01:13 pm
اسرائیلی بربر یت پر خاموشی کا انجام کیا ہوگا ؟ 

اسرائیلی بربر یت پر خاموشی کا انجام کیا ہوگا ؟ 

01:13 pm

   امریکہ پر ایک جھوٹا حملہ ہوتا ہے ہمارے مطابق نہیں خود امریکن قلم کاروں کے مطابق 9/11 تاریخ انسانی کا سب سے بڑا جھوٹ تھا اور پوری
   امریکہ پر ایک جھوٹا حملہ ہوتا ہے ہمارے مطابق نہیں خود امریکن قلم کاروں کے مطابق 9/11 تاریخ انسانی کا سب سے بڑا جھوٹ تھا اور پوری دنیا صرف افغانستان ہی نہیں پوری اسلامی دنیا پر چڑھ دوڑتی ہے ہے اور افغانستان،عراق ،لیبیا کو تباہ و برباد کردیا جاتا ہے اور دوسری طرف فلسطین ہے کہ اسرائیل دہائیوں سے انسانیت کوملیا میٹ کر رہا ہے فلسطین کی زمین پر روزانہ کی بنیاد پر قبضے کررہا ہے اور دنیا صرف نوٹس لے رہی ہے اور اسلامی دنیا مذمت تک محدود ہے…غیرمسلم دنیا تو اسلام کے پہلے دن سے خلاف ہے لیکن اسلامی ممالک اور اسلام کے نام لیوا کیا یہ سمجھنے لگ گئے ہیں کہ انہیں ہمیشہ کے لیے جینا ہے انہیں مرنا نہیں ہے انہیں مالک کائنات کو جواب نہیں دینا ہے …یاد رکھیں کہ اقوام متحدہ، او آئی سی اور عالمی برادری اسرائیلی جارحیت پر جتنا خاموش رہیں اتنا ہی ان سب کو بھگتنا پڑے گا ان کی نسلوں کو بھگتنا پڑے گا ۔ فلسطینی عوام تو اسرائیلی جارحیت کاڈٹ کر مقابلہ کررہے ہیںاور کئی دہائیوں سے اسرائیل  فلسطینی عوام پر ظلم کے پہاڑ توڑ  رہا ہے، کیا دوسرے اسلامی ممالک اتنا ظلم برداشت کرنے کی پوزیشن میں ہیں پاکستان سمیت دنیا بھر میں اپنے ہی اسلامی ممالک کو لوٹ کر یورپ اور امریکہ میں راج کرنے والوں کو تباہی کے بعد یورپ اور امریکہ برداشت کریں گے …ترک صدر رجب طیب اردوان نے کیا خوب کہاہے کہ اسرائیلی جارحیت پر خاموش رہنے والوں کا انجام عبرت ناک ہوگا…رجب طیب اردوان اسلامی دنیا کو آخری پیغام دے دیا ہے کہ یاد رکھوتمہاری نسلیں تک اسرائیل کیخلاف خاموشی کا خمیازہ بھگتیںگی۔ ان کاکہنا تھا کہ  اسرائیل کے فلسطینی شہروں اور القدس میں برپا مظالم کے خلاف آواز اٹھانا  ناموس انسانیت کا  فرض ہے، اسرائیل کی جانب سے بہائے جانے والے خون پر خاموش رہنے والوں کو یہ یاد رکھنا چاہیئے کہ ایک دن ان پر بھی یہ وقت آ سکتا ہے،القدس، مسلمانوں کے ساتھ ساتھ مسیحیوں اور یہودیوں کے لیے بھی مقدس مقام ہے جہاں اسرائیل  نامی دہشت گرد  ریاست نے انسانیت سوزی  کی تمام حدیں عبور  کر لی ہیں،میں  اقوام  عالم سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ بلا امتیاز  اسرائیلی جارحیت کے خلاف متحد ہو جائیںاور  مسلمانوں سے مایوسی بھرا ان کا پیغام بھی تھا کہ فلسطین میں اسرائیلی ظلم و جبر کے خلاف اگر پوری دنیا خاموش بھی ہو جائے تب بھی ہم اس کے ظلم کے خلاف آواز اٹھاتے رہیں گے… دوسری جانب دشمن کی صورتحال یہ کہ اسلام مخالف دنیا فلسطین ہو یا کشمیرپر مظالم آواز تک نہیں اٹھانے دے رہی … غزہ پر اسرائیل کے فضائی حملوں سے پیدا ہونے والی صورت حال پر غور کرنے کے لیے سلامتی کونسل کا اجلاس جمعہ کو طلب کیا گیا تھا تاہم امریکہ  کی جانب سے مخالفت کے بعد ملتوی کردیا گیا۔اس حوالے سے امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکہ اجلاس روک نہیں رہا، چاہتا ہے کہ یہ اجلاس بعد میں بلایا جائے، امید ہے اس دوران سفارتکاری کو موقع ملے گا، ہم مشرق وسطی پر کھلی بحث کے حامی ہیں۔انتھونی بلنکن کا کہنا تھا کہ ہمارا موقف واضح ہے کہ راکٹ حملے رکنے چاہئیں کیونکہ اس سے قیمتی انسانی جانیں ضائع ہو رہی ہیں۔