12:53 pm
مزاحمت کاری، جہادی پرچم تلے

مزاحمت کاری، جہادی پرچم تلے

12:53 pm

کیا آپ جانتے ہیں کہ صرف پاکستان ہی نہیں بلکہ اکثر مسلمان ممالک کے عوام مسجد اقصیٰ کی آزادی کے لئے اسرائیل کے ساتھ ’’جہاد‘‘ کے زبردست حامی ہیں … صرف یہی نہیں بلکہ ایک اخباری رپورٹ کے مطابق جمعیت علماء اسلام کے رکن پارلیمنٹ مولانا عبدالشکور اور جماعت اسلامی کے اکلوتے ایم این اے مولانا عبدالاکبر چترالی نے تو پارلیمنٹ کے فلور سے فلسطین کو آزاد کروانے کے لئے جہاد کے اعلان کا مطالبہ کیا ہے، عبد الاکبر چترالی نے تو یہا ں تک کہہ د یا کہ ’’کیا ہم نے ایٹم بم میوزیم میں سجانے کے لئے رکھا ہے؟ ہمیں میزائل، ایٹم بم اور بہت بڑی فوج رکھنے کی ضرورت نہیں … اگر ہم انہیں فلسطین کو آزاد کروانے کے لئے استعمال نہیں کرسکتے… رپورٹ کے مطابق اُردن کی پارلیمنٹ نے بھی اسرائیل کے جہاد میں شرکت کا مطالبہ کیا ہے، اردنی پارلیمنٹ نے اپنی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اسرائیلی سفیر کو اردن سے نکالا جائے، یاد رہے کہ اردن اسرائیل کا پڑوسی ملک ہے، فلسطینی مسلمانوں اور مسجد اقصیٰ کی آزادی کے لئے مسلمان عوام کی طرف سے اپنے اپنے حکمرانوں  سے جہاد کے بڑھتے ہوئے مطالبات اس بات کا ثبوت ہے کہ عام مسلمان مسجد اقصیٰ کی آزادی اور فلسطینیوں پر ہونے والے مظالم کے حوالے سے انتہائی حساس ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ مسلمان ملکوں کے حکمرانوں نے اپنی گردنوں میں امریکی صیہونی غلامی کے طوق پہن رکھے ہیں… لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ مسلمان عوام گناہ گار ہونے کے باوجود مسجد اقصیٰ کی آزادی کے  مشن کو بھولے نہیں اور میرا یہ دعویٰ ہے کہ اگر آج کوئی مسلمان حکمران جہاد کا اعلان کرکے  رضا کار مجاہدین کی اسرائیل تک پہنچنے کے لئے سرپرستی اور راہنمائی فراہم کر دے تو دو چارسو نہیں بلکہ لاکھوں مسلمان نوجوان سروں پر کفن باندھ کر ’’جہاد مسجد اقصیٰ‘‘ میں کودنے کے لئے تیار ہو جائیں گے۔
کس قدر ظلم کی بات ہے کہ مسلمانوں کے  جہاد کے حق میں بولنے پر بھی پابندی عائد ہے … جبکہ اسرائیلی صیہونیوں کو معصوم بچے، بوڑھے اور عورتوں تک کے قتل عام کی بھی اجازت ہے، جہاد چونکہ ’’فساد‘‘ اور فسادیوں کا راستہ روکتا ہے، جہاد کی عبادت سے چونکہ بدامنی کو ختم کرکے امن و امان کے قیام کو یقینی بنایا جاسکتا ہے ، ’’جہاد‘‘ فساد فی الارض کے خاتمے کا باعث بنتا ہے، جہاد کی عبادت  دراصل مظلوم انسانیت کی خدمت کے مترادف ہے، اس لئے کفریہ طاقتیں  اور ان کے ہمنوا منافقین جہاد اور مجاہدین حق کے نام سے ہی لرزہ براندام رہتے ہیں ،’’مسجد اقصیٰ‘‘ کی آزادی سیاسی مسئلے سے بڑھ کر مذہبی معاملہ بھی ہے … ایک حدیث مبارکہ میں  وارد ہونے والے مضمون کے مطابق ’’اگر کسی مومن کو بیت المقدس کی سرزمین پر گھوڑے کی ایک رسی جتنی بھی جگہ مل جائے کہ جس کی بدولت وہ مسجد اقصیٰ کی زیارت سے مستفید ہوتا رہے تو یہ دنیا ومافیھا سے بہتر ہے‘‘ مسجد اقصیٰ کے ساتھ مسلمانوں