12:50 pm
زرعی پیداوار میں کمی کے سنگین نتائج

زرعی پیداوار میں کمی کے سنگین نتائج

12:50 pm

پاکستان گنا پیداکرنے والا دنیا کا سب سے بڑا ملک تھا۔مگرپاکستان کو اب برازیل، بھارت، تھائی لینڈ اور چین نے پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ آم کی پیداوار میں بھی پاکستان سب سے آگے تھا ۔مگر اب بھارت، انڈونیشیا، چین اور میکسیکو نے پاکستان پر سبقت لے لی ہے۔ بھارت کا پنجاب سونا اگل رہا ہے، بھارت کی تقریباً ڈیڑھ ارب کی آبادی کی خوراک ضروریات پورا کرنے کے ساتھ برآمدات سے کثیر زرمبادلہ کمائی پنجاب کی مرہون منت ہے اورپاکستان کا پنجاب جہاں فصلیں لہلہاتی تھیں ، اب ہائوسنگ سوسائٹیوں کی آماجگاہ بن رہا ہے۔ زرعی اراضی پر تعمیرات سنگین جرم کے زمرے میں آنا چاہیئے ،مگردھڑلے سے تعمیرات جاری ہیں اور حکومت مستقبل سے بے خبر تماشا دیکھ رہی ہے۔ اگر پی ٹی آئی حکومت آئندہ بجٹ میں 110 ارب روپے کے زرعی اصلاحات پر مبنی پیکج بھی متعارف کرے تو اس کا کیا فائدہ ہو گا۔عمران خان حکومت آئیندہ 3 سال میںفصلوں کی پیداوار اور کسانوں کی آمدنی میں خاطر خواہ اضافے کے لیے قرضے میں 80 فیصد یا 27 کھرب روپے تک کا اضافہ کرنا چاہتی ہے۔وزیر اطلاعات فواد چوہدری کے ہمراہ وزیر اعظم ٹاسک فورس برائے زراعت جمشید اقبال چیمہ کی پریس کانفرنس میں جو کہا گیا وہ محض سیاست ہی ہے جیسے کہ کسان کارڈ۔جمشید اقبال چیمہ کے مطابق وفاقی حکومت آنے والے بجٹ میں پہلے سال کے لیے تقریباً 25-30 ارب روپے مختص کرے گی۔ اس پیکج میں چار اہم عناصر ہوں گے جن میں لائیو اسٹاک کی بہتر افزائش کے لیے 3 برس میں 40 ارب روپے کا منصوبہ بھی شامل ہے۔ دوسرا عنصر نائٹروجن اور فاسفورک کھادوں کی 4 کروڑ بیگ پر ہزار روپے فی بیگ امداد فراہم کی جائے گی اور اس پیکج کا ججم 40 ارب روپیرکھا گیا ہے اور اس میں تین بڑی فصلوں یعنی گندم، چاول اور مکئی کا احاطہ ہوگا۔
حکومت یہ نہیں بتا رہی کہ گندم اور چاول کی پیداوار میں بھارت کا پنجاب دنیا میں سب سے زیادہ پیداواری خطہ کیسے بن گیا ہے۔ چیمہ صاحب اپنی پیکج کا تیسرا پہلو 30 ارب پر مشتمل تین سالہ پیکج قرار دیتے ہیں جو مونگ، آلو اور پھلیاں سمیت دیگر اجناس کی 3 ماہ کی پختگی کی مدت کے ساتھ فصلوں کی تعداد کو موجودہ ڈیڑھ سال سے ڈھائی سال تک بڑھائی جائے گی۔وہ آئیندہ 2 برس میں زراعت کا کریڈٹ رواں سال کے 15 کھرب سے بڑھا کر 27 کھرب ارب روپے کردیا جائے گا جوکہ دو سال پہلے تقریباً 900 ارب روپے تھا۔ جبکہ عالمی بینک کے تخمینے سے معلوم ہوتا ہے کہ زراعت میں سرمایہ کاری نے غربت میں کمی کو کسی بھی دوسرے شعبے سے 4 گنا زیادہ متاثر کیا ہے۔