01:20 pm
فلسطین و اسرائیل و مشرق وسطیٰ، نئے حقائق کا ظہور

فلسطین و اسرائیل و مشرق وسطیٰ، نئے حقائق کا ظہور

01:20 pm

 (گزشتہ سے پیوستہ)
ایک زمینی حقیقت یہ بھی سامنے آئی کہ ابراہیم معاہدہ جو امارات و اسرائیل میں ہوا، وہ محض پانی کا بلبلہ تھا مگر امارات کیوں خاموش رہا موجودہ مرحلے میں؟ شائد اس  کا سبب غزہ کا اخوان  پس منظر ہے۔ خلیجی ریاستیں، سعودیہ اخوان کو ’’دشمن‘‘ قرار دے چکے ہیں اور دہشت گرد، میری دانست میں اخوان اور خلیجی ریاستوں اور سعودیہ میں مفاہمت ناممکن ہوچکی ہے کیونکہ غزہ والے یا تو ایران کے ساتھی بن جاتے ہیں یا ترکی کے خلیجی عربوں اور سعودیہ کو غزہ اور فلسطین کا یہ رویہ قبول نہیں۔ لہٰذا مسئلہ فلسطین جیسا تھا ویسا ہی رہے گا۔ ہاں گرئیٹر اسرائیل کا ظہو ر 9/11سے شروع ہوچکا ہے۔ افغانستان پر حملے کو صدر بش نے  کروسیڈ  کہا تھا ۔ عراق پر حملہ بھی کروسیڈ ہی تھا اور یہ سب  اسرائیل کے مفاد میں تھا۔
ایک نئی دلچسپ حقیقت صدر پیوٹن  کا نتین یاہو کو دھمکی دینا ہے کہ غزہ و فلسطین کے حالیہ واقعات کے سبب روس نیتن یاہو صیہونی اسرائیل کے معاملات میں ایک فریق بن سکتا ہے۔ اگر اگلے دو سال میں یہاں جنگ ہو جاتی ہے تو صدر پیوٹن، اینٹی امریکہ کے ساتھ ساتھ اینٹی گریٹر اسرائیل کے  ایک جاندار قوت کے طور پر نظر آسکتے ہیں صدر پیوٹن، ایران اور ترکی یہ تین ملک ہیں جنہوں نے دلیری سے ہمیشہ کھل کر اپنے اتحادیوں کا ساتھ دیا ہے جبکہ امریکہ نے عربوں سے قدم قدم غداری کرکے ایران کو ساتھ ملا کے رکھا، پھر شام کے معاملات میں بھی عربوں میں امریکہ نے بار بار غداری کی ہے جبکہ صدر پیوٹن اور ایران نے کھل کر خلیجی عرب مخالفت اور بشارالاسد کی حمایت کی ہے ایران اور ترکی کھل کر اپنے اتحادیوں کے ساتھ کھڑے رہے ہیں۔ افسوس مالدار  عرب تو اتنے بدقسمت ہیں کہ وہ اپنے حقیقی بہی خواہوں فکری حقیقی حامیوں، اہل دانش کی حمایت سے بھی آج محروم ہوچکے ہیں۔ ظہور شدہ یہ وہ زمینی حقائق ہیں جو مشرق وسطیٰ کے ساتھ آج نتھی ہوچکے ہیں۔
سیز فائر تو غزہ حماس اور نیتن یاہو حکومت میں ہوچکا ہے۔ غزہ حماس تباہ حالی سے گزر کر مزاحمت، استقامت، عزیمت کا نام پارہی ہے جبکہ نیتن یاہو صدر بائیڈن کے دبائو سے دوچار ہوئے ہیں۔ ترکی کو تمام تر بلند آواز کے باوجود تمغہ عربوں نے نہیں لینے دیا بلکہ مصر کے ذریعے حماس اور نیتن یاہو میں سیز فائر ہوا ہے۔ اب عرب مالدار دل و دماغ غزہ کی تعمیر کے لئے حماس کو مالی مدد فراہم تب کرسکتی ہیں جب غزہ اور حماس ترکی اور حزب اللہ و ایران سے دور ہوکر عرب خلیجی و سعودی مزاج کی ترجیحات کو قبول کریں گے۔ میری نظر میں نیتن یاہو اپنی سیاست کو کامیاب کرنے میں کامیاب رہیں گے  اور ان پر جو مقدمات ہیں وہ نتیجہ خیز نہیں ہوسکیں گے۔ اسرائیل کے اندر عرب یہودی کشمکش تیز ہوگئی ہے۔ اسرائیلی عرب اب ماضی کی طرح خاموش نہیں بلکہ متحرک و فعال ہوتے جائیں گے۔ شائد یہ نئی کشمکش نیتن یاہو کو سیاسی فائدہ دے سکتی ہے۔ صیہونیت کو قوی کرسکتی ہے۔ مگر فلسطینیوں کو اپنی بقاء خود تلاش کرنا ہے۔
