01:34 pm
وزیراعظم صاحب،  یہ گناہ اور ظلم ہے

وزیراعظم صاحب،  یہ گناہ اور ظلم ہے

01:34 pm

آج کل دنیا بھر میں کرونا نے تباہی مچا رکھی ہے۔ اموات کا اندازہ لگانا مشکل ہو گیا ہے۔یہ جو اخبارات اور میڈیا اطلاعات فراہم کر رہا ہے مجھے ان سے ذرا برابر اتفاق نہیں ۔کئی ایسے دیہات ہیں جن کی خبریں میڈیا تک نہیں پہنچ پاتیںاور ہزاروں ایسے مریض ہیں جو ہسپتال پہنچ ہی نہیں پاتے۔ حکومت اپنے طور پر پوری کوشش کر رہی ہے کہ وہ لوگوں کو احتیاط کرنے کا پابند کر سکے۔اس میں بھی میرے کچھ تحفظات ہیں کہ ایسے حالات میں فوج کو کسی صورت نہیں بلانا چاہیئے۔ہم نے جو کام سب سے بعد میں کرنا ہوتا ہے وہ سب سے پہلے کر دیتے ہیں ۔جس بھی ضلع،  تحصیل یا تھانے کی حدود میں لوگ کرونا میں احتیاط کی پابندی نہیں کر رہے تھے اس ضلع کے ڈپٹی کمشنر،  ڈی پی او،  ڈی ایس پی،  اسسٹنٹ کمشنر اور  تھانیدار کو نہ صرف تبدیل کر دیا جاتا بلکہ سستی،   نااہلی،  غیر ذمہ داری کے چارج لگا کر نوکری سے ہی فارغ کر دیا جاتا۔دو چار جگہ ایسا ہو جاتا تو بالکل ہر جگہ لوگ نہ صرف احتیاط کرتے ،
 مناسب فاصلہ بھی رکھتے ۔ لوگوں کی بداحتیاطی کی وجہ سے بھاری جرمانے کئے جاتے تو کوئی بھی یہ جرأت نہ کرتا۔اس کی زندہ مثال اسلحے کی نمائش پر پابندی ہے۔آج کوئی بھی شخص اسلحہ یا ہتھیار اٹھا کر نہیں چلتا بلکہ دور دراز کے دیہاتو ں اور پہاڑوں کی چوٹیوں پر بھی لوگ ایسی حرکت نہیں کرتے۔ پورے ضلع کو ایک ہی ڈپٹی کمشنر،  ایک ہی ڈی پی او  اور تھانے کی حدود میں ایک ہی تھانیدار کنٹرول کر رہا ہوتا ہے ۔یہ ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کے لوگ لاڈلے بچے ہیں جو باہر نہیں نکلتے۔وزیراعظم  اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے درخواست ہے کہ فوج اور دوسرے سیکورٹی ادارے کے لوگوں کو اگر لگانا ہی ہے تو پھر عوام کو چیک کرنے کی بجائے ضلع کے ذمہ داروں کو چیک کرنے پر لگائیں ۔وہ ان کی رپورٹیں لکھ کر حکام بالا کو بھیجیں اور پھر اس تھانیدار ،  ڈی پی او وغیرہ کے خلاف ایکشن لیا جائے تو پور ے ضلع میں صرف دو تین فوجی گاڑیوں اور دس بارہ جوانوں کے ساتھ مکمل لاک ڈاؤن بھی ہو جائے گااور لوگ احتیاط کی سو فیصد پابندی بھی کریں گے۔ کرونا کی مرض سے میرے قریبی اور جاننے والوں کامجھ سے بچھڑ جانا انتہائی تکلیف دہ ہے۔ان میں سرفہرست میرا دوست،  میرا بھائی،  میرے دکھ سکھ کا ضامن بلکہ انسانیت کا بہت بڑا علمبردار ڈاکٹر مسعود صفدر ،  جن کا تعلق میرے ننہالی اور سسرالی گاؤں ’’بھون‘‘  ضلع چکوال سے تھا ۔وہ راولپنڈی بے نظیر ہسپتال کے علاوہ کئی اور سرکاری ہسپتالوں میں ڈیوٹی سرانجام دیتے رہے ۔ ان کی زوجہ محترمہ رومانہ اور ان کی بیٹی بھی ڈاکٹر ہے۔ڈاکٹر مسعود صفدر کے پاس علاقے کا کوئی مریض آتا تواس کو کھانا کھلا تے اور غریب لوگوں کو واپسی کا کرایہ بھی دے کر بھیجتے تھے۔ڈاکٹر رومانہ جرنیلوں کے گاؤں دوالمیال کی مشہور و معروف شخصیت ممتاز سیاست دان اور میرے ذاتی دوست ذوالفقارپپو کی بھانجی ہیں ۔وہ بھی ڈاکٹر مسعودصفدر سے کم رحم دل نہیں ہیں بلکہ ان کے گاؤں کے لوگ بڑے پر اعتماد لہجے میں بتاتے ہیں کہ خدا کی قسم ہم آج تک یہ فیصلہ ہی نہیں کر پائے کہ ان دونوں میں زیادہ سخی ،  رحم دل ، شفیق اور مہمان نواز کون ہے۔ چونکہ کرونا کے موضوع پر کالم لکھ رہا تھاتو ڈاکٹر صاحب کو خراجِ تحسین پیش کرنے کے لئے چند سطور لکھ دی ہیں۔میرے اس عظیم دوست کی بخشش کے لئے دعا کی درخواست ہے۔
