03:27 pm
سعودی امریکہ تعلقات۔۔۔۔۔جنوبی ایشیاء

سعودی امریکہ تعلقات۔۔۔۔۔جنوبی ایشیاء

03:27 pm

جوبائیڈن نے عہدہ سنبھالنے کے بعدایک ماہ کے اندراگرکسی حلیف ملک کے حوالے سے خارجہ پالیسی میں تیزترسرگرمی دکھائی ہے تووہ ہے سعودی عرب۔سب سے پہلے توبائیڈن نے یمن جنگ میں سعودی عرب کی مددختم کی،بڑی اسلحہ ڈیل کومنجمدکیا،پھر سعودی ولی عہد،جوعملی طورپربادشاہ کے اختیارات سنبھالے ہوئے ہیں،ان کی تحقیرکی اوروائٹ ہاؤس نے شاہ سلمان سے ٹیلیفون پررابطے سے پہلے یہ وضاحت کی کہ بائیڈن شاہ سلمان کے ساتھ بات کریں گے اورولی عہدکسی بھی طرح ان کے ہم منصب نہیں۔ اس کے ساتھ ہی کہاگیا کہ سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کادوبارہ جائزہ لیاجائے گا،اس کے لئے تعلقات’’ری سیٹ‘‘ کرنے کی اصطلاح استعمال کی گئی۔امریکہ اور سعودی عرب تعلقات میں سب سے ڈرامائی موڑ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل پرامریکی انٹیلی جنس رپورٹ کا اجراہے۔ امریکی کانگریس نے اس رپورٹ کی اشاعت لازم قراردی تھی لیکن سابق صدرٹرمپ نے اس رپورٹ کی اشاعت روک رکھی تھی۔اس رپورٹ میں کچھ بھی نیا نہیں،سعودی ولی عہد کے خلاف کوئی ثبوت بھی نہیں، حالات و واقعات کی بنیادپریہ نتیجہ اخذکیاگیاہے کہ محمدبن سلمان نے جمال خاشقجی کی گرفتاری یاقتل کاحکم دیاتھا۔
یہ وہی نتیجہ ہے جو2سال پہلے اخذکرکے میڈیاکوبتایاجاچکاہے۔اس رپورٹ کے اجراسے یوں لگتاہے کہ بائیڈن سعودی ولی عہد کی ساکھ خراب کرناچاہتے ہیں اوریہ ان ڈیمو کریٹ اراکینِ کانگریس کے ایماپرکیاجارہاہے جو سعودی ولی عہد کوسابق صدرکے ساتھ قریبی اورذاتی مراسم کی سزادیناچاہتے ہیں۔ان اراکینِ کانگریس کی طرف سے ابھی بائیڈن پر مزید دباؤ بڑھایاجارہاہے کہ وہ خاشقجی پابندیوں کی زدمیں سعودی ولی عہدکوبھی لائیں،یہی وہ دبائوہے جس کے تحت بائیڈن نے بیان دیاکہ وہ سعودی عرب کے حوالے سے اہم بیان جاری کریں گے۔
بائیڈن کی طرف سے ممکنہ اعلان براہِ راست سعودی ولی عہدکے حوالے سے نہیں ہوگابلکہ امکان ہے کہ ولی عہد کی سربراہی میں قائم ویلتھ فنڈ،جسے پبلک ویلتھ فنڈکے نام سے جانا جاتاہے،پابندیوں کی زدمیں آجائے۔امریکی یہ دعوی کرتے ہیں کہ خاشقجی کے قتل کے لئے جانے والی ٹیم نے جوطیارہ استعمال کیاوہ اسی ویلتھ فنڈسے خریداگیاتھا۔اسی دعوے کوبنیاد بنا کراس ویلتھ فنڈکوہدف بنایاجا سکتاہے۔اگرایساکیاگیاتویہ سعودی معیشت کے لئے  ایک زلزلے سے کم نہیں ہوگا۔عرب ممالک میں ویلتھ فنڈ تیل کی دولت جمع کرنے اورانہیں ذاتی کنٹرول میں رکھنے کاذریعہ ہے۔یہ فنڈ حکمرانوں کی ذاتی ضروریات کے علاوہ تیل کی قیمتوں میں بحران کی صورت میں ملکوں کے بجٹ خسارے کوپوراکرنے کے لئے استعمال ہوتے ہیں اورملک کومعاشی دھچکوں سے بچانے کاموثرآلہ ہیں۔ سعودی عرب کے پبلک ویلتھ فنڈکاحجم360ارب ڈالرہے اوردنیاکے8ویں بڑے ویلتھ فنڈکی حیثیت رکھتاہے۔ یہ ویلتھ فنڈ سعودی عرب کے طویل مدتی معاشی استحکام کی ضمانت ہے۔
