01:58 pm
دنیا  اور آخرت کی تباہی سے بچیں

دنیا  اور آخرت کی تباہی سے بچیں

01:58 pm

(گزشتہ سے پیوستہ)
دنیا کی محبت،  جب آدمی کسی چیز کا گرویدہ ہو جاتا ہے تو اندھا دھن اسی کے پیچھے لگا رہتا ہے۔ عربی میں ضرب المثل مشہورہے  ’’ کسی چیز کی محبت تجھے  اندھا اور بہرا کر دیتی ہے،  جب  کسی پر دنیا غالب ہو جاتی ہے تو وہ بغیر کسی انجام کی پرواہ کئے اس کے پیچھے لگا رہتا ہے، اللہ ہماری حفاظت فرمائے ۔ آمین۔
 خواہشات کی پیروی، انسان کو اللہ  نے دو چیزیں بغرض آزمائش عطا کی ہیں، ایک عقل اور دوسری نفس ،  پھر ان دونوں کے تعاون کے دو خارجی اسباب پیدا کئے ہیں وحی اور شیطان، وحی عقل کی رہنمائی کرتی ہے اور شیطان شہوانیت کو ہوا دیتا ہے ، اب اگر انسان شہوانیت اور شیطان کے جال میں پھنس جاتا ہے تو گناہ پر گناہ کئے جاتا ہے ،  اللہ نفس اور شیطان سے ہمیں محفوظ رکھے۔  آمین
 بعض لوگ گناہ پر گناہ کرتے ہیں اور پھر جب نصیحت اور موعظت کی جائے تو کہتے ہیں، کیا کرین، مقدر میں جیسا لکھا ہے ویسا  ہوتا ہے، یہ صحیح نہیں، اس لئے کہ اسباب اختیاری ہیں، جب انسان برے اسباب اختیار کرتا ہے تو برائی پر آمادہ ہوتا ہے … اگر بندہ برائی سے بچنے کی کوشش کرے تو اللہ ضرور اسے بچا لیتے ہیں، ہم کوشش نہیں کرتے او رپھر تقدیر کا رونا روتے ہیں، یہ عقیدہ تقدیر کو اچھی طرح نہ سمجھنے کی وجہ سے ہوتا ہے ،   اللہ ہمیں صحیح سمجھ عطا فرمائے ۔ آمین۔
 اللہ کی مغفرت کی امید بھی گناہ پر آمادہ کرتی ہے مثلاً گناہ  کرتے وقت انسان سوچتا ہے ، ارے ، اللہ تو غفور الرحیم ہے، ضرور معاف کر دے گا، مگر یہ یاد رکھنا چاہیے کہ اللہ عزیز ذوانتقام  بھی ہے، اور شدید العقاب بھی ،یعنی سخت پکڑ کنے والا ور سخت سزا دینے والا ہے، لہٰذا مغفرت  کی بیجا امید ، پر گناہ پر گناہ کرنا غلط ہے ،  کیوں کہ اگر گناہ پر گناہ کرتا رہا اور اسی حالت میں موت آگئی تو ایمان کے ضائع  ہونے کاخدشہ ہے ، اللہ ایمان کے ساتھ موت عطا فرمائے ۔آمین
غصہ سے بے قابو ہو جانا بھی گناہ اور ظلم پر آمادہ کرتا ہے ، غصہ میں کبھی کسی کو قتل کردیتا ہے ،  کبھی کسی کے ہاتھ پائوں موڑ دیتا ہے وغیرہ، لہٰذا غصہ آئے تو اس صورت میں صبر سے کام لے۔
 خواہشات کی پیروی بھی گناہ کے رئیسی اسباب میں سے ہے، شہوانیت کی وجہ سے کبھی بوس و کنار  اور کبھی زنا اور ناچ گانے پر اتر آنا ،  لہٰذا ایسی حالت میں استغفار اور تعوذ کا ورد شروع کر دینا چاہیے، اکہ شہوانی قوت پست ہو جائے یا ٹھنڈی ہو جائے۔
 کبھی آدمی سے بہت زیادہ گناہ ہو جاتے ہیں تو وہ اللہ کی رحمت سے ناامید ہو جاتا ہے اور پھر گناہ پر جری ہو جاتا ہے… حالانکہ مومن کو اللہ کی رحمت سے نامید ہونے کی ضرورت نہیں، کتنا بڑا گناہ ہو ، خواہ کتنی ہی مرتبہ کیوں نہ ہو، یاد آنے پر فوراً استغفار اور توبہ کرے۔
 مولانا پیر ذوالفقار نقش بندی فرماتے ہیں،  آدمی چار وجوہات کی بنا پر گناہ کرتا ہے۔ وہ یہ سمجھتا ہے کہ گناہ کرتے وقت اسے کوئی نہیں دیکھتا ،حالانکہ قرآن میں ارشاد خداوندی  ہے ۔ تیرا  پروردگار تیری گھات میں ہے… یعنی ایک لمحہ ایک سکینڈ کے لئے بھی تجھ سے غافل نہیں۔
 گناہ کرتے وقت یہ سمجھتا ہے کہ میر ے پاس کوئی نہیں ،حالانکہ  قرآن میں ارشاد باری ہے ، تم جہاں کہیں رہو اللہ تمہارے ساتھ ہے۔
