کے لئے جو معاہدے بے نظیر بھٹو  کے زمانے میں ہوئے اس کے اثرات آج ہر غریب آدمی کی کٹیا میں ابھر رہے ہیں اور یہ مستقل بوجھ ضروریات زندگی گھٹا کر بھی ہر ماہ پورا کرنا پڑتا ہے اور اگر یہ وسائل اپنی کرنسی خرچ کر کے اپنے آبی وسائل بہتر بنا کر متحرک کئے جاتے تو اس کے اثرات مختلف ہوتے اور غریبوں پر مہنگی بجلی کی خریداری کا بوجھ نہ ہوتا۔ڈالر کا انخلاء جو بیرونی سرمایہ کار اپنے سرمائے اور منافع کی شکل میں باہر لے جاتا ہے وہ مزید صنعتی ترقی پر خرچ ہوتااور جنریشن بھی ضرورت کے مطابق کنٹرول ہوتی۔اپنی کرنسی خرچ ہوتی۔گردش زر میں کمی ہوتی اور سب سے بڑھ کر عام آدمی اس منافع سے مستفید ہوتا اور اس کی قوتِ خرید بڑھتی۔ــایک فقیر اپنی کٹیا میں زیادہ پُر سکون ہوتا ہے کرایہ داری کے محل سے‘‘۔ پھر جو سرمایہ محنت اور جدوجہد کے مسلسل عمل سے اپنے اثرات پیدا کرتا ہے وہ ڈکیتی کی لوٹ مار کی آمدن سے زیادہ پاکیزہ ،  بابرکت اور بار آورہوتی ہے۔زراعت کے شعبہ میں نواز شریف  کے دور میں کاغذ سازی کا بڑا منصوبہ سامنے آیا۔محکمہ جنگلات کے علاوہ ہر زمیندار کو بنجر اور بے آب زمینوں پر سفیدہ اور سنبل کی کاشت جو اس صنعت میں بطور خام مال استعمال ہوتے ہیں ،  میں سرمایہ کاری کی ترغیب دی گئی۔پمفلٹ تقسیم ہوئے۔زمینداروں نے اسے نفع بخش سمجھ کر زیرکاشت رقبہ پر بھی یہ درخت لگانے شروع کر دیئے۔کیونکہ 5سال بعد یہ درخت پیداواری صلاحیت اختیار کر لیتا ہے۔اس صنعت کے قیام کیلئے جگہ ضلع گجرات میںخریدی  گئی۔ لوگوں کو پیداواری معاوضہ کی یقین دہانی بھی کرائی گئی۔چھوٹے چھوٹے سرمایہ کاروں نے اس میں دل کھول کر سرمایہ کاری کی۔کسی نے رقبے ٹھیکے پر لیے اور جنگل لگائے،  کسی نے اپنے بنجر اور کٹے پھٹے رقبوں کو اس مقصد کے لئے استعمال کیا اور کسی نے کم زرخیز رقبوں کی حیثیت بڑھانے میں اس سکیم کو بہتر سمجھا۔اس سکیم کی روح بری نہیں تھی۔بلکہ ہمارے خزانے پر غیر ملکی زرمبادلہ کا دباؤکم کرنے میں یہ معاون بھی تھا اور اس کے خام مال کی پیداوار میں بہت سارے خاندانوں کو روزگار کے مواقع بھی ملتے اور خوشحالی میں اضافہ ہوتا۔یہ سکیم ترقی کی ضامن تھی۔ مشرقی پاکستان کی علیحدگی کے بعد سے ہم کاغذ مسلسل درآمد کر رہے ہیں ۔اخباروں میں استعمال ،  سکولوں اور تعلیمی ضروریات،  دفتری ضروریات حتیٰ کہ ہر شعبہ زندگی میں کسی نہ کسی انداز میں اس کے استعمال سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔اس صنعت کے نہ لگنے کی اندرونی کہانی کیا تھی اور کیو ں اس سے رخ موڑا گیا اور ہم ہر سال کروڑوں ڈالر اس کی خریداری پر خرچ کرنے پر مجبور ہیں ۔لیکن ان اقدامات کا بظاہر جو جوازنکلا وہ یہ ہے۔جس ذہن میں یہ پراجیکٹ جنم لئے ہوئے تھااسے جب سرکاری خزانے سے اپنی خواہش کے مطابق سرمایہ کی فراہمی ممکن نظر نہ آئی تو اس نے اپنے بیرون ملک جمع سرمایہ کو لگانا مناسب نہ سمجھایا کمیشن کے طے ہونے میں فاصلے اتنے زیادہ تھے کہ اس نے سرمایہ کاری نفع بخش نہ سمجھی یا اس کی امپورٹ میں منافع کمانے والے ہاتھ اس قدر بااثر اور مضبوط تھے کہ انہیں ہاتھ ڈالنا ممکن نہ تھایا امپورٹ لائسنس دینے والی مشینری اس کی امپورٹ میں حصہ دار تھی۔