حکومت کا اعتراف ہے کہ رواں سال زراعت کے شعبے سے دیہی معیشت میں تقریباً 11 کھرب روپے اضافی آمدنی ہوئی ، پھر زراعت کو نظر انداز کرنے کی کیا وجوہات ہیں۔ زراعت کے قدیم طریقوں پر انحصارسے کمرشل بنیادوں پر زراعت میں حصہ نہیں لیا جا سکتا  اور چند فصلوں پر توجہ دینے سے مسلہ حل نہیںہو سکتا ہے۔سب یہ مانتے ہیں کہ اس کے نتیجے میں ملک نہ صرف کھانے میں بلکہ کیلوری کی مقدار میں بھی کمی کا شکار ہے جس کے نتیجے میں انسانی دماغ بھی متاثر ہوتا ہے۔
وزیراعظم عمران خان بھی اعتراف کرتے ہیں کہ ملک میں زرعی پیداوار دگنی کی جاسکتی ہے۔ اس کے لیے وہ زرعی شعبے کی سربراہی خود کرنے گا اور ہر ہفتے نئے اقدام کی تفصیلات ٹائم فریم کے ساتھ فراہم کرنے کا اعلان بھی کر چکے ہیں۔اس پر عمل نہیں کیا جا رہا ہے۔ملتان میں کاشت کاروں کے لیے کسان کارڈ کے اجرا ء کے لیے منعقدہ تقریب سے خطاب میں وزیر اعظم جو کہا، اس پر عمل کب ہو گا۔ان کا کہنا تھا کہ کسان پاکستان کی ریڑھ کی ہڈی ہے ،اسے جتنا مضبوط کریں گے، اتنا ہم اپنے ملک کو مضبوط کریں گے۔وہ سمجھتے ہیں کہ کسان کارڈ پاکستان کو تبدیل کردے گا اور جیسے جیسے ٹیکنالوجی کی طرف جاتے رہیں گے کرپشن نیچے آتی رہے گی۔پی ٹی آئی کے دور میں کسانوں کے لیے گندم کی امدادی قیمت میں 500 روپے کا اضافہ ہوا جس کے نتیجے میں کسانوں کے پاس 500 ارب روپیہ آیا۔مگر ملک پیداوار میں خود کفالت کی جانب کب سفر شروع کرے گا۔اگر کسانوں کو ملنے والی گندم، مونگی، مکئی اور دودھ کی قیمت سے کسانوں کے پاس اضافی 11 سو ارب روپے گئے ہیں، تو ملک تخفیف غربت کے ہدف کی جانب کیوں نہ بڑھ سکا ہے۔حکومت کا فیسلہ ہے کہ کسان کارڈ پر ایک ہزار کی ڈی ایل پی پر سبسڈی دی جائے گی جس میں کھاد اور کیڑے مار ادویات پر بھی سبسڈی ملے گی۔ کسان کارڈ کے ذریعے قرضے دینے اور قدرتی آفات کے سبب فصل تباہ ہونے پر کارڈ کے ذریعے مدد کرنے کا پروگرام احسن قدم ہے۔حکومت نے آبپاشی کے لئے بڑے ڈیمز تعمیر کرنے پر کوئی توجہ نہ دی کہ جن کی وجہ سے کسانوں کے لیے اضافی پانی آئے، چھوٹے ڈیمز اور نہریں بھی تعمیر کرنے میں مجرمانہ غفلت برتی گئی۔موجودہ حکومت کے 30 ارب روپے کے ٹرانسفارمیشن پلان میں 200 ارب روپے نہریں پکی کرنے کے لیے مختص ہیں، زراعت کو سی پیک میں شامل کیا گیاہے ۔ چین میںپاکستان سے کہیں زیادہ پیداوار حاصل کی جاتی ہے۔ چین چاول، گندم، مکئی، ٹماٹر، پیاز، گاجر، مولی، آلو، دالیں، سبزیاں پیدا کرنے و الاسب سے بڑا ملک ہے۔ ا س لئے چین کے تجربات سے فائدہ اٹھایا جا سکتا ہے۔
(جاری ہے)