جوبائیڈن نے انتخابی مہم کے دوران خاشقجی کے قتل پرسخت بیانات دیتے ہوئے سعودی عرب کو ایک ’’اچھوت‘‘ریاست بنانے کے بلندوبانگ دعوے کیے تھے،اوراب رپورٹ کے اجراکے بعدامریکی میڈیاانہیں یہ دعوے یاددلاکراکسارہاہے کہ وہ اب کچھ کرکے دکھائیں۔بائیڈن اس سے پہلے اوباماکے ساتھ نائب صدررہ چکے ہیں۔اوباماانتظامیہ کے تعلقات بھی سعودی عرب کے ساتھ زیادہ خوشگوار نہیں تھے۔اوبامانے ہی ایران کے جوہری پروگرام پربین الاقوامی معاہدے پردستخط کیے تھے اوراب بائیڈن بھی اسی سوچ کولے کر چل رہے ہیں،لیکن کیامستقبل کے بادشاہ پرپابندیاں امریکی مفادمیں ہیں؟ایک صدارتی امیدواراورامریکہ کے صدرکی حیثیت یکسر مختلف ہے۔اب بائیڈن کے لئے ان دعوئوں پرعمل آسان نہیں اوروہ تنے ہوئے رسے پرچل رہے ہیں۔
امریکہ کے باخبرحلقوں کادعویٰ ہے کہ سعودی ولی عہدپرپابندیوں کاآپشن زیرغورتھاہی نہیں، جوبائیڈن کوان کی نیشنل سیکورٹی ٹیم اورمحکمہ خارجہ نے صلاح دی تھی کہ مستقبل کے بادشاہ پرپابندیاں پیچیدگیوں کوبڑھادیں گی اورسعودی عرب میں امریکی فوجی مفادات کوزک پہنچے گی۔اسی لیے بائیڈن انتظامیہ نے محکمہ خارجہ کوسعودی ولی عہدپرپابندیوں کے حوالے سے کسی جائزہ رپورٹ کی تیاری کے لئے کہاہی نہیں تھااورنیویارک ٹائمزکی یہ خبرخودہی لیک کی گئی کہ سعودی ولی عہد پابندیوں کی زدمیں نہیں آئیں گے۔جوبائیڈن سے ایک انٹرویو میں سوال بھی کیاگیاکہ کیاوہ خاشقجی قتل کیس کے حوالے سے سعودی ولی عہدپرزوردیں گے کہ وہ انسانی حقوق کادھیان رکھیں،جس پربائیڈن کاجواب تھاکہ ’’وہ سعودی ولی عہدکے ساتھ نہیں بلکہ سعودی شاہ کے ساتھ ڈیل کررہے ہیں۔اب قواعد بدل رہے ہیں اورآئندہ نمایاں تبدیلیاں سامنے آسکتی ہیں،اگرسعودی عرب کوہمارے ساتھ معاملات رکھنے ہیں توانہیں انسانی حقوق کادھیان رکھناپڑے گا‘‘۔
سعودی ولی عہد کے متعلق براہِ راست کسی بڑے اقدام کی ’’سفارتی قیمت‘‘بہت بھاری اور خطرناک ہوگی۔ بائیڈن انتظامیہ کوغیر ارادی نتائج سے خبردار رہنے  کی ضرورت پڑے گی، کیونکہ اس کاواسطہ ایک’’جنگجوشہزادے‘‘سے ہے،جوکچھ کرگزرنے پر آئے تونتائج کی پروانہیں کرتااورشہزادے کی جنگجوانہ فطرت کی گواہی ماضی کے واقعات دیتے ہیں۔ امریکی انٹیلی جنس رپورٹ کااجراایک سیاسی اقدام ہے،لیکن اس سے اقدامات اورجوابی اقدامات کا ایک لامتناہی سلسلہ بھی شروع ہوسکتاہے جس سے خطے میں امریکی مفادات خطرے میں پڑجائیں گے۔بائیڈن کابارباریہ کہناکہ وہ سعودی ولی عہد کے ساتھ معاملات طے نہیں کریں گے،امریکی اوریورپی میڈیا میں یہ تاثرپیداکررہاہے کہ شائدامریکہ محمدبن سلمان کے بادشاہ بننے میں رکاوٹ بن سکتاہے۔ بائیڈن کاشاہ سلمان کوچننااوران کے ولی عہدکو دھتکاردینا امریکی انتظامیہ کے ذہنی الجھائوکو آشکار کررہا ہے۔ ڈیموکریٹ پارٹی میں انتہائی بائیں بازو کے لوگ بائیڈن کی الجھن کوبڑھارہے ہیں۔
امریکی اوریورپی میڈیامیں محمدبن سلمان کو بادشاہت سنبھالنے سے روکنے کی باتیں سعودی سیاسی معاملات اورشاہی خاندان سے ناواقفیت کی بنیاد پر ہیں۔ شاہ سلمان کی صحت زیادہ اچھی نہیں اور امورِسلطنت انہوں نے خودولی عہدکے حوالے کررکھے ہیں۔ محمدبن سلمان کی گرفت سعودی نظام پرمضبوط ہے،محمدبن نائف کوولی عہد کی جگہ لانے کی سوچ اور بائیڈن انتظامیہ کی طرف سے ایسے اشارے سعودی عرب میں نئے کریک ڈاؤن کوجنم دیں گے اورشاہی خاندان کے اندربغاوت کچلنے کی ایک بڑی مہم پہلے ہی انجام دی جاچکی ہے ،دوبارہ ایسی کوئی مہم حالات کومزید خطرناک بنادے گی،یعنی سعودی عرب میں کسی بھی طرح کا عدم استحکام خودامریکی مفاد میں بھی نہیں ہوگا۔ اگربائیڈن کے دورِصدارت میں ہی محمدبن سلمان بادشاہ بنتے ہیں، جس کے امکانات موجود ہیں،توامریکہ اورسعودی تعلقات میں تلخیاں مزیدبڑھیں گی۔ 
(جاری ہے)

تازہ ترین خبریں

یا اللہ رحم۔۔کراچی میں شدید بارشیں اور آندھی۔۔کتنے افراد جاں کی بازی ہار گئے۔۔ خبر نے دل چیر دیئے

یا اللہ رحم۔۔کراچی میں شدید بارشیں اور آندھی۔۔کتنے افراد جاں کی بازی ہار گئے۔۔ خبر نے دل چیر دیئے

نفیسہ شاہ اور شیریں مزاری آمنے سامنے۔۔۔۔  ایک دوسرے پر نقل کرنے کا الزام لگادیا

نفیسہ شاہ اور شیریں مزاری آمنے سامنے۔۔۔۔  ایک دوسرے پر نقل کرنے کا الزام لگادیا

عمران خان نے ریحام خان سے جان چھڑوانے کےلئے جہانگیر ترین سے مدد مانگی تھی

عمران خان نے ریحام خان سے جان چھڑوانے کےلئے جہانگیر ترین سے مدد مانگی تھی

 سندھ سے انتہائی بری خبر ۔۔۔۔۔ 11 افراد جاں بحق ہوگئے 

 سندھ سے انتہائی بری خبر ۔۔۔۔۔ 11 افراد جاں بحق ہوگئے 

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

ذاتی رنجش پر مخالفین نے زمیندار کی بھینس کر زہردے کر مار ڈالا

ذاتی رنجش پر مخالفین نے زمیندار کی بھینس کر زہردے کر مار ڈالا

ماروی سرمد کے حیران کن ماضی سے پردہ اٹھا دینے والی تحریر

ماروی سرمد کے حیران کن ماضی سے پردہ اٹھا دینے والی تحریر

پی ڈی ایم کو دوبارہ فعال کرنے کی تیاریاں

پی ڈی ایم کو دوبارہ فعال کرنے کی تیاریاں

پاکستانیوں کیلئے ایک اوربڑی خوشخبری۔۔صوبہ بلوچستان میں گیس کے نئے ذخائر دریافت کرلیے گئے۔

پاکستانیوں کیلئے ایک اوربڑی خوشخبری۔۔صوبہ بلوچستان میں گیس کے نئے ذخائر دریافت کرلیے گئے۔

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ 

امتحانات دینے والے طلبا کیلئے خوشخبری ۔۔۔۔ تعلیمی بورڈز کا اہم فیصلہ 

رنگ روڈ میگا سیکنڈل پر پیپلزپارٹی نے وزیراعظم سمیت اسکینڈل میں ملوث وزراء سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا

رنگ روڈ میگا سیکنڈل پر پیپلزپارٹی نے وزیراعظم سمیت اسکینڈل میں ملوث وزراء سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

جہانگیر ترین ایک مرتبہ پھر سرگرم ۔۔۔۔۔ہم خیال اراکین پارلیمنٹ کیلئے عشائیہ کا اہتمام ۔۔ پی ٹی آئی اراکین کی آمد کا سلسلہ جاری

سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضبط شدہ جائیدادوں کو نیلام کرنے کا فیصلہ۔۔۔بولی کی تاریخ بھی مقر ر 

سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضبط شدہ جائیدادوں کو نیلام کرنے کا فیصلہ۔۔۔بولی کی تاریخ بھی مقر ر