01:33 pm
سعودی عرب کاایران کے ساتھ دوستی کاعندیہ

سعودی عرب کاایران کے ساتھ دوستی کاعندیہ

01:33 pm

سعودی عرب کے پرنس محمد بن سلمان نے اپنے حالیہ ایک بیان میں ایران کے ساتھ دوستی کا عندیہ دیاہے۔ اس خبر کو عالمی سطح پر بڑی پذیرائی ملی ہے۔اگر سعودی عرب اور ایران کے درمیان تعلقات بہتر ہوجاتے ہیں تو اس کے مسلم امہ پر انتہائی خوشگوار اثرات مرتب ہوں گے۔ واضح رہے کہ مسلم امہ میں سعودی عرب اور ایران کے مابین سیاسی کشیدگی کی وجہ سے خاصی تشویش پائی جاتی ہے۔ پاکستان بھی اس میں شامل ہے جو ان دونوں ملکوں کے درمیان بہترتعلقات نہ ہونے کی وجہ سے نہ صرف تشویش میں مبتلا ہے بلکہ موجودہ حکومت تو تہہ دل سے چاہتی ہے کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان اچھے تعلقات بحال ہوجائیں۔ بلکہ عمران خان نے تو باقاعدہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان دوستی کرانے کے سلسلے میں ثالثی کاکردار اداکرنے کا ارادہ ظاہر کیاتھا بلکہ اس کی کوشش بھی کی تھی۔ اب سعودی عرب کے شاہی خاندان کی جانب سے ایران کے ساتھ تعلقات بہتر بنانے کے اشارے مل رہے ہیں تو پاکستان سمیت مسلم امہ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔
 ماضی بعید اور قریب میں اس خطے کی جن طاقتوں نے ایران اور سعودی عرب کے درمیان غلط فہمیاں پیدا کرنے کی کوشش کی تھیں جس کی وجہ سے ان طاقتوں کو تو ہر قسم کافائدہ حاصل ہواتھا لیکن مسلم امہ کو مجموعی طور پر اس کا بہت نقصان ہواتھا۔ یمن کی جنگ جو ابھی تک جاری ہے‘ اس کا آغاز بھی سعودی عرب اور ایران کے درمیان سامراجی طاقتوں کی جانب سے پیدا کردہ غلط فہمیوں کی وجہ سے ہواتھا‘ اس جنگ میں مسلمان ایک دوسرے کے خلاف برسرپیکار ہیں جس کی وجہ سے مسلمانوں کی سیاسی و معاشی طاقت کمزور ہورہی ہے۔ لیکن اب پرنس محمد بن سلمان کی جانب سے ایران کے ساتھ اچھے تعلقات قائم کرنے کی خواہش کااحترام کرناچاہیے بلکہ کوشش بھی کرنی چاہیے کہ ایسا ہوجائے۔ یقینا سامراجی طاقتیں ایسا نہیں چاہیں گی‘ لیکن اگر ایران اور سعودی کے درمیان تعلقات بہتر بنانے کاجذبہ موجود ہے تو ہر جذبہ یہ رکاوٹ کو عبور کرسکتاہے اچھے اور خوشگوار تعلقات کے نئے امکانات پیدا ہوسکتے ہیں۔
 دوسری طرف امریکی صدر نے حالیہ دنوں میں اعلان کیاہے کہ ان کی انتظامیہ ایران کے ساتھ2015 ء میں کئے جانے والے ایٹمی معاہدے کو دوبارہ بحال کرنے کی کوشش کرے گی۔ واضح رہے کہ سابق امریکی صدر ٹرمپ نے یکطرفہ اس عالمی معاہدے کو منسوخ کردیاتھا اور ایران پر نئی سخت گیر اقتصادی پابندیاں عائد کرکے ایرانی حکومت کو تحلیل کرنے کی کوششیں کی تھیں لیکن یہ کوششیں ناکام اور اور نامراد ثابت ہوئیں تھیں امریکہ کی جانب سے عائد کردہ اقتصادی پابندیوں کی وجہ سے ایران کے ایک عام آدمی کوسخت تکلیف اور پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا ہے اور یہ صورتحال اب بھی ایسی ہی ہے۔ نیز کورونا وبا نے بھی ایرانی معیشت پر انتہائی برے اثرات مرتب کئے ہیں۔ اس وبا کے اثرات اس وقت ساری دنیا کے لئے پریشانی اور تکلیف کا باعث بنے ہوئے ہیں۔ اس وقت جب میں یہ کالم لکھ رہاہوں جنیوا میں فائیو پلس ون(5+1) کے درمیان ایران کے ایٹمی معاہدے کوبحال کرنے متعلق کانفرنس شروع ہوچکی ہے۔ ہر چند کہ امریکہ اس وقت ان مذاکرات میں شامل نہیں ہوا ہے‘ لیکن اس کا ایک وفد وہاں موجود ہے جو امریکی انتظامیہ کی جانب سے احکامات ملتے ہی بات چیت میں شامل ہو جائے گا۔روس اس معاہدے کی بحالی میں اہم کردار ادا کررہاہے‘ یہی کردار چین کی جانب سے بھی دیکھنے میں آرہاہے۔ اگر یہ معاہدہ بحال ہوجاتاہے تو اس کے ایران کی معیشت اور معاشرت پر انتہائی اچھے اثرات مرتب ہوں گے نیز ایران ایٹمی ہتھیار بنانے کی جانب راغب نہیں ہوگا۔ اس خطے کے عرب ممالک بھی اطمینان کا سانس لیں گے۔ کیونکہ انہیں یہ خطرہ لاحق ہے کہ اگر ایران ایٹمی ہتھیار بنانے میں کامیاب ہوجاتاہے تو اس کی وجہ سے ان کی سالمیت کوشدید خطرہ لاحق ہوسکتاہے۔ لیکن اگر امریکہ‘ روس‘ چین ‘ فرانس‘ جرمنی‘ برطانیہ کے تعاون سے2015ء کامعاہدہ بحال ہو جاتاہے تو اس خطے میں امن اور باہمی تعاون کے نئے دورکا آغازہوگا ۔ پاکستان بھی اپنے تئیں2015ء کے معاہدے کی بحالی کی کوششوں میں مصروف ہے۔ کیونکہ اس طرح پاکستان ایران گیس پائپ لائن معاہدہ کوعملی جامہ پہنایاجاسکتاہے۔ اس وقت اس معاہدہ پر عملدرآمد نہیں ہورہاہے‘ حالانکہ ایران نے اپنی جانب سے گیس پائپ لائن مکمل کرلی ہے‘ جبکہ پاکستان نے اب تک ایسا نہیں کیاہے۔ کہاجاتاہے کہ پاکستان نے امریکہ بہادر کے خوف سے ایسا نہیں کیاہے۔ 
حالانکہ اگر پاکستان کی سیاسی قیادت اس پرعمل پیرا ہونے کی کوشش کرتی تو امریکہ پاکستان پر تھوڑی بہت اقتصادی پابندیاں لگانے کے علاوہ مزید کیا کرسکتا تھا؟بہرحال جنیوا میں ایرانی ایٹمی معاہدے سے متعلق ہونے والے اجلاس سے بہت سی توقعات وابستہ کی جارہی ہیں‘ جوجائز بھی ہیں۔ اگر چند دنوں میں یہ معاہدہ بحال ہوجاتاہے تو اس کے مثبت اثرات پورے مشرق وسطیٰ پر پڑیں گے اور سیاسی تنائو کا ماحول بھی کم ہوسکے گا؟ ذرا سوچیئے۔