یاد  رہے کہ یہاں ہمارے اپنے تو خاموش رہے لیکن تیونس ، ناروے اور چین نے غزہ پر اسرائیل کے فضائی حملوں سے پیدا ہونے والی صورت حال پر غور کرنے کے لیے سلامتی کونسل کا اجلاس بلانے کی درخواست کی تھی… ذرائع تو یہ بھی کہتے ہیں کہ امریکہ سلامتی کونسل کو کوئی بیان جاری کرنے سے روک دے گا کیونکہ وہ اس بات میں یقین رکھتا ہے کہ رکن ممالک اجلاس کے بعد اسرائیل کی مذمت میں کوئی بیان جاری کرسکتے ہیں…یونان ،جنوبی افریقہ ،سربیا سمیت مختلف ممالک میں مظاہرین صیہونی پرتشدد کارروائیوں کیخلاف سراپا احتجاج ہیںاگر خاموشی ہے تو اسلام کے جان لیوائوں کی کہ انہیں ہمیشہ زندہ رہنا ہے …فلسطین پوری دنیا کا مسئلہ بن چکا ہے لیکن حیرت کا مقام ہے کہ انسانیت کا درد رکھنے والے غیر مسلم یہ حقیقت مانتے ہیں کہ فلسطین میں ظلم ہو رہا ہے مگر پھر بھی اسلامی دنیا خاموش ہے۔ اسرائیلی جارحیت کی کسی بھی عرب ملک نے اب تک مذمت نہیں کی، کیونکہ اب ان بادشاہتوں اور اسرائیل میں ان کی دوستی اس قدر بڑھ چکی ہے کہ اسرائیل ان کی بادشاہت کے تسلسل کا گرنٹر بن چکا ہے…کیا ہم بھول رہے ہیں قدس، قبلہ اول اور دنیا بھر کے مسلمانوں کا دوسرا حرم ہے، یہ فلسطین کے ان دسیوں لاکھ مسلمانوں کی اصل سرزمین ہے، جنہیں عالمی استکبار نے غاصب صہیونیوں کے ہاتھوںمرنے پر مجبور کر رکھا ہے …عالمی اداروں کی خاموشی، عرب حکمرانوں کا منافقانہ رویہ، انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کے دوہرے معیار اور عالمی برادری کی عدم توجہ اس بات کا تقاضا کرتی ہے کہ امت مسلمہ اتحاد و وحدت اور اسلامی یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے فلسطین کے مسئلے کے حل کے لئے  میدان عمل میں آجائے۔ تل ابیب اور واشنگٹن کے تعلقات ہمیشہ وسیع پہلوئوں کے حامل رہے ہیں، کیونکہ جو بھی صدر امریکہ میں برسر اقتدار آتا ہے، اس کی پہلی کوشش ہوتی ہے کہ اسرائیل کے ساتھ  تعلقات کو بہتر بنانے میں دوسرے پر سبقت لے جائے۔ اسی سبب  ہر امریکی صدر نے انتخابات سے پہلے بھی اور وائٹ ہائوس میں قدم رکھنے کے بعد بھی کھل کر اسرائیلی حکومت کے لئے اپنی حمایت کا اعلان کیا۔اسلامی ممالک جس امریکہ کہ غلام ہیں اس امریکہ کی طرف سے اسرائیلی حکومت کو سالانہ تین ارب ڈالر بلاعوض امداد دی جاتی ہے، جس کا بڑا حصہ فوجی ساز وسامان پرخرچ ہوتا ہے۔اس کے علاوہ امریکہ سالانہ اربوں ڈالر آسان شرائط پر اسرائیل کو قرض دیتا ہے، جن سے اسرائیلی حکومت مغربی ملکوں کے جدید ترین اسلحے خریدتی ہے۔ امریکہ اسرائیل کی حمایت کرکے فلسطینیوں کے لئے  مسائل پیدا کر رہا ہے، فلسطین پوری دنیا کا مسئلہ بن چکا ہے، لیکن حیرت کا مقام ہے کہ انسانیت کا درد رکھنے والے غیر مسلم یہ حقیقت مانتے ہیں کہ فلسطین میں ظلم ہو رہا ہے، مگر پھر بھی اسلامی دنیا خاموش ہے۔  اسرائیل کی جارحانہ اور دہشت گردانہ پالیسیوں اور عزائم سے واضح طور پر ایسا لگتا ہے کہ غاصب اسرائیل صرف فلسطین پر غاصبانہ تسلط تک محدود نہیں رہنا چاہتا بلکہ وہ پوری دنیا کو اپنا غلام بنا کر اس پر حکومت کرنا چاہتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ آج مشرق وسطی آگ میں جل رہا ہے، جنوبی ایشیا کا حال بھی اسی طرح ہے اور اگر ان تمام معاملات کی تحقیق کی جائے تو تمام تر سازشوں کے تانے بانے اسرائیل تک جا ملتے ہیں۔غلام اسلامی ممالک سے تو خیر کوئی امید نہیں ہاں دنیا کو پیغام ہے کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ دنیا کی سمجھ دار اور باشعور ریاستیں مل کر بیٹھ جائیں اور مشرق وسطی سمیت دنیا کے امن کے لئے  خطرہ، غاصب اسرائیلی ریاست کے خلاف ٹھوس اقدامات کیے جائیں اور اسرائیلی ہٹ دھرمی کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے اسرائیل کیخلاف سخت سے سخت کارروائی کرتے ہوئے ایٹمی ہتھیاروں کو بین الاقوامی کنٹرول میں لیا اور دنیا کے امن کو یقینی بنایا جائے،ورنہ …اسرائیلی جارحیت پر خاموش رہنے والوں کا انجام عبرت ناک ہوگا۔