تازہ ترین خبریں

عنقریب صدر مملکت شہباز شریف کو اعتماد کا ووٹ لینےکا کہیں گے، شیخ رشید کی پیش گوئی

عنقریب صدر مملکت شہباز شریف کو اعتماد کا ووٹ لینےکا کہیں گے، شیخ رشید کی پیش گوئی

"  وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاملے پر منصور علی خان نے دونوں پارٹیوں کو مشورہ دے دیا، ایسا کیوں کہا ؟ جانیں 

" وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاملے پر منصور علی خان نے دونوں پارٹیوں کو مشورہ دے دیا، ایسا کیوں کہا ؟ جانیں 

شاہ محمود اشارے دے رہے ہیں کہ اگلی مرتبہ مجھے وزیراعلی بنایا جائے،سینئر صحافی ہارون الرشید نے بڑی خبر بریک کر دی

شاہ محمود اشارے دے رہے ہیں کہ اگلی مرتبہ مجھے وزیراعلی بنایا جائے،سینئر صحافی ہارون الرشید نے بڑی خبر بریک کر دی

لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد پنجاب اسمبلی میں نمبر گیم کیا ہے ؟جانیں مکمل تفصیلات

لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد پنجاب اسمبلی میں نمبر گیم کیا ہے ؟جانیں مکمل تفصیلات

ملک میں ذی الحج کا چاند نظر آ گیا، عید الاضحی 10 جولائی کو منائی جائے گی

ملک میں ذی الحج کا چاند نظر آ گیا، عید الاضحی 10 جولائی کو منائی جائے گی

حکومت کی عوام پر پھر سے پیٹرول بم گرانے کی تیاری ،پانچ دس روپے نہیں بلکہ کتنے روپے اضافہ ہونے والا ہے ؟ جانیں 

حکومت کی عوام پر پھر سے پیٹرول بم گرانے کی تیاری ،پانچ دس روپے نہیں بلکہ کتنے روپے اضافہ ہونے والا ہے ؟ جانیں 

ہماری زبان بندی اور ہاتھ باندھ کر کہتے الیکشن جیت کر دکھاؤ،نئے الیکشن کیلئے24 گھنٹے سے بھی کم وقت دیا گیا،ق لیگ پھٹ پڑی

ہماری زبان بندی اور ہاتھ باندھ کر کہتے الیکشن جیت کر دکھاؤ،نئے الیکشن کیلئے24 گھنٹے سے بھی کم وقت دیا گیا،ق لیگ پھٹ پڑی

پرویز مشرف اس وقت پاکستان میں موجود ہیںمیرے ایک جاننے والے ڈاکٹر مل کر آئے ہیں ،وہ کس حال میں ہیں ؟ 

پرویز مشرف اس وقت پاکستان میں موجود ہیںمیرے ایک جاننے والے ڈاکٹر مل کر آئے ہیں ،وہ کس حال میں ہیں ؟ 

محکمہ موسمیات نے 2سے 5جولائی موسلا دھار بارشوں کی پیشنگوئی کر دی

محکمہ موسمیات نے 2سے 5جولائی موسلا دھار بارشوں کی پیشنگوئی کر دی

وزیراعلیٰ پنجاب کے دوبارہ انتخاب میں جیت کس کی ہو گی؟بڑا دعویٰ کر دیا گیا

وزیراعلیٰ پنجاب کے دوبارہ انتخاب میں جیت کس کی ہو گی؟بڑا دعویٰ کر دیا گیا

اپنے ارکان کو ہوٹل میں ٹھہرایا جائے ، وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کیلئے مسلم لیگ (ن) نے حکمت عملی طے کرلی

اپنے ارکان کو ہوٹل میں ٹھہرایا جائے ، وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کیلئے مسلم لیگ (ن) نے حکمت عملی طے کرلی

’روسی صدر خاتون ہوتے تو جنگ نہ کرتے‘: برطانوی وزیراعظم کے بیان پر پیوٹن کا جواب آگیا

’روسی صدر خاتون ہوتے تو جنگ نہ کرتے‘: برطانوی وزیراعظم کے بیان پر پیوٹن کا جواب آگیا

' خلیل الرحمان قمر نے دانیہ شاہ کو عامر لیاقت کی موت کا ذمہ دار قرار دیتے دانیہ کو کھری کھری سنا دیں 

' خلیل الرحمان قمر نے دانیہ شاہ کو عامر لیاقت کی موت کا ذمہ دار قرار دیتے دانیہ کو کھری کھری سنا دیں 

’خان صاحب ہم ٹینکوں کے آگے بھی لیٹ جائیں گے، آپ حکم کریں‘  عمران خان کو کارکن نے یہ بات کہی تو انہوں نے کیا جواب دیا؟ دلچسپ خبر

’خان صاحب ہم ٹینکوں کے آگے بھی لیٹ جائیں گے، آپ حکم کریں‘ عمران خان کو کارکن نے یہ بات کہی تو انہوں نے کیا جواب دیا؟ دلچسپ خبر