حکومت وقت کرونا سے بچنے کی تدابیر کرنے اور ان پر عمل کرنے کے لئے پورے خلوصِ نیت کے ساتھ کام کر رہی ہے لیکن ناتجربہ کاری کی وجہ سے ایک کام ٹھیک کرنے کے لئے دس غلطیاں کر جاتی ہے۔ ابھی سول، پولیس اور انتظامیہ اس طرح عمل نہیں کر رہی جس طرح اس کو کرنا چاہیئے۔شام 6بجے کاروبار بند ہو جاتے ہیں۔  بہت اچھی بات ہے ۔ہفتہ اور اتوار کو مکمل کاروبار بند کر ادئیے جاتے ہیں یہ اور بھی شاید اچھی بات ہوگی لیکن کاروباری لوگوں کی روزی روٹی کا بھی خیال رکھا جائے۔95فیصد لوگ کرائے کی دکانوں پر کام کررہے ہیں ۔لیکن پھر بھی اس لاک ڈاؤن کی کچھ نہ کچھ سمجھ آتی ہے۔اس کے ساتھ حکومت نے ہسپتالوں فارمیسی (میڈیسن) والوں  کو استثناء دیاہوا ہے۔شاباش بہت اچھی بات ہے۔ یہ کالم لکھنا حکومت پر تنقید میرا مقصد نہیں ہے۔مجھے سب سے زیادہ اعتراض ہفتے میں دو دن دودھ اور دہی کی دکانیں اورکاروبار بند کرنے پر ہے۔ ملک میں آج کل دودھ کا سب سے بڑا کاروبار ہے۔ ہزاروں ٹن اور لاکھوں من دودھ ہر روز لوگ خریدتے ہیں ۔ پورے پورے ٹرک لوڈ ہو کر شہروں میںدکانوں پر آتے ہیں اور پھر وہ دودھ گھروں میں تقسیم ہوتا ہے۔گاؤں دیہاتوں میں بھی لاکھوں بلکہ کروڑوں لوگ تازہ دودھ خرید کر گھروں میں استعمال کرتے ہیں ۔ دودھ صرف چند گھنٹوںتک محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔یہ گوالے جنہوں نے دو،  دو سو بھینسیں رکھی ہوئی ہیں یہ دو  دنوں کا دودھ یا دہی کدھر کریں گے بلکہ اب تو دیہاتوں میں عام لوگوں نے آ سٹریلین گائے وغیرہ رکھ کر چھوٹے ڈیری فارم بنا رکھے ہیں ۔دودھ میں اللہ پاک کا نور شامل ہوتا ہے۔یہ خراب ہو جائے گا۔پھٹ جائے گااور دودھ والوں کو وہ دودھ نالیوں میں بہانا پڑے گا یا پھر کھیتوں میں  پھینکنا پڑے گاجس میں کیڑے پیدا ہوں گے اور حشرات العرض سے اور سینکڑوں بیماریاں پھیلیں گی۔ وزیراعظم صاحب کسی کے پاس اتنے وسیع پیمانے پر دودھ کو محفوط کرنے کے لئے کوئی انتظام نہیں ہے۔خدا کے لئے اس اللہ کے نور کو ضائع ہونے سے بچائیں۔کچھ مریضوں کو ڈاکٹروں نے ڈبوں کا دودھ منع کر رکھا ہے وہ بھی دو دن اپنی اس دوا یا غذا سے محروم رہتے ہیں ۔ دودھ دہی کو بھی میڈیسن کے کاروبار میں شامل کر کے ان کو بھی ہفتہ اتوار دو  دِن کے ناغے سے استثناء دیا جائے۔ میں چیف جسٹس آف پاکستان سے بھی گزارش کروں گا کہ دو دِ ن دودھ دہی کا کاروبار کھولنے کے لئے ازخود نوٹس لے کر دودھ دہی کے کاروبار کا ہفتے کے ساتوں دن کھلا رکھنے کے احکامات جاری فرمائیں ۔اس کاروبار کی نوعیت کو سمجھنے کی کوشش کریں۔دودھ ضائع کرنا،  نالیوں اور کھیتوں میں بہانا سخت گناہ ہے اور دودھ کا کاروبار کرنے والوں کا روزانہ کی بنیاد پر لاکھوں روپے کانقصان کرانا بہت بڑا ظلم ہے۔ اس لئے اس گناہِ عظیم اور ظلم سے بچنے کے لئے فوری طور پر دودھ دہی کے کا روبار پرسے پابندی اٹھا لیں ۔
                    