کی اس قدر جذباتی وابستگی ہے کہ اکثر اولیاء کرام اللہ تعالیٰ سے دعا مانگا کرتے تھے کہ ’’اے اللہ! اگر آپ نے  ہمارے جسموں کے لئے بیت المقدس کی فتح میں شرکت مقدر نہیں فرمائی … تو ہماری روحوں کے لئے بیت المقدس کی فتح میں شرکت مقدر فرما دیجئے‘‘ مسلمانوں کی مسجد اقصیٰ سے والہانہ جذباتی تعلق اور وابستگی ’’سیاست‘‘ نہیں بلکہ مذہب اور ایمان ہے، اگر امت کے علماء بیت المقدس کی آزادی کے لئے مذہبی جنگ یعنی جہاد کا فتویٰ جاری کر دیں اور مسلمان ممالک کے حکمران  ہر قسم کی بزدلی اور منافقانہ روش چھوڑ کر علماء کے ان فتائوی جات پر عملدرآمد یقینی بنائیں … تو صرف یہ یہودی کیا؟ بلکہ ان کے باپ، داد بھی قبروں سے نکل کے آجائیں تب بھی اقصیٰ کی آزادی کو روک نہیں سکتے، مسلمان نوجوانوں کو تو امریکہ کے غلام حکمرانوں نے دبا رکھا ہے، وگرنہ ان یہودیوں کی کیا اوقات؟
یہودی جب بھی کامیاب ہوئے یا سازشوں کے ذریعے یا پھر مسلمانوں کی صفوں میں گھسے ہوئے غداروں کی وجہ سے ’’میدان‘‘ چودہ سو سال پہلے بھی مسلمانوں کے ہاتھ میں تھا اور آج بھی مسلمانوں کے ہاتھ میں ہے، مسلمانوں کی صفوں میں گھسے ہوئے وہ بزدل چوہے کہ جنہوں نے نائن الیون کی کوکھ سے جنم لیا ، یا پھر قادیانیوں کی چاکری نے انہیں مصنوعی ’’اسکالر‘‘ اور نجانے کیا کیا القابات سے نوازا، وہ قوم کو بتاتے رہے کہ ’’جہاد‘‘ ختم ہوچکا ہے ’’جہاد‘‘ دراصل فساد کا نام ہے ، یہ خاکسار نائن الیون سے بھی پہلے سے یعنی1990 ء سے لکھتا چلا آرہا ہے کہ ’’فسادیوں‘‘ کو ’’جہادی‘‘  کہنا بھی جہاد مقدس کی توہین ہے، اگر کوئی فسادی ’’جہادی‘‘ کا روپ دھار بھی لے … تو وہ عارضی ہوتا ہے … اللہ تعالیٰ اپنے مخلص مجاہدین سے فسادیوں کو علیحدہ کر دیتا ہے، جو  پاکستان میں مسلمانوں پر حملہ کرنے والوں، مسلمانوں کاخون بہانے والوں کو جہاد کی طرف منسوب کرتے تھے … اب وہ لال بجھکڑ کدھر ہیں؟ پاکستان میں خودکش حملے اور بے گناہ مسلمانوں پر حملے کرنے والے تو ختم ہوگئے مگر ’’جہاد‘‘ کی آوازیں تو آج پاکستان کی قومی اسمبلی اور اردن کی پارلیمنٹ سے بھی اٹھ رہی ہیں …56 مسلمان ملکوں کے کروڑوں مسلمانوں کے شدید جذبات یہی ہیں کہ اقصیٰ کی آزادی کے لئے جہاد و قتال شروع کیا جائے، اس کا مطلب بڑا واضح ہے کہ امت مسلمہ جانتی ہے کہ ظالم ، جارح، دہشت گرد اور بدمعاش کفریہ طاقتوں کا علاج صرف اور صرف جہاد ہی کے ذریعے ممکن ہے، جہاد کے بغیر کفریہ طاقتوں کی جارحانہ پالیسیوں کو وقتی طور پر ٹالا تو جاسکتا ہے، مگر ’’جہاد‘‘ ہی کے ذریعے  کفریہ طاقتوں کی طاقت کو پاش پاش کیا جاسکتا ہے، میری دنیا بھر میں مظلوم مسلمانوں سے اپیل ہے کہ وہ افغان جہاد کو اپنے لئے مشعل راہ بنائیں، کشمیر ہو، فلسطین ہو یا برما مسلمان مزاحمت کاروں کو لبرل لادینیت کے پنجے سے نکل کر افغان طالبان کی طرح ہر کام میں ’’دین‘‘ کو مقدم رکھنا پڑے گا، جب ’’مزاحمت ‘‘ ’’جہاد‘‘ میں تبدیل ہوکر دینی پرچم کے سائے تلے آئے گی تو نصرت خداوندی بھی قطار اندر قطار فرشتوں کی صورت میں نازل ہوگی۔