 کبھی انسان گناہ اس لئے کرتا ہے کہ وہ جانتا ہے کہ میری ان حرکتوں کا کسی کو علم نہیں، قرآن نے کہا ،   وہ تمہاری نظر کی خیانت کو بھی جانتا ہے اور تم دل میں جو کچھ  چھپاتے ہو ا سے بھی جانتاہے۔(سورہ مومن 19 )
بے شمار آیات قرآنی اس پر دلیل ہیں کہ گناہ کی سزا  دنیا میں بھی ہوئی ،  صرف یہی نہیں بلکہ شیطان اور امم سابقہ جو گناہوں  کے ارتکاب کی وجہ سے مختلف طریقوں سے ہلاک کی گئیں ، کیوں کہ اس گناہ کی وجہ سے  ابلیس لعین کوراندہ درگاہ کیا گیا، گناہ کی وجہ سے ملعون ہوا، باطن تباہ وبرباد ہو گیا، بجائے رحمت کے لعنت کا مستحق ہوا، قرب کے بدلے بعد حصہ میں آیا… تسبیح اور تقدیس کیجگہ کفر، شرک جھوٹ اور فحش انعام میں ملا ،  یہ گناہ ہی تھے جنہوں نے قوم نوح علیہ السلام کو طوفان میں غرق کر دیا ، اسی گناہ کی وجہ سے قوم عاد تندو تیز ہوا سے ہلاک کر دی گئی۔  یہی وہ گنا ہے کہ قوم ثمود کو چیخ کی آواز سے ہلاک کردیا گیا ،  وہ کونسی چیز تھی جس کی وجہ سے قوم لوط کی بستیوں کو آسماں تک لے جا کر الٹ دیاگیا ، قوم شعیب ، قوم فرعون  وقارون وغیرہ اقوام کی بربادی اور ہلاکت کا سبب محض گناہ کے اور کیا تھا؟
 معلوم ہوا گناہ کی سزا انسان  کو دنیا میں بھگتنا پڑتی ہے اور آخرت میں بھی ہو گی، بلکہ قبر میں بھی مبتلائے عذاب ہونا ہو گا… عام طورپر جو لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ گناہ اور برائی کی سزا دنیا میں نہیں ہوتی ، آخرت میں ہوتی ہے، غلط  ہے، صحیح یہ ہے کہ دنیا میں بھی اس کی سزا ہوتی ہے، آج ہمارے معاشرے میں بے حیائی عام ہے تو کیا طرح طرح کی نئی نئی  بیماریاں عام نہیں ہورہی ہیں؟ آج ہمارے معاشرے میں ناپ تول میں کمی ہورہی ہے تو کیا ظالم حکمران ہم پر مسلط نہیں؟ آج ہمارے معاشرے میں زکٰوۃ دینے کا اہتمام نہیں تو کیا بارش کی قلت نہیں ہے؟  آج ہم لوگ وعدے پر وعدے کی مخالفت کرتے ہیں توکیا اغیار کو ہم پر مسلط نہیں کر دیا گیا؟
 تعجب ہے پوری روئے زمین  پر کہ کہیں بھی قرآن اور حدیث سے ماخوذ دستور پر مکمل عمل نہیں ہو رہا ہے  اور ہمارے  تمام حکمران غیروں کے دست نگر ہیں، شراب اور میوزک عام ہونے کی وجہ سے  آئے دن زلزلے پر زلزلے آتے رہتے ہیں… آخری چند سالوں میں وقفے وقفے سے دنیا کے مختلف خطوں میں بھیانک زلزلے آتے رہے ہیں اور ہلاکت خیز  تباہی مچاتے رہے ہیں، یہ سب کیا ہے؟  احادیث کی وعیدوں کی جیتی جاگتی صداقت کی مثالیں ہیں۔
 مگر افسوس کہ ہماریا معاشرہ پھر بھی اس بات کو سنجیدگی سے لینے کے لئے تیار نہیں، بلکہ وہ عذاب الٰہی کو عذاب ہی نہیں تصور کرتا اورالٹا اس کے سائنسی اسباب تلاش کر کے ، ان اسباب کے ذریعہ عذاب الٰہی کو روکنے کی کوشش کرتا ہے… یہ کتنی  بڑی حماقت ہے ، کیا عذاب الٰہی کو بھی کوئی روک سکتا ہے؟ زلزلے کے اسباب کو معلوم کرنے  کے بعد بھی وہ کسی زلزلے کو پچاس سال میں روک سکے، نہ روک سکیں گے، آج ضرورت اس بات کی ہے کہ روحانی اسباب کو تلاش کر کے ان پر توجہ دی جائے اور وہ اسباب ہیں اللہ کی نافرمانیاں اور گناہ…  اللہ ہمیں حق بات سمجھنے کی توفیق دے اور دنیا و برزخ اور آخرت میں اپنی ہر طرح کی گرفت اور عذاب سے محفوظ رکھے۔  آمین
کیا آج ہم نہیں دیکھ رہے ہیں کہ کوئی خطہ ارض امن سے معمور نہیں، قتل غارت گری، چوری ڈکیتی ایک عام سی بات ہوگئی، روزانہ ہزاروں لوگ بے قصور مارے جارہے ہیں… بظاہر یہ قصور ہے ،  لیکن حقیقت میں یہ اللہ کی نافرمانی کی اجتماعی سزا ہے ،  جسے ہم سمجھ نہیں پا رہے ہیں۔

