12:34 pm
مسجداقصیٰ پراسرائیل کے مسلسل حملے!عالم اسلام خاموش

مسجداقصیٰ پراسرائیل کے مسلسل حملے!عالم اسلام خاموش

12:34 pm

٭مسجداقصیٰ پر اسرائیلی فوج کا دوسرا حملہ 20 نمازی شہید، 300 زخمیO حدیبیہ ملز، دوبارہ تحقیقاتO کرونا: بھارت، گنگا دریا میں تیرتی لاشوں کا ہجوم O مرغی ملک بھر میں چار سو روپے کلو سے زیادہ O عمران خان پر آصف زرداری کی تنقیدO جنرل باجوہ کی افغان صدر سے اہم ملاقاتO والدین کے تحفظ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کی اجازت کا خیر مقدم!!
٭دنیا بھر پر کرونا اور مسجد اقصیٰ پر اسرائیل کا عذاب قیامت کی شکل اختیار کر گیا ہے۔ عرب امارات، بحرین، مصر، اردن (ایک حد تک سعودی عرب) کے محبوب اسرائیل نے اتوار کے بعد پیر کو پھر مسجد اقصیٰ کے نمازیوں پر قیامت توڑ دی۔ ان اسرائیل زدہ ملکوں کو اسرائیل کے خلاف ایک لفظ کہنے کی توفیق  بلکہ ہمت نہیں ہوئی، البتہ پاکستان، ترکی، ایران اور انڈونیشیا کی مذمتی آوازیں بلند ہوئی ہیں اور اسرائیل نواز عرب لیگ اور بے جان اسلامی کانفرنس نے ’’جابر سلطان کی اجازت سے اس کے سامنے کلمہ حق کہنے کی پرانی روش اختیار کی ہے اور رسمی قراردادوں والے بے معنی اجلاس طلب کرلئے ہیں۔ اقوام متحدہ نے بھی اظہار افسوس کا رسمی بیان جاری کر دیا ہے۔ ایک موقع تھا کہ افریقی ملک ’کانگو‘ کے وزیراعظم لوممبا کو پھانسی کے خلاف اور نہر سویز پر برطانیہ اور فرانس کے فوجی حملے کے خلاف لاہورکی مال روڈ پر جلوس نکالا کرتے تھے۔ پنجاب یونیورسٹی اور گورنمنٹ کالج کے طلبا کو استعمال کیا جاتا تھا۔ میں ان جلوسوں میں شامل ہوا کرتا تھا اوراب!! تا دم تحریر، کسی سیاسی یا مذہبی جماعت کے کسی احتجاجی جلسہ، جلوس کی کوئی خبر!؟ جماعت اسلامی ایسے مواقع پر کچھ کیا کرتی ہے۔ شائد اب بھی کرے گی، باقی؟ حکومت نے ایک رسمی مذمتی بیان دے دیا اور ساری اپوزیشن عید کے بعد ’لانگ مارچ‘ کی تیاریوں میں مصروف! اور سرفراز سید! ماتمِ یک شہر آرزو!
٭بھارت میں کرونا کی تباہی کے ایک ’ناقابل بصارت‘منظر نے دل دہلا دیا ہے۔ دریائے گنگا میں درجنوں کرونا زدہ لاشیں (تقریباً 60) تیر رہی ہیں۔ ان کی حالت نہائت خراب ہے۔ یہ منظر صوبہ بہار میں صوبہ یو پی سے داخل ہونے والے دریائے گنگا کے کنارے ایک قصبہ کا ہے۔ لوگ صبح اٹھتے ہیں، گنگا میں اشنان کے لئے جاتے ہیں اور وہاں بے حد خراب حالت میں بے شمار لاشیں تیر رہی ہیں۔ قصبہ میں شدید خوف و ہراس پھیل جاتا ہے، کرونا پھیلنے کے خوف سے بہت سے لوگ گھر چھوڑ کر بھاگ رہے ہیں۔بہار کی حکومت نے یوپی سے شدید احتجاج کیا ہے۔ دونوں حکومتوں میں سخت محاذ آرائی ہو رہی ہے۔ یو پی کی حکومت کا کہنا ہے کہ کرونا کی تباہی بے قابو ہو گئی ہے (7 دنوں میں 28 لاکھ نئے مریض!) ہسپتالوں میں جگہ نہیں رہی روزانہ ہزاروں لاشیں جلانے کے لئے عوام کے پاس لکڑیاں، گھی اور دوسرے وسائل نہیں رہے۔ وہ لاشوں کو دریائوں میں پھینک رہے ہیں! استغفار! 
دوسری طرف روزانہ ہزاروں اموات والے امریکہ میں تعداد بہت گھٹ گئی ہے اورکرونا تقریباً قابو میں آ گیا ہے، پیر کے روز امریکہ میں 111 اور برطانیہ میں صرف چار اموات (اتوار کو بھی چار) چلیں کسی جگہ تو انسان محفوظ ہوئے۔ پاکستان میں سخت پابندیوں سے قدرے کمی ہوئی ہے۔ اتوار کو 113 اور پیر کے روز 78 اموات! خدا کرے یہ تعداد بھی ختم ہو۔ مگر عوام کا کیا کیا جائے؟ عید کی شاپنگ اور جلسے جلوسوں پر پابندیوں کو مذہب کی توہین قرار دے دیا جائے تو حکومتیں کیا کریں؟