خرابی جہاں بھی تھی قومی کردار پر کرپشن کا بدترین داغ ہے۔اس کا نتیجہ یہ ہواکہ لاکھوں چھوٹے سرمایہ کاروں کی سرمایہ کاری جو جنگل کی شکل میں تھی۔زمینداروں اور مزدوروں کی محنت اور کاوش سے پروان چڑھی تھی۔اونے پونے میں لٹ گئی۔اس کا مصرف جلائی میں بھی مناسب نہ سمجھا گیا اور نہ اسے تعمیراتی افادیت کی سند ملی۔نتیجہ یہ ہوا کہ کئی لوگ اپنی پونجی لٹا بیٹھے ۔ اپنی پالیسیوں کے گورکھ دھندے سے مایوس ہو گئے۔یہی وجہ ہے کہ ہر صنعت کار نے اپنی صنعت کو بارآور بنانے اور کامیاب کرنے کے لئے حکومتوں میں موجودہ بااثر شخصیتوں کا صرف سہارا نہیں لیا بلکہ انہیں بغیر سرمائے کے حصہ دار بنایا تاکہ ان کی گاڑی بغیر رکاوٹ چلتی رہے۔
میرے قریبی دوست اور بچپن کے کلاس فیلو جاوید حسین کے ساتھ سابق ڈپٹی سپیکر و سابق وفاقی وزیر نواز کھوکھر(جوکہ گزشتہ روز وفات پاگئے) کی تیمارداری کے لئے ہسپتال جاتے ہوئے تفصیلاً گفتگو ہوئی وہ بہت کم گو اور غیر سیاسی شخص ہیں لیکن بعض اوقات تجربے بڑے کمال کے کرتے ہیں ۔کوئی لگی لپٹتی بات نہیں کرتے فرمانے لگے میں جناب عمران کی اس کاوش، کوشش اور محنت کو خراجِ تحسین پیش کرتا  ہوں جو انہوں نے ملکی معیشت کو سنبھالا دینے کے لئے کی۔خواہ یہ ان کے اثرورسوخ کی وجہ سے ہوئی،  خواہ ان کی پالیسیوں میں ٹھہراؤ اثر انداز ہوا ،  خواہ کفایت شعاری کے عمل سے ہوئی اور خواہ چور سوراخ بند کرنے سے،  خواہ غیر پیداواری اخراجات کم کرنے سے ہوئی ،  خواہ اعتماد کی بحالی سے،  خواہ پاکستانیوں نے بیرونی جھٹکوں کو محسوس کر کے اس وطن کو یاد کیا اور خواہ اپنے آ پ کو غیر محفوظ جان کر وطن کی چاہت کو صدا دی۔بہرحال ملکی معیشت نے اچھی کروٹ لی۔سرمایہ کاروں کا ٰیہ رجحان کہ خزانہ سرکاری استعمال ہو اور نفع اس کی جیب میں جائے۔نفع کو چھپانے ،  ٹیکسوں سے بچنے کے لئے بیرون ملک ٹھکانے بنائے جائیں ۔غریبوں کا خون چوسنے کے مترادف ہے۔ ایسی معیشت ملک و ملت کے خلاف دشمنی ہے اور احساس محرومی کو جنم دیتی ہے۔ ہماری اخلاقی زندگی میں دراڑیں ،  اعتماد کی فضا میں آلودگی ،  اجتماعی سوچ میں دھوکہ،  فریب اور چالبازی نے اس قدر گھر کر لیا ہے کہ کاروبار میں شراکت کی سوچ منہدم ہو چکی ہے۔اعتماد اٹھ گئے۔کارپوریشنوں کے سکینڈل اور ان کی سرپرستی کرنے والے اقتدار میں موجود ،  ان کے خلاف انضباطی کارروائیوں میں رکاوٹ ،  ڈھیلے ڈھالے غیر مؤثر قانون اور لاقانونیت نے کئی خاندانوں کے چراغ گل کر دئیے۔اسی طرح سٹاک ایکسچینج کا کھیل جس انداز سے کھیلا گیا اس نے بھی ملکی تاریخ میں یہ تاثر دیا کہ لٹیروں کو پکڑنے کا کوئی قانون نہیں ۔لہٰذا ایسی سکیمیں جہاں چھوٹے سرمایہ کارمحفوظ بھی ہوں ۔پس اندازی کا رجحان بھی بڑھے مستقبل کی منصوبہ بندی بھی ہو اور خاندانوں کی زندگی کی فکر ہو ،  بہت ضروری ہیں ۔
 