تازہ ترین خبریں

تحریک عدم اعتماد میں پی ٹی آئی کے درجنوں ارکان عمران خان کے خلاف ووٹ دیں گے،رانا ثنا اللہ

تحریک عدم اعتماد میں پی ٹی آئی کے درجنوں ارکان عمران خان کے خلاف ووٹ دیں گے،رانا ثنا اللہ

بلاول بھٹو کی چودھری برادران سے ملاقات، سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

بلاول بھٹو کی چودھری برادران سے ملاقات، سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

یااللہ خیر،3.4شدت کازلزلہ،لوگ کلمہ طیبہ کاوردکرتے ہوئے گھروں سے باہرنکل آئے

یااللہ خیر،3.4شدت کازلزلہ،لوگ کلمہ طیبہ کاوردکرتے ہوئے گھروں سے باہرنکل آئے

شیخ رشید کی عمران خان سے مصافحہ کی خبروں کی وضاحت

شیخ رشید کی عمران خان سے مصافحہ کی خبروں کی وضاحت

’’وزیراعظم نے مہنگائی کیخلاف جہاد کا اعلان کردیا‘‘

’’وزیراعظم نے مہنگائی کیخلاف جہاد کا اعلان کردیا‘‘

اعتماد کا ووٹ لینے کے بعد وزیراعظم عمران خان کو ایک اور چیلنج کا سامنا

اعتماد کا ووٹ لینے کے بعد وزیراعظم عمران خان کو ایک اور چیلنج کا سامنا

مسلم لیگ ن کا این اے 249 کے لیے مفتاح اسماعیل کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ

مسلم لیگ ن کا این اے 249 کے لیے مفتاح اسماعیل کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ

لوٹوں کے متعلق خوب جانتا ہوں ، ووٹ لینا مجبوری تھی لیکن ۔۔۔ عمران خان آگے  کیا کرنے جا رہے ہیں ؟

لوٹوں کے متعلق خوب جانتا ہوں ، ووٹ لینا مجبوری تھی لیکن ۔۔۔ عمران خان آگے کیا کرنے جا رہے ہیں ؟

حمزہ کا بلاول کیلئے ظہرانہ، کھانے میں کیا ہوگا؟خبر پڑھ کر آپ بھی ششدر رہ جائینگے

حمزہ کا بلاول کیلئے ظہرانہ، کھانے میں کیا ہوگا؟خبر پڑھ کر آپ بھی ششدر رہ جائینگے

وہی ہوا جس کا خدشہ تھا !!پی ڈی ایم میں سینیٹ الیکشن کے معاملے پر اختلافات سر اٹھانے لگے

وہی ہوا جس کا خدشہ تھا !!پی ڈی ایم میں سینیٹ الیکشن کے معاملے پر اختلافات سر اٹھانے لگے

بزرگ افراد کو کورونا سے بچائو کی ویکسین10 مارچ سے لگائی جائیگی

بزرگ افراد کو کورونا سے بچائو کی ویکسین10 مارچ سے لگائی جائیگی

 بلاول حمزہ شہباز سے ملاقات کیلئے ماڈل ٹاؤن پہنچ گئے

بلاول حمزہ شہباز سے ملاقات کیلئے ماڈل ٹاؤن پہنچ گئے

لیگی رہنمائوں پر حملہ :واقعہ کی مکمل انکوائری کرائی جائے گی، سپیکر قومی اسمبلی

لیگی رہنمائوں پر حملہ :واقعہ کی مکمل انکوائری کرائی جائے گی، سپیکر قومی اسمبلی

چھٹی کے دن خوفناک دھماکا،بچوں سمیت متعددافرادبارے انتہائی افسوسناک خبرآگئی

چھٹی کے دن خوفناک دھماکا،بچوں سمیت متعددافرادبارے انتہائی افسوسناک خبرآگئی