 

تازہ ترین خبریں

وزارت داخلہ نے اے آر وائی نیوز کااین او سی منسوخ کردیا

وزارت داخلہ نے اے آر وائی نیوز کااین او سی منسوخ کردیا

دل دل پاکستان۔۔ ملی نغمہ پڑھتے ہوئے شرمیلا فاروقی کی ویڈیو وائرل

دل دل پاکستان۔۔ ملی نغمہ پڑھتے ہوئے شرمیلا فاروقی کی ویڈیو وائرل

سوات میں سکیورٹی ہائی الرٹ، داخلی اور خارجی راستوں پر چیک پوسٹ قائم، چیکنگ شروع

سوات میں سکیورٹی ہائی الرٹ، داخلی اور خارجی راستوں پر چیک پوسٹ قائم، چیکنگ شروع

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی ،فی تولہ کتنے کا ہو گیا؟ اہم خبر

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی ،فی تولہ کتنے کا ہو گیا؟ اہم خبر

فائز عیسی ٰکیس،اختیارات کا غلط استعمال کرنیوالے افسران مشکل میں پھنس گئے ،بڑااقدام اٹھالیاگیا

فائز عیسی ٰکیس،اختیارات کا غلط استعمال کرنیوالے افسران مشکل میں پھنس گئے ،بڑااقدام اٹھالیاگیا

یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان نے سب کو حیران کردیا، ویڈیو وائرل

یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان نے سب کو حیران کردیا، ویڈیو وائرل

عمرے کی ادائیگی : سعودی عرب آنے والوں کیلئے بڑی خوشخبری آگئی

عمرے کی ادائیگی : سعودی عرب آنے والوں کیلئے بڑی خوشخبری آگئی

امریکی اداکارہ این ہیش کی حالت نازک، خاندان نے امید چھوڑ دی

امریکی اداکارہ این ہیش کی حالت نازک، خاندان نے امید چھوڑ دی

تحریک انصاف کے کئی بڑے رہنما پارٹی چھوڑنے کے لیے تیار، پیپلزپارٹی کے رہنما نے اب تک کا بڑا دعویٰ کردیا

تحریک انصاف کے کئی بڑے رہنما پارٹی چھوڑنے کے لیے تیار، پیپلزپارٹی کے رہنما نے اب تک کا بڑا دعویٰ کردیا

پی ٹی آئی کے سوشل میڈیا ہیڈ ارسلان خالد کو پنجاب کابینہ میں اہم عہدہ مل گیا

پی ٹی آئی کے سوشل میڈیا ہیڈ ارسلان خالد کو پنجاب کابینہ میں اہم عہدہ مل گیا

جنرل باجوہ برٹش ملٹری اکیڈمی میں ملکہ برطانیہ کی نمائندگی کرنیوالے پہلے پاکستانی بن گئے

جنرل باجوہ برٹش ملٹری اکیڈمی میں ملکہ برطانیہ کی نمائندگی کرنیوالے پہلے پاکستانی بن گئے

عمران خان نے این اے 24 چار سدہ کے ضمنی الیکشن کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے،اس حلقے سے کپتان کامخالف امیدوارکون ہے

عمران خان نے این اے 24 چار سدہ کے ضمنی الیکشن کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے،اس حلقے سے کپتان کامخالف امیدوارکون ہے

ہاکی اسٹیڈیم کے نقصان کی صورت میںازالہ کون کرے گا،لاہورہائی کورٹ نے بڑاحکم جاری کردیا

ہاکی اسٹیڈیم کے نقصان کی صورت میںازالہ کون کرے گا،لاہورہائی کورٹ نے بڑاحکم جاری کردیا

عوام کوبجلی کازوردارجھٹکادیدیاگیا،فی یونٹ قیمت میں کتنااضافہ ہوگیا،مہنگائی کی چکی میں پسے عوام کے لیے بری خبرآگئی

عوام کوبجلی کازوردارجھٹکادیدیاگیا،فی یونٹ قیمت میں کتنااضافہ ہوگیا،مہنگائی کی چکی میں پسے عوام کے لیے بری خبرآگئی