 

تازہ ترین خبریں

یا اللہ رحم۔۔کراچی میں شدید بارشیں اور آندھی۔۔کتنے افراد جاں کی بازی ہار گئے۔۔ خبر نے دل چیر دیئے

یا اللہ رحم۔۔کراچی میں شدید بارشیں اور آندھی۔۔کتنے افراد جاں کی بازی ہار گئے۔۔ خبر نے دل چیر دیئے

نفیسہ شاہ اور شیریں مزاری آمنے سامنے۔۔۔۔  ایک دوسرے پر نقل کرنے کا الزام لگادیا

نفیسہ شاہ اور شیریں مزاری آمنے سامنے۔۔۔۔  ایک دوسرے پر نقل کرنے کا الزام لگادیا

عمران خان نے ریحام خان سے جان چھڑوانے کےلئے جہانگیر ترین سے مدد مانگی تھی

عمران خان نے ریحام خان سے جان چھڑوانے کےلئے جہانگیر ترین سے مدد مانگی تھی

 سندھ سے انتہائی بری خبر ۔۔۔۔۔ 11 افراد جاں بحق ہوگئے 

 سندھ سے انتہائی بری خبر ۔۔۔۔۔ 11 افراد جاں بحق ہوگئے 

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

ذاتی رنجش پر مخالفین نے زمیندار کی بھینس کر زہردے کر مار ڈالا

ذاتی رنجش پر مخالفین نے زمیندار کی بھینس کر زہردے کر مار ڈالا

ماروی سرمد کے حیران کن ماضی سے پردہ اٹھا دینے والی تحریر

ماروی سرمد کے حیران کن ماضی سے پردہ اٹھا دینے والی تحریر

پی ڈی ایم کو دوبارہ فعال کرنے کی تیاریاں

پی ڈی ایم کو دوبارہ فعال کرنے کی تیاریاں

پاکستانیوں کیلئے ایک اوربڑی خوشخبری۔۔صوبہ بلوچستان میں گیس کے نئے ذخائر دریافت کرلیے گئے۔

پاکستانیوں کیلئے ایک اوربڑی خوشخبری۔۔صوبہ بلوچستان میں گیس کے نئے ذخائر دریافت کرلیے گئے۔

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ 

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ 

رنگ روڈ میگا سیکنڈل پر پیپلزپارٹی نے وزیراعظم سمیت اسکینڈل میں ملوث وزراء سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا

رنگ روڈ میگا سیکنڈل پر پیپلزپارٹی نے وزیراعظم سمیت اسکینڈل میں ملوث وزراء سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضبط شدہ جائیدادوں کو نیلام کرنے کا فیصلہ۔۔۔بولی کی تاریخ بھی مقر ر 

سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضبط شدہ جائیدادوں کو نیلام کرنے کا فیصلہ۔۔۔بولی کی تاریخ بھی مقر ر