تازہ ترین خبریں

ملک بھر میں سخت پابندی ۔۔۔ وفاقی حکومت نے صوبوں کو ہدایت جاری کردیں۔کیاہونےوالاہے؟پوری قوم کیلئے بڑی خبر

ملک بھر میں سخت پابندی ۔۔۔ وفاقی حکومت نے صوبوں کو ہدایت جاری کردیں۔کیاہونےوالاہے؟پوری قوم کیلئے بڑی خبر

 امریکامیں 2روزہ ماحولیاتی کانفرنس 2021کاآغازہوگیا ۔۔پاکستان کی بھی شرکت 

 امریکامیں 2روزہ ماحولیاتی کانفرنس 2021کاآغازہوگیا ۔۔پاکستان کی بھی شرکت 

پی ڈی ایم جماعتوں کی عیدالفطر کے بعد لانگ مارچ کی تیاری شروع

پی ڈی ایم جماعتوں کی عیدالفطر کے بعد لانگ مارچ کی تیاری شروع

دیر لگی مگر آخر کار ! وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار خوشی سے نہال ، پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنا دی گئی

دیر لگی مگر آخر کار ! وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار خوشی سے نہال ، پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنا دی گئی

کراچی میں لاک ڈاؤن۔۔ ٹرانسپورٹ پربھی پابندی۔۔۔ وزیرصحت سندھ کے اعلان نے عوام پر بجلیاں گرادیں

کراچی میں لاک ڈاؤن۔۔ ٹرانسپورٹ پربھی پابندی۔۔۔ وزیرصحت سندھ کے اعلان نے عوام پر بجلیاں گرادیں

گواد ر انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے ترقی کے نئے دور کی شروعات ہوگی ۔۔۔ جام کمال کی اہم شخصیت سے ملاقات کے وقت بیان 

گواد ر انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے ترقی کے نئے دور کی شروعات ہوگی ۔۔۔ جام کمال کی اہم شخصیت سے ملاقات کے وقت بیان 

صحافی نے تحریک انصاف کے وزیر سے سوال کیا تو انہوںنے ایسا جواب دیا کہ تمام پاکستانی ارتھ ہو کر  رہ گئے

صحافی نے تحریک انصاف کے وزیر سے سوال کیا تو انہوںنے ایسا جواب دیا کہ تمام پاکستانی ارتھ ہو کر رہ گئے

پارٹی ورکر ہوں کسی لوٹے کی بیٹی نہیں ، ن لیگ کو زبردست جھٹکا ، اہم ترین خاتون رہنما نے ن لیگ سے استعفیٰ دیدیا

پارٹی ورکر ہوں کسی لوٹے کی بیٹی نہیں ، ن لیگ کو زبردست جھٹکا ، اہم ترین خاتون رہنما نے ن لیگ سے استعفیٰ دیدیا

اسلام آباد پولیس کی ایک اور ذبردست کاروائی ۔۔۔۔ کار چوری میں ملوث منظم گینگ کے 5 کارچور گرفتارکرلئے گئے 

اسلام آباد پولیس کی ایک اور ذبردست کاروائی ۔۔۔۔ کار چوری میں ملوث منظم گینگ کے 5 کارچور گرفتارکرلئے گئے 

خیبر پختونخوا میں مزید 39 افراد جاں بحق ہوگئے ۔۔ انتہائی افسوس ناک خبر 

خیبر پختونخوا میں مزید 39 افراد جاں بحق ہوگئے ۔۔ انتہائی افسوس ناک خبر 

56 بچے متاثر ۔۔۔۔ شہراقتدار سے انتہائی بری خبر آگئی

56 بچے متاثر ۔۔۔۔ شہراقتدار سے انتہائی بری خبر آگئی

کورونا ڈیوٹی کرنے والے ڈاکٹر نے خود کشی کی ۔۔۔ وجہ کیا بنی ؟؟ انتہائی  ہوشربا انکشاف

کورونا ڈیوٹی کرنے والے ڈاکٹر نے خود کشی کی ۔۔۔ وجہ کیا بنی ؟؟ انتہائی ہوشربا انکشاف

اب عوام کو یہ چیز ہر صورت میں ملے گی ۔۔۔ وزیراعظم نے اہم اعلان کردیا

اب عوام کو یہ چیز ہر صورت میں ملے گی ۔۔۔ وزیراعظم نے اہم اعلان کردیا

خاتون کا ٹیکسی ڈرائیور پر وحشیانہ تشدد ۔۔۔۔ ویڈیو وائرل ہوگئی ۔۔۔۔ وجہ کیا بنی ؟؟ْ۔۔۔انتہائی دلچسپ خبر

خاتون کا ٹیکسی ڈرائیور پر وحشیانہ تشدد ۔۔۔۔ ویڈیو وائرل ہوگئی ۔۔۔۔ وجہ کیا بنی ؟؟ْ۔۔۔انتہائی دلچسپ خبر