 

تازہ ترین خبریں

وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کیوں کر رہے ہیں؟ بڑی وجہ سامنے آگئی

وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کیوں کر رہے ہیں؟ بڑی وجہ سامنے آگئی

عید سے قبل حکومت نے عوام کو بڑی خوشخبری سنا دی،ایسا اعلان کہ ہرکوئی خوشی سے باغ باغ ہوگیا

عید سے قبل حکومت نے عوام کو بڑی خوشخبری سنا دی،ایسا اعلان کہ ہرکوئی خوشی سے باغ باغ ہوگیا

50 کروڑ ڈالر کہاں سے آنیوالے ہیں ؟ملکی معیشت کیلئے شاندار خوشخبری

50 کروڑ ڈالر کہاں سے آنیوالے ہیں ؟ملکی معیشت کیلئے شاندار خوشخبری

گورنر بلوچستان ڈٹ گیا،خبر نے سیاسی ایوانوں میںکھلبلی مچادی

گورنر بلوچستان ڈٹ گیا،خبر نے سیاسی ایوانوں میںکھلبلی مچادی

قطر کے وزیر خزانہ کو گرفتار کرلیا گیا

قطر کے وزیر خزانہ کو گرفتار کرلیا گیا

کتنے قیدیوں کی سزا میں کمی اور کتنوں کو رہا کردیاجائیگا؟نوٹیفکیشن جاری، عید سے قبل بڑی خبر آگئی

کتنے قیدیوں کی سزا میں کمی اور کتنوں کو رہا کردیاجائیگا؟نوٹیفکیشن جاری، عید سے قبل بڑی خبر آگئی

شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

مہنگائی کا ایک اور وار: نیپرا نے بجلی مزید مہنگی کردی

مہنگائی کا ایک اور وار: نیپرا نے بجلی مزید مہنگی کردی

شہباز شریف نے لندن جانے کی تیاری کر لی

شہباز شریف نے لندن جانے کی تیاری کر لی

کورونا وائرس ، حکومت نے بیرون ملک مقیم  پاکستانیوں کو ایک اور بڑی سہولت فراہم کردی

کورونا وائرس ، حکومت نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ایک اور بڑی سہولت فراہم کردی

پنجاب اسمبلی سے منظور کردہ شوگر فیکٹریز کنٹرول بل پر عمل در آمد روک دیا گیا

پنجاب اسمبلی سے منظور کردہ شوگر فیکٹریز کنٹرول بل پر عمل در آمد روک دیا گیا

عید کے موقع پر ورکرز کو بروقت تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے میڈیا ہاؤسز کیلئے 40کروڑ روپے جاری کیے گئے ،وزیراطلاعات

عید کے موقع پر ورکرز کو بروقت تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے میڈیا ہاؤسز کیلئے 40کروڑ روپے جاری کیے گئے ،وزیراطلاعات

ایمیزون کا ملک میں آنا ایک بہت بڑی پیش رفت ہے،مشیر تجارت

ایمیزون کا ملک میں آنا ایک بہت بڑی پیش رفت ہے،مشیر تجارت

فردوس عاشق اعوان خواتین کرکٹرز کو کوچنگ کی خواہشمند

فردوس عاشق اعوان خواتین کرکٹرز کو کوچنگ کی خواہشمند