کیا صدر بائیڈن کے زمانے میں فلسطینی ایسی ریاست بن سکتی ہے  جو حماس اور غزہ سوچ کو مطمئن کرسکے؟ ’’الفتح‘‘ تو سیاسی طور پر ناکام ہوچکی ہے مگر حماس کی تمام تر قربانی کے باواجود اس کی مکمل کامیابی کا امکان مجھے تو نظر نہیں آتا۔ وجہ معاشی مجبوری اور جنگی ہتھیاروں کی عدم دستیابی کے ساتھ ساتھ ان کا ’’تنہا‘‘ ہونا، عرب بادشاہتوں کا عقیدے ، نظریئے کی جگہ معاشی اولیات کو اپنالینا، جہاد سے فرار، یہ سب باتیں امریکہ و یورپ کو سوٹ کرتی ہیں اور صیہونیت کو بھی۔ البتہ محمد بن سلمان کی نیتن یاہونواز حکمت عملی نیست و نابود ہوگئی ہے جبکہ شاہ سلمان نے القدس و فلسطین کے حوالے سے پرانا سعودی موقف زندہ کر دیا ہے۔
یہودی اقوام نے تعلیم، ٹیکنالوجی، جنگی صلاحیت میں اولیت حاصل کرکے عربوں کو سیاسی، جنگی، اسٹرٹیجک طور پر مکمل ناکام کر دکھایا ہے۔ عربوں کا ’’اسلام ازم‘‘ کی بجائے سیکولر و کیمونسٹ عرب قومیت پر انحصار صیہونیت کی فتح اور عربوں کی شکست بنا تھا۔ سیکولر عرب لیگ کیا جمال عبدالناصر کو فتح دے سکی تھی ؟ انور السادات کو موت سے معاہدہ بچاسکا تھا ۔ دوسری طرف شاہ فیصل کی القدس کے لئے تڑپ، امریکہ و یورپ کو مجبور کرتی سیاست بھی اس کی زندگی کا خاتمہ ممکن بناگئی تھی،  اب کہ عرب ’’اسلامیت‘‘ سے بہت دور ہیں اور معاشی فوائد، اسرائیل نوازی، سیکولر جدیدیت، ایران دشمنی، ترکی سے خوفزدگی سے دوچار ہیں۔ کیا ان اخلاقی و سیاسی ہتھیاروں میں عرب صیہونیت پر فتح پاسکیں گے؟ شائد نہیں۔ ایران نے ویانا میں جواد ظریف کے ذریعے یورپی یونین اور امریکہ سے تعمیری مذاکرات کے ذریعے ثابت کیا ہے کہ وہ ’’برآمدگی انقلاب‘‘ کی جگہ اب ’’بقائے باہمی‘‘ کو قبول کرسکتا ہے۔ صدر حسن روحانی اور جواد ظریف کو اس میں اگر کامیابی مل گئی تو شائد18 جون کے انتخابات کے لئے ریفارمرز مضبوط  ہوسکتے ہیں ویسے روحانی  مقیم لاہور وجدان20 جون کو18 جون کے انتخابات کے حوالے سے ’’اپ سیٹ‘‘ دیکھتا ہے۔ مجھے آیت اللہ علی خامنائی آخری شخصیت نظر آتی ہے جو قدامت پسندوں اور اصلاح کاروں میں ’’مشترک‘‘ ہے۔
 لہٰذا مجھے دائمی امن کہیں بھی نظر نہیں آرہا۔ یہ جو سیز فائر ، صلح، مفاہمت کی باتیں ہیں یہ صرف چند ہفتوں اور چند مہینوں کے لئے ہیں۔ پھر سے جنگیں ہوں گی۔ ہر جگہ کشمکش ہوگی۔ 2023ء تک مسلمان (عجمی مسلمان اور عرب مسلمان اقوام) سب عہد زوال کے بدترین عہد ابتلاء کا نام رہیں گی۔ مگر مایوسی کی جگہ رجائیت کو اگر ہتھیار بنالیا جائے تو مستقبل بعید میں اللہ کی نعمتیں، رحمتیں، فضل ،مسلمانوں کو میسر آسکتا ہے۔
صدر طیب اردوان غزہ اسرائیل جنگ میں قائدانہ  آواز بن کر ابھرے ہیں وہ اخلاقی طور پر عربوں پر فوقیت پاگئے ہیں جبکہ وزیراعظم عمران خان دوسری شخصیت ہیں جو غزہ کے لئے بے قرار رہے ہیں۔ محمد بن سلمان اور   محمد بن زید النہیان منظر سے غائب رہے ہیں۔