تازہ ترین خبریں

ٹیکس چوری روکنے کیلئے نئے اقدامات، نان فائلرز سے زیادہ وصولی کی تجاویز

ٹیکس چوری روکنے کیلئے نئے اقدامات، نان فائلرز سے زیادہ وصولی کی تجاویز

عمران خان کے گھر سرچ آپریشن کی پولیس درخواست منظور

عمران خان کے گھر سرچ آپریشن کی پولیس درخواست منظور

حکومت کا آڈیو لیکس کمیشن بینچ پر اعتراض،نیا بینچ تشکیل دینے کی استدعا

حکومت کا آڈیو لیکس کمیشن بینچ پر اعتراض،نیا بینچ تشکیل دینے کی استدعا

انتشار پھیلانے والوں کیساتھ مذاکرات نہیں ہوسکتے، وزیراعظم شہبازشریف

انتشار پھیلانے والوں کیساتھ مذاکرات نہیں ہوسکتے، وزیراعظم شہبازشریف

پی ٹی آئی نے جھوٹی پریس کانفرنس کرنے پر عبدالقادر پٹیل کو 10 ارب ہرجانے کا نوٹس بھجوادیا

پی ٹی آئی نے جھوٹی پریس کانفرنس کرنے پر عبدالقادر پٹیل کو 10 ارب ہرجانے کا نوٹس بھجوادیا

مبینہ آڈیو لیکس کی تحقیقات کیلئے تشکیل کمیٹی  عدالت میں چیلنج

مبینہ آڈیو لیکس کی تحقیقات کیلئے تشکیل کمیٹی عدالت میں چیلنج

عمران خان   ناراض ، ڈاکٹر عارف علوی سے بات کرنا چھوڑ دیا

عمران خان ناراض ، ڈاکٹر عارف علوی سے بات کرنا چھوڑ دیا

عالمی مالیاتی ادارے کی آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کیلئے انوکھی شرط سامنے آگئی

عالمی مالیاتی ادارے کی آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کیلئے انوکھی شرط سامنے آگئی

سپیکر ، ڈپٹی سپیکرگلگت بلتستان آمنے سامنے ، سپیکرکیخلاف عدم اعتماد تحریک آج پیش کی جائےگی

سپیکر ، ڈپٹی سپیکرگلگت بلتستان آمنے سامنے ، سپیکرکیخلاف عدم اعتماد تحریک آج پیش کی جائےگی

صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم شہباز شریف آج کوئٹہ کا دورہ کریں گے

صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم شہباز شریف آج کوئٹہ کا دورہ کریں گے

فواد چوہدری ، پرویزخٹک ، اسد عمر کو القادر ٹرسٹ کیس میں پیش ہونے کے نوٹس جاری

فواد چوہدری ، پرویزخٹک ، اسد عمر کو القادر ٹرسٹ کیس میں پیش ہونے کے نوٹس جاری

میری پوزیشن اس وقت کمزور ہو گی جب۔۔۔!!!عمران خان نے خود ہی بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا

میری پوزیشن اس وقت کمزور ہو گی جب۔۔۔!!!عمران خان نے خود ہی بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا

وزیراعظم کسی عدالت کے سامنے جوابدہ نہیں ہیں،عرفان قادر

وزیراعظم کسی عدالت کے سامنے جوابدہ نہیں ہیں،عرفان قادر

نو مئی سانحہ قابل مذمت، پی ڈی ایم منافقت سے کام لے رہی ہے، پی ٹی آئی سینیٹرز

نو مئی سانحہ قابل مذمت، پی ڈی ایم منافقت سے کام لے رہی ہے، پی ٹی آئی سینیٹرز