٭قدرے تاخیر سے میں موجودہ حکومت کے دو نئے آرڈی نینسوں کا خیر مقدم کرتا ہوں۔ ایک تو والدین کے تحفظ کا دلچسپ آرڈی نینس کہ آئندہ کوئی ناخلف،بدتمیز اولاد والدین کے ساتھ بدتمیزی نہیں کر سکے گی، انہیں گھر سے نکالنے کی انتہائی مذموم حرکت کا تصور بھی نہیں کر سکے گی بلکہ یہ کہ کسی ناقابل برداشت بدسلوکی پر والدین ایسی اولاد کو کان سے پکڑ کر گھر سے نکال سکیں گے! سبحان اللہ! مگر والدین، خاص طور پر ’ماں‘ ایسا کیسے کر سکتی ہے؟ ایسی اولاد کو یہ بات ہر وقت یاد رکھنی چاہئے کہ والدین کی شکائت پر پولیس ایسی اولادکو کسی وارنٹ کے بغیر سیدھے حوالات میں بند کر سکتی ہے جہاں دو وقت صرف شوربے والی دال اورٹھنڈی روٹی ملتی ہے!
٭بعض لوگ کبھی کبھی اچھی باتیں بھی کر جاتے ہیں وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے ایک واقعی نہائت خیال انگیز نکتہ پیش کیا ہے کہ پاکستان کے قومی ’لوگو‘ (سرکاری نشان)کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ 1949ء میں تیارہونے والے اس ’لوگو‘ میں اوپر چاند تارا، نیچے چنبیلی کا پھول، تین فصلوں کی علامتی تصویریں ہیں۔ ان کے گرد پٹ سن کی جھالر کا گھیرائو ہے۔ نیچے ایک جملے میں ایمان، اتحاد اور نظم (تنظیم)کے الفاظ درج ہیں۔ اُن دنوں مشرقی پاکستان کی نہائت اہم پیداوار پٹ سن تھی جس کی برآمد سے ملک کے زرمبادلہ کا کثیر حصہ حاصل ہوتا تھا۔ پٹ سن کا ریشہ زیادہ تر بوریوں، دریوں اور ایسی دوسری اشیا کی تیاری میں استعمال ہوتا تھا۔ اطلاعات کے مطابق مشرقی پاکستان میں دنیا کی سب سے زیادہ پٹ سن پیدا ہوتی تھی۔ اس وقت پاکستان کا قومی ’لوگو‘ پٹ سن کی شاخوں کے گھیرائو میں تیار کیا گیا۔ 1971ء میں مشرقی پاکستان الگ ہو گیا مگر پاکستان کا لوگو یہی رہا جو 50 سال کے بعد بھی اسی طرح برقرار ہے۔ فواد چودھری نے اسے تبدیل کرنے کی تجویز پیش کی ہے بلکہ نئے لوگو کے لئے تجاویز بھی مانگ لی ہیں۔ ویل ڈن فواد چودھری!!
٭دوسرے ملکوں میں مقیم 50 لاکھ سے زیادہ ’اوورسیز‘ پاکستانیوں کو قومی و صوبائی اسمبلیوں میں ووٹ ڈالنے کا آرڈی نینس بہت تاخیر سے ہی سہی، ایک اچھا قابل ستائش اقدام ہے۔ یہ انتہائی عجب وطن پاکستانی ہر سال تقریباً 16 سے 20 ارب ڈالر کا زرمبادلہ بھیجتے ہیں اس سے پاکستان کی معیشت چل رہی ہے۔ یہ پاکستان کے محسن لوگ، عزیز و اقارب سے سینکڑوں ہزاروں کلو میٹر دور، انتہائی محنت و مشقت کے ساتھ  بےحد مشکل وقت گزارتے ہیں۔ پیٹ کاٹ کر وطن عزیز میں اپنے والدین اور بچوں کی زندگی کی ضرورت پوری کرتے ہیں۔ انہیں ووٹ دینے اور قومی معاملات میں شرکت کا پورا حق حاصل ہے۔ دلچسپ بات یہ کہ عام پاکستانی افراد تو قومی اور صوبائی اسمبلیوں میں دو ووٹ ڈال سکتے ہیں مگر کشمیری کو آزاد کشمیر اور قومی و صوبائی اسمبلیوں سمیت تین ووٹوں کا حق حاصل ہے۔ ایک بات پہلے بھی کہہ چکا ہوں کہ میں دنیا بھر میں گھوما ہوں، ہر جگہ وہاں مقیم پاکستانی باشندو ں کو اندرون پاکستان باشندوں سے کہیں زیادہ محب وطن پایا ہے!! زندہ و تابندہ باد اوورسیز پاکستانی بھائیو، بہنو، بچو!!
٭آصف زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان نے پاکستانی سفارت کاروں کی تذلیل کی۔ جواب عمران خان کو دینا چاہئے مگر زرداری صاحب یہ انتہائی محب وطن ’’حسین حقانی‘‘ اور واجد شمس الحسن جیسے افراد کو کس نے بطور صدر امریکہ اور انگلستان کے اہم ترین ممالک میں سفیر مقرر کیا تھا؟ حسین حقانی! جس نے امریکی وزارت دفاع کے حکم پر پاکستان کی افواج کو ہتھیاروں سے محروم کرنے کا بدنام ’’میموگیٹ‘‘ سکینڈل تیار کیا! اور واجد شمس الحسن لندن میں سفیر تھا مگر سوئٹزرلینڈ کے بنکوں میں آپ ’’آصف زرداری و بے نظیر بھٹو‘‘ کے خلاف بھاری منی لانڈرنگ پر قید و جرمانہ کی سزائوں کا ریکارڈ تلف کرایا!! تفصیل پہلے دے چکا ہوں۔ اور ہاں آپ کے بابائے پارٹی، ذوالفقار علی بھٹو نے مارشل لا کے تحت پیپلزپارٹی کے تقریباً 50-40 نوجوانوں کو 'Lateral Ehtry' کے نام پر براہ راست دنیا بھر کے سفارت خانوں میں فرسٹ سیکرٹری مقرر کر دیا تھا!! ان میں سے بیشتر لوگ دوسرے ملکوں میں غائب ہو گئے! تفصیل پھر کبھی۔