 

تازہ ترین خبریں

میری خواہش ہے کہ عمران خان کو گرفتار کیا جائے اور اسی سیل میں رکھا جائے جہاں مجھے رکھا گیا تھا،وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ

میری خواہش ہے کہ عمران خان کو گرفتار کیا جائے اور اسی سیل میں رکھا جائے جہاں مجھے رکھا گیا تھا،وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ

شیریں مزاری کی گرفتاری، پی ٹی آئی نےملک گیر احتجاج کی کال دیدی

شیریں مزاری کی گرفتاری، پی ٹی آئی نےملک گیر احتجاج کی کال دیدی

پی ٹی آئی کی خاتون رہنما شیریں مزاری کو گرفتار کر لیا گیا

پی ٹی آئی کی خاتون رہنما شیریں مزاری کو گرفتار کر لیا گیا

منی لانڈنگ کیس کی سماعت، وزیراعظم اور وزیراعلیٰ عدالت میں پیش 

منی لانڈنگ کیس کی سماعت، وزیراعظم اور وزیراعلیٰ عدالت میں پیش 

الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کے منحرف اراکین کو نااہل قرار دے دیا

الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کے منحرف اراکین کو نااہل قرار دے دیا

پنجاب حکومت کو بڑا جھٹکا لگ گیا، لاہور ہائیکورٹ نے اہم فیصلہ سنا دیا

پنجاب حکومت کو بڑا جھٹکا لگ گیا، لاہور ہائیکورٹ نے اہم فیصلہ سنا دیا

بلاول بھٹو زرداری کا عمران خان کے دورہ روس کا دفاع

بلاول بھٹو زرداری کا عمران خان کے دورہ روس کا دفاع

سپریم کورٹ نے پراسیکیوشن کو ہائی پروفائل کیسز واپس لینے سے روک دیا

سپریم کورٹ نے پراسیکیوشن کو ہائی پروفائل کیسز واپس لینے سے روک دیا

آپ کی شکل اچھی ہو تو آپ کے مرد ساتھی ۔۔۔پی ٹی آئی کی خاتون رہنما زرتاج گل کا معنی خیز بیان آگیا

آپ کی شکل اچھی ہو تو آپ کے مرد ساتھی ۔۔۔پی ٹی آئی کی خاتون رہنما زرتاج گل کا معنی خیز بیان آگیا

حکومت قائم رہے گی یا اسمبلیاں تحلیل ہوں گی؟ اگلے دو دن انتہائی اہم قرار۔۔وزیراعظم شہباز شریف کو کس کی یقین دہانی کا انتظار ہے؟

حکومت قائم رہے گی یا اسمبلیاں تحلیل ہوں گی؟ اگلے دو دن انتہائی اہم قرار۔۔وزیراعظم شہباز شریف کو کس کی یقین دہانی کا انتظار ہے؟

حمزہ شہباز عہدے پر برقرار رہیں گے یا نہیں؟  حکومتی اتحادیوں نے فیصلہ سنا دیا

حمزہ شہباز عہدے پر برقرار رہیں گے یا نہیں؟ حکومتی اتحادیوں نے فیصلہ سنا دیا

وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجونےتحریک عدم اعتماد پر دستخط  کرنے والے ارکان کیخلاف انتہائی اقدام اٹھانے کا اعلان کر دیا

وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجونےتحریک عدم اعتماد پر دستخط کرنے والے ارکان کیخلاف انتہائی اقدام اٹھانے کا اعلان کر دیا

عمران خان سے متعلق ہوشربا انکشافات، فرح گوگی اور مانیکاخاندان کے پول کھول کر رکھ دیئے

عمران خان سے متعلق ہوشربا انکشافات، فرح گوگی اور مانیکاخاندان کے پول کھول کر رکھ دیئے

 اسلام آباد ہائیکورٹ نے عمر سرفراز چیمہ کو بڑا جھٹکا دیدیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے عمر سرفراز چیمہ کو بڑا جھٹکا دیدیا