تازہ ترین خبریں

سینٹرل سلیکشن بورڈ کا اجلاس 10اگست کوکتنے افسران کو ترقی دی جائیگی،بڑی خبرآگئی

سینٹرل سلیکشن بورڈ کا اجلاس 10اگست کوکتنے افسران کو ترقی دی جائیگی،بڑی خبرآگئی

عوام ہوجائیں تیار۔۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے بری خبرسنادی

عوام ہوجائیں تیار۔۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے بری خبرسنادی

پاور سیکٹر میں پی ٹی آئی حکومت کا اربوں روپے کا گھپلا بے نقاب

پاور سیکٹر میں پی ٹی آئی حکومت کا اربوں روپے کا گھپلا بے نقاب

لیگی رہنما نذیر چوہان کی ضمانت منظور، پی ٹی آئی رکن اسمبلی نے گلے لگالیا

لیگی رہنما نذیر چوہان کی ضمانت منظور، پی ٹی آئی رکن اسمبلی نے گلے لگالیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہرمیں اہم ترین حکومتی شخصیت کوڈاکوئوں نے لوٹ لیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہرمیں اہم ترین حکومتی شخصیت کوڈاکوئوں نے لوٹ لیا

پنجاب حکومت کے حلف لینے والے 21 وزرا کو قلم دان تفویض

پنجاب حکومت کے حلف لینے والے 21 وزرا کو قلم دان تفویض

دانیہ کو کچھ ہوا تو ذمہ دار کون ہوگا،دانیہ شاہ کی والدہ نے بڑااعلان کردیا

دانیہ کو کچھ ہوا تو ذمہ دار کون ہوگا،دانیہ شاہ کی والدہ نے بڑااعلان کردیا

سعودی عرب ترقی کی راہ پر گامزن، بڑی خبر آگئی

سعودی عرب ترقی کی راہ پر گامزن، بڑی خبر آگئی

پی ٹی آئی پر پابندی؟ قانونی ٹیم کا حکومت کو محتاط رہنے کا مشورہ

پی ٹی آئی پر پابندی؟ قانونی ٹیم کا حکومت کو محتاط رہنے کا مشورہ

پاکستان کے سب سے بڑے شہرمیں اہم ترین حکومتی شخصیت کوڈاکوئوں نے لوٹ لیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہرمیں اہم ترین حکومتی شخصیت کوڈاکوئوں نے لوٹ لیا

10 سال سے پنسل پر دھاگوں سے قرآن بُن رہا ہوں۔۔پولیس والے نے قرآن مجید سے محبت کی انوکھی مثال قائم کردی

10 سال سے پنسل پر دھاگوں سے قرآن بُن رہا ہوں۔۔پولیس والے نے قرآن مجید سے محبت کی انوکھی مثال قائم کردی

وفاق نے وزیراعلیٰ پرویز الہٰی کو خط لکھ دیا

وفاق نے وزیراعلیٰ پرویز الہٰی کو خط لکھ دیا

ایف آئی اے نے اہم شخصیت کو گرفتار کرلیا

ایف آئی اے نے اہم شخصیت کو گرفتار کرلیا

سی اے اے کے ساتھ تنازع، پی ایس او کا تمام ہوائی اڈوں پر ایندھن کی سہولت روکنے کا امکان

سی اے اے کے ساتھ تنازع، پی ایس او کا تمام ہوائی اڈوں پر ایندھن کی سہولت